1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

تقلید کرنا

'تقلید واجتہاد' میں موضوعات آغاز کردہ از Zakir afridi, ‏مئی 26، 2020۔

  1. ‏مئی 26، 2020 #1
    Zakir afridi

    Zakir afridi رکن
    جگہ:
    کوہاٹ
    شمولیت:
    ‏فروری 25، 2017
    پیغامات:
    17
    موصول شکریہ جات:
    0
    تمغے کے پوائنٹ:
    37

    “تقلید نا کرو حدیث پر عمل کرو”
    اچھا! تقلید کسے کہتے ہیں؟
    “کسی کے قول پر بلا دلیل محض اس کے اہل حق ہونے کے حسن ظن پر عمل کرنا”
    درست ! اور حدیث کسے کہتے ہیں؟
    ”یہ حضورصلی الله علیہ وسلم کا فرمان هے ”
    کیا آپ نے یہ فرمان حضورصلی الله علیہ وسلم سے خود سنا هے ؟
    “نہیں”
    کہاں سے سنا؟
    “ محدثین نے روائت کیا اور اسے صحیح کہا”
    آپ کے پاس ان محدثین کے قول کی صحت کی کوئی دلیل ہے ؟
    “ان کے اہل حق ہونے کا حسن ظن ہے”
    اوپر آپنے اسی کو تو تقلید کہا؟
    “ہممم”
    اچھا! کیا محدثین نے ان سب فلاں اور فلاں راویوں کودیکهاهے جنہوں نے حدیث کو روائت کیا؟
    “نہیں”
    ان کوازخود پرکها هے کہ وه عادل وثقہ هیں؟
    “ نہیں”
    پھر ان کو کیسے پتہ چلا کہ فلاں راوی ثقہ ہے اور فلاں روایت صحیح ہے؟
    “اسماء الرجال والوں نے بتایا”
    ان کے پاس ان اسماء الرجال والوں کے قول کی صحت کی کوئی دلیل ہے؟
    “ان کے اہل حق ہونے کا حسن ظن ہے”
    اوپر آپنے اسی کو تو تقلید کہا؟
    “ہممم”
    اچھا! اسماء الرجال کے ماہروں نے کہا هے اور لکها هے کہ فلاں اور فلاں راوی عادل وثقہ ومعتبرهیں؟
    “جی ہاں”
    یہ اسماء الرجال کا ماہر جوان راویوں کوثقہ کہہ رها هے کیا اس نےان تمام راویوں کودیکها هے ؟
    “نہیں”
    پھر اس کو کیسے پتہ؟ “
    پہلوں نے ان کوپرکها اور بعد میں آنے والے ایک دوسرے کے قول پراعتماد کرتے رهے”
    ان کے پاس پہلوں کے قول کی صحت کی کوئی دلیل تھی ؟
    “ان کے اہل حق ہونے کے حسن ظن تھا”
    اوپر آپنے اسی کو تو تقلید کہا؟
    “ہممم”
    تمام احادیث میں اسی طرح کا حسن ظن کرکے ان کوبیان کیا جاتا هے ، تو اس طرح ایک دوسرے کی تقلیدکرکے حضورصلی الله علیہ وسلم کی طرف کسی قول کی نسبت کرنا جائزهے ؟
    “ہاں”
    حدیث همارادین هے ، کیا کوئی هے جوحدیث پر بغیرتقلید کے عمل کا دعوی کرسکے ؟
    “نہیں”
    جب ائمہ فقہ کی تقلید ناجائزهے تو یہ تقلید کیوں جائز هوگئ؟
    “ہممم”
    خوب یاد رکهیں حدیث کے میدان میں تقلید کے بغیر کوئی شخص ایک قدم بهی نہیں چل سکتا، آپ محدثین کی تقلید کرتے ہیں وہ اسماء الرجال والوں کی وہ اپنے سے پہلوں کی۔ اور یوں تقلید درتقلید حدیث ہم تک پہنچتی ہے۔
    “ہممم”
     
  2. ‏مئی 27، 2020 #2
    ابن داود

    ابن داود فعال رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    3,366
    موصول شکریہ جات:
    2,657
    تمغے کے پوائنٹ:
    556

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    بالفرض تقلید کا یہ مقدمہ مان لیا جائے، تو تمام کے تمام حنفی مقلد جھوٹے ثابت ہوتے ہیں!
    کہ وہ ایک مجتہد مطلق امام، امام ابو حنیفہ کی تقلیدکرنے کا دعوی کرتے ہیں، اور یوں تو پھر تقلید کرتے تو ایک دنیا کی ہیں!
     
    • ناپسند ناپسند x 1
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  3. ‏مئی 27، 2020 #3
    Zakir afridi

    Zakir afridi رکن
    جگہ:
    کوہاٹ
    شمولیت:
    ‏فروری 25، 2017
    پیغامات:
    17
    موصول شکریہ جات:
    0
    تمغے کے پوائنٹ:
    37

    اللّٰہ اپ لوگوں کو ہدایت دے
     
  4. ‏مئی 27، 2020 #4
    محمد طارق عبداللہ

    محمد طارق عبداللہ سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی - مہاراشٹرا
    شمولیت:
    ‏ستمبر 21، 2015
    پیغامات:
    2,611
    موصول شکریہ جات:
    734
    تمغے کے پوائنٹ:
    276

    کسی کو کیسے سمجھائیں کہ ہمارے پاس قرآن و احادیث ہیں جنکی ہم سند رکھتے ہیں ، ھمارے پاس موطا للمالک اور مسانید شافعی و حنبلی ہیں ہمارے پاس انکی بھی اسناد ہیں ، ہم اپنے ورثے پر فخر کرتے ہیں انحصار کرتے ہیں ، یہ اہلسنت کے خزانے ہیں ۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں