1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

کیادین کونظام زندگی کہاجاسکتاہے؟

'سیاسی نظام' میں موضوعات آغاز کردہ از کیلانی, ‏جون 05، 2013۔

  1. ‏جون 05، 2013 #1
    کیلانی

    کیلانی مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 24، 2013
    پیغامات:
    347
    موصول شکریہ جات:
    1,101
    تمغے کے پوائنٹ:
    127

    واضح رہےکہ دین اسلام معروف معنوں میں ایک نظام یا ضابطہءحیات نہیں۔کیونکہ جب ہم کسی چیزیاتصورپرنظام کا اطلاق کرتےہیں تو اس کامطلب ہوتاہےکہ اس میں تمام جزئیات یکساں حیثیت رکھتی ہیں۔جبکہ دین میں کچھ جزئیات اولیں حیثیت میں مطلوب ہیں اورکچھ ثانوی حیثیت میں یااولیں جزئیات کےتقاضےکےطورپرمطلوب ہوتی ہیں۔مثلااللہ کی معرفت اور اس کی محبت اولیں درجےکامطالبہ ہےجبکہ اس کی اطاعت یااس کےقانون کو معاشرےپرلاگوکرنا یہ اس کا تقاضہ ہے۔اصلامطلوب نہیں۔اور ایسافرض جو دین میں تقاضےکےطورپرہووہ فریضہ تمام حالات کیلے نہیں ہوتا۔ بلکہ وہ اس وقت فرض ہوتاہےجب اس کیلے خاص حالات ہوں۔مثلاسچی گواہی دینایہ ایک دینی فریضہ ہےلیکن یہ اس وقت ہے جب گواہی دینےکےحالات ہوں۔ایسےہی اسلامی قانون یا نظام کانافذکرنااس وقت ہےجب اس کےحالات ہوں۔
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • ناپسند ناپسند x 1
    • مفید مفید x 1
    • لسٹ
  2. ‏جون 05، 2013 #2
    کیلانی

    کیلانی مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 24، 2013
    پیغامات:
    347
    موصول شکریہ جات:
    1,101
    تمغے کے پوائنٹ:
    127

    ہمارے جدیدمفکرین کو اسلامی فکرکی تعبیرکیلے نظام کالفظ اس وجہ سے استعمال کرناپڑاکیونکہ دورجدیدمیں سائنس کاجادوسرچڑھ کربول رہاہےاورسائنس فطرت کےمطالعےکانام ہےجس میں وہ ہر چیز کو فطری قوانین کےتحت سسٹمائزکرتی ہے۔لہذا سائنس کےحاملین اہل مغرب نےمعاشرےکو بھی لگےبندھےقوانین کےتحت پڑھناشروع کیا تو انہونےاس کےبھی چنداصول متعین کرناچاہےجس سے پھر کیپٹیلزم اور کیمونزم سامنےآئے۔چناچہ اسی تاثرکو لیتےہوئےہمارےمفکرین نےاسلام کوبھی سسٹمائزکرناچاہا۔جس میں کچھ ثانوی درجےکےفرائض اولیں کےمساوی ہوگئے۔
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • مفید مفید x 1
    • لسٹ
  3. ‏ستمبر 04، 2013 #3
    محمد عاصم

    محمد عاصم مشہور رکن
    جگہ:
    گجرات
    شمولیت:
    ‏مئی 10، 2011
    پیغامات:
    236
    موصول شکریہ جات:
    999
    تمغے کے پوائنٹ:
    104

    تو آپ دین اسلام کو ضابطہء حیات نہیں مانتے بہت اعلیٰ آپ اپنے اس فلسفے کی دلیل بھی ساتھ دیتے تاکہ آپ کے فلسفے کو سمجھنے میں آسانی ہوجاتی
    میری نظر میں اسلام ایک مسلم کے لیئے واحد ضابطہء حیات ہے جس میں زندگی کے ہر ہر معاملے کی وضاحت موجود ہے
    آپ پہلے اپنے دلائل لائیں اس کے بعد بات آگے بڑھائی جائے گی ان شاءاللہ۔
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  4. ‏ستمبر 04، 2013 #4
    کنعان

    کنعان فعال رکن
    جگہ:
    برسٹل، انگلینڈ
    شمولیت:
    ‏جون 29، 2011
    پیغامات:
    3,564
    موصول شکریہ جات:
    4,376
    تمغے کے پوائنٹ:
    521

    السلام علیکم

    محترم عاصم، کسی بھائی نے مراسلہ میں اپنی رائے کے ساتھ کچھ جزو بھی پیش کئے ہیں، اس کا مطلب یہ نہیں کہ وہ اس کا منکر بھی ہو، آپ عاصم صاحب آپ اس پر اپنی رائے پیش کریں جو مثبت طریقہ کار ھے، پھر ہو سکتا ھے بات آگے چلے۔

    والسلام
     
  5. ‏ستمبر 04، 2013 #5
    سرفراز فیضی

    سرفراز فیضی سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی۔
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 22، 2011
    پیغامات:
    1,091
    موصول شکریہ جات:
    3,772
    تمغے کے پوائنٹ:
    376

    اس تعریف کی وضاحت دلیل کے ساتھ کرسکتے ہیں؟
     

اس صفحے کو مشتہر کریں