1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

وفات یا انتقال کا لفظ استعمال کرنا

'بدعی عقائد' میں موضوعات آغاز کردہ از جنید حسین, ‏ستمبر 10، 2016۔

  1. ‏ستمبر 10، 2016 #1
    جنید حسین

    جنید حسین رکن
    جگہ:
    ریاض، سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 11، 2011
    پیغامات:
    88
    موصول شکریہ جات:
    116
    تمغے کے پوائنٹ:
    70

    کسی کے مرنے پر وفات کا لفظ استعمال کیا جائے گا یا انتقال کا۔؟

    ایک صاحب نے مجھے ٹوک دیا جب میں نے اس سے کہا کہ فلاں شخص وفات پا گیا ہے۔ اس نے کہا کہ مسلمانان کے مرنے پر انتقال کہا کرو۔

    مجھے جہاں تک معلوم ہے انتقال کا لفظ زیادہ صوفیا اور بریلوی لوگ استعمال کرتے ہیں ۔

    علماء لوگ اس بارے میں کیا کہتے ہیں ۔

    اللہ تعالٰی تو موت کا لفظ استعمال کرتے ہیں ۔

    Sent from my SM-N920C using Tapatalk
     
  2. ‏ستمبر 18، 2016 #2
    khalil rana

    khalil rana رکن
    شمولیت:
    ‏دسمبر 05، 2015
    پیغامات:
    216
    موصول شکریہ جات:
    31
    تمغے کے پوائنٹ:
    39

    ایک جہان سے دوسرے جہان کی طرف منتقل ہونے کی وجہ سے انتقال بھی کہہ دیا جاتا ہے، اس میں پریشان ہونے یا بریلوی اصطلاح ہونے کی کیا بات ہے؟ وفات بھی کہہ دیا جائے تو منع نہیں اور نہ کوئی حرج ہے۔
     
  3. ‏ستمبر 18، 2016 #3
    کنعان

    کنعان فعال رکن
    جگہ:
    برسٹل، انگلینڈ
    شمولیت:
    ‏جون 29، 2011
    پیغامات:
    3,564
    موصول شکریہ جات:
    4,376
    تمغے کے پوائنٹ:
    521

    وَفات [وَفات] (عربی)

    اسم کیفیت (مؤنث - واحد)
    جمع غیر ندائی: وَفاتوں [وَفا + توں (و مجہول)]
    1. طبیعی موت، موت، انتقال، مرگ، اجل، قضا، رحلت۔

    ==============

    اِنْتِقال [اِن + تِقال] (عربی)

    ن ق ل اِنْتِقال
    عربی زبان سے مشتق اسم ہے۔ اردو میں بطور ہی اسعتمال ہوتا ہے اور تحریراً 1754ء کو "ریاض غوثیہ" میں مستعمل ملتا ہے۔

    اسم نکرہ ( مذکر - واحد )

    1. موت، وفات۔
    "فیروز شاہ تغلق کے انتقال کے بعد ہی گجرات بالکل آزاد ہو گیا۔" ( 1930ء، مضامین فرحت، 11:3 )

    2. منتقلی، جگہ بدلنا۔
    "روشنی سے اندھیرے کی طرف ان کا انتقال کم و بیش تدریجی ہوتا ہے۔" ( 1942ء، اسا نفسیات، 18 )

    ملکیت، قبضے یا حق کی تبدیلی۔
    "قانون انتقال جائداد قانون حقوق استفادہ .... کے متعلق ان کی تقریریں .... قابل ذکر ہیں۔" ( 1938ء، حالات سرسید، 58 )

    ذہن یا حواس کی کسی نکتے کی طرف توجہ، ذہن کا منتقل ہونا۔
    "اس وقت یہ شیطان مردود کہاں سے بے ساختہ، نعوذ باللہ، زبان سے نکل گیا انتقال ذہنی تیز تھا۔" ( 1915ء، سجاد حسین، احمق الذین، 46 )

    3. کسی کیفیت یا اثر کا ایک سے دوسرے میں (کلا یا جزواً) منتقل ہونا۔
    "ایک جامد جسم میں .... انتقال حرارت کا عمل ممکن نہیں۔" ( 1934ء، جغرافیۂ عالم، 29:2 )
    [ نجوم ] ستارے کا ایک برج سے دوسرے برج میں جانا۔
     یہ ہے مضمون حکم انتقالات کہ ہو گی ان جفاؤں کی مکافات ( 1830ء، کلیات مومن، 398 )
    [ الجبرا ] مساوات میں سے کسی مقدار کو ایک طرف سے دوسری طرف لے جانا۔ (نوراللغات، 413:1)۔

    4. قلب ماہیت، کایا پلٹ۔
    "تمام تاب کار دھاتیں .... متعدد انتقالات کے بعد بالآحر سیسے .... ہی میں تبدیل ہو جاتی ہیں۔" ( 1970ء، جدید طبیعیات،


     
  4. ‏ستمبر 19، 2016 #4
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,769
    موصول شکریہ جات:
    8,334
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    دونوں لفظ استعمال کیے جاتے ہیں ۔
    لفظ انتقال میں بھی کوئی حرج محسوس نہیں ہوتا ۔ واللہ اعلم ۔
     
  5. ‏ستمبر 20، 2016 #5
    جنید حسین

    جنید حسین رکن
    جگہ:
    ریاض، سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 11، 2011
    پیغامات:
    88
    موصول شکریہ جات:
    116
    تمغے کے پوائنٹ:
    70

    شکریہ سب کا ۔

    Sent from my SM-N920C using Tapatalk
     
لوڈ کرتے ہوئے...
متعلقہ مضامین
  1. محمد طلحہ اہل حدیث
    جوابات:
    1
    مناظر:
    71
  2. زیشان علی
    جوابات:
    2
    مناظر:
    463
  3. خضر حیات
    جوابات:
    3
    مناظر:
    251
  4. اسحاق سلفی
    جوابات:
    0
    مناظر:
    436
  5. اسحاق سلفی
    جوابات:
    1
    مناظر:
    665

اس صفحے کو مشتہر کریں