1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

کیا نجاشی رحمہ اللہ کی اولاد مسلمان نہیں ہوئی تھی؟

'مکالمہ' میں موضوعات آغاز کردہ از رامش راقم, ‏جولائی 06، 2018۔

  1. ‏جولائی 06، 2018 #1
    رامش راقم

    رامش راقم مبتدی
    شمولیت:
    ‏فروری 16، 2018
    پیغامات:
    67
    موصول شکریہ جات:
    8
    تمغے کے پوائنٹ:
    22

    السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ
    جیسا کہ کُتب میں درج ہے کہ نجاشی رحمہ اللہ نے اسلام قبول کرلیا تھا اور اُن کی بعد رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے اُن کی غائبانہ نماز بھی پڑھائی تھی۔ میرا سوال یہ ہے کہ کیا اُن کی اولاد نے اسلام قبول نہیں کیا تھا اور اگر کیا تھا تو پھر کیا مرتد ہو کر دوبارہ عیسائی بن گئے؟؟ کیونکہ نجاشی اصمحہ بن ابحر رحمہ اللہ کے بعد کے بادشاہ تو تاریخ میں عیسائی درج ہیں۔
    جزاک اللہ خیراً۔
     
  2. ‏جولائی 07، 2018 #2
    رامش راقم

    رامش راقم مبتدی
    شمولیت:
    ‏فروری 16، 2018
    پیغامات:
    67
    موصول شکریہ جات:
    8
    تمغے کے پوائنٹ:
    22

    جزاک اللہ خیراً شیخ!
    لیکن یہ میرے سوال کا جواب نہیں ہے۔ کیا نجاشی رحمہ اللہ نے اسلام قبول نہیں کیا تھا اور اگر کیا تھا تو ان کے بعد حبشہ کے جتنے بادشاہ آئے وہ سب عیسائی کیوں تھے میں یہ جاننا چاہتا ہوں۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں