1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

نعیم بن حماد باوجود اس کے کہ امام تھے منکر الحدیث تھے - تحقیق درکار ہے

'تحقیق حدیث' میں موضوعات آغاز کردہ از lovelyalltime, ‏فروری 17، 2015۔

  1. ‏فروری 17، 2015 #1
    lovelyalltime

    lovelyalltime سینئر رکن
    جگہ:
    سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏مارچ 28، 2012
    پیغامات:
    3,735
    موصول شکریہ جات:
    2,842
    تمغے کے پوائنٹ:
    436


    نعیم بن حماد باوجود اس کے کہ امام تھے منکر الحدیث تھے - تحقیق درکار ہے


    ابن حجر عسقلانى ،ترجمه نعيم بن حماد میں لکھتے ہیں :

    وقرأت بخط الذهبي أن هذا الحديث لا أصل له ولا شاهد تفرد به نعيم وهو منكر الحديث على إمامته. قلت نعيم من شيوخ البخاري.


    میں نے ذھبی کے ہاتھ کا لکھا ہوا پڑھا ہے کہ فلان حدیث کی کوئی اصل اور تائید نہیں ملتی ہے فقط فلان حدیث کا راوی نعیم ہے با وجود اسکے کہ نعیم اہلسنت کے امام شمار ہوتے ہیں منکر الحدیث ہیں میں {ابن حجر} کہتا ہوں کہ نعیم بخاری کے استادوں میں سے ہیں


    العسقلاني الشافعي، أحمد بن علي بن حجر أبو الفضل (متوفاي852هـ)،الأمالي المطلقة، ج 1، ص 147، تحقيق: حمدي بن عبد المجيد بن إسماعيل السلفي، ناشر: المكتب الإسلامي - بيروت، الطبعة: الأولى، 1416 هـ -1995م.




    اسی طرح النكت الظراف میں لکھتے ہیں:

    قرأت بخط الذهبي: لا أصل له ولا شاهد، ونعيم بن حماد منكر الحديث مع إمامته.


    نعیم بن حماد باوجود اس کے کہ امام تھے منکر الحدیث تھے


    (کیا یہ ترجمہ صحیح ہے نہ نہیں - اگر صحیح نہیں ہے تو اصلاح کر دیں پلیز )

    العسقلاني الشافعي، أحمد بن علي بن حجر أبو الفضل (متوفاي852هـ)، النكت الظراف على الأطراف، ج 10، ص 173، تحقيق: عبد الصمد شرف الدين، زهير الشاويش، ناشر: المكتب الإسلامي - بيروت / لبنان، الطبعة: الثانية، 1403 هـ - 1983 م.

    [​IMG]
     
  2. ‏فروری 18، 2015 #2
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,372
    موصول شکریہ جات:
    2,406
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    مصطلح الحدیث میں:
    ’’ منکر الحدیث ‘‘ کا مطلب ؟
     
  3. ‏مئی 24، 2015 #3
    انصاری نازل نعمان

    انصاری نازل نعمان رکن
    شمولیت:
    ‏اگست 28، 2013
    پیغامات:
    163
    موصول شکریہ جات:
    121
    تمغے کے پوائنٹ:
    61

  4. ‏مئی 24، 2015 #4
    رضا میاں

    رضا میاں سینئر رکن
    جگہ:
    Virginia, USA
    شمولیت:
    ‏مارچ 11، 2011
    پیغامات:
    1,557
    موصول شکریہ جات:
    3,508
    تمغے کے پوائنٹ:
    384

    امام ذہبی کے نزدیک صدوق حسن الحدیث کا انفراد بھی منکر کہلاتا ہے۔
     
  5. ‏مئی 24، 2015 #5
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,372
    موصول شکریہ جات:
    2,406
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    منکر الحدیث ؛کے متعلق میرا سوال صرف امام نعیم بن حماد کو ۔۔منکر الحدیث ۔۔کہنے والے بھائی سےہے۔۔
    چونکہ یہ تھریڈ انہوں نے شروع کیا اسلئے ۔۔ہو سکتا ہے ۔۔کہ کسی خاص پس منظر میں وہ یہ ۔۔انکشاف ۔۔فرمانا چاہتے ہوں ۔۔
    تو میں اپنا سوال دہرائے دیتا ہوں:
    مصطلح الحدیث میں:
    ’’ منکر الحدیث ‘‘ کا مطلب ؟
    اور امام نعیم بن حماد کی منکر روایت کی مثال ؟
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں