1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ویڈیو اور عام کیمرہ سے لی جانے والی تصویر کا حکم !

'جدید فقہی مسائل' میں موضوعات آغاز کردہ از رفیق طاھر, ‏مارچ 16، 2012۔

  1. ‏مارچ 19، 2012 #31
    رفیق طاھر

    رفیق طاھر رکن مجلس شوریٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    ارض اللہ
    شمولیت:
    ‏مارچ 04، 2011
    پیغامات:
    790
    موصول شکریہ جات:
    3,974
    تمغے کے پوائنٹ:
    323

    عقل کا کس میں فقدان ہے اور کس میں رجحان ‘ یہ آپکی اور میری تحریر سے ظاہر ہو رہا ہے اور
    دل والے خود ہی لکھ لیں گے کہانی اس افسانے کی
    میرا سوال ہنوز منتظر جواب ہے :
     
  2. ‏مارچ 19، 2012 #32
    Muhammad Waqas

    Muhammad Waqas مشہور رکن
    جگہ:
    فیصل آباد
    شمولیت:
    ‏مارچ 12، 2011
    پیغامات:
    356
    موصول شکریہ جات:
    1,595
    تمغے کے پوائنٹ:
    139

    وعلیکم السلام

    جناب آپ کا جواب پڑھ کر تمام احباب کو اندازہ ہو چکا ہو گا کہ آپ نے جو تدبر قرآن کرنے مشورے عنایت کئے ہیں ان کی حقیقت کیا ہے۔
    آپ کے اخلاق کا اندازہ تو ہو گیا یہاں سے۔۔۔۔
    اب دیکھتے ہیں آپ کے ان دلائل کو جن کو آپ نے اپنے حق میں استعمال کرنے کی سعی لا حاصل کی ہے۔
    مَا نَنسَخْ مِنْ آيَةٍ أَوْ نُنسِهَا نَأْتِ بِخَيْرٍ مِّنْهَا أَوْ مِثْلِهَا ۗ أَلَمْ تَعْلَمْ أَنَّ اللَّهَ عَلَىٰ كُلِّ شَيْءٍ قَدِيرٌ [٢:١٠٦]
    جس آیت کو ہم منسوخ کردیں، یا بھلا دیں اس سے بہتر یا اس جیسی اور ﻻتے ہیں، کیا تو نہیں جانتا کہ اللہ تعالیٰ ہر چیز پر قادر ہے۔

    اب اس آیت پر تدبر کے ساتھ تفکر بھی کریں کیوں کہ آپ کے تدبر کی قلعی کھل چکی ہے۔
    اب ذرا مندرجہ ذیل آیت پر غور فرمائیں
    حُرِّمَتْ عَلَيْكُمْ أُمَّهَاتُكُمْ وَبَنَاتُكُمْ وَأَخَوَاتُكُمْ وَعَمَّاتُكُمْ وَخَالَاتُكُمْ وَبَنَاتُ الْأَخِ وَبَنَاتُ الْأُخْتِ وَأُمَّهَاتُكُمُ اللَّاتِي أَرْضَعْنَكُمْ وَأَخَوَاتُكُم مِّنَ الرَّضَاعَةِ وَأُمَّهَاتُ نِسَائِكُمْ وَرَبَائِبُكُمُ اللَّاتِي فِي حُجُورِكُم مِّن نِّسَائِكُمُ اللَّاتِي دَخَلْتُم بِهِنَّ فَإِن لَّمْ تَكُونُوا دَخَلْتُم بِهِنَّ فَلَا جُنَاحَ عَلَيْكُمْ وَحَلَائِلُ أَبْنَائِكُمُ الَّذِينَ مِنْ أَصْلَابِكُمْ وَأَن تَجْمَعُوا بَيْنَ الْأُخْتَيْنِ إِلَّا مَا قَدْ سَلَفَ ۗ إِنَّ اللَّهَ كَانَ غَفُورًا رَّحِيمًا [٤:٢٣]
    حرام کی گئیں تم پر تمہاری مائیں اور تمہاری لڑکیاں اور تمہاری بہنیں، تمہاری پھوپھیاں اور تمہاری خاﻻئیں اور بھائی کی لڑکیاں اور بہن کی لڑکیاں اور تمہاری وه مائیں جنہوں نے تمہیں دودھ پلایا ہو اور تمہاری دودھ شریک بہنیں اور تمہاری ساس اور تمہاری وه پرورش کرده لڑکیاں جو تمہاری گود میں ہیں، تمہاری ان عورتوں سے جن سے تم دخول کر چکے ہو، ہاں اگر تم نے ان سے جماع نہ کیا ہو تو تم پر کوئی گناه نہیں اور تمہارے صلبی سگے بیٹوں کی بیویاں اور تمہارا دو بہنوں کا جمع کرنا ہاں جو گزر چکا سو گزر چکا، یقیناً اللہ تعالیٰ بخشنے واﻻ مہربان ہے۔

    مجھے امید ہے کہ اب کی بار آپ ضرور تدبر فرمائیں گے۔
     
  3. ‏مارچ 20، 2012 #33
    muslim

    muslim رکن
    جگہ:
    کراچی پاکستان
    شمولیت:
    ‏ستمبر 29، 2011
    پیغامات:
    467
    موصول شکریہ جات:
    567
    تمغے کے پوائنٹ:
    86

    السلام علیکم۔

    اردو زبان میں نامعقول کا مطلب ھے جو معقول نہ ھو۔ یہ کوئی غیر اخلاقی لفظ نہیں ھے۔ اگر پھر بھی آپ کو برا لگا تو میں بہت معزرت
    خواہ ہوں۔ میرا مقصد حق کی تلاش اور وَتَوَاصَوْا بِالْحَقِّ ھے۔ ضد بحث یا کسی کی توہین کرنا نہیں۔

    مَا نَنسَخْ مِنْ آيَةٍ أَوْ نُنسِهَا نَأْتِ بِخَيْرٍ مِّنْهَا أَوْ مِثْلِهَا ۗ أَلَمْ تَعْلَمْ أَنَّ اللَّهَ عَلَىٰ كُلِّ شَيْءٍ قَدِيرٌ [٢:١٠٦]
    جس آیت کو ہم منسوخ کردیں، یا بھلا دیں اس سے بہتر یا اس جیسی اور ﻻتے ہیں، کیا تو نہیں جانتا کہ اللہ تعالیٰ ہر چیز پر قادر ہے۔

    مِنْ آيَةٍ کا ترجمہ "آیت کو" ہوگا یا "آیت سے"

    اسکی وضاحت کردیں۔ باقی جواب اگلی پوسٹ میں دوں گا۔
    انشاء اللہ۔
     
  4. ‏مارچ 20، 2012 #34
    Muhammad Waqas

    Muhammad Waqas مشہور رکن
    جگہ:
    فیصل آباد
    شمولیت:
    ‏مارچ 12، 2011
    پیغامات:
    356
    موصول شکریہ جات:
    1,595
    تمغے کے پوائنٹ:
    139

    وعلیکم السلام
    جو ترجمہ ہے ،وہ لکھ دیا گیا ہے۔
     
  5. ‏مارچ 20، 2012 #35
    عبدالعلام

    عبدالعلام رکن
    جگہ:
    Aurangabad
    شمولیت:
    ‏مارچ 15، 2012
    پیغامات:
    153
    موصول شکریہ جات:
    478
    تمغے کے پوائنٹ:
    95

    ومن وھی -١ -لابتداء الغایۃ نحو سرت من البصرۃ الی الکوفۃ-٢- وللتبعیض نحو اخذت من الدراھم ای بعض الدراھم -٣- وللتبین نحو قولہ تعالی فاجتنبوا الرجس من الاوثان ای الرجس الذی ھوالاوثان-٤-وللزیادۃ نحو قولہ تعالی یغفرلکم من ذنوبکم- (شرح مائۃ عامل) من کے مزید ٩ معنی کے لئے دیکھئے مفتاح العوامل
     
  6. ‏مارچ 21، 2012 #36
    رفیق طاھر

    رفیق طاھر رکن مجلس شوریٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    ارض اللہ
    شمولیت:
    ‏مارچ 04، 2011
    پیغامات:
    790
    موصول شکریہ جات:
    3,974
    تمغے کے پوائنٹ:
    323

    ابھی تو میرا ایک سوال ہی منتظر جواب ہے کہ :
    اور آپ نے "أن تجمعوا بین الأختین إلا ما قد سلف" والا دوسرا سوال بھی پیش کر دیا ہے ۔ اتنی تیزی نہ دکھائیں کہ مسلم صاحب یہ تسلیم کرنے لگیں کہ وہ "غیر" مسلم ہیں ۔
     
  7. ‏مارچ 21، 2012 #37
    رانا اویس سلفی

    رانا اویس سلفی مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    387
    موصول شکریہ جات:
    1,590
    تمغے کے پوائنٹ:
    109


    جزاک اللہ
     
  8. ‏مارچ 21، 2012 #38
    رانا اویس سلفی

    رانا اویس سلفی مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    387
    موصول شکریہ جات:
    1,590
    تمغے کے پوائنٹ:
    109

    [video=youtube;zOhxXBNPg3E]http://www.youtube.com/watch?v=zOhxXBNPg3E&feature=plcp&context=C4171797VDvjVQa1PpcFMzstzrPDHQasE-SdjZMBJhTzV9RnSzKRU%3D[/video]


    Tasveer ki Sharih Hasiyat ( Shiekh Rafiq Tahir )
     
  9. ‏مارچ 21، 2012 #39
    muslim

    muslim رکن
    جگہ:
    کراچی پاکستان
    شمولیت:
    ‏ستمبر 29، 2011
    پیغامات:
    467
    موصول شکریہ جات:
    567
    تمغے کے پوائنٹ:
    86


    السلام علیکم۔

    پچھلی ایک پوسٹ میں آیات سے یہ ثابت ھوچکا ھے کہ "دین میں شرع ایک ہی ھے۔ اللہ کی سنت اللہ کا دستور اور اللہ کے کلمات کبھی بھی
    تبدیل نہیں ھوتے۔اور یہ بات بھی قران سے ثابت ھے کہ قران میں کوئی اختلاف نہیں ھے۔ آیات سے آیات کی تصدیق ھوتی ھے تردید نہیں۔
    کیونکہ یہ اللہ کا کلام ھے۔ انسانی کلام نہیں ھے۔
    اب آپ کے سوال کا جائزہ لیتے ہیں۔

    آیت میں لکھا ھوا حکم ہر زمانے کے لیئے ھے۔
    اس کو اس طرح سمجھیں کہ جیسے کوئی شخص دو بہنوں کو اکھٹا رکھتا ھے اور وہ اللہ کے اس حکم سے واقف نہیں ھے، جب اس کو یہ
    آیت معلوم ھوجائے اسکے بعد وہ آئندہ کبھی بھی دو بہنوں کو ایک ساتھ نکاح میں نہیں رکھ سکتا۔ جو زمانہ جاہلیت میں سرزد ہوگیا وہ ہوگیا

    اس آیت کا یہ مطلب ہرگز نہیں ھے کہ کسی زمانے میں، اللہ نے یہ جائز رکھا ھے اور کسی میں ناجائز رکھا ھے۔ اللہ کا دستور کبھی تبدیل نہیں ہوتا۔
     
  10. ‏مارچ 21، 2012 #40
    رفیق طاھر

    رفیق طاھر رکن مجلس شوریٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    ارض اللہ
    شمولیت:
    ‏مارچ 04، 2011
    پیغامات:
    790
    موصول شکریہ جات:
    3,974
    تمغے کے پوائنٹ:
    323

    میرا سوال تاحال منتظر جواب ہے :
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں