1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

کیا نکاح کے فوراً بعد ولیمہ کرنا صحیح ہے؟

'جدید مسائل' میں موضوعات آغاز کردہ از عامر عدنان, ‏جنوری 08، 2016۔

  1. ‏جنوری 08، 2016 #1
    عامر عدنان

    عامر عدنان مشہور رکن
    جگہ:
    انڈیا،بنارس
    شمولیت:
    ‏جون 22، 2015
    پیغامات:
    910
    موصول شکریہ جات:
    248
    تمغے کے پوائنٹ:
    142

    السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ

    ایک بھائی نے یہ سوال کیا ہے کہ کیا نکاح کے فوراً بعد ولیمہ کیا جا سکتا ہے مگر لڑکا اور لڑکی نے ایک دوسرے سے ابھی ملے بھی نہیں

    اہل علم سے گزارش ہے کہ اسکا جواب دیں

    جزاک اللہ خیرا
     
  2. ‏مئی 04، 2017 #2
    عمر اثری

    عمر اثری سینئر رکن
    جگہ:
    نئی دھلی، انڈیا
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 29، 2015
    پیغامات:
    4,401
    موصول شکریہ جات:
    1,087
    تمغے کے پوائنٹ:
    398

  3. ‏مئی 04، 2017 #3
    سلفی حنفی حنیف

    سلفی حنفی حنیف رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 16، 2017
    پیغامات:
    290
    موصول شکریہ جات:
    10
    تمغے کے پوائنٹ:
    39

    اعلانِ نکاح مقصود و مسنون ہے۔
    لڑکی والوں کے ہاں بوقت نکاح لوگوں کا اجتماع اور نکاح کے بعد چھوہاروں کی تقسیم ایک مسنون عمل ہے اور محلے والوں کو اطلاع ہو جاتی ہے کہ فلان کی فلاں بیٹی یا بہن کا نکاح فلاں سے ہوگیا۔
    لڑکے والوں کے ہاں اس اعلان کا حصول ولیمہ سے ہو جاتا ہے۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں