1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

رفع الیدین کے بارے اہم ڈیو ولامذہب نام نہاد اہلحدیثوں کی تعلیوں کے جواب میں

'صحیح نماز نبویﷺ' میں موضوعات آغاز کردہ از بھائی جان, ‏جولائی 08، 2020۔

  1. ‏جولائی 08، 2020 #1
    بھائی جان

    بھائی جان رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 22، 2018
    پیغامات:
    637
    موصول شکریہ جات:
    10
    تمغے کے پوائنٹ:
    62

  2. ‏جولائی 08، 2020 #2
    محمد طارق عبداللہ

    محمد طارق عبداللہ سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی - مہاراشٹرا
    شمولیت:
    ‏ستمبر 21، 2015
    پیغامات:
    2,617
    موصول شکریہ جات:
    735
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    تکرار مسلسل
     
    • متفق متفق x 1
    • غیرمتعلق غیرمتعلق x 1
    • لسٹ
  3. ‏جولائی 08، 2020 #3
    محمد طارق عبداللہ

    محمد طارق عبداللہ سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی - مہاراشٹرا
    شمولیت:
    ‏ستمبر 21، 2015
    پیغامات:
    2,617
    موصول شکریہ جات:
    735
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

     
  4. ‏جولائی 08، 2020 #4
    محمد طارق عبداللہ

    محمد طارق عبداللہ سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی - مہاراشٹرا
    شمولیت:
    ‏ستمبر 21، 2015
    پیغامات:
    2,617
    موصول شکریہ جات:
    735
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    یہ "بھائیجان" اس وقت اس فورم پر "سلفی حنفی حنیف" تھے ۔ سن 2017 میں ۔

    کئی نام بدلے لیکن کام نہیں بدلا۔

    ان کے قریہ میں صرف 2 "لا مذہب" ہیں جنہوں نے انکی نیندیں اڑا رکھی ہیں ۔ سوتے نہیں ، "لا مذہبوں" کا فورم بھی نہیں چھوٹ پاتا ۔
     
    • متفق متفق x 1
    • غیرمتعلق غیرمتعلق x 1
    • لسٹ
  5. ‏جولائی 08، 2020 #5
    بھائی جان

    بھائی جان رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 22، 2018
    پیغامات:
    637
    موصول شکریہ جات:
    10
    تمغے کے پوائنٹ:
    62

    • غیرمتفق غیرمتفق x 1
    • غیرمتعلق غیرمتعلق x 1
    • لسٹ
  6. ‏جولائی 08، 2020 #6
    محمد طارق عبداللہ

    محمد طارق عبداللہ سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی - مہاراشٹرا
    شمولیت:
    ‏ستمبر 21، 2015
    پیغامات:
    2,617
    موصول شکریہ جات:
    735
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    ’’فقہ شافعی کی ابتدا ء مصر سے ہوئی، اس کے بعد حجاز وعراق میں اس کو فروغ ہوا، تیسری صدی ہجری میں بغداد، خراسان،توران، شام، یمن، ماوراء النہر،فارس، ہندوستان، افریقہ اور اندلس تک پہونچ گیا، مقدسی بشاری کے بیان کے مطابق اقلیم مشرق کے بڑے بڑے شہر’ کور،شاش،ابلاق،طوس،ابی ورد اور فسا‘ وغیرہ میں شافعی مسلک غالب تھا، موجودہ دور میں مصر اور فلسطین میں شافعیت کا غلبہ ہے، شام میں بھی شوافع کی خاصی تعداد ہے،اسی طرح کُردستان، آرمینیہ پر شوافع کا اثر ورسوخ ہے، فارس کے اہل سنت میں اہل شوافع زیادہ ہیں ، ترکستان اور افغانستا ن میں بھی شوافع کی کچھ تعداد ہے، ہندوستا ن میں قدیم زمانے میں شوافع زیادہ تھے، سندھ میں ان کی اکثریت تھی، فی الحال ممبئی، کوکن، بھٹکل، کیرلا کی کل تعداد یا اکثریت شوافع کی ہے،اسی طرح تمل ناڈو اور کرناٹک کے بہت سے علاقوں میں شوافع کی خاصی آبادی ہے، حیدرآباد، بارکس میں شوافع کی بڑی تعداد آباد ہے جو نسلاً عرب ہیں ، اسی طرح اکولہ، عمرہ باد اور کشمیر وغیرہ میں کچھ قبائل آباد ہیں ، جزیرہ مالدیپ کی کل آبادی شافعی المسلک ہیں، سری لنکا، جاوا،سماترا،جزائر شرق الہند اور جزائر فلپائن میں شوافع زیادہ ہیں ، نیزانڈونیشیا، اور میلشیا میں کل اور تھائی لینڈ میں بڑی تعداد شوافع کی ہے، حجاز میں شوافع بکثرت آباد ہیں ، اہل عسیرِ عدن، یمن اور حضر موت میں اہل سنت شافعی ہیں ، عمان اور قطروبحرین میں بھی بہت سے لوگ اصلاً شوافع المسلک ہیں۔‘‘

    (ماخوذ از:ائمہ اربعہ’’ذکر امام شافعی‘‘ قاضی اطہر مبارکپوریؒ)۔
     
  7. ‏جولائی 08، 2020 #7
    محمد طارق عبداللہ

    محمد طارق عبداللہ سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی - مہاراشٹرا
    شمولیت:
    ‏ستمبر 21، 2015
    پیغامات:
    2,617
    موصول شکریہ جات:
    735
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    ۔۔۔ المختصر ، نماز میں صف بندی ، رفع الیدین اور آمین کے "مسائل" کیساتھ ساتھ نماز کے اوقات بھی "مسئلہ" ہی رہے ۔ یہ تاریخ کافی قدیم ہی ھے ۔
     
  8. ‏جولائی 08، 2020 #8
    محمد طارق عبداللہ

    محمد طارق عبداللہ سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی - مہاراشٹرا
    شمولیت:
    ‏ستمبر 21، 2015
    پیغامات:
    2,617
    موصول شکریہ جات:
    735
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    پورا کیرالہ شافعی مصلی ھے ۔

    مسئلہ اہلحدیث سے ان امور پر قلیل تر ھے لیکن عقائد پر اصل تضاد ھے ۔
     
  9. ‏جولائی 08، 2020 #9
    محمد طارق عبداللہ

    محمد طارق عبداللہ سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی - مہاراشٹرا
    شمولیت:
    ‏ستمبر 21، 2015
    پیغامات:
    2,617
    موصول شکریہ جات:
    735
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    کیرالہ میں عربوں کی آمد اور پہلی مسجد کی تعمیر تاریخ میں موجود ھے ، سن ہجری بھی مل جائیگا ۔ سب جان لیں پھر ان سے پوچھیں کہ ان امور پر کیا کیا ھوا شافعیہ کے ساتھ؟
    آج تک کوئی حل نہیں نکل سکا ۔
     
  10. ‏جولائی 09، 2020 #10
    محمد طارق عبداللہ

    محمد طارق عبداللہ سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی - مہاراشٹرا
    شمولیت:
    ‏ستمبر 21، 2015
    پیغامات:
    2,617
    موصول شکریہ جات:
    735
    تمغے کے پوائنٹ:
    290

    " واقعہ یہ ہے کہ ہندوستان کے بدلتے اس پس منظر اور مسائل کی بدلتی نوعیت پر ایک طرف جہاں فقہ حنفی (جوکہ ہندوستان کے سواد اعظم کا مسلک ہے)پر نت نئے طریقوں سے کام ہوتارہا اور قابل رشک علمی ذخائر سے مالامال ہوتا رہا ہے؛تو وہیں حیرت کی بات ہے کہ یہاں فرزندان شوافع کی بڑی تعدادہونے کے باوجود خاطر خواہ وہ کام نہ ہوسکا جس کا یہ مسلک مستحق تھا، حتی کہ فقیہ العصر حضرت مولانا خالد سیف اللہ رحمانی دامت برکاتھم لکھتے ہیں :’’فقہ شافعی کی ایک بڑی خصوصیت یہ ہے کہ اسمیں برے بڑے محدثین وفقہاء پیدا ہوئے، انہوں نے اپنی تحریر سے اس دبستان فقہ کی خوب خوب خدمت کی اور فقہی تالیفات کے ڈھیر لگادئے، فقہ شافعی کی ان خدمات میں کم لیکن اہم بعض ہندوستانی مؤلفین کا حصہ بھی ہے، مگر افسوس کہ بر صغیر میں فقہ شافعی کا کما حقہ تعارف نہیں ہے،عوام تو کجا اہل علم بھی اس سے کم واقف ہیں ‘‘(فقہ شافعی :تاریخ وتعارف۔۸)،اس کا اندازہ ان حضرات علماء کرام کو بخوبی ہوگا جنہوں نے شمالی ہند کے علاقوں کا دورہ کیا ہو اور وہاں کی علمی درس گاہوں یا وہاں سے نکلنے والے مجلوں کا مطالعہ کیا ہو یا جدید مسائل کے حل کرنے والی اکیڈمیوں وغیرہ سے منسلک ہوں ،انہیں یہ بھی اندازہ ہوگا کہ بسااوقات فقہ شافعی کو ’’سلفیت واہل حدیث ‘‘سے تعبیر کیا جاتاہے۔ "
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں