1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ڈاڑھی کا بیان قرآن اور حدیث سے

'لباس و ضروریات' میں موضوعات آغاز کردہ از اسلام ڈیفینڈر, ‏اکتوبر 19، 2012۔

  1. ‏نومبر 05، 2012 #11
    عابدالرحمٰن

    عابدالرحمٰن سینئر رکن
    جگہ:
    BIJNOR U.P. INDIA
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 18، 2012
    پیغامات:
    1,124
    موصول شکریہ جات:
    3,229
    تمغے کے پوائنٹ:
    240

    ارے بھائی آپ کا جوب آپ کے سوال میں ہے کہ اگر کوئی آدمی زنا یا شراب کو گنا ہ جانتے ہوئے بھی گناہ کررہا ہے تو یہ اور بڑا جرم ہے ایسا ہی داڑھی کا معاملہ ہے اس کا منڈانا حرام ہے
    فقط واللہ اعلم بالصواب
    عابدالرحمٰن بجنوری
     
  2. ‏نومبر 05، 2012 #12
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    جزاک اللہ خیرا
     
  3. ‏نومبر 14، 2012 #13
    عمران علی

    عمران علی مبتدی
    جگہ:
    لانڈھی ۔ کراچی
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2012
    پیغامات:
    71
    موصول شکریہ جات:
    38
    تمغے کے پوائنٹ:
    21

    محترم ارسلان صاحب،
    کیا امت میں اس وقت سب سے بڑا مسئلہ ہی ڈاڑھی رکھنے یا نہ رکھنے کا ہے؟ اور تماشا یہ ہے کہ آپ نے خود ہی یہ پوسٹ کیا ہے اور خود ہی قرآن و حدیث کے حوالے بھی مانگ رہے ہیں، چہ معنی دارد؟ آپ نے پوسٹ کا نام ڈاڑھی کا بیان قرآن و سنت کی روشنی میں لکھا ہے، سنت کے تو آپ نے درجنوں حوالے دیے، ایک آدھ حوالہ قرآن کریم سے بھی دے دیتے تا کہ کم ازکم آپ کے موضوع کی لاج ہی رہ جاتی!
     
  4. ‏نومبر 15، 2012 #14
    عابدالرحمٰن

    عابدالرحمٰن سینئر رکن
    جگہ:
    BIJNOR U.P. INDIA
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 18، 2012
    پیغامات:
    1,124
    موصول شکریہ جات:
    3,229
    تمغے کے پوائنٹ:
    240

    اس کا مکمل جواب تھریڈ نمبر چار اور چھ میں دیا جاچکا ہے۔وہاں ملاحظہ فراما ئیں، لاج بچی رہیگی ان شاءاللہ
     
  5. ‏نومبر 15، 2012 #15
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    یہ تھریڈ اسلام ڈیفینڈر بھائی نے پوسٹ کیا ہے
     
  6. ‏نومبر 15، 2012 #16
    عمران علی

    عمران علی مبتدی
    جگہ:
    لانڈھی ۔ کراچی
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2012
    پیغامات:
    71
    موصول شکریہ جات:
    38
    تمغے کے پوائنٹ:
    21

    محترم عابدالرحمان صاحب،
    بہت افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ آپ محض اپنے مروجہ عقائد کو درست ثابت کرنے کے لیے قرآن کریم میں تحریف کر رہے ہیں، قرآن میں ذکر تو بہت سی ناپاک اور پلید چیزوں کا بھی ہے، تو کیا اس یہ ثابت ہوتا ہے کہ وہ درست ہیں، سورۃ طہ کی جو آیت آپ نے قرآن کریم سے بطور ثبوت پیش کی ہے ، اس میں ڈاڑھی کا ذکر تو ہے، لیکن اس کا ذکر کن الفاظ میں ہے اور اس آیت کا سیاق و سباق کیا ہے، وہ پیش کرنے کی ہمت نہیں کی آپ، اور نہ ہی اس سے آپکا مروجہ عقیدہ درست ثابت ہوتا ہے، ملاحظہ کیجیے اس آیت کا سیاق

    قَالَ يَا هَارُونُ مَا مَنَعَكَ إِذْ رَأَيْتَهُمْ ضَلُّوا ٢٠:٩٢
    أَلَّا تَتَّبِعَنِ ۖ أَفَعَصَيْتَ أَمْرِي ٢٠:٩٣
    قَالَ يَا ابْنَ أُمَّ لَا تَأْخُذْ بِلِحْيَتِي وَلَا بِرَأْسِي ۖ إِنِّي خَشِيتُ أَن تَقُولَ فَرَّقْتَ بَيْنَ بَنِي إِسْرَائِيلَ وَلَمْ تَرْقُبْ قَوْلِي ٢٠:٩٤

    ترجمہ : (پھر موسیٰ نے ہارون سے) کہا کہ ہارون جب تم نے ان کو دیکھا تھا کہ گمراہ ہو رہے ہیں تو تم کو کس چیز نے روکا ٢٠:٩٢
    (یعنی) اس بات سے کہ تم میرے پیچھے چلے آؤ۔ بھلا تم نے میرے حکم کے خلاف (کیوں) کیا؟ ٢٠:٩٣
    کہنے لگے کہ بھائی میری ڈاڑھی اور سر (کے بالوں) کو نہ پکڑیئے۔ میں تو اس سے ڈرا کہ آپ یہ نہ کہیں کہ تم نے بنی اسرائیل میں تفرقہ ڈال دیا اور میری بات کو ملحوظ نہ رکھا ٢٠:٩٤

    ملاحظہ فرمایا آپ نے ، حضرت موسی اپنے بھائی پر اس بات پر برہم ہورہے تھے کہ انہوں نے بجائے قوم کی اصلاح کرنے کے، انہیں یوں ہی کیوں چھوڑ دیا، اس بات پر غصہ میں آکر انہوں نے اپنے بھائی ہارون کی ڈاڑھی پکڑی تھی، اس سے ڈاڑھی کا رکھنا کہاں سے ثابت ہوتا ہے؟

    اب آپ کی پیش کردہ دوسری آیت
    يَا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا أَطِيعُوا اللَّهَ وَأَطِيعُوا الرَّسُولَ وَأُولِي الْأَمْرِ مِنكُمْ ۖ فَإِن تَنَازَعْتُمْ فِي شَيْءٍ فَرُدُّوهُ إِلَى اللَّهِ وَالرَّسُولِ إِن كُنتُمْ تُؤْمِنُونَ بِاللَّهِ وَالْيَوْمِ الْآخِرِ ۚ ذَٰلِكَ خَيْرٌ وَأَحْسَنُ تَأْوِيلًا ٤:٥٩

    ترجمہ : مومنو! خدا اور اس کے رسول کی فرمانبرداری کرو اور جو تم میں سے صاحب ارباب اختیار ہیں انکی بھی اور اگر کسی بات میں تم میں اختلاف واقع ہو تو اگر خدا اور روز آخرت پر ایمان رکھتے ہو تو اس میں خدا اور اس کے رسول کی طرف رجوع کرو یہ تمہارے لیے (حکومتی تشکیل کی) بہترین تاویل و تشریح ہے۔

    اس آیت میں اگر ہم محدب عدسہ لگا کر بھی دیکھیں تو کہیں سے بھی ڈاڑھی کا رکھنا یا اسکا سنت رسول ہونا ثابت نہیں ہے؟آپ کہاں سے قرآن کی بات کررہے ہیں،ان دونوں آیتوں میں تو ڈاڑھی رکھنے کا کوئی جواز موجود نہیں، ہاں کوئی اور ثبوت ہو تو پیش کریں
     
  7. ‏نومبر 16، 2012 #17
    بلال مصطفیٰ

    بلال مصطفیٰ رکن
    شمولیت:
    ‏جون 10، 2011
    پیغامات:
    22
    موصول شکریہ جات:
    48
    تمغے کے پوائنٹ:
    52

    -علماء کی موجودگی میں کمنٹ کرنے کی جرات پر معذرت کے ساتھ کیا کوئی بھائی ان صاحب کو اس آیت کا ریفرنس دے سکتا ہے جس میں اللہ اور اس کے رسول کی بات میں فرق کرنا کفر ہے
    -اور اس حدیث کا ریفرنس جو اس آیت کی تفسیر کے لیے آتی ھے وما اٰتاکم الرسول (الی الآخر)
     
  8. ‏نومبر 16، 2012 #18
    عابدالرحمٰن

    عابدالرحمٰن سینئر رکن
    جگہ:
    BIJNOR U.P. INDIA
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 18، 2012
    پیغامات:
    1,124
    موصول شکریہ جات:
    3,229
    تمغے کے پوائنٹ:
    240

    محترمی ومکرمی ومصلحی اسلام علیکم
    مزاج عالی
    خدمت عالیہ ومقدسہ میں یہ بندہ نا چیز عرض گزارہے آپ افسوس نہ فرمائیں یہ کام تو مجھ پر چھوڑدیں،گرامی قدر اس ناچیز کا عقیدہ آنجناب کو محدب چشمہ لگا پر بھی نظر نہیں آیئگا کیونکہ عقیدے کو دیکھنے اور سمجھنے کے لئے ان آنکھوں کی ضرورت نہیں جو آنکھیں آپ اٹھائے پھر رہے ہیں ، عقیدے کو سمجھنے اور دیکھنے کے لئے دل و دماغ کی بصیرت ضروری ہوتی ہے اوروہ شاید جناب والا کے پاس ہے نہیں۔
    اس تھیرڈ کا عنوان ہے داڑھی کا بیان قرآن وحدیث سے،تو بتائے داڑھی کا بیان قرآن میں ہے یا نہیں آیت شریفہ سامنے ہے دوربین لگا کر پڑھ لیں،شاید آپ کا چشمہ ہلکا یا دھندلا ہے، داڑھی کی تفسیر احادیث مبارکہ میں ہے،تومیری مزید وضاحت کی ضرورت نہیں رہجاتی ہے۔
    محترمی ایسا لگتا ہے کہ شاید آپ کے داڑھی نہیں ہے ، اس لئے یہاں محدب عدسہ تو کیا دوربین بھی فیل ہو جائےگی۔ دوسری آیت شریفہ رسول کی اتباع کے بارے میں ہے یہ بتائیں کہ رسول صلی اللہ علیہ وسلم کی داڑھی تھی یا نہیں اگر تھی تو ان کی اطاعت یا اتباع کی جائے گی یا نہیں ۔
     
  9. ‏نومبر 16، 2012 #19
    عابدالرحمٰن

    عابدالرحمٰن سینئر رکن
    جگہ:
    BIJNOR U.P. INDIA
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 18، 2012
    پیغامات:
    1,124
    موصول شکریہ جات:
    3,229
    تمغے کے پوائنٹ:
    240

    مبارک باد

    اسلام عیلکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
    میں تمام منتظمیں فورم وجملہ اراکین و قارئین کرام ذی وقار کو تہ دل سے اسلامی سال نو کی مبارک باد پیش کرتا ہوں ، اور بار گاہ دعاء گو ہوں کہ اللہ تعالیٰ اس سال نو کو تمام عالم اسلام کے مسلمانوں کے لئے بالخصوص اور تمام عالم کے انسانوں کے لئے بالعموم رحمت والا امن والا بنائے اور آپس میں بھائی چارگی پیدا فرمائے۔ آمین فقط والسلام
    آپ سب کا بھائی
    عابد الرحمٰن بجنوری
    انڈیا(یوپی)
     
  10. ‏نومبر 16، 2012 #20
    عمران علی

    عمران علی مبتدی
    جگہ:
    لانڈھی ۔ کراچی
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2012
    پیغامات:
    71
    موصول شکریہ جات:
    38
    تمغے کے پوائنٹ:
    21

    محترم عابد الرحمان صاحب،
    و علیکم السّلام،
    آپکو بھی نیا قمری سال مبارک ہو، ، عابد الرحمان صاحب، آپ نے سورۃ طہ کے سیاق کو سباق کے حوالے سے کوئی بات نہیں کی بلکہ اسے نظر انداز کر دیا، اور اس پر مستزاد یہ کہ نیا سوال بھی داغ دیا، الحمد للہ ہمارے پاس قرآن حکیم کی طاقتور دوربین موجود ہے، جس سے ہم باریک سے باریک اشیاء کو بھی ملاحظہ کرسکتےہیں۔
    حضورنبی کریم کی ڈاڑھی کو فی الحال آپ رہنے ہی دیں تو اچھا ہے، پہلے آپ ہارون علیہ السّلام کی ڈاڑھی سنبھالیے، جس سے آپ پہلو تہی کر گئے ہیں۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں