• الحمدللہ محدث فورم کو نئےسافٹ ویئر زین فورو 2.1.7 پر کامیابی سے منتقل کر لیا گیا ہے۔ شکایات و مسائل درج کروانے کے لئے یہاں کلک کریں۔
  • آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

شکایت دستخط بحال کیے جائیں !

T.K.H

مشہور رکن
شمولیت
مارچ 05، 2013
پیغامات
1,109
ری ایکشن اسکور
329
پوائنٹ
156
ایک بار پھر میرے دستخط قرآنی آیات پر مبنی دستخط مٹا دئے گئے ہیں۔ براہ ِکرم انہیں دوبارہ بحال کیا جائے۔ یہ کوئی اچھا رویہ نہیں ہے اور یہ محض جانبداری کا مظا ہرہ ہے۔ اگر آپ کو قرآنی آیات سے عناد ہے تو صاف کہہ دیں۔
 

T.K.H

مشہور رکن
شمولیت
مارچ 05، 2013
پیغامات
1,109
ری ایکشن اسکور
329
پوائنٹ
156
میں آخری بار کہہ رہا ہوں کہ میرےقرآنی آیات پر مبنی دستخط بحال کیے جائیں یا صاف کہہ دیں کہ آپ لوگوں کو قرآن سے عناد ہے ۔ اگر میرے دستخط بحال نہ کیے گئے تو میرا اکاؤنٹ ختم کر دیا جائے ۔
 

ابن قدامہ

مشہور رکن
شمولیت
جنوری 25، 2014
پیغامات
1,772
ری ایکشن اسکور
426
پوائنٹ
198
میں آخری بار کہہ رہا ہوں کہ میرےقرآنی آیات پر مبنی دستخط بحال کیے جائیں یا صاف کہہ دیں کہ آپ لوگوں کو قرآن سے عناد ہے ۔ اگر میرے دستخط بحال نہ کیے گئے تو میرا اکاؤنٹ ختم کر دیا جائے ۔
آپ کے دستخط تو صاف نظرآرہے ہیں،بلکل نہیں دستخط مٹا دئے گے
 

مون لائیٹ آفریدی

مشہور رکن
شمولیت
جولائی 30، 2011
پیغامات
640
ری ایکشن اسکور
408
پوائنٹ
127
دستخط میں کیا لکھا ہوا تھا ۔۔۔۔۔۔۔
مجھے تو اس کا دستخط نظر نہیں آرہا ہے ۔
 

T.K.H

مشہور رکن
شمولیت
مارچ 05، 2013
پیغامات
1,109
ری ایکشن اسکور
329
پوائنٹ
156
پہلے میں نے منتظمِ اعلٰی کی خواہش پر پانچ قرآنی آیات پر مبنی دستخط مختصر کیے صرف اس لیے کہ انکو قرآنی آیات سے وہم ہوا کہ میں انکار ِ حدیث کی ترغیب دے رہا ہوں اس وہم کا تو کوئی علاج نہیں کیا جا سکتا تھا اس لیے مجبوراً میں نے ہی دستخط مختصر کر دیے مگر پھر کچھ مہینوں بعد میرے دستخط ہٹادیے گئے اور اب بھی یہی سلسلہ چلا جا رہا ہے۔
اگر آپ لوگوں کو قرآن سے اتنا ہی عناد ہے اور روایات سے اتنا ہی عشق ہے تو اس میں بھلا میں کیا کر سکتا ہوں۔

میں سمجھتا ہوں کہ میرے قرآنی آیات پر مبنی دستخط ہٹائے ہی اس لیے گئے ہیں کہ کہیں کوئی شخص قرآن میں غور و فکر نہ کرنے لگ جائے اور اس طرح روایات کے دھندے کو نقصان نہ پہنچ جائے۔ کیونکہ حق و باطل میں امتیاز کرنے والی اگر کوئی کتاب ہے تو صرف اور صرف قرآن ہے۔ لیکن جب قرآن کو منافقینِ عجم نہ مٹا سکے تو بھلا اب لوگ کیونکر مٹا سکتے ہیں ؟یہی وجہ ہے جو اس قرآن کی حفاظت کا ذمہ کسی انسان نے نہیں بلکہ اللہ تعالٰی نے لیا ہے۔اور یہ وہی قرآن ہے جو آج ہم پڑھ رہے ہیں جو حضرت محمد ﷺ نے اپنی امت کو دیا تھا۔
امام شعبہؒ نے بالکل صحیح کہا تھا کہ جتنا لوگ ”احادیث“ میں منہمک ہو ں گے اتنا ہی قرآن سےدور ہوں گے ۔ روایت پرستوں اور مسلک پرستوں پر تو یہ قول شائد بجلی بن کر برس پڑے لیکن ان کی یہ کمال بصیرت کو اس وقت لوگوں نے دیکھا اور آج بھی ہم اسکا نظارہ کر دہے ہیں۔
مجھے اس رویے سے انتہائی افسوس ہوا !

اللہ تعالٰی نے قرآن میں کفار کا طرزِ عمل بتلایا ہے:-
وَقَالَ الَّذِينَ كَفَرُوا لَا تَسْمَعُوا لِهَٰذَا الْقُرْآنِ وَالْغَوْا فِيهِ لَعَلَّكُمْ تَغْلِبُونَ ﴿٢٦﴾
یہ منکرین حق کہتے ہیں ”اِس قرآن کو ہرگز نہ سنو اور جب یہ سنایا جائے تو اس میں خلل ڈالو، شاید کہ اس طرح تم غالب آ جاؤ“۔
قرآن ، سورت فصلت، آیت نمبر 26
 

ابن قدامہ

مشہور رکن
شمولیت
جنوری 25، 2014
پیغامات
1,772
ری ایکشن اسکور
426
پوائنٹ
198
پہلے میں نے منتظمِ اعلٰی کی خواہش پر پانچ قرآنی آیات پر مبنی دستخط مختصر کیے صرف اس لیے کہ انکو قرآنی آیات سے وہم ہوا کہ میں انکار ِ حدیث کی ترغیب دے رہا ہوں اس وہم کا تو کوئی علاج نہیں کیا جا سکتا تھا اس لیے مجبوراً میں نے ہی دستخط مختصر کر دیے مگر پھر کچھ مہینوں بعد میرے دستخط ہٹادیے گئے اور اب بھی یہی سلسلہ چلا جا رہا ہے۔
اگر آپ لوگوں کو قرآن سے اتنا ہی عناد ہے اور روایات سے اتنا ہی عشق ہے تو اس میں بھلا میں کیا کر سکتا ہوں۔

میں سمجھتا ہوں کہ میرے قرآنی آیات پر مبنی دستخط ہٹائے ہی اس لیے گئے ہیں کہ کہیں کوئی شخص قرآن میں غور و فکر نہ کرنے لگ جائے اور اس طرح روایات کے دھندے کو نقصان نہ پہنچ جائے۔ کیونکہ حق و باطل میں امتیاز کرنے والی اگر کوئی کتاب ہے تو صرف اور صرف قرآن ہے۔ لیکن جب قرآن کو منافقینِ عجم نہ مٹا سکے تو بھلا اب لوگ کیونکر مٹا سکتے ہیں ؟یہی وجہ ہے جو اس قرآن کی حفاظت کا ذمہ کسی انسان نے نہیں بلکہ اللہ تعالٰی نے لیا ہے۔اور یہ وہی قرآن ہے جو آج ہم پڑھ رہے ہیں جو حضرت محمد ﷺ نے اپنی امت کو دیا تھا۔
امام شعبہؒ نے بالکل صحیح کہا تھا کہ جتنا لوگ ”احادیث“ میں منہمک ہو ں گے اتنا ہی قرآن سےدور ہوں گے ۔ روایت پرستوں اور مسلک پرستوں پر تو یہ قول شائد بجلی بن کر برس پڑے لیکن ان کی یہ کمال بصیرت کو اس وقت لوگوں نے دیکھا اور آج بھی ہم اسکا نظارہ کر دہے ہیں۔
مجھے اس رویے سے انتہائی افسوس ہوا !

اللہ تعالٰی نے قرآن میں کفار کا طرزِ عمل بتلایا ہے:-
وَقَالَ الَّذِينَ كَفَرُوا لَا تَسْمَعُوا لِهَٰذَا الْقُرْآنِ وَالْغَوْا فِيهِ لَعَلَّكُمْ تَغْلِبُونَ ﴿٢٦﴾
یہ منکرین حق کہتے ہیں ”اِس قرآن کو ہرگز نہ سنو اور جب یہ سنایا جائے تو اس میں خلل ڈالو، شاید کہ اس طرح تم غالب آ جاؤ“۔
قرآن ، سورت فصلت، آیت نمبر 26
آپ نے@انس بھائی کی بات کو تو جواب کیوں نہیں دیا
 

اسحاق سلفی

فعال رکن
رکن انتظامیہ
شمولیت
اگست 25، 2014
پیغامات
6,372
ری ایکشن اسکور
2,533
پوائنٹ
791
مجھے یہ تو نہیں پتا کہ ۔ٹی کے ایچ ۔صاحب کے دستخطوں میں کیا لکھا تھا ۔
تاہم اگر کوئی قابل اعتراض بات نہ ہو تو میری درخواست ہے کہ انکے دستخط بحال کردیئے جائیں
 

ابن قدامہ

مشہور رکن
شمولیت
جنوری 25، 2014
پیغامات
1,772
ری ایکشن اسکور
426
پوائنٹ
198
ایک بار پھر میرے دستخط قرآنی آیات پر مبنی دستخط مٹا دئے گئے ہیں۔ براہ ِکرم انہیں دوبارہ بحال کیا جائے۔ یہ کوئی اچھا رویہ نہیں ہے اور یہ محض جانبداری کا مظا ہرہ ہے۔ اگر آپ کو قرآنی آیات سے عناد ہے تو صاف کہہ دیں۔
یہی دستخط ہیں نہ
اور پیغمبر کہیں گے کہ اے پروردگار! میری قوم نے اس قرآن کو چھوڑ رکھا تھا
 
Top