1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

کیا طارق جمیل صاحب کا فرض نہیں بنتا تھا کہ وہ ان کو نصیحت کرتے !

'تبلیغی جماعت' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد عامر یونس, ‏جولائی 15، 2015۔

  1. ‏جولائی 15، 2015 #1
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    17,040
    موصول شکریہ جات:
    6,520
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    ایک امیج پوسٹ کر رہا ہو جس میں مقتدی کی شلوار ٹخنہ سے نیچے ہیں کیا طارق جمیل صاحب کا فرض نہیں بنتا تھا کہ وہ ان کو نصیحت کرتے !


    [​IMG]


    کیا ٹخنوں سے نیچے کپڑا ہو تو کیا نماز ہو جاتی ہے ؟؟؟؟
     
  2. ‏جولائی 15، 2015 #2
    abujarjees

    abujarjees مبتدی
    شمولیت:
    ‏جون 27، 2015
    پیغامات:
    75
    موصول شکریہ جات:
    31
    تمغے کے پوائنٹ:
    29

    بھائی یہ تو غیر ضروری تنقید ہے۔ طارق جمیل کے اپنے ٹخنوں سے پانچے اوپر ہیں ،،،
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  3. ‏جولائی 15، 2015 #3
    عبداللہ بھائی

    عبداللہ بھائی مبتدی
    شمولیت:
    ‏جولائی 11، 2015
    پیغامات:
    21
    موصول شکریہ جات:
    5
    تمغے کے پوائنٹ:
    10

    عامر صاحب آپ نے واقعہ غیر ضروری تنقید کی ہے کیونکہ طارق جمیل صاحب پر اس بات پر تنقید کیا کرنا کہ اسنے کسی کو شلوار اونچا کرنے کا نہیں کہا یہ تو موڑی شریف کے پیر پر جا کر شرکیہ نعرے لگانے والوں کو تنبیہ نہیں کرتے اور آپ پائنچوں کو رو رہے ہیں ہمارے نبی نے توحید کی دعوت تھوڑی دی تھی وہ تو صوفی تھے وہ تو لوگوں کو بدھ مت مذہب کی طرح اکٹھا کرنے آئے تھے وہ لوگوں کو جوڑنے آئے تھے توڑنے والی جتنی باتیں ہیں وہ احادیث غلط ہیں چاہے کوئی شرک کرے چاہے جو مرضی کرے
     
    • پسند پسند x 3
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
  4. ‏جولائی 16، 2015 #4
    مون لائیٹ آفریدی

    مون لائیٹ آفریدی مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 30، 2011
    پیغامات:
    640
    موصول شکریہ جات:
    396
    تمغے کے پوائنٹ:
    127

    حضرت عثمان رضی اللہ عنہ نے فتح مکہ کے دن مشرکین کو لباس ٹخنوں سے اوپر رکھنے کا کہا تھا ۔
    ایمان کی دعوت سے پہلے ۔
    اس مسئلہ کی اہمیت کا اندازہ اس سے لگایا جاسکتا ہے ۔

    بہرحال یہ لوگ یہ جواب دیں گے کہ وہ تو صحابی رضی اللہ عنہ تھے ہم تھوڑی کہہ سکتے ہیں ۔

    حالانکہ كلّكم راع و كلّكم مسؤول عن رعيّته۔ کو مدنظر رکھ کر ان سے ان کے بارے میں سوال ہوگا ۔
    اور قرآن میں ہے کہ اتقوا الله ما استطعتم ۔۔
    یہاں پر موصوف " صاحب استطاعت "تھے ۔
     
    • پسند پسند x 1
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  5. ‏جولائی 16، 2015 #5
    ابن داود

    ابن داود فعال رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    3,366
    موصول شکریہ جات:
    2,657
    تمغے کے پوائنٹ:
    556

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    ویسے ان تصاویر سے آواز آرہی ہے کہ مولانا طارق جمیل نے اپنے مقتدیوں کو شلواریں ٹخنوں سے اوپر رکھنے کا نہیں کہا؟
     
    • پسند پسند x 1
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  6. ‏جولائی 16، 2015 #6
    محمد علی جواد

    محمد علی جواد سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 18، 2012
    پیغامات:
    1,988
    موصول شکریہ جات:
    1,495
    تمغے کے پوائنٹ:
    304

    السلام و علیکم و رحمت الله -

    عقائد کی بحث کو چھوڑ کر- یہ بات واضح ہونی چاہیے کہ جس کو نماز کی امامت کا منصب سونپا گیا ہے اس پرضروری ہے کہ وہ نماز شروع کرنے سے پہلے مقتدیوں کی طرف رخ کرکے صف بندی کے لئے کہے اور جن مقتدیوں کے تہبند یا شلوار ٹخنوں سے نیچے ہو ان کوٹخنوں سے اونچا کرنے کو کہے اور پاؤں سے پاؤں اور کندھے سے کندھا ملانے کی تاکید کرے- یہ الله کے پیارے نبی کی سنّت ہے اور امامت کے احکامات میں شامل ہے-
     
    • پسند پسند x 1
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں