• الحمدللہ محدث فورم کو نئےسافٹ ویئر زین فورو 2.1.7 پر کامیابی سے منتقل کر لیا گیا ہے۔ شکایات و مسائل درج کروانے کے لئے یہاں کلک کریں۔
  • آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

سخاوت اور بخیلی۔

شمولیت
ستمبر 14، 2011
پیغامات
114
ری ایکشن اسکور
576
پوائنٹ
90
امام ابن جوزی رحمة اللہ علیہ نے
ایک نہایت ہی سبق آموز واقعہ بیان کیا ہے
اصفہان کا ایک بہت بڑا رئیس اپنی بیگم کے ساتھ
دستر خوان پر بیٹھا ہوا تھا
دسترخوان اﷲ کی نعمتوں سے بھرا ہوا تھا
اتنے میں ایک فقیر نے یہ صدا لگائی
کہ اﷲ کے نام پر کچھ کھانے کے لیے دے دو
اس شخص نے اپنی بیوی کو حکم دیا
کہ سارا دستر خوان اس فقیر کی جھولی میں ڈال دو
عورت نے حکم کی تعمیل کی
جس وقت اس نے اس فقیر کا چہرہ دیکھا
تو دھاڑیں مارکر رونے لگی
اس کے شوہر نے اس سے پوچھا
جی بیگم آپ کو ہوا کیا ہے ؟
اس نے بتلایا
کہ جو شخص فقیر بن کر ہمارے گھر پر دستک دے رہا تھا
وہ چند سال پہلے اس شہر کا سب سے بڑا مالدار
اور ہماری اس کوٹھی کا مالک
اور میرا سابق شوہر تھا
چند سال پہلے کی بات ہے
کہ ہم دونوں دسترخوان پر
ایسے ہی بیٹھ کر کھانا کھارہے تھے
جیسا کہ آج کھارہے تھے
اتنے میں ایک فقیر نے صدا لگائی
کہ میں دو دن سے بھوکا ہوں
اﷲ کے نام پر کھانا دے دو
یہ شخص دسترخوان سے اٹھا
اور اس فقیر کی اس قدر پٹائی کی
کہ اسے لہولہان کردیا
نہ جانے اس فقیر نے کیا بد دعا دی
کہ اس کے حالات دگرگوں ہوگئے
کاروبار ٹھپ ہوگیا
اور وہ شخص فقیر وقلاش ہوگیا
اس نے مجھے بھی طلاق دے دی
اس کے چند سال گذرنے کے بعد
میں آپ کی زوجیت میں آگئی
شوہر بیوی کی یہ باتیں سن کر کہنے لگا
بیگم کیا میں
آپ کو اس سے زیادہ تعجب خیز بات نہ بتلاوں؟
اس نے کہا ضرور بتائیں
کہنے لگا
جس فقیر کی آپ کے سابق شوہر نے پٹائی کی تھی
وہ کوئی دوسرا نہیں
بلکہ میں ہی تھا
گردش زمانہ کا ایک عجیب نظارہ یہ تھا
کہ اﷲ تعالیٰ نے اس بدمست مالدار کی
ہرچیز ، مال ، کوٹھی ، حتیّٰ کہ بیوی بھی چھین کر
اس شخص کو دے دیا
جو فقیر بن کر اس کے گھر پر آیا تھا
اور چند سال بعد
پھر اﷲ تعالیٰ اس شخص کو فقیر بنا کر
اسی کے در پر لے آیا
واﷲ علی کل شی ءقدیر
اسی لیے کسی شاعر نے کہا
نہ ہو مغرور دولت پر نہ مغرور عزت پر،
نہ ہو مغرور طاقت پر نہ ہو مغرور صحت پر
کیونکہ یہ سب چار دن کی چاندنی
اور پھر اندھیری رات والا معاملہ ہے
تاریخ ایسے عبرت آموز واقعات سے بھری پڑی ہے
شرط ہے کہ انسان اس سے عبرت پکڑے۔
 

محمد ارسلان

خاص رکن
شمولیت
مارچ 09، 2011
پیغامات
17,865
ری ایکشن اسکور
41,102
پوائنٹ
1,155
عبدالمالک مجاہد صاحب کی چھ کتابیں "سنہری سیریز" کی کسی کتاب میں یہ واقعہ درج ہے۔
 
Top