1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

پانی پر دم کرنے کا حکم

'طب نبویﷺ' میں موضوعات آغاز کردہ از مقبول احمد سلفی, ‏فروری 23، 2015۔

  1. ‏مارچ 16، 2015 #21
    قاھر الارجاء و الخوارج

    قاھر الارجاء و الخوارج رکن
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2014
    پیغامات:
    393
    موصول شکریہ جات:
    235
    تمغے کے پوائنٹ:
    71

    جی عبادات میں ہی ضرورت ہوتی ہے علاج میں نہیں
    یہاں میرے خیال سے اس پر بحث کر لیں ایک نیا تھریڈ کھول کے کہ کیا ہر عمل کیلئے نص کا ہونا ضروری ہے ؟؟؟
    مثلا یوں سمجھ لیں کہ بخار میں پیناڈول کھانے کیلئے کیا کسی نص کی ضرورت ہے
     
  2. ‏مارچ 16، 2015 #22
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436


    اگر کسی نص کی ضررورت نہیں تو اس پر اتنے طویل فتووں کی کیا ضرورت تھی ؟

    پانی پر دم کرنا عبادت ہے کیونکہ اس میں دعا ہی کی جا رہی ہے اور دعا تو عبادت کا مغز ہے اور دعا ہی عبادت ہے یہ بنیادی چیزیں ہیں اس کا علم ہونا چاہئے
     
  3. ‏مارچ 16، 2015 #23
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436


    عجب تماشہ ہے کہ دیوبندی اور بریلوی پانی پر دم کرنے کی اجرت لیتے ہیں اور اہل حدیث اس کو رد کرتے ہیں لیکن یہ تضاد ہے کیونکہ دینی امور پر اجرت کی دلیل ایک دم والے واقعہ سے ہی لی جاتی ہے

    امام بخاری الصحيح میں ابُ الشَّرْطِ فِي الرُّقْيَةِ بِقَطِيعٍ مِنَ الغَنَمِ روایت کرتے ہیں کہ

    ابن عباس اور ابو سعید الخدری رضی الله تعالیٰ عنہ روایت کرتے ہیں کہ نبی الله علیہ وسلم کے کچھ اصحاب سفر میں تھے – دوران سفر انہوں نے اک قبیلے کے پاس پڑاؤ کیا – صحابہ نے چاہا کہ قبیلہ والے ان کو مہمان تسلیم کریں لیکن قبیلہ والوں نے صاف انکار کر دیا – ان کے سردار کو سانپ نے ڈس لیا –

    قبیلہ والوں نے اصحاب رسول سے ہی علاج کے لئے مدد طلب کی جس پر ایک صحابی نے سوره الفاتحہ پڑھ کر سردار کو دم کیا اور وہ اچھا بھی ہو گیا – انہوں نے تیس بکریاں بھی لے لیں – صحابہ نے اس پر کراہت کا اظہا ر کیا اور مدینہ پہنچ کر آپ صلی الله علیہ وسلم سے سوال کیا آپ نے قصہ سننے کے بعد کہا

    إِنَّ أَحَقَّ مَا أَخَذْتُمْ عَلَيْهِ أَجْرًا كِتَابُ اللَّهِ عَزَّ وَجَلَّ

    بے شک تم حق رکھتے تھے اس اجر پر جو تم نے کتاب الله سے حاصل کیا




     
  4. ‏مارچ 16، 2015 #24
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,372
    موصول شکریہ جات:
    2,398
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    پہلے آپ یہ واضح کردیں ،کہ آپ اس (ابن عباس اور ابو سعید الخدری رضی الله تعالیٰ عنہ ) سے مروی اجر والی حدیث کو تسلیم کرتے ہیں یا نہیں ؟؟
    اگر تسلیم ہے تو علی الاطلاق یا بعد تخصیص ؟
     
  5. ‏مارچ 16، 2015 #25
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436


    پہلے آپ اپنی اس بات کا تو جواب دیں - پہلے بھی پوچھ چکا ہوں اس لنک پر - آپ خود سوالات کا جواب دینے سے گریز کرتے ہیں حیرت ہے آپ پر ۔​



    شیخ محمد صالح المنجد کا اس واقعہ کو اپنے فتویٰ میں پیش کرنے کا مقصد کیا ہے -​
     
  6. ‏مارچ 16، 2015 #26
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,372
    موصول شکریہ جات:
    2,398
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    یہ ترجمہ بالکل غلط ہے ۔۔۔۔
     
  7. ‏مارچ 16، 2015 #27
    مقبول احمد سلفی

    مقبول احمد سلفی سینئر رکن
    جگہ:
    اسلامی سنٹر،طائف، سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏نومبر 30، 2013
    پیغامات:
    1,251
    موصول شکریہ جات:
    354
    تمغے کے پوائنٹ:
    209

    یہاں ہم نے سرے سے اجرت کا انکار نہیں کیا ہے بلکہ اسے پیشہ بنانے پہ نکیر کی ہے ۔ بات پہلے سمجھیں پھر کلام کریں۔
     
  8. ‏مارچ 17، 2015 #28
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,372
    موصول شکریہ جات:
    2,398
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    خبر تحیر عشق سن ،، نہ جنوں رہا ،نہ پری رہی

    آپ بھول رہے ہیں میری جس پوسٹ کا حوالہ آپ نے دیا ہے ۔۔۔اس میں میں نے ایک سوال پیش نظر کیا تھا ۔۔۔جو کچھ یوں تھا کہ :
    جب آپ اس کا جواب دیں گے تو ۔۔ان شاء اللہ ۔۔آپ کے سوال کا جواب آپ کو مل جائے گا ۔۔۔۔
    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    اور اب ایک ایک دفعہ پھر گزارش ہے کہ :
    آپ یہ واضح کردیں ،کہ آپ اس (ابن عباس اور ابو سعید الخدری رضی الله تعالیٰ عنہ ) سے مروی قرآنی دم پر اجر والی حدیث کو تسلیم کرتے ہیں یا نہیں ؟؟
    اگر تسلیم ہے تو علی الاطلاق یا بعد تخصیص ؟
     
  9. ‏مارچ 17، 2015 #29
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436

    اس کا صحیح ترجمہ کر دیں -
     
  10. ‏مارچ 17، 2015 #30
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436


    آپ نے جواب دینا ہوتا تو آپ یہاں اور یہاں جواب دے چکے ہوتے - مجھے آپ کے جوابات کا انتظار ہے - تا کہ آپ کے جواب سے ہمارے علم میں اضافہ ہو -
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں