• الحمدللہ محدث فورم کو نئےسافٹ ویئر زین فورو 2.1.7 پر کامیابی سے منتقل کر لیا گیا ہے۔ شکایات و مسائل درج کروانے کے لئے یہاں کلک کریں۔
  • آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

بدکار عورت سے نکاح نہ کرے خواہ وہ کتنی ہی اچھی معلوم ہوتی ہو !

شمولیت
اکتوبر 24، 2016
پیغامات
216
ری ایکشن اسکور
20
پوائنٹ
35
بسم الله الرحمن الرحیم
تمام تعریفیں الله رب العالمین کے لئے ہیں اما بعد !​
بدکار عورت سے نکاح نہ کرے خواہ وہ کتنی ہی اچھی معلوم ہوتی ہو !


الله تعالیٰ فرماتا ہے :
اَلزَّانِيْ لَا يَنْكِحُ اِلَّا زَانِيَةً اَوْ مُشْرِكَةً ۡ وَّالزَّانِيَةُ لَا يَنْكِحُهَآ اِلَّا زَانٍ اَوْ مُشْرِكٌ ۚ وَحُرِّمَ ذٰلِكَ عَلَي الْمُؤْمِنِيْنَ

زانی نکاح نہیں کرتا مگر کسی زانی عورت سے، یا کسی مشرک عورت سے، اور زانی عورت، اس سے نکاح نہیں کرتا مگر کوئی زانی یا مشرک۔ اور یہ کام مؤمنین پر حرام کردیا گیا ہے۔
(النور -3)

مندرجہ ذیل آیت سے بھی اس مضمون کی مزید تائید ہوتی ہے :-
الله تعالیٰ فرماتا ہے :-
اَلْخَبِيْثٰتُ لِلْخَبِيْثِيْنَ وَالْخَبِيْثُوْنَ لِلْخَبِيْثٰتِ ۚ وَالطَّيِّبٰتُ لِلطَّيِّبِيْنَ وَالطَّيِّبُوْنَ لِلطَّيِّبٰتِ

خبیث عورتیں، خبیث مردوں کے لئے، اور خبیث مرد، خبیث عورتوں کے لئے ہیں۔ اور پاکیزہ عورتیں پاکیزہ مردوں کے لئے اور پاکیزہ مرد پاکیزہ عورتوں کے لئے ہیں۔
(النور - ٢٦ )


پاک دامن عورتوں سے نکاح کرے یعنی دیندار عورت سے نکاح کرے جس کا حکم دیا گیا ہے !


الله تعالیٰ فرماتا ہے :
اَلْيَوْمَ اُحِلَّ لَكُمُ الطَّيِّبٰتُ ۭ وَطَعَامُ الَّذِيْنَ اُوْتُوا الْكِتٰبَ حِلٌّ لَّكُمْ ۠ وَطَعَامُكُمْ حِلٌّ لَّهُمْ ۡ وَالْمُحْصَنٰتُ مِنَ الْمُؤْمِنٰتِ

آج تمہارے لیے پاک چیزیں حلال کردی گئیں اور ان لوگوں کا کھانا تمہارے لیے حلال ہے جنہیں کتاب دی گئی اور تمہارا کھانا ان کے لیے حلال ہے اور مومنات میں سے پاک دامن عورتیں(تمہارے حلال ہیں )
(المائدہ -5)

رسول الله صلی الله علیہ وسلم نے فرمایا :
حَدَّثَنَا مُسَدَّدٌ حَدَّثَنَا يَحْيَی عَنْ عُبَيْدِ اللَّهِ قَالَ حَدَّثَنِي سَعِيدُ بْنُ أَبِي سَعِيدٍ عَنْ أَبِيهِ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُ عَنْ النَّبِيِّ صَلَّی اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ تُنْکَحُ الْمَرْأَةُ لِأَرْبَعٍ لِمَالِهَا وَلِحَسَبِهَا وَجَمَالِهَا وَلِدِينِهَا فَاظْفَرْ بِذَاتِ الدِّينِ تَرِبَتْ يَدَاکَ

مسدد، یحیی، عبیداللہ، سعید، حضرت ابوہریرہ (رض) کہتے ہیں کہ رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے فرمایا نکاح کے لئے عورت کی چار باتیں دیکھی جاتی ہیں، مال، نسب، خوبصورتی، دین، تو تیرے دونوں ہاتھ خاک آلود ہوں تجھے دیندار کو حاصل کرنا چاہئے
(صحیح بخاری كتاب النكاح بَابُ الأَكْفَاءِ فِي الدِّينِ)


اس لئے تمام مسلمین کو چاہیے کہ اگر وہ فلاح چاہتے ہیں تو وہ دینداری کی وجہ سے عورت سے نکاح کریں نہ کہ کسی اور وجہ سے۔
الله تعالیٰ سے دعا ہے کہ وہ ہمیں حق بات کو پڑھنے ، سمجھنے ،اسے دل سے قبول کرنے اور اس پر عمل کرنے کی توفیق عطاء فرمائے !
آمین یا رب العلمین
والحمدللہ رب العلمین
 
Top