1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ہم مساجد میں بم دھماکے نہیں کرتے ؟؟؟؟

'خوارج' میں موضوعات آغاز کردہ از ابو بصیر, ‏اگست 10، 2013۔

  1. ‏اگست 10، 2013 #1
    ابو بصیر

    ابو بصیر سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 30، 2012
    پیغامات:
    1,420
    موصول شکریہ جات:
    4,161
    تمغے کے پوائنٹ:
    239

    [​IMG]
     
    • شکریہ شکریہ x 3
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  2. ‏اگست 10، 2013 #2
    ابو بصیر

    ابو بصیر سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 30، 2012
    پیغامات:
    1,420
    موصول شکریہ جات:
    4,161
    تمغے کے پوائنٹ:
    239

  3. ‏اگست 10، 2013 #3
    ابو بصیر

    ابو بصیر سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 30، 2012
    پیغامات:
    1,420
    موصول شکریہ جات:
    4,161
    تمغے کے پوائنٹ:
    239

  4. ‏اگست 10، 2013 #4
    ابو بصیر

    ابو بصیر سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 30، 2012
    پیغامات:
    1,420
    موصول شکریہ جات:
    4,161
    تمغے کے پوائنٹ:
    239

    جو بھائی بات کرنا چاہیں دلیل سے بات کریں ؟؟؟؟
     
  5. ‏اگست 10، 2013 #5
    حرب بن شداد

    حرب بن شداد سینئر رکن
    جگہ:
    اُم القرٰی
    شمولیت:
    ‏مئی 13، 2012
    پیغامات:
    2,149
    موصول شکریہ جات:
    6,249
    تمغے کے پوائنٹ:
    437

    جزاکم اللہ خیرا۔۔۔
     
  6. ‏اگست 10، 2013 #6
    ابوزینب

    ابوزینب رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 25، 2013
    پیغامات:
    445
    موصول شکریہ جات:
    282
    تمغے کے پوائنٹ:
    65

    ابوبصیر صاحب بات کو اپنے محل پر رکھئے اس کے محل سے ہٹا کر لوگوں دھوکہ میں مت مبتلا کریں۔طالبان کا ہدف پولیس تھی اور یہ مسجد پولیس لائن کی مسجد تھی ۔اور طالبان متعدد بار یہ وضاحت کرچکے ہیں کہ ہمارا ہداف حکومت اور اس کی ایجنسیاں ہیں ۔ قارئین یہ خبر ملاحظہ فرمائیں:
    بی بی سی کے نامہ نگار محمد کاظم کا بیان:
    ابوبصیر صاحب اب آپ کی سمجھ میں اچھی طرح آگیا ہوگا کہ یہ مسجد قانون نافذ کرنے والے اداروں کی تھی اور پولیس لائن کے اندر واقع تھی ۔اور خبر کے مطابق وہاں پر پولیس کی اعلیٰ قیادت موجود تھی لہٰذا طالبان نے اس مسجد میں ان کی قیادت کو نشانہ بنایا۔یقیناً یہ مسجد پبلک مقام پر واقع نہیں تھی ۔ لیکن ہمیں حیرت اس بات پر ہے کہ اسی کوئٹہ میں عیدالفطر کے روز مسجد پر فائرنگ کا واقعہ پیش آیا ہے۔جس میں نمازیوں کی کافی تعداد شہیدوزخمی ہوئی تھی اس کے بارے میں ابوبصیر صاحب ابھی تک ایک بھی پوسٹر نازل نہیں کیااس سے ثابت ہوا کہ ابوبصیر صاحب کو کسی کے مرنے کا غم ہے تو وہ ایجنسیوں کے لوگوں کے مرنے کا غم ہے۔اگر ابوبصیر صاحب کو عام لوگوں کے مرنے کا غم یا دکھ ہوتا تو سب سے پہلے ابوبصیر صاحب مردان شیرگڑھ میں نماز جنازہ کے دوران عام شہریوں کی شہادت کے متعلق ضرور پوسٹر بناتے لیکن یہ کام انہوں نے اس لئے نہیں کیا کہ نماز جنازہ کے دوران دھماکہ کرنے کا یہ مکروہ فعل ان کے پسندیدہ آئی ایس آئی کے طاغوتی فائٹرز نے انجام دیا تھا۔جس پر مجاہدین نے ان شہداء کو اپنے شہداء قرار دیا تھا۔اور اگر ابوبصیر صاحب کے دل میں تمام مسلمان نمازیوں کی شہادت کا دکھ ہوتا تو ضرور وہ مرکزالقادسیہ میں بیٹھ کر ان کے لئے بھی پوسٹرز بناتے ۔ لیکن انہوں نے ایسا نہیں کیا ۔ ہم ابوبصیر صاحب سے پوچھتے ہیں کہ :
    ابوبصیر صاحب کیا وہ نمازی مسلمان نہیں تھے؟؟؟
    ابوبصیر صاحب آپ نے ان کے دکھ اور غم میں پوسٹر اس لئے نہیں بنائے کہ وہ عام مسلمان تھے؟؟؟
    ابوبصیر صاحب آپ کو تو غم صرف ایجنسیوں کے مرنے والے افراد پر ہوتا ہے عام مسلمانوں پر نہیں اور اگر عام مسلمانوں پر بھی آپ کو غم ہوتا یقیناً آپ اسی طرح ان کے غم میں بھی پوسٹر بناتے جس طرح آپ نے پولیس والوں کی ہلاکت پر پوسٹر بنائے تھے۔
    ابوبصیر صاحب ابھی تک جتنے بھی پوسٹر آپ نے یہاں پیش کئے ہیں ۔ وہ آپ نے اپنے ذاتی فوائد حاصل کرنے کے لئے بنائے ہیں ۔ تاکہ ان پوسٹرز کے ذریعے آپ ایجنسیوں اور ان کے کارندوں کے لئے اپنے مقاصد کو حاصل کرسکیں۔اور مجاہدین کو متہم کرسکیں۔اگر آپ کو مسلمانوں کی شہادت کا افسوس ہوتا تو یقیناً آپ عیدالفطر کے دن کوئٹہ میں دیوبندیوں کی مسجد پر ہونے والی فائرنگ کے پوسٹر بھی بناتے ۔اور ان شہداء کا اپنے پوسٹروں تذکرہ کرتے ۔ لیکن آپ کو یہ توفیق کس طرح نصیب ہوگی؟آپ تو پوسٹر بناتے ہی ایجنسیوں کی خدمت کے لئے۔ اگر آپ کے دل میں محض انسانی جان جانے کا غم ہوتا تو آپ وزیرستان میں شہید ہونے والے ان گلاب کے پھول جیسے معصوم بچے اور بچیوں کی شہادت کے پوسٹرز ضرور بناتے جن کو آپ کی پسندیدہ فوج نے جیٹ طیاروں سے بمباری کرکے شہید کردیا جن کے والدین بھی انہیں پھولوں کے ہمراہ مسل دئیے گئے۔
    اس لئے ابوبصیر صاحب کچھ تو اللہ کا خوف کرلیں ۔ اور عام مسلمانوں کی تھوڑی سی خدمت تو کرلیں ۔ اللہ آپ کو ہدایت کے راستے پر گامزن کرے ۔ آمین
     
    • شکریہ شکریہ x 2
    • پسند پسند x 1
    • غیرمتفق غیرمتفق x 1
    • لسٹ
  7. ‏اگست 10، 2013 #7
    ابوزینب

    ابوزینب رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 25، 2013
    پیغامات:
    445
    موصول شکریہ جات:
    282
    تمغے کے پوائنٹ:
    65

    ہم نے متعدد بار خوارج کی صفات کے زمرے میں یہ بات اپنے پوسٹوں میں وضاحت کے ساتھ بیان کی ہے خوارج بت پرستوں کے لئے نرم اور اہل اسلام کے لئے سخت ہیں ۔ یہ پوسٹر بھی انہی صفات کا حامل پوسٹر ہے۔ذرا غور سے اس پوسٹر پر نظر ڈالئے پہلے حصے کی چوتھی لائن کو ذرا بغور پڑھیئے آپ کو واضح ہوجائے گا کہ جو لوگ مجاہدین پر خوارج ہونے کی تہمت لگاتے ہیں ان میں کتنی صفات خوارج کی پائی جاتی ہیں : چوتھی لائن میں لکھا ہے:
    اس خبر سے ثابت ہوگیا کہ خوارج نماتکفیری مرجئوں کے دل میں اہل سنت سے محبت کے بجائے رافضیوں کی محبت سامری کے بنائے ہوئے بچھڑے کی مانند رچ بس گئی ہے۔اس محبت میں یہ خوارج نماتکفیری مرجئہ اس قدر اندھے ہوچکے ہیں کہ ان کو یہ نظر نہیں آتا کہ کہاں وہ غلط بات کررہے ہیں۔ذیل میں دی گئی امیج فائل ان کے انہی خیالات کی بھرپور عکاسی کرتی ہے:
    [​IMG]
    غور سے دیکھئے رافضیوں کی مسجد میں ہونے والا خود کش حملہ جو کہ نامعلوم افراد کی کاروائی ہے اس کو بھی طالبان کے کھاتے میں ڈال دیا گیا۔ اور کوئٹہ میں اہل سنت کی جس مسجد پر فائرنگ کے نمازیوں کو شہید وزخمی کیا گیا اس کا اس پوسٹر میں ذکر ہی ندارت ہے ۔ اسے کہتے ہیں خوارج نما تکفیری مرجئوں کی دوستیاں صرف ایجنسی کے لوگوں اور رافضیوں کے ساتھ ہیں۔​
    ہم خوارج نما تکفیری مرجئوں سے اب یہ سوال پوچھنے میں حق بجانب ہیں کہ شام میں سفاک الاسد اور اس معاون رافضی بھیڑئیے حسن نصر الشیطان کا گروہ حزب الشیطان جس قدر بہیمانہ طور پر سنی مسلمانوں اور ان کی عورتوں اور بچوں کو قتل کررہے ہیں انہوں نے اس سفاکانہ قتل وعام کے سلسے میں کتنے پوسٹر بناکر عوام اہل سنت کو خبردار کیاہے؟؟؟​
    وائے افسوس کہ خوارج نما تکفیری مرجئوں کی تمام ہمدردیاں روافض اور ان کے معاونین کے ساتھ ہیں جب ہی تو یہ اس معاملے میں چپ سادھے بیٹھے ہیں۔ اور جو مجاہدین وہاں جہاد کررہے ہیں ان کو یہ فساد سے تعبیر کررہے ہیں۔ واللہ المستعان​
     
    • شکریہ شکریہ x 2
    • پسند پسند x 2
    • غیرمتفق غیرمتفق x 1
    • لسٹ
  8. ‏اگست 11، 2013 #8
    خالد بن ولید

    خالد بن ولید مبتدی
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    2
    موصول شکریہ جات:
    5
    تمغے کے پوائنٹ:
    3

    ابو زینب بھائی، جذاک اللہ خیرا مفید جوابات دینے کا۔۔۔
     
  9. ‏اگست 14، 2013 #9
    متلاشی

    متلاشی رکن
    شمولیت:
    ‏جون 22، 2012
    پیغامات:
    336
    موصول شکریہ جات:
    373
    تمغے کے پوائنٹ:
    92

    خودکش حملہ آور کیونکہ دیوبند درہم کے لوگ ہوتے ہیں لیحاظہ انہی کے ۔۔۔۔۔۔۔ کا فتویٰ ملحاظہ فرمائیں
    نو کمنٹس
    14 اگست کا تحفہ​
    [​IMG]
     
    • شکریہ شکریہ x 2
    • غیرمتفق غیرمتفق x 1
    • لسٹ
  10. ‏اگست 14، 2013 #10
    ابوزینب

    ابوزینب رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 25، 2013
    پیغامات:
    445
    موصول شکریہ جات:
    282
    تمغے کے پوائنٹ:
    65

    یہ فتوے ان لوگوں کے کام آئیں گے جو ان کے فتووں کو طلب کرتے ہیں۔کسی قوم کو خودکش حملہ آور سے تشبیہ دینا ایسا ہی ہے جیسا کہ کوئی انجینئر جناب حافظ محمد سعید صاحب کی طواغیت سے والہانہ محبت اور عساکر طواغیت کے لئے تن من دھن سے قربان ہونے کی کوشش کرنا ۔ حتی کہ امریکہ کے مفاد کے لئے اپنے آپ کو اور اپنی جماعۃ الدعوۃ کو پیش کردینا۔اگر ان تمام امور کو دیکھ کر کوئی کہے کہ تمام اہل حدیث مندرجہ بالا امور کی بناء طواغیت اور عساکر طواغیت اور امریکی مفادات کا حصہ ہیں ۔ تو یہ بات قابل رد ہے۔
     
    • ناپسند ناپسند x 1
    • غیرمتفق غیرمتفق x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں