1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ولیمہ کے بارے میں

'نکاح' میں موضوعات آغاز کردہ از عبد الرشید, ‏اپریل 03، 2011۔

  1. ‏اپریل 03، 2011 #1
    عبد الرشید

    عبد الرشید رکن ادارہ محدث
    شمولیت:
    ‏مارچ 02، 2011
    پیغامات:
    5,178
    موصول شکریہ جات:
    9,941
    تمغے کے پوائنٹ:
    667

    ولیمہ کے بارے میں

    عن انس بن مالک رضی اللہ عنہ أن النبی رأی علی عبد الرحمن بن عوف اثر صفرۃ ،فقال:((ماہذا؟))قال: یا رسول اللہ !انی تزوجت امراۃ علی وزن نواۃ من ذہب،قال:((فبارک اللہ لک،اولم ولو بشاۃ )) ۔متفق علیہ ،واللفظ لمسلم۔
    ’’حضرت انس بن مالک رضی اللہ عنہ سے مروی ہے کہ نبی ﷺ نے عبدالرحمن بن عوف رضی اللہ عنہ کے کپڑوں پر زرد رنگ لگا ہوا دیکھا۔آپ ﷺ نے فرمایا’’یہ کیا ہے؟‘‘عبدالرحمن بن عوف رضی اللہ عنہ نے کہا اللہ کے رسول (ﷺ) میں نے ایک عورت سے ایک گھٹلی کے مساوی سونا دے کر نکاح کیا ہے۔آپ ﷺ نے فرمایا ’’اللہ تعالیٰ تجھے برکت دے ‘ولیمہ ضرور کرو خواہ ایک بکری ہی ہو۔‘‘ (بخاری ومسلم،اور الفاظ مسلم کے ہیں)

    وعن ابن عمر رضی اللہ تعالی عنہما ،قال:قال رسول اللہ ﷺ ((اذا دعی احدکم الی الولیمۃ فلیاتہا)) ۔
    حضرت ابن عمر رضی اللہ عنہما سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا ’’جب تم میں سے کسی کو دعوت ولیمہ پر مدعو کیا جائے تو اسے وہاں پہنچنا چاہیے۔‘‘ (بخاری ومسلم)
    اور مسلم کی روایت میں ہے
    ((اذا دعا احدکم أخاہ فلیجب)) عرسا کان أو نحوہ
    ’’جب تم میں سے کسی کو اس کا بھائی مدعو کرے تو اسے اس کی دعوت کو قبول کرنا چاہیے خواہ وہ شادی ہو یا اسی طرح کی کوئی اور دعوت۔‘‘
    حاصل کلام:یہ حدیث شادی کے موقع پر کی جانے والی دعوت ولیمہ کو منظور وقبول کرنے کوواجب قرار دیتی ہے اور جمہور کی رائے یہی ہے ۔انہوں نے یہ شرط ضروری لگائی ہے کہ وہاں تک پہنچنے میں کوئی امر مانع نہ ہو۔مثلاً کھانا ہی مشتبہ نہ ہو یا مالداروں کو بالخصوص مدعو کیا گیا ہو یا باطل کام کے لیے تعاون واستعانت کے لیے اسے دعوت دی گئی ہو یا وہاں ایسا کام ہو جو غیر پسندیدہ اور شرعاً منکر کی تعریف میں آتا ہو۔
     
  2. ‏اپریل 03، 2011 #2
    انس

    انس منتظم اعلیٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏مارچ 03، 2011
    پیغامات:
    4,176
    موصول شکریہ جات:
    15,224
    تمغے کے پوائنٹ:
    800

    جزاکم اللہ خیرا
    عبد الرشید بھائی!
    آپ نے ایک ہی موضوع پر دو الگ الگ دھاگے شروع کر دئیے تھے، جنہیں میں نے ایک ہی دھاگے میں اکٹھا کر دیا ہے۔
     
  3. ‏اپریل 04، 2011 #3
    عبد الرشید

    عبد الرشید رکن ادارہ محدث
    شمولیت:
    ‏مارچ 02، 2011
    پیغامات:
    5,178
    موصول شکریہ جات:
    9,941
    تمغے کے پوائنٹ:
    667

    شکریہ انس صاحب
     
  4. ‏اپریل 04، 2011 #4
    انس

    انس منتظم اعلیٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏مارچ 03، 2011
    پیغامات:
    4,176
    موصول شکریہ جات:
    15,224
    تمغے کے پوائنٹ:
    800

    پہلے بھی شائد کلیم اللہ بھائی نے توجہ دلائی تھی کہ آیات واحادیث مبارکہ کیلئے مخصوص بریکٹس استعمال کی جائیں۔ جب آپ کولن کے ساتھ بریکٹ استعمال کرتے ہیں، تو ’ناراضی کا نشان‘ بن جاتا ہے۔
    اگر آپ کی پوسٹس کی فارمیٹنگ بہتر ہوگی تو علمی مواد کے ساتھ ساتھ ظاہری خوبصورتی سے بھی ان شاء اللہ ان کا وزن دوبالا ہوجائے گا۔
     
  5. ‏مارچ 08، 2012 #5
    علم کی دُنیا

    علم کی دُنیا مبتدی
    شمولیت:
    ‏مارچ 07، 2012
    پیغامات:
    20
    موصول شکریہ جات:
    75
    تمغے کے پوائنٹ:
    0

    Nice information thanks for sharing
     
  6. ‏مارچ 08، 2012 #6
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    جزاک اللہ خیرا

    یہ جو ولیمہ پر بلا کر پیسے لیتے ہیں ،اس شریعت کی رو سے کیسا ہے؟
     
  7. ‏مارچ 08، 2012 #7
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    ( : ) اور ( () ) کے درمیان سپیس دیا کریں۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں