1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

پسند کی شادی اسلام اور قانون

'پی ڈی ایف' میں موضوعات آغاز کردہ از عبد الرشید, ‏جولائی 08، 2014۔

  1. ‏جولائی 08، 2014 #1
    عبد الرشید

    عبد الرشید رکن ادارہ محدث
    شمولیت:
    ‏مارچ 02، 2011
    پیغامات:
    5,178
    موصول شکریہ جات:
    9,941
    تمغے کے پوائنٹ:
    667

    ولایت ِنکاح کا مسئلہ یعنی جوان لڑکی کے نکاح کے لیے ولی کی اجازت او ررضامندی ضروری ہے قرآن وحدیث کی نصوص سے واضح ہے کہ کسی نوجوان لڑکی کو یہ اجازت حاصل نہیں ہے کہ وہ والدین کی اجازت اور رضامندی کے بغیر گھر سے راہ ِفرار اختیار کرکے کسی عدالت میں یا کسی اور جگہ جاکر از خود کسی سے نکاح رچالے ۔ایسا نکاح باطل ہوگا نکاح کی صحت کے لیے ولی کی اجازت ،رضامندی اور موجودگی ضروری ہے ۔ لیکن موجودہ دور میں مسلمانوں کے اسلام سے عملی انحراف نے جہاں شریعت کے بہت سے مسائل کوغیر اہم بنادیا ہے ،اس مسئلے سے بھی اغماض واعراض اختیار کیا جاتاہے -علاوہ ازیں ایک فقہی مکتب فکر کے غیر واضح موقف کو بھی اپنی بے راہ روی کے جواز کےلیے بنیاد بنایا جاتاہے ۔زیر نظر کتاب ’’ پسند کی شادی اسلام اور قانون‘‘ معروف قانون دان ظفر علی راجا ایڈووکیٹ کی تالیف ہے جسے انہوں نے پسندکی شادی کے حوالے ایک معروف کیس کے تناظر میں تحریر کیا ہے جس میں پسند کی شادی کی شرعی اور قانونی حیثیت پر بحث کی ہے ۔اور مصنف نے کتاب کے مقدمہ میں بیان کیا ہے اس کتاب کی حد تک ’’پسند کی شادی‘‘ کا مطلب ایسی شادی ہے کہ جس میں فریقین اورخاص کر لڑکی کے والدین اپنی ناپسندیدگی یا ناراضکی کے سبب شریک نہ ہوئے ہوں۔کتاب ہذا کے مصنف ظفر علی راجا صاحب نے 1985ء میں دنیا بھر کی اعلیٰ عدالتوں میں اسلامی قانون پر دئیے گئے فیصلے جمع کرنےکا بیڑا اٹھایا او رتن تنہا وہ کام کر دکھایا کہ جو بڑے بڑے ادارے بھی نہیں کر پاتے ۔اب تک ان کایہ کام بیس ضخیم جلدوں میں ’’اسلامک جج منٹس‘‘ کے نام سے شائع ہوکر بین الاقوامی یونیورسٹی میں پذیرائی حاصل کرچکا ہے۔ اس عظیم الشان کا م پر 1989ء میں انہیں پیرس میں بین الاقوامی ایوارڈسے نواز ا گیا ہے۔یہ کتا ب محدث لائبریری میں بھی موجود ہے موصوف کا فی عرصہ سے مجلس التحقیق الاسلامی سے بھی وابستہ ہیں ۔(م۔ا)
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  2. ‏جولائی 08، 2014 #2
    عبد الرشید

    عبد الرشید رکن ادارہ محدث
    شمولیت:
    ‏مارچ 02، 2011
    پیغامات:
    5,178
    موصول شکریہ جات:
    9,941
    تمغے کے پوائنٹ:
    667

    فہرست مضامین
    مطلب و معنی
    جائز نکاح کے بارے میں کچھ نکات
    عدت کے دوران نکاح
    شادی کی قانونی عمر
    نابالغ لڑکی اور پسند کی دوسری شادی
    کیا لڑکی کا صاحب الرائے ہونا ضروری ہے
    پسند کی شادی والدین یا ولی کی اجازت
    شادی کی رجسٹریشن اور اس کے اثرات
    سول میرج عدالتی شادی یا ایک دھوکہ
    پسند کا نکاح ثانی
    متفرق مذاہب اور مختلف عورتوں سے شادی
    پسند کی شادی مقدمات اور سزائیں
    حدودی مقدمات کی مختصر تشریح
    ضمانت کے معاملات
    بازو دعویٰ اور تکذیب نکاح کے حربے
    درخواست حبس بے جا
    ہراساں نہ کرنے کی درخواست
    منسوخی مقدمات کی درخواست
    غیر معمولی شادیاں
    جنس رومان اور اسلامی قانون
    بنیادی انسانی حقوق جنسی آزادی اور پسند کی شادی
    شادی کا معاہدہ اور مذہبی تقدس
    عاقل بالغ اولاد اور اللہ کا حکم
    پسند کی شادی پر ہائی کورٹ کے اخذ کردہ نتائج
    پسند کی شادی اور عدالتی صوابدید
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں