1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

کیا حسن لغیرہ حدیث (ضعیف + ضعیف)حجت ہے؟

'اصول حدیث' میں موضوعات آغاز کردہ از علی عمران, ‏اپریل 20، 2019۔

  1. ‏اپریل 22، 2019 #11
    عامر عدنان

    عامر عدنان مشہور رکن
    جگہ:
    انڈیا،بنارس
    شمولیت:
    ‏جون 22، 2015
    پیغامات:
    825
    موصول شکریہ جات:
    237
    تمغے کے پوائنٹ:
    118

    بہت ہی زبردست ۔۔ آپ کا بہت بہت شکریہ
    میں سوچ ہی رہا تھا کہ جس طرح اشاعت الحدیث کا ایپلکیشن ہے جس میں شیخ زبیر علی زئی رحمہ اللہ کے سارے مضامین وغیرہ سرچ کر کے مل جاتے ہیں اسی طرح مجلہ السنہ کا بھی کوئی ایپ آ جائے ۔۔
    اور الحمدللہ آپ نے یہ کمی پوری کر دی ۔ اللہ آپ کو ضرور بالضرور اس کا اجر دے گا ان شاء اللہ ۔ آمین
     
  2. ‏اپریل 22، 2019 #12
    ابوطلحہ بابر

    ابوطلحہ بابر مشہور رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    راولپنڈی
    شمولیت:
    ‏فروری 03، 2013
    پیغامات:
    661
    موصول شکریہ جات:
    835
    تمغے کے پوائنٹ:
    195

    جزاک اللہ خیرا
    جو سوفٹ وئیر ریلیز ہو رہا ہے کچھ دن تک ان شاء اللہ ، آرٹیکل سرچ سہولت اس میں شامل ہو گی۔
     
  3. ‏اپریل 22، 2019 #13
    عامر عدنان

    عامر عدنان مشہور رکن
    جگہ:
    انڈیا،بنارس
    شمولیت:
    ‏جون 22، 2015
    پیغامات:
    825
    موصول شکریہ جات:
    237
    تمغے کے پوائنٹ:
    118

    ان شاء اللہ ۔ اللہ مزید استقامت عطا فرمائے ۔ اور جو بھی دشواری لاحق ہو اللہ اسے دور کرے ۔ آمین
    جزاکم اللہ خیرا
     
  4. ‏اپریل 22، 2019 #14
    عبد الخبیر السلفی

    عبد الخبیر السلفی رکن
    جگہ:
    بدایوں
    شمولیت:
    ‏اگست 28، 2018
    پیغامات:
    88
    موصول شکریہ جات:
    3
    تمغے کے پوائنٹ:
    44

    میرے بھائی شاید آپ نے غور سے پڑھا نہیں، آپ کے سارے جواب موجود ہیں، ممکن ہے جواب آپ کی مرضی کے نا ہوں اس لئے آپ سمجھ نہیں پا رہے ہیں
     
  5. ‏اپریل 22، 2019 #15
    عبد الخبیر السلفی

    عبد الخبیر السلفی رکن
    جگہ:
    بدایوں
    شمولیت:
    ‏اگست 28، 2018
    پیغامات:
    88
    موصول شکریہ جات:
    3
    تمغے کے پوائنٹ:
    44

    بھائی! میں نے کہا کہ یہ اجتہادی اور اصطلاح کا مسئلہ ہے کوئی بھی انسان اگر اپنی اصطلاح بناتا ہے تو اس میں بات صحیح اور غلط کی نہیں ہوتی ہے، اگر حافظ زبیر علی زئی رحمہ اللہ کی اصطلاح ضعیف +ضعیف =ضعیف ہے تو اس میں مجھے یا کسی کو بھلا کیا اعتراض ہو سکتا ہے بہت سارے علماء نے اپنی اپنی الگ الگ اصطلاحات بنا رکھی ہیں اب دیکھیں امام ترمذی رحمہ اللہ کی حسن کی اصطلاح الگ ہے جبکہ صاحب مشکوٰۃ کی الگ اور عام محدثین کی الگ، جب بھی یہ کتابیں پڑھی جاتی ہیں تو انہیں کے حساب سے ان اصطلاحات کو سمجھا جاتا یہ تھوڑی کہا جاتا ہے کہ فلاں کی اصطلاح غلط ہے اور فلاں کی صحیح؟ حافظ ابن حجر رحمہ اللہ کی اصطلاحات بلوغ المرام میں بالکل الگ ہیں کوئی بھی انسان یہ نہیں کہہ سکتا کہ اربعہ سے حافظ کی مراد سنن اربعہ لینا غلط ہے اس لئے اصطلاحات میں انگلی اٹھانا میرے حساب سے غلط ہے رہی بات حسن لغیرہ کی تعریف کی تو وہ مشہور بین المحدثین یہی کہ ایسی روایت جس کی سند میں ضعف معمولی ہو جس کی بھر پائی تعدد طرق سے ممکن ہو اور شذور وغیرہ سے بھی خالی ہو، ظاہر سی بات ہے اگر کوئی روایت اس جیسی اسناد سے مروی ہو تو ان شاء اللہ قابل قبول بھی ہوگی،
     
  6. ‏اپریل 23، 2019 #16
    محمد علی جواد

    محمد علی جواد سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 18، 2012
    پیغامات:
    1,979
    موصول شکریہ جات:
    1,494
    تمغے کے پوائنٹ:
    304

    حسن لغیرہ حدیث سے متعلق صحیح اور متعدل موقف یہ ہے کہ :

    وہ روایت جو حسن لغیرہ کے طور پر مشھور ہو اس کو "عقائد" کے باب حجت قرار دینا صحیح نہیں اور یہ خطرناک ہو سکتا ہے- عقائد کا معامله نازک ہے - ضعیف + ضعیف = حسن لغیرہ پر اعتماد کرنا لوگوں کی گمراہی کا سبب بن سکتا ہے - عقائد کے باب میں جید محدثین کا اصول یہی ہے کہ صرف قرانی آیات اور صحیح ترین احادیث پر ہی اعتماد کیا جائے تاکہ بدعتوں اور گمراہی سے بچا جا سکے- مثال کے طور پر امام اسماعیل بخاری نے صحیح بخاری میں رافضی افکار رکھنے والے راویوں سے بھی روایات اخذ کیں ہیں- مثلا عدی بن ثابت، قیس بن ابی حازم، ابو سعید الکوفی یہ سب رافضی ہیں اور بخاری کے راوی ہیں- لیکن عقائد کے باب میں ان راویوں سے کوئی روایت امام بخاری نے صحیح بخاری میں درج نہیں کی - محدثین کا عمومی اصول یہی تھا کہ جس بدعتی کی روایت اس کے عقیدے کو فروغ دیتی ہو اس کی روایت دینی عقائد میں قابل قبول نہیں ہو گی-

    البتہ وہ "حسن لغیرہ" روایات جن کا تعلّق فقہی معملات و مسائل سے یا ان تاریخی واقعیات و معملات سے ہو جن کی ضرب براہ راست عقیدے پر نہ پڑتی ہو ایسی حسن لغیرہ روایات کو علم الحدیث میں حجت تسلیم کرلینے میں کوئی مضائقہ نہیں- اب یہ روایت پر منحصر ہو گا کہ اس باب میں اس کو حجت تسلیم کیا جائے یا نہیں - (واللہ اعلم)-
     
  7. ‏اپریل 24، 2019 #17
    محمد نعیم یونس

    محمد نعیم یونس خاص رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 27، 2013
    پیغامات:
    26,377
    موصول شکریہ جات:
    6,597
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,207

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!

    یا عنقریب کیے جا سکیں گے؟۔۔ ابتسامہ!
    میرے پاس "آرٹیکل تلاش" آپشن نظر نہیں آ رہی۔۔

    Screenshot_2019-04-24-00-14-35.png
     
  8. ‏اپریل 24، 2019 #18
    عامر عدنان

    عامر عدنان مشہور رکن
    جگہ:
    انڈیا،بنارس
    شمولیت:
    ‏جون 22، 2015
    پیغامات:
    825
    موصول شکریہ جات:
    237
    تمغے کے پوائنٹ:
    118

     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • معلوماتی معلوماتی x 1
    • لسٹ
  9. ‏اپریل 24، 2019 #19
    محمد نعیم یونس

    محمد نعیم یونس خاص رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 27، 2013
    پیغامات:
    26,377
    موصول شکریہ جات:
    6,597
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,207

    جزاکم اللہ خیرا محترم عدنان بھائی!
    دراصل بعد والی پوسٹیں پڑھنے سے پہلے ہی میں نے سوال داغ دیا تھا۔۔ابتسامہ
     
  10. ‏اپریل 24، 2019 #20
    علی عمران

    علی عمران مبتدی
    شمولیت:
    ‏اپریل 02، 2019
    پیغامات:
    27
    موصول شکریہ جات:
    1
    تمغے کے پوائنٹ:
    13

    @عبد الخبیر السلفی
    محترم۔ آپ صرف شیخ زبیر علی زئی صاحب کے موقف کی تاویل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ کیا جمہور اہل اصول کے نزدیک حسن لغیرہ حجت نہیں ہے؟ اگر ہے تو پھر زبیر علی زئی صاحب کا یہ موقف خطا پر مبنی ہے۔ اصطلاح اور اصول ایجاد کرنا اور چیز ہے اور ایجاد کی ہوئی اصطلاح اور اصول (جو جمہور کے نزدیک مسلمہ ہو) کا انکار کرنا اور چیز ہے۔ بیشک زبیر علی زئی صاحب بھی ایک بشر یعنی انسان تھے، ان سے بھی غلطی ہوسکتی ہے۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں