1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

سرہانے میر کے آہستہ بولو ، ابھی روتے روتے سو گیا ہے

'طنز ومزاح' میں موضوعات آغاز کردہ از ابوحتف, ‏مئی 03، 2012۔

  1. ‏مئی 03، 2012 #1
    ابوحتف

    ابوحتف مبتدی
    جگہ:
    راولپنڈی
    شمولیت:
    ‏اپریل 04، 2012
    پیغامات:
    87
    موصول شکریہ جات:
    300
    تمغے کے پوائنٹ:
    0

    میر کے سرہانے

    اُستاد نے کلاس میں ایک لڑکے سے پوچھا:بتاؤ یہ شعر کس کا ہے؟
    سرہانے میر کے آہستہ بولو
    ابھی روتے روتے سو گیا ہے
    لڑکا:سر یہ شعر میر تقی میر کی والدہ کا ہے
    کیا؟۔ استاد نے چونک کر اس کی طرف دیکھا
    جی سر یہ اُس وقت کی بات ہے جب میر تقی میر سکول میں پڑھتے تھے ایک دن ہوم ورک نہ کرنے کی وجہ سے استاد نے ان کی بہت پٹائی کی جس پر وہ روتے روتے گھر آئے اور سو گئے جس پر ان کی والدہ نے یہ شعر کہا:
    سرہانے میر کے آہستہ بولو
    ابھی روتے روتے سو گیا ہے
     
  2. ‏مئی 21، 2012 #2
    یوسف ثانی

    یوسف ثانی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    پاکستان
    شمولیت:
    ‏ستمبر 26، 2011
    پیغامات:
    2,763
    موصول شکریہ جات:
    5,270
    تمغے کے پوائنٹ:
    562

    سرہانے میر کی آہستہ بولو
    ابھی ٹُک روتے روتے سوگیا ہے
     
لوڈ کرتے ہوئے...
متعلقہ مضامین
  1. محمد عامر یونس
    جوابات:
    0
    مناظر:
    10,418
  2. محمد اجمل خان
    جوابات:
    0
    مناظر:
    21
  3. اسرار حسین الوھابی
    جوابات:
    0
    مناظر:
    360
  4. عبد الرشید
    جوابات:
    0
    مناظر:
    63
  5. محمد عامر یونس
    جوابات:
    7
    مناظر:
    376

اس صفحے کو مشتہر کریں