• الحمدللہ محدث فورم کو نئےسافٹ ویئر زین فورو 2.1.7 پر کامیابی سے منتقل کر لیا گیا ہے۔ شکایات و مسائل درج کروانے کے لئے یہاں کلک کریں۔
  • آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ذمیوں کے سلام کا جواب کس طرح دیا جائے؟

محمد زاہد بن فیض

سینئر رکن
شمولیت
جون 01، 2011
پیغامات
1,960
ری ایکشن اسکور
5,795
پوائنٹ
354
حدیث نمبر: 6256
حدثنا أبو اليمان،‏‏‏‏ أخبرنا شعيب،‏‏‏‏ عن الزهري،‏‏‏‏ قال أخبرني عروة،‏‏‏‏ أن عائشة ـ رضى الله عنها ـ قالت دخل رهط من اليهود على رسول الله صلى الله عليه وسلم فقالوا السام عليك‏.‏ ففهمتها فقلت عليكم السام واللعنة‏.‏ فقال رسول الله صلى الله عليه وسلم ‏"‏ مهلا يا عائشة،‏‏‏‏ فإن الله يحب الرفق في الأمر كله ‏"‏‏.‏ فقلت يا رسول الله أولم تسمع ما قالوا قال رسول الله صلى الله عليه وسلم ‏"‏ فقد قلت وعليكم ‏"
‏‏.‏


ہم سے ابو الیمان نے بیان کیا، انہوں نے کہا ہم کو شعیب نے خبر دی، انہیں زہری نے، انہوں نے کہا کہ مجھے عروہ نے خبر دی، اور ان سے حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا نے بیان کیاکہ کچھ یہودی رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی خدمت میں حاضر ہوئے اور کہا کہ ”السام علیک“ (تمہیں موت آئے) میں ان کی بات سمجھ گئی اور میں نے جواب دیا ”علیکم السام واللعنۃ“ آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا عائشہ صبر سے کام لے کیونکہ اللہ تعالیٰ تمام معاملات میں نرمی کو پسند کرتا ہے، میں نے عرض کیا یا رسول اللہ! کیا آپ نے نہیں سنا کہ انہوں نے کیا کہا تھا؟ آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ میں نے ان کو جواب دے دیا تھا کہ ”وعلیکم“ (اور تمہیں بھی)

حدیث نمبر: 6257
حدثنا عبد الله بن يوسف،‏‏‏‏ أخبرنا مالك،‏‏‏‏ عن عبد الله بن دينار،‏‏‏‏ عن عبد الله بن عمر ـ رضى الله عنهما ـ أن رسول الله صلى الله عليه وسلم قال ‏"‏ إذا سلم عليكم اليهود فإنما يقول أحدهم السام عليك‏.‏ فقل وعليك ‏"‏‏.‏


ہم سے عبداللہ بن یوسف نے بیان کیا، انہوں نے کہا ہم کو امام مالک نے خبر دی، انہیں عبداللہ بن دینار نے اور ان سے عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنہمانے بیان کیاکہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا جب تمہیں یہودی سلام کریں اور اگر ان میں سے کوئی ”السام علیک“ کہے تو تم اس کے جواب میں صرف ”وعلیک“ (اور تمہیں بھی) کہہ دیا کرو۔

حدیث نمبر: 6258
حدثنا عثمان بن أبي شيبة،‏‏‏‏ حدثنا هشيم،‏‏‏‏ أخبرنا عبيد الله بن أبي بكر بن أنس،‏‏‏‏ حدثنا أنس بن مالك ـ رضى الله عنه ـ قال قال النبي صلى الله عليه وسلم ‏"‏ إذا سلم عليكم أهل الكتاب فقولوا وعليكم ‏"‏‏.‏


ہم سے عثمان بن ابی شیبہ نے بیان کیا، انہوں نے کہا ہم سے ہشم نے بیان کیا، انہیں عبداللہ بن ابی بکر بن انس نے خبر دی، ان سے انس بن مالک رضی اللہ عنہ نے بیان کیاکہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا جب اہل کتاب تمہیں سلام کریں تو تم اس کے جواب میں صرف ”وعلیکم“ کہو۔
صحیح بخاری
کتاب الاستئذان
 
Top