1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ہم نماز میں رفع الیدین کیوں کرتے ہیں !!!

'نماز' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد عامر یونس, ‏جنوری 14، 2015۔

  1. ‏نومبر 22، 2019 #201
    عدیل سلفی

    عدیل سلفی مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏اپریل 21، 2014
    پیغامات:
    1,620
    موصول شکریہ جات:
    415
    تمغے کے پوائنٹ:
    197

     
  2. ‏نومبر 25، 2019 #202
    بھائی جان

    بھائی جان رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 22، 2018
    پیغامات:
    618
    موصول شکریہ جات:
    10
    تمغے کے پوائنٹ:
    54

    رفع الیدین سے متعلق تمام احادیث سے مؤقف؛
    احادیث سے رفع الیدین میں تبدیلی کا پتہ چلتا ہے۔
    احادیث سے مختلف جگہوں کی رفع الیدین کا ثبوت ملتا ہے۔
    یا جہاں جہاں کی رفع الیدین کا ثبوت ملے وہاں وہاں رفع الیدین کی جائے۔
    خود کو اہلحدیث کہلانے والے ہر ثابت رفع الیدین کے قائل و فاعل نہیں۔
    یا ان احادیث پر عمل کیا جائے جن میں اثبات اور نفی موجود ہو۔
    خود کو اہلحدیث کہلانے والوں کے پاس ایسی بھی کوئی حدیث نہیں۔
    پوری دنیا کے اہلسنت کے مطابق تیسری رکعت کی رفع الیدین مشروع نہیں۔
    خود کو اہلحدیث کہلانے والے اس کے قائل و فاعل ہیں۔
    کیا اہلحدیث ہونے کے لئے ان امور کو اختیار کرنا لازم جس سے خواہش نفس پر عامل ہونا لازم آئے اور جمہور کی مخالفت۔
     
  3. ‏نومبر 25، 2019 #203
    محمد طارق عبداللہ

    محمد طارق عبداللہ سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی - مہاراشٹرا
    شمولیت:
    ‏ستمبر 21، 2015
    پیغامات:
    2,539
    موصول شکریہ جات:
    731
    تمغے کے پوائنٹ:
    276

    بات قریہ سے شروع ھوکر پوری دنیا تک پہونچا دی گئی ۔

    دیکھیں کتنی آسانی سے پوری دنیا کے "اہل سنت" سے خارج قرا دے دیا گیا اہل حدیثوں کو !

    اس وقت مجھے اس پہلے اقتباس کا ثبوت درکار ھے ۔ پھر اہل سنت کی عالم اسلام کی تعریف پیش ھوں کہ کنہیں اہلسنت کہا جاتا ھے ۔ اب اس پر محض "قریہ" والے قیاسات سے کام نہیں چلیگا ۔ یعنی جنھیں قریہ والے سرٹیفکٹ دیں وہ ہی سنی ورنہ اہل سنت سے خارج۔

    بقیہ پورا افسانہ قیاسی ھے ، تبصرے کے قابل نہیں ۔
     
  4. ‏نومبر 26، 2019 #204
    بھائی جان

    بھائی جان رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 22، 2018
    پیغامات:
    618
    موصول شکریہ جات:
    10
    تمغے کے پوائنٹ:
    54

    دنیا میں اہلسنت فقہاء کے لحاظ سے صرف چار اہلسنت طبقات (حنفی، مالکی، شافعی اور حنبلی) پائے جاتے ہیں۔


    اہلسنت صرف چار طبقات (حنفی، مالکی، شافعی اور حنبلی) کو کہا جاتا ہے۔


    دنیائے اسلام میں اہلسنت کا سرٹیفکیٹ صرف انہی چار طبقات کو دیا گیا ہے۔
     
  5. ‏نومبر 26، 2019 #205
    بھائی جان

    بھائی جان رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 22، 2018
    پیغامات:
    618
    موصول شکریہ جات:
    10
    تمغے کے پوائنٹ:
    54

    عالمیانہ گفتگو فائدہ دیا کرتی ہے عامیانہ نہیں۔
     
  6. ‏نومبر 26، 2019 #206
    بھائی جان

    بھائی جان رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 22، 2018
    پیغامات:
    618
    موصول شکریہ جات:
    10
    تمغے کے پوائنٹ:
    54

    درج ذیل احادیث کو ملاحظہ فرما لیا جائے۔
    ان میں صراحت ہے کہ سوائے تکبیر تحریمہ کے رفع الیدین نہیں کی جائے گی۔
    مصنف ابن أبي شيبة:
    حدَّثَنَا أَبُو بَكْرٍ قَالَ: نا وَكِيعٌ، عَنِ ابْنِ أَبِي لَيْلَى، عَنِ الْحَكَمِ، وَعِيسَى، عَنْ عَبْدِ الرَّحْمَنِ بْنِ أَبِي لَيْلَى، عَنِ الْبَرَاءِ بْنِ عَازِبٍ، «أَنَّ النَّبِيَّ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ كَانَ إِذَا افْتَتَحَ الصَّلَاةَ رَفَعَ يَدَيْهِ، ثُمَّ لَا يَرْفَعُهُمَا حَتَّى يَفْرُغَ»

    حَدَّثَنَا وَكِيعٌ، عَنْ مِسْعَرٍ، عَنْ أَبِي مَعْشَرٍ، عَنْ إِبْرَاهِيمَ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ، «أَنَّهُ كَانَ يَرْفَعُ يَدَيْهِ فِي أَوَّلِ مَا يَسْتَفْتِحُ، ثُمَّ لَا يَرْفَعُهُمَا»
    فَلَمْ يَرْفَعْ يَدَيْهِ إِلَّا مَرَّةً

    حَدَّثَنَا وَكِيعٌ، عَنْ سُفْيَانَ، عَنْ عَاصِمِ بْنِ كُلَيْبٍ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ الْأَسْوَدِ، عَنْ عَلْقَمَةَ، عَنْ عَبْدِ اللَّهِ، قَالَ: أَلَا أُرِيكُمْ صَلَاةَ رَسُولِ اللَّهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ؟ «فَلَمْ يَرْفَعْ يَدَيْهِ إِلَّا مَرَّةً»

    حدَّثَنَا وَكِيعٌ، عَنْ أَبِي بَكْرِ بْنِ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ قِطَافٍ النَّهْشَلِيِّ، عَنْ عَاصِمِ بْنِ كُلَيْبٍ، عَنْ أَبِيهِ، «أَنَّ عَلِيًّا، كَانَ يَرْفَعُ يَدَيْهِ إِذَا افْتَتَحَ الصَّلَاةَ، ثُمَّ لَا يَعُودُ» (روات کلھم ثقہ)

    حَدَّثَنَا وَكِيعٌ، وَأَبُو أُسَامَةَ، عَنْ شُعْبَةَ، عَنْ أَبِي إِسْحَاقَ، قَالَ: «كَانَ أَصْحَابُ عَبْدِ اللَّهِ وَأَصْحَابُ عَلِيٍّ، لَا يَرْفَعُونَ أَيْدِيَهُمْ إِلَّا فِي افْتِتَاحِ الصَّلَاةِ، قَالَ وَكِيعٌ،، ثُمَّ لَا يَعُودُونَ»

    رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے اسی کا حکم اس حدیث میں دیا؛
    صحيح مسلم:
    حَدَّثَنَا أَبُو بَكْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ، وَأَبُو كُرَيْبٍ، قَالَا: حَدَّثَنَا أَبُو مُعَاوِيَةَ، عَنِ الْأَعْمَشِ، عَنِ الْمُسَيَّبِ بْنِ رَافِعٍ، عَنْ تَمِيمِ بْنِ طَرَفَةَ، عَنْ جَابِرِ بْنِ سَمُرَةَ، قَالَ: خَرَجَ عَلَيْنَا رَسُولُ اللهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ فَقَالَ: «مَا لِي أَرَاكُمْ رَافِعِي أَيْدِيكُمْ كَأَنَّهَا أَذْنَابُ خَيْلٍ شُمْسٍ؟ اسْكُنُوا فِي الصَّلَاةِ»
    ابو معاویہ نے اعمش سے، انہوں نے مسیب بن رافع سے، انہوں نے تمیم بن طرفہ سے اور انہوں نے حضرت جابر بن سمرہ ؓ سے روایت کی، انہوں نے کہا کہ رسول اللہﷺ نکل کر ہمارے پاس تشریف لائے اور فرمایا: ’’ کیا وجہ ہے کہ میں تمہیں نماز میں اس طرح ہاتھ اٹھاتے دیکھ رہا ہوں، جیسے وہ بدکتے ہوئے سرکش گھوڑوں کی دُمیں ہوں؟ نماز میں پرسکون رہو۔‘‘
     
  7. ‏نومبر 27، 2019 #207
    محمد طارق عبداللہ

    محمد طارق عبداللہ سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی - مہاراشٹرا
    شمولیت:
    ‏ستمبر 21، 2015
    پیغامات:
    2,539
    موصول شکریہ جات:
    731
    تمغے کے پوائنٹ:
    276


    ثبوت؟

    قال ابوحنیفہ/ مالک/شافعی/احمد بن حنبل پیش کریں !

    اگر قال ابوحنیفہ ہی پیش کر سکیں تو چلیگا ۔

    آپکا پیش کردہ ثبوت اس دعوی کو پہلی بار پیش کرنیوالے سے قبل کے تمام مسلمانوں کو اچھے الفاظ میں "غیر سنی" قرار دے دیگا ، تو وہ ایسی کونسی دنیائے اسلام ھے جسے یہ قبول ھوگا؟ ایسا ہماری معلوم دنیائے اسلام میں تو ملا نہیں ، ھوسکتا کہ کسی "قریہ" کو آپ سے محقق نے دنیائے اسلام سمجھ رکھا ھو!
    اب آئیں میری بات پر کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم اور صحابہ الکرام کے بتائے ھوئے راستہ پر چلنے والے کو آپ سے عالم جو بھی سمجھیں ، یہ تو میری خوشنصیبی ھوئی ، بھلا مجھے عالم اسلام کے پیش کردہ "سنی" سرٹیفکٹ کی کیا ضرورت ھے ؟
    ایسا حنفی سنی ھونا کسی کے لئے باعث افتخار ھو سکتا ھے ھوا کرے ، میں سنت رسول صلی اللّٰہ علیہ وسلم اور صحابہ الکرام کے راستہ پر رہوں یہ میری خوش نصیبی سمجھتا ھوں ۔
    کوئی بھلا کس طرح صحابہ الکرام کو سنت نبوی سے خارج سمجھ سکتا ھے ، کم از کم جن چار ائمہ کا نام پیش کیا ھے ان سے تو کہیں ثابت نہیں کہ انکی پیروی کرنا ہی سنت نبوی ھے وگرنہ اہلسنت سے خروج ھو گیا ۔ اور جب ان چاروں نے بھی نا کہا ھو ایسا تو پھر کہا کس نے ؟

    دلیل و ثبوت سے عاری و خالی کلام کس طرح عالمانہ کلام ھوا ۔

    ھونا اس طرح ھے کہ ھر دعوی کا ثبوت ھو ورنہ دعوی ہی باطل ھوا۔ ثبوت بھی قال امام فلان ھوں ، اصحاب کے کلام اپنے قریہ تک ہی رکھیں ۔
     
  8. ‏نومبر 27، 2019 #208
    بھائی جان

    بھائی جان رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 22، 2018
    پیغامات:
    618
    موصول شکریہ جات:
    10
    تمغے کے پوائنٹ:
    54

    دنیائے اسلام میں خود کو مسلمان کہلانے والوں میں اہلسنت کن کو کہا جائے گا؟
     
  9. ‏نومبر 27، 2019 #209
    محمد طارق عبداللہ

    محمد طارق عبداللہ سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی - مہاراشٹرا
    شمولیت:
    ‏ستمبر 21، 2015
    پیغامات:
    2,539
    موصول شکریہ جات:
    731
    تمغے کے پوائنٹ:
    276

    یہی سوال کیا گیا آپ سے ، یہ سوال آپ کے پیش کردہ دعوی میں ھے ، دلائل و ثبوت بھی آپ ہی کو پیش کرنا ھے ۔ خیال رھے امام کے اصحاب کے اقوال زریں قابل قبول نہیں ، صرف قال امام فلان پیش کریں وہ بھی ایسے جنکا ثبوت ناقابلِ تردید ھوں ۔
    مجھے خدشہ ھے کہ آپ اپنے "قریہ" میں بھی تنہا سے خود کو نظر آئیں گے ، ان شاء اللہ

    سوالات کی جگہ جوابات دیا کریں
     
  10. ‏نومبر 27، 2019 #210
    بھائی جان

    بھائی جان رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 22، 2018
    پیغامات:
    618
    موصول شکریہ جات:
    10
    تمغے کے پوائنٹ:
    54

    کیا آپ قرآنی حکم سے اعراض کرنے والوں میں سے ہو؟
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں