1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔۔
  2. محدث ٹیم منہج سلف پر لکھی گئی کتبِ فتاویٰ کو یونیکوڈائز کروانے کا خیال رکھتی ہے، اور الحمدللہ اس پر کام شروع بھی کرایا جا چکا ہے۔ اور پھر ان تمام کتب فتاویٰ کو محدث فتویٰ سائٹ پہ اپلوڈ بھی کردیا جائے گا۔ اس صدقہ جاریہ میں محدث ٹیم کے ساتھ تعاون کیجیے! ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔ ۔

کالے پیلے عاملوں کی وارداتیں اوران کا خوفناک انجام قاضی کاشف نیاز

'معاصر بدعی اور شرکیہ عقائد' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد فیض الابرار, ‏دسمبر 03، 2016۔

  1. ‏دسمبر 04، 2016 #21
    محمد فیض الابرار

    محمد فیض الابرار سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏جنوری 25، 2012
    پیغامات:
    2,884
    موصول شکریہ جات:
    1,163
    تمغے کے پوائنٹ:
    371

    بہت خوب
     
  2. ‏دسمبر 04، 2016 #22
    nasim

    nasim رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 27، 2016
    پیغامات:
    524
    موصول شکریہ جات:
    93
    تمغے کے پوائنٹ:
    62

    محترم
    جہاں تک مجھے معلومات ہے ٹیلی پیتھی کے بارے میں وہ یہ ہے کہ اس میں ارتکاز کی مشقیں ہوتی ہیں۔
    مجھے ایک ایسی شخصیت سے واسطہ پڑ چکا ہے۔ جو آپ کے دل کی بات وہی بتا سکتا تھا جو آپ سوچتے تھے۔وہ شخصیت انتہائی پابند شریعت تھی۔
    ویسے مجھے اس علم کے بار ے میں پڑھے ہوئے کافی عرصہ ہوگیا ہے ۔اس پر مزید ریسرچ کر کے آپ کے گوش گذار کر تا ہوں۔
    جہاں تک مجھے علم ہے موجودہ دور میں اس کا دعوٰی خواجہ شمس الدین صاحب کر تے ہیں جن کا مراقبہ حال کراچی سر جانی ٹاؤن میں ہے۔ ان کا بھی پتہ نہیں کہ اب وہ حیات ہیں یا اس دار فانی سے کوچ کر چکے ہیں۔وہ باقاعدہ اس علم کو روحانی ٹیلی پیتھی کے نام دیتے ہیں۔
    واللہ اعلم باالصواب
     
  3. ‏دسمبر 04، 2016 #23
    محمد طارق عبداللہ

    محمد طارق عبداللہ سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی - مہاراشٹرا
    شمولیت:
    ‏ستمبر 21، 2015
    پیغامات:
    2,042
    موصول شکریہ جات:
    641
    تمغے کے پوائنٹ:
    213

    ٹهیک هے ۔ جیسا کہ استاذ محترم محمد فیض الابرار نے کہا کہ اعتراض آپکا حق هے ۔ آپ اپنا حق رکهتے ہیں۔
     
  4. ‏دسمبر 05، 2016 #24
    محمد فیض الابرار

    محمد فیض الابرار سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏جنوری 25، 2012
    پیغامات:
    2,884
    موصول شکریہ جات:
    1,163
    تمغے کے پوائنٹ:
    371

    اللہ آپ کو عزت دے ٹیلی پیتھی کی بنیاد تو ارتکاز ہی ہے لیکن کسی چیز کے صحیح یا غلط ہونے کا انحصار شریعت یعنی کتاب و سنت ہے نہ کہ کسی پابند شریعت کا کویی عمل اور جہاں تک خواجہ شمس الدین عظیمی کی بات ہے تو ان کا سارا معاملہ تصوفانہ اور بدعتی طرق پر مشتمل ہے اور فوت ہو چکے ہیں ان اس کا بیٹا وہی رنگوں سے علاج اور پتا نہیں کیا کیا کھٹراگ تراشے ہویے ہیں
    اب رہی یہ بات کہ کویی کسی کے دل کی بات بتایے یہ نا ممکن ہے البتہ کویی اپنی فراست سے کسی کے چہرے کے تاثرات یا بادی لینگویج سے کچھ اندازہ لگا لے یہ بالکل ممکن ہے لیکن ٹیلی پیتھی کا معروف مفہوم جس میں کویی شخص تین طریقوں سے کسی دوسرے شخص پر حاوی ہو سکتا ہے
    نمبر ایک آواز سن کر
    نمبر دو تصویر دیکھ کر
    نمبر تین صرف آنکھیں دیکھ کر
    عملی طور پر اس کا وجود ہے بھی یا نہیں یہ تو نہیں جانتا لیکن کتاب و سنت ایسے کسی علم کی تایید نہیں کرتے
     
  5. ‏دسمبر 05، 2016 #25
    nasim

    nasim رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 27، 2016
    پیغامات:
    524
    موصول شکریہ جات:
    93
    تمغے کے پوائنٹ:
    62

    محترم شیخ صاحب
    اللہ آپ علم میں اضافہ فرمائے۔ اگر میں خود اس تجربہ سے نہ گزرا ہوتا اور کسی نے بتایا ہوتا تو علم الیقین والا معاملہ ہوتا ۔ میں تو حق الیقین والی کیفیت میں ہوں۔برائے کرم اس کی کچھ وضاحت فرمائیے گا کہ"کتاب و سنت ایسے علم کی تائید نہیں کرتے "۔اپنی کم علم پر شرمندہ ہوں آپ یہ کہنا چاہ رہے ہیں کہ ایسا علم سیکھنا صحیح نہیں؟
     
  6. ‏دسمبر 05، 2016 #26
    محمد فیض الابرار

    محمد فیض الابرار سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏جنوری 25، 2012
    پیغامات:
    2,884
    موصول شکریہ جات:
    1,163
    تمغے کے پوائنٹ:
    371

    کسی علم کے اثرات سے اس کے صحیح یا غلط ہونے کا فیصلہ نہیں کیا جا سکتا
    البتہ اس کے صحیح ہونے کے حوالے سے مجھے کویی نص نہیں ملی یہاں تک کہ استدلالا بھی البتہ اس کی مخالفت میں بہت سی نصوص ہیں جیسا کہ عدم التجسس و التحسس، راز افشا نہ کرنا ، کسی کے عیوب کو بیان نہ کرنا وغیرہ
    اور ٹیلی پیتھی میں ان جیسے اور دیگر احکام کی مخالفت میں کچھ کیفیات موجو دہیں
    اور اس علم کا سیکھنا میری رایے کے مطابق درست نہیں ہے اگر اس کے مشتملات وہی ہیں جو میں نے بیان کیے اور جو آپ کے تجربات میں ہیں
     
  7. ‏دسمبر 05، 2016 #27
    طالب علم

    طالب علم مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏اگست 15، 2011
    پیغامات:
    222
    موصول شکریہ جات:
    570
    تمغے کے پوائنٹ:
    104

    مجھے یقین کی حد تک شبہ ہے کہ یہ علم شیطانی ہے وجہ آپ کا اوپر نقل کردہ اقتباس ہے۔ کسی کے دل کی بات جاننے کی کوشش کرنا اسلام کی رو سے کوئی پسندیدہ کام ہے کیا؟

    ویسے ایسی ہی ایک کوشش ابن صیاد نے بھی کی تھی۔
     
  8. ‏دسمبر 06، 2016 #28
    nasim

    nasim رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 27، 2016
    پیغامات:
    524
    موصول شکریہ جات:
    93
    تمغے کے پوائنٹ:
    62

    محترم
    اپنا مؤقف ثابت کر نے کیلئے دلائل دینا آپ کا حق ہے ۔ لیکن قیاس پر کسی کو ایمان سے خارج کر دینا ظلم ہے۔ برائے مہربانی ایسا نہ کریں۔
     
  9. ‏دسمبر 06، 2016 #29
    طالب علم

    طالب علم مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏اگست 15، 2011
    پیغامات:
    222
    موصول شکریہ جات:
    570
    تمغے کے پوائنٹ:
    104

    میں نے کسی کو ایمان سے خارج نہیں کیا اور نہ ہی یہ میرے دائرہ اختیارمیں ہے۔ میں نے تو ٹیلی پیتھی ٹائپ اس عمل کو شیطانی کہاہے کیوں کہ اس میں کسی کے دل کے حالات جاننے کا دعویٰ کیا گیا تھا۔

    قرین کے بارےمیں تو کچھ جانتے ہوں گے آپ، جنات و شیاطین کا بھی آپ کو علم ہوگا۔ کچھ غور کیجئے کہ یہ کیسے ہوا ہو گا کہ ایک بندے نےدوسرے بندےکے دل کی بات جان لی۔ ذرا کڑی سے کڑی ملائیں، بات سمجھ میں آتی جائے گی
     
  10. ‏دسمبر 08، 2016 #30
    SheebaKamran

    SheebaKamran رکن
    جگہ:
    Islamabad, Pakistan
    شمولیت:
    ‏فروری 19، 2014
    پیغامات:
    6
    موصول شکریہ جات:
    2
    تمغے کے پوائنٹ:
    43

    بہت عمدہ کاوش ہے میں اس پوسٹ کو فیس بک پہ کیسے شئیر کر سکتی ہوں ؟


    Sent from my iPhone using Tapatalk
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں