• الحمدللہ محدث فورم کو نئےسافٹ ویئر زین فورو 2.1.7 پر کامیابی سے منتقل کر لیا گیا ہے۔ شکایات و مسائل درج کروانے کے لئے یہاں کلک کریں۔
  • آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

اس حال میں نہ سوئے کہ شوہر اس سے ناراض ہو۔ ۔ اسعد الزوجین

محمد آصف مغل

سینئر رکن
شمولیت
اپریل 29، 2013
پیغامات
2,677
ری ایکشن اسکور
4,006
پوائنٹ
436
اس حال میں نہ سوئے کہ شوہر اس سے ناراض ہو
سیدنا انس بن مالک رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا :کیا میں تمہیں تمہاری جنت کی عورتوں کے بارے میں نہ بتاؤں؟صحابہ نے فرمایا ،ضرور بتائیے اللہ کے رسول۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا :محبت کرنے والی ،بچے پیدا کرنے والی،اگر وہ کسی وجہ سے اپنے شوہر کو ناراض کر دیتی ہے یا وہ اس کو کچھ کہہ دیتا ہے یااس کاشوہر اس سے ناراض ہوجاتا ہے توکہتی ہے ۔میرا ہاتھ تمہارے ہاتھ میں ہے جب تک تم مجھ سے راضی نہیں ہوگے میں نہیں سوؤں گی۔ (المعجم الصغیر باب الالف رواہ الطبرانی و رواتہ صحیح۔)

ایک اور حدیث میں ہے ۔تین لوگ ایسے ہیں جن کی نماز ان کے کانوں سے اوپر نہیں جاتی وہ غلام جو مالک سے بھاگ گیا ہو یہاں تک کہ واپس آجائے ۔وہ عورت جو ایسی حالت میں سوئے کہ اس کاشوہر اس سے ناراض ہواور وہ امام جو امامت کرے جبکہ لوگ اسے ناپسند کرتے ہوں۔ (حدیث حسن ہے صحیح الجامع الصغیر۔شیخ البانی (۳۰۵۷)

ان دونوں حدیثوں میں شوہر کوناراض کرنے پر اور اس کا حکم نہ ماننے پر شدید وعید ہے۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم ڈرا رہے ہیں کہ کوئی عورت اس حال میں رات نہ بسر کرے جبکہ اسکا شوہر اس سے ناراض ہو نیز اس حدیث میں اس طرف بھی اشاہ ہے کہ بیوی کو شوہر کی ناراضگی زیادہ لمبی نہیں ہونے دینا چاہیئے بلکہ اس کو چاہیئے کہ وہ فوراً شوہر کو راضی کرنے کی کوشش کرے کیونکہ ہوسکتا ہے کہ ناراض ہوکر وہ گھر سے ہی نکل جائے او ر پھر غلط صحبت میں پڑ جائے کہ یہ برا نتیجہ عورت کو ہی بھگتنا پڑے گا۔

لیکن اگر شوہر کسی نیک کام کے لئے کہے جانے پر ناراض ہوتا ہے مثلاً اس کو نماز کا کہیں تو ناراض ہوجاتا ہے یا والدین سے اچھے سلوک کاکہیں تو ناراض ہوجاتا ہے تو ایسے غصے کاکوئی اعتبار نہیں کیونکہ یہ ناراضگی کسی جائز چیز میں نہیں ہے ۔
 

محمد آصف مغل

سینئر رکن
شمولیت
اپریل 29، 2013
پیغامات
2,677
ری ایکشن اسکور
4,006
پوائنٹ
436
بیوی کو ذہین ہونا چاہیئے
یہاں ذہانت سے میری مراد پڑھائی لکھائی والی ذہانت نہیں ہے بلکہ بیوی کو شوہر کی ضروریات کو سمجھنا چاہیئے اگر ناراض ہوتوفوراً سمجھ جائے کہ کیوں ناراض ہے اور اب وہ کیسے خوش ہوگا اور اگر اسے بھوک لگی ہے تو وہ کیا کھانا پسند کرے گا اگر مہمانوں کی موجودگی میں اس کی طرف دیکھتا ہے تو سمجھ جائے کہ کیوں دیکھ رہا ہے اگر اپنے یا اس کے گھر والوں کے یہاں جائے اور پھر واپسی کااشارہ کرے تو اس کی طرف نہ دیکھتی رہے کہ جیسے اسے سمجھ ہی نہیں آئی اور اگر وہ بیٹھ جانے کا اشارہ کرے تو پھر بیوی جانے کااصرار نہ کرے جیسا کہ وہ اشارہ سمجھی ہی نہیں۔ نیز یہ بھی ذہانت میں سے ہے کہ بیوی کو اگر شوہر سے کچھ مسائل درپیش ہیں تو وہ انہیں نت نئے طریقوں سے حل کرنے کی کوشش کرے ۔اسے پتہ ہو کہ اس نے کیسے معذرت کرنی ہے اور حالات کو کیسے نارمل کرنا ہے۔
 

Dua

سینئر رکن
شمولیت
مارچ 30، 2013
پیغامات
2,579
ری ایکشن اسکور
4,435
پوائنٹ
463
یہاں ذہانت سے میری مراد پڑھائی لکھائی والی ذہانت نہیں ہے بلکہ بیوی کو شوہر کی ضروریات کو سمجھنا چاہیئے اگر ناراض ہوتوفوراً سمجھ جائے کہ کیوں ناراض ہے اور اب وہ کیسے خوش ہوگا اور اگر اسے بھوک لگی ہے تو وہ کیا کھانا پسند کرے گا اگر مہمانوں کی موجودگی میں اس کی طرف دیکھتا ہے تو سمجھ جائے کہ کیوں دیکھ رہا ہے اگر اپنے یا اس کے گھر والوں کے یہاں جائے اور پھر واپسی کااشارہ کرے تو اس کی طرف نہ دیکھتی رہے کہ جیسے اسے سمجھ ہی نہیں آئی اور اگر وہ بیٹھ جانے کا اشارہ کرے تو پھر بیوی جانے کااصرار نہ کرے جیسا کہ وہ اشارہ سمجھی ہی نہیں۔ نیز یہ بھی ذہانت میں سے ہے کہ بیوی کو اگر شوہر سے کچھ مسائل درپیش ہیں تو وہ انہیں نت نئے طریقوں سے حل کرنے کی کوشش کرے ۔اسے پتہ ہو کہ اس نے کیسے معذرت کرنی ہے اور حالات کو کیسے نارمل کرنا ہے۔
یہ بہت اہم مسئلہ ہے جو اکثر بیویاں سرے سے سمجھتی ہی نہیں۔۔۔عمدہ تحریر
جزاک اللہ خیراً
 
شمولیت
اپریل 17، 2021
پیغامات
3
ری ایکشن اسکور
0
پوائنٹ
9
زوجین میں محبت ایک متوازن معاشرے کی تخلیق کے لیے لازمی شرط ہے۔ شوہر اور بیوی دونوں کو ایک دوسرے کا خیال رکھنا چاہیے اور کوئی ایک ناراض ہو تو دوسرا اس کو لازمی راضی کرنے کی کوشش کرے۔
 
Top