1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

14 ا گست 1947 سے 14 اگست 2014 تک

'جمہوریت' میں موضوعات آغاز کردہ از حافظ عبدالسلام فیصل, ‏اگست 12، 2014۔

  1. ‏اگست 12، 2014 #1
    حافظ عبدالسلام فیصل

    حافظ عبدالسلام فیصل مبتدی
    شمولیت:
    ‏اگست 12، 2014
    پیغامات:
    8
    موصول شکریہ جات:
    3
    تمغے کے پوائنٹ:
    3

    بسم اللہ الرحمن الرحیم !
    14 اگست 1947 ء سے 14 اگست 2014 تک :
    خیبر پختون خواہ میں ہونے والی پولیس کی " سیاسی بھرتیاں " جو " اے این پی " نے کیں تھیں ! کیا عمران خان صاحب گارنٹی دے سکتے ہیں کہ جو 49 سے زائد بد عنوان پولیس اہلکاروں کو " برطرف " کیا گیا ہے ؟ یہ وہی تھے جو اے این پی نے بھرتی کیے ؟؟
    افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے۔ ایک ایسی جماعت کا لیڈر جس نے سیاسی لوٹوں کو پناہ دی وہ 6 سال سے انقلاب انقلاب کے نعرے مار رہا ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    یہی عمران خان تھا جس نے "قادیانیوں کے پانچویں خلیفہ " کے پاس اپنا وفد بھیجا اور ان کو یقین دہانی کروائی کہ ہماری جماعت کا منشور ہے کہ اکلیتوں کو برابر کے حقوق دیے جائیں ! اور " ربوا " کے ووٹ حاصل کیے !!!
    کینیڈا میں ایک شخص نے سوال کیا کہ " سر ! اگر آپ پرائم منسٹر بن جاتے ہیں تو جماعت احمدیہ کا مستقبل پاکستان میں کیا ہو گا " ؟؟؟؟
    تو خان صاحب بولے : ہم تمام تر احمدیوں کو ایکول رائٹس دیں گے اور برابری کی بنیاد پر حقوق فراہم کریں گے ۔۔۔۔" شاہذیب خانزادہ ، عمران خان اور کامران شاہد " کے پروگرامز میں اس نے یہ بات کہی " کہ میں ایک سیکولر ہوں اور مجھے سیکولر ہونے پر فخر ہے اور میں اس ملک کو آزاد سیکولر ملک دیکھنا چاہتا ہوں ۔۔"
    خان صاحب ! کا ایک اور مشغلہ ہے، اپنی قمیص کا تیرا خود پھاڑتے ہیں اور اپنے کسی چمچے سے کہہ دیتے ہیں کہ بیٹا فوٹو لے کر "سوشل میڈیا " پر پھیلا کر
    میری سادگی کا ڈنکا بجا دو ۔۔۔۔
    اور دو دن بعد " مارگلہ کی پہاڑیوں " سے " بنی گالہ " کے گیٹ سے ایک خوبصورت " رولس رائیز " نکلتی ہے جس کو خان صاحب اپنے سکواڈ کے ہمراہ
    چلاتے ہوئے پشاور روڈ پر روانہ ہو جاتے ہیں ۔۔۔۔؟؟؟؟
    عمران خان صاحب ! ورلڈ کپ جیت جانے کے بعد " میاں نواز شریف " سے
    " جوہر ٹائون " کے عقب پر واقع " شوکت خانم کینسر ہسپتال " کے لیے جگہ کی بھیک مانگتے ہیں اور آج کے دن "جاتی امراء " پر طعن و تبرہ کرتے نظر آتے ہیں۔
    دنیا کی مہنگی ترین شراب " وڈکا ، وسکی ، وائیٹ اور بلیک لیبل " سے لندن ، یورپ اور امریکہ کے دوروں پر ان کےسامنے پیش کی جاتی ہے ۔۔۔۔!!!!!
    اور بیگم محترمہ " جمائمہ خان " صاحبہ کبھی اپنا افئیر " جولین اسانجھ "
    کے ساتھ چلاتی ہیں اور کبھی برطانیہ کے کسی بزنس مین کے بیٹے کے ساتھ۔۔
    چلیں میں یہ بھی نہیں کہتا خاموش رہتا ہوں !!
    پر جب سیاسی جلسوں کی آڑ میں ہونے والے " میوزیکل کانسرٹس " جس میں
    بڑی بڑی یونیورسٹیز کے طلبہ و طالبات آ کر اختلاط کرتے ہیں ، اور جھومتے اور
    ناچتے گاتے ہیں ، اور ان جلسوں کو ان عظیم سیکولر طبقات نے اپنی تفریح اور
    معشوقیت کے ملاپ کا اہم مرکز بنا رکھا ہے ۔۔۔ تو عمران خان کے انقلابی اسلامی جمہوری پاکستان کا نقشہ خوب سمجھ آتا ہے ۔۔۔۔
    عمران خان صاحب ! الطاف صاحب کو 286 لوگوں کا قاتل کہتے ہیں اور انہی کی جماعت سے کراچی کے جلسے کی بھیک مانگتے ہیں ، اور " رابطہ کمیٹی " کے کسی رکن کے بچوں کی شادی پر انہیں قاتلوں سے بغل گھیر ہوتے ہیں ؟؟؟
    یہی حال " ڈاکٹر طاہر القادری " کا ہے ۔۔۔ یہ موصوف 10 لاکھ کینڈین ڈالرز کی مالیت کے گھر کے مالک ہیں جو " ٹورونٹو " میں ہے ۔ حسین طاہر کے نام سے
    ملکیت ہے ، اور آج یہ بات کرتے ہیں " انقلاب اور جمہوریت" کی "احتساب " کی
    کیا طاہر القادری صاحب کے پاس کوئی بزنس چین ہے ؟؟؟؟؟
    زرداری دور کے بڑٖے بڑے سکینڈلز جس میں " رینٹل پاور کرپشن کیس "
    حسین حقانی کی طرف سے لکھا جانے والا " میمو گیٹ " جس میں امریکیوں
    اور برطانوی حکمرانوں کے بوٹ پالش کرنے کی بات کی گئی ؟؟؟؟؟؟؟؟
    " نورانی " صاحب کا " حج سکینڈل " جس میں حاجیوں کو ٹھیک ٹھاک لوٹا گیا !!!!
    لوڈ شیڈنگ ، بے روزگاری ، بد عنوانی کیا تب طاہر القادری صاحب کو نظر نہیں آئی ۔۔۔۔ میں پوچھتا ہوں لال مسجد پر ہونے والا ظلم کیا یاد ہے تمہیں ؟؟؟؟
    حسینی اور یزیدی کی گردان کرنے والا ؟؟؟
    زرداری دور میں حکمرانوں کو یزیدی کہنے والے اور اللہ کی قسمیں کھا کر نعرے بلند کرنے والا کیسا حسینی لشکر تھا جس نے یزیدیت کو قبول کر لیا ؟؟؟؟؟؟؟
    اور رحمن ملک کو شیطان ملک کہنے والا ایک دن بعد ہی اس کو اپنا بھائی بنا بیٹھا ؟؟؟ طاہر القادری صاحب کو شاید " اتفاق مسجد " کا وہ خطبہ یاد نہیں جس میں وہ دونوں " میاں برادران " کے احسانات گنواتے گنواتے نہیں تھک رہے !!!!!
    آج انقلاب اور سچائی کی باتیں کر رہے ہیں ؟؟؟؟
    میں قادری صاحب سے گزارش کرتا ہوں !!!!! " رائل کینڈین پاپ " کے ساتھ کیا جانے والا " ہلف نامہ" جس کی بدولت آپ کینڈا کے شہری قرار پائے اس کی کاپی سوشل میڈیا پر لگا سکتے ہیں ؟؟؟ آپ کی ایمان داری اور آپ کے اخلاص
    کا پتہ چل جائے گا !!!!!
    جیسی عوام ویسی حکمران !!!! پل پل میں بدلتے بیانات دینے والے ان سیاست دانوں کو ماننے والی عوام کو اگر معلوم ہو جائے کہ انکی ڈوریں "اسرائیل اور امریکہ " ہلا رہا ہے تو واقعی میں ایک عظیم انقلاب بھرپا ہو جائے گا ۔۔۔۔۔۔۔۔
    لیکن نہیں۔۔۔۔ ہمیں ٹی وی پر اپنی ماں ، بہن اور بیٹی کو نعرے لگاتے ہوئے دیکھنا ہے ۔۔ ہمیں یہ تماشہ دیکھنا ہے جس کی قیمت 65 سال سے لوگ اپنا خون دے کر دیکھ رہے ہیں ۔۔۔۔۔ ہمیں خواب دیکھنا پسند ہیں ۔ تعبیر کرنا اچھا نہیں لگتا !!!!!
    لعنت ہے ایسی جمہوریت پر جس میں روز فساد ہی فساد ہو ، لیڈر "کینٹینر " اور بلٹ پروف " گاڑیوں میں بیٹھ کر سفر کریں اور عوام گرمی اور سردی برداشت کرے۔۔۔۔۔۔۔۔۔ یہ ہے " اسلامی جمہوریہ پاکستان "
    اللہ نبی کے نام پر لیا گیا لولے لنگڑے بے وفا لوگوں کا ملک ۔۔ جو ملا کی بات کے پیچھے دم دبا کر لگے ہیں ،، لیکن خود حافظ اور عالم نہیں بنتے ۔۔۔۔۔
    بچوں کی گرل فرینڈ کی ایک " کس " کے بدلے لاکھوں روپے کا "ایم بی ایے"
    کروانا گوارا ہے ۔۔۔ لیکن مدرسے کی مفت پر کامل و مکمل تعلیم دلوانا حرام ۔۔۔
    اب بھگتو ! کہ خون ہی تمہارا مقدر ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ عبدالسلام فیصل​
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں