1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

کیا یزیدبن معاویہ سے کوئی ایک بھی جرم بسند صحیح ثابت ہے؟

'تاریخی روایات' میں موضوعات آغاز کردہ از کفایت اللہ, ‏نومبر 13، 2013۔

  1. ‏نومبر 13، 2013 #1
    کفایت اللہ

    کفایت اللہ عام رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 14، 2011
    پیغامات:
    4,770
    موصول شکریہ جات:
    9,777
    تمغے کے پوائنٹ:
    722

    انبیاء علیہم السلام کے علاوہ کوئی بھی شخص معصوم عن الخطاء نہیں ہے غلطیاں کسی سے بھی ہوسکتی ہیں لیکن اس کا یہ مطلب نہیں ہے کہ محض امکان خطاء کے سبب کسی کی طرف فقط جرم کی نسبت ہی سے جرم کی تصدیق کردی جائے ۔
    یزیدبن معاویہ بھی انسان تھے ان سے بھی غلطی ، جرم یا گناہ سرزد ہوسکتاہے۔ ان سے کیا گناہ ہوا کیا نہیں اس کا حقیقی علم صرف اللہ کے پاس ہے ۔ ہم بغیرکسی پختہ ثبوت کے عام مسلمان کی طرف پر کوئی جرم منسوب نہیں کرسکتے ہیں چہ جائے کہ یزید بن معاویہ رحمہ اللہ جیسی شخصیت کی طرف کوئی جرم منسوب کیا جائے جن کے ہاتھ پر صحابہ کرام کی ایک بڑی جماعت نے بیعت کی اورانہیں اپنا خلیفہ تسلیم کیا۔
    چونکہ لوگ ان کی طرف کئی جرم کی نسبت کرتے ہیں اس لئے اس تھریڈ میں ہم اپنی معلومات میں اضافہ کے لئے تمام حضرات سے سوال کرتے ہیں کہ کیا یزید بن معاویہ کا کوئی ایک بھی جرم بادلیل ثابت ہے ۔
    جو صاحب بھی جواب دیں وہ درج ذیل باتوں کاخیال رکھیں :

    1. جرم عائد کرنے والے کے پاس اس کا ثبوت ہو محض سنی سنائی بات نہ ہو۔
    2. جرم عائدکرنے والا یزید بن معاویہ کے دور کا ہو۔
    3. جرم عائد کرنے والے تک ناقل کی سند صحیح ہو۔
    4. بات اجتہادی غلطی کی نہیں جرم کی ہو۔


    کوئی بھی صاحب بے سند ، یا ضعیف السند یا غیرمتعلق بات قطعا نہ پیش کریں۔

    ۔
     
    • پسند پسند x 9
    • متفق متفق x 4
    • زبردست زبردست x 1
    • مفید مفید x 1
    • لسٹ
  2. ‏ستمبر 19، 2015 #2
    عامر عدنان

    عامر عدنان مشہور رکن
    جگہ:
    انڈیا،بنارس
    شمولیت:
    ‏جون 22، 2015
    پیغامات:
    858
    موصول شکریہ جات:
    240
    تمغے کے پوائنٹ:
    118

    جزاک اللہ خیر شیخ
     
  3. ‏ستمبر 20، 2015 #3
    عبدہ

    عبدہ سینئر رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏نومبر 01، 2013
    پیغامات:
    2,038
    موصول شکریہ جات:
    1,160
    تمغے کے پوائنٹ:
    425

    جزاک اللہ شیخ محترم ابھی تک کہیں سے کوئی جواب نہیں آ رہا ہے لگتا ہے پھر واقعی صحیح سند سے کوئی جرم نہیں ہو گا
     
    • پسند پسند x 3
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  4. ‏اکتوبر 15، 2016 #4
    ابن حسیم

    ابن حسیم رکن
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏مارچ 08، 2012
    پیغامات:
    214
    موصول شکریہ جات:
    145
    تمغے کے پوائنٹ:
    89

    ان شاء اللہ کوئ جرم ثابت نہیں. ورنہ یہ اک بہت بڑا چور دروازہ ہو گا صحابہ کرام کی تنقیص کرنے کا.
    والعیاذ باللہ.
     
لوڈ کرتے ہوئے...
متعلقہ مضامین
  1. محمد نعیم یونس
    جوابات:
    8
    مناظر:
    1,458
  2. کفایت اللہ
    جوابات:
    9
    مناظر:
    2,328
  3. کفایت اللہ
    جوابات:
    27
    مناظر:
    12,234
  4. کفایت اللہ
    جوابات:
    1
    مناظر:
    1,889
  5. محمد طلحہ اہل حدیث
    جوابات:
    1
    مناظر:
    19

اس صفحے کو مشتہر کریں