• الحمدللہ محدث فورم کو نئےسافٹ ویئر زین فورو 2.1.7 پر کامیابی سے منتقل کر لیا گیا ہے۔ شکایات و مسائل درج کروانے کے لئے یہاں کلک کریں۔
  • آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

یزید بن معاویہ کے متعلق ابو عمر بھائی کی طرف سے پوچھے گئے سوال کا جواب

اسحاق سلفی

فعال رکن
رکن انتظامیہ
شمولیت
اگست 25، 2014
پیغامات
6,372
ری ایکشن اسکور
2,533
پوائنٹ
791
جو سنی ہوگا وہ اہل بیت کے دشمن قبیلہ بنو امیہ پر لعنت ضرور بھیجے گا
فواد ! تم جلدی میں غلط لکھ گئے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
اصل میں تمہیں لکھنا تھا :
جو اصلی سنی ہوگا وہ پیارے نبی کریم ﷺ کے پاک صحابہ کے دشمنوں کو رجیم ،ملعون ضرور کہے گا ؛
 

اسحاق سلفی

فعال رکن
رکن انتظامیہ
شمولیت
اگست 25، 2014
پیغامات
6,372
ری ایکشن اسکور
2,533
پوائنٹ
791
معاویہ کا امام علی سے بغض اور سنت نبوی میں بدعت جاری کرنا
یہ پوری تحریر ۔۔۔دشمن صحابہ شیعہ کی ویب سائیٹ ’‘ http://www.wilayat.net/ ’‘سے لی گئی ہے ۔۔یعنی کاپی کی گئی ہے ؛
اور سنیوں کو ورغلانے کی ’’ تقیہ باز ‘‘ کوشش کی گئی ہے ؛
 

ابن قدامہ

مشہور رکن
شمولیت
جنوری 25، 2014
پیغامات
1,772
ری ایکشن اسکور
426
پوائنٹ
198
تمھارے لئے امریکہ ہی کافی ہے ،جو کہ سعودی عرب اور وہابیت کا خالق و مالک ہے،
امیرالمومنین خلیفہ المسلمین یزید ر بن معاویہ حمہ اللہ زندہ باد
 

اٹیچمنٹس

Last edited:

فواداحمد

مبتدی
شمولیت
جولائی 15، 2015
پیغامات
18
ری ایکشن اسکور
0
پوائنٹ
5
فواد ! تم جلدی میں غلط لکھ گئے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
اصل میں تمہیں لکھنا تھا :
جو اصلی سنی ہوگا وہ پیارے نبی کریم ﷺ کے پاک صحابہ کے دشمنوں کو رجیم ،ملعون ضرور کہے گا ؛
اسحاق بھائی یہ غلط بات ہے کہ کوئی صحابہ کو برا سمجھتا ہے،انکا صرف اختلاف تک ہے،شام میں جبھۃ النصرۃ وہابی ہے،انہوں نے اصحاب و تابعین کے قبروں کو بموں سے اڑا دیا ،داعش بھی خود کو جماعت سے منسوب کرتا ہے ،حالانکہ ابوبکرالبغدادی کے یروشلم کی تصاویر جو اسرائیل میں لڑکیوں کے ساتھ شراب پی رہا ہے،کے حکم پر انبیاء کے قبروں اور مساجد کو دھماکہ خیز مواد سے اڑا دیا،اگر حج کے لئے آپ گئے ہونگے تو آپ نے دیکھا ہوگا،کہ جنت البقیع اور شھداء احد کے قبور کو نماد شرک کہہ کر تباہ کر دیا گیا حالانکہ جنت البقیع میں اصحاب ،ازواج رض اور اہل بیت رض کے قبور مبارک ہیں،اور دوسرے طرف نبی اکرم ص اور خلفاء ذوالاحترام کے قبور ماشاء اللہ مجلل ہیں۔کیا باہر سے کوئی جانے والا یہ نہیں سمجھتا کہ یہ کھلے عام تفریق ہے؟!!!ایک تبلیغی کہ اصل میں بھونکنے والا کہوں تو بہتر ہوگا،جس نے پیران پیر شیخ جیلانی کی توہین بھی کی،جب میں نے سوال کیا کہ جنت البقیع کے اصحاب کے قبور شرک اور اطراف نبی ص کے اصحاب شرک نہیں ہیں کیا؟تو وہ پشتو زبان میں بولا بکواس کرتا ہے ،بھیج دوں جیل؟ اس کے علاوہ جن اولیاء کے زیارات بریلوی علاقوں میں ہیں یا شیعہ حضرات کے علاقوں میں ہیں ،وہ سب سالم اور انکے اوپر گنبد ہیں۔مثلا:بغداد میں امام ابوحنیفہ رح کا حرم شیعہ علاقہ میں ہے اور بہت بڑی بارگاہ ہے۔ربذہ میں حضرت ابوذر پر بارگاہ ہے،مدائن میں حضرت سلمان فارسی پر گنبد و بارگاہ ہے،یہ سب شیعہ علاقے ہیں،ایران میں شوش کے علاقے ہیں حضرت دانیال ع پیغمبر کی زیارت ہے اور بہت بڑی بارگاہ ہے،یہاں سنی اور شیعہ سب ساتھ نماز پڑھتے ہیں،اور اپنے اپنے مساجد بھی ہیں،زیادہ تر شافعی و حنفی مسلک ہیں،اب آپ بتائیں کہ شیعہ اور سنی اصحاب اور اولیاء کی زیادہ عزت کرتے ہیں ،یا وہابی؟ امید ہے سوچ کر جواب عنایت فرمائیں گے۔
 

فواداحمد

مبتدی
شمولیت
جولائی 15، 2015
پیغامات
18
ری ایکشن اسکور
0
پوائنٹ
5
یہ پوری تحریر ۔۔۔دشمن صحابہ شیعہ کی ویب سائیٹ ’‘ http://www.wilayat.net/ ’‘سے لی گئی ہے ۔۔یعنی کاپی کی گئی ہے ؛
اور سنیوں کو ورغلانے کی ’’ تقیہ باز ‘‘ کوشش کی گئی ہے ؛
جب جواب نہیں بن پا رہا تو تقیہ ،ہاں ہم بریلوی تقیہ کو بھی مانتے ہیں،اور تقیہ قرآن میں بھی موجود ہے۔کیا کہاں پر لکھا ہے تجھے اسکے ساتھ کام نہیں تجھے جواب کا کہا گیا ہے۔
 

فواداحمد

مبتدی
شمولیت
جولائی 15، 2015
پیغامات
18
ری ایکشن اسکور
0
پوائنٹ
5
امیرالمومنین خلیفہ المسلمین یزید ر بن معاویہ حمہ اللہ زندہ باد
نبی اکرم:انبیاء و اولاد صالح انبیاء کا قاتل صرف حرامزاہ ہی ہوسکتا ہے۔۔۔۔۔،آگے یزید اور اسکے اباء و اجداد کی ھسٹری چیک کریں۔
 
شمولیت
دسمبر 10، 2013
پیغامات
389
ری ایکشن اسکور
141
پوائنٹ
91
جب جواب نہیں بن پا رہا تو تقیہ ،ہاں ہم بریلوی تقیہ کو بھی مانتے ہیں،اور تقیہ قرآن میں بھی موجود ہے۔کیا کہاں پر لکھا ہے تجھے اسکے ساتھ کام نہیں تجھے جواب کا کہا گیا ہے۔
کیا مطلب جواب نہیں بن پا رہا ۔۔۔۔۔۔سنی علماء ایک صد کتب لکھ چکے ہیں سیدنا معاویہ و سیدنا علی رضوان اللہ علہم کے موضوع پر ان میں ہر بات کا جواب دیا گیا ہے ۔۔ لیکن شیعہ پھر بھی کتے کی دم کی طرح وہی ایک راگ پڑہتے رہتے ہیں۔۔۔۔۔۔ یعنی ایک جھوٹ کو اتنی بار بولو کہ سچ لگے والی پالیسی۔۔۔
 

ابن قدامہ

مشہور رکن
شمولیت
جنوری 25، 2014
پیغامات
1,772
ری ایکشن اسکور
426
پوائنٹ
198
نبی اکرم:انبیاء و اولاد صالح انبیاء کا قاتل صرف حرامزاہ ہی ہوسکتا ہے۔۔۔۔۔،آگے یزید اور اسکے اباء و اجداد کی ھسٹری چیک کریں۔
تمہارے صالح لوگوں کی قتل کر کے بہت اچھا کیا ۔ اب اپنے لوگو ں کے مرنے کی تٍفصیل ملاخط کرو
حضرت سیدنا امیر معاويہ بن ابی سفیان رضی اﷲ عنہ

کی تاریخ ساز اصلاحات وفتوحات

* · اسلامی بحری بيڑے کا قیام۔
* · بڑے بڑے اخلاقی مجرموں کے لئے خصوصی پولیس(سی ۔آئی۔ اے سٹاف) کی بنیاد۔
* · دس بڑ ی بڑی سلطنتوں کے 5400علاقوں پر اسلامی پرچم لہرایاگیا۔
* · عرب میں زراعت کو فروغ دے کر بڑی بڑی نہروں اور بندوں کا قیام۔
* · محکمہ رجسٹرار او نقول کا قیام۔
* · جہازسازی کے کارخانے۔
* · دنیا کا سب سے بڑا شہر ”قیساريہ“ جس کے 300 بازار تھے اور جس کی حفاظتی پولیس کی تعداد ايک لاکھ تھی، اس پر اسلامی حکومت قائم کی گئی ۔
* · خانہ کعبہ پر سب سے پہلے دیبا اور حریر کا غلاف چڑھایا گیا۔
* · احادیث جمع کرنے اور دینی شعائر کے تحفظ کےلئے باقدہ محکمہ کا اجرا
* · شکایات سیل کا قیام
* · سرمائی اور گرمائی افواج کی تشکیل
* · حفاظتی قلعوں کی تعمیر
* · بری اوربحری فوج کی بنیاد
* · پارلیمنٹ کا قیام

جرنیل اسلام حضرت سیدنا امیر معاويہ بن ابی سفیان رضی اﷲ عنہ کے

تابناک جہادی کارنامے ايک نظر میں

·جنگ یمامہ میں مسیلمہ کذاب کے خلاف جہاد کیا
19ھ میں آپ رضی اﷲ عنہ نے روم کا مشہور شہر قیساريہ فتح کیا۔
حضرت عمر رضی اﷲ عنہ کے دور خلافت میں آپ رضی اﷲ عنہ نے چار سال شام کے گورنر رہے اور روم کی سرحدوں پر جہاد کرتے ہوئے بہت سارے شہر فتح کےے۔
25ھ میں روم سے جاری جہاد میں عموريہ جا پہنچے اور راستے میں فوجی مراکز قائم کئے۔
25ھ میں قبرص پر لشکر کشی کی اور مسلمانوں کی تاریخ میں پہلی مرتبہ حضرت عثمان رضی اﷲ عنہ نے بحری بیڑہ تیار کروایا اور پہلی بار بحری جنگ کا واقعہ پیش آیا۔
28ھ میں قبرص کا عظیم الشان جزیرہ آپ رضی اﷲ عنہ کے ہاتھوں فتح ہو گیا اور وہاں کے کافروں پر آپ رضی اﷲ عنہ نے جزیہ عائد کیا۔
32ھ میں آپ رضی ا ﷲ عنہ نے قسطنطنیہ کے قریبی علاقوں میں جہاد جاری رکھا۔
35ھ میں آپ رضی اﷲ عنہ کی قیادت میں غزوہ ذی خشب پیش آیا۔
42ھ میں غزوہ بحستان پیش آیا اور آپ رضی اﷲ عنہ ہی کے دور خلافت میں سندھ کا کچھ حصہ بھی مسلمانوں کے زیرنگیں آیا۔
42ھ میں کابل فتح ہوا اور مسلمان ہندوستان میں قدابیل کے مقام تک پہنچ گئے۔
43ھ میں ملک سوڈان فتح ہوا اور بحستان کا مزید علاقہ مسلمانوں کے قبضے میں آیا۔
45ھ میں افریقہ پر لشکر کشی کی گئی اور ايک بڑا حصہ مسلمانوں کے زیرنگیں آیا۔
46ھ میں صقلیہ(سسلی)پر پہلی بار حملہ کیا گیا اور کثیر تعداد میں مال غنیمت مسلمانوں کے قبضے میں آیا۔
47ھ میں افریقہ کے مزید علاقوں میں جہادجاری رکھا۔
49ھ میں آپ رضی اﷲ عنہ نے قسطنطنیہ کی طرف زبردست اسلامی لشکر روانہ فرمایا، جو مسلمانوں کا قسطنطنیہ پر پہلا حملہ تھا۔
50ھ میں قبستان جنگ کے بعد قبضہ میں آیا۔
54ھ میں آپ رضی اﷲ عنہ کے دور خلافت میں مسلمان دریائے جیجون کو عبور کرتے ہوئے بخارا تک جا پہنچے۔
56ھ میں غزوہ سمر قند پیش آیا۔

سیدنا معاويہ بن ابی سفیان رضی اﷲ عنہ نے رومیوں کے خلاف سولہ جنگیں لڑی حتی کہ آخری وصیت بھی ےہی تھی کہ ”روم کا گلا گھونٹ دو
 

ابن داود

فعال رکن
رکن انتظامیہ
شمولیت
نومبر 08، 2011
پیغامات
3,393
ری ایکشن اسکور
2,721
پوائنٹ
556
السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
آگے یزید اور اسکے اباء و اجداد کی ھسٹری چیک کریں۔
ومن يكون يطعن في معاوية--- فذاك مِن كلاب الهاوية
جو سیدنا معاویہ رضی اللہ عنہ پر طعن کرے، وہ جہنمی کتوں میں سے ایک کتا ہے
ملاحظہ فرمائیں: احکام شریعت از احمد رضا خان بریلوی
 

محمد علی جواد

سینئر رکن
شمولیت
جولائی 18، 2012
پیغامات
1,988
ری ایکشن اسکور
1,549
پوائنٹ
304
تمہارے صالح لوگوں کی قتل کر کے بہت اچھا کیا ۔ اب اپنے لوگو ں کے مرنے کی تٍفصیل ملاخط کرو
حضرت سیدنا امیر معاويہ بن ابی سفیان رضی اﷲ عنہ

کی تاریخ ساز اصلاحات وفتوحات

* · اسلامی بحری بيڑے کا قیام۔
* · بڑے بڑے اخلاقی مجرموں کے لئے خصوصی پولیس(سی ۔آئی۔ اے سٹاف) کی بنیاد۔
* · دس بڑ ی بڑی سلطنتوں کے 5400علاقوں پر اسلامی پرچم لہرایاگیا۔
* · عرب میں زراعت کو فروغ دے کر بڑی بڑی نہروں اور بندوں کا قیام۔
* · محکمہ رجسٹرار او نقول کا قیام۔
* · جہازسازی کے کارخانے۔
* · دنیا کا سب سے بڑا شہر ”قیساريہ“ جس کے 300 بازار تھے اور جس کی حفاظتی پولیس کی تعداد ايک لاکھ تھی، اس پر اسلامی حکومت قائم کی گئی ۔
* · خانہ کعبہ پر سب سے پہلے دیبا اور حریر کا غلاف چڑھایا گیا۔
* · احادیث جمع کرنے اور دینی شعائر کے تحفظ کےلئے باقدہ محکمہ کا اجرا
* · شکایات سیل کا قیام
* · سرمائی اور گرمائی افواج کی تشکیل
* · حفاظتی قلعوں کی تعمیر
* · بری اوربحری فوج کی بنیاد
* · پارلیمنٹ کا قیام

جرنیل اسلام حضرت سیدنا امیر معاويہ بن ابی سفیان رضی اﷲ عنہ کے

تابناک جہادی کارنامے ايک نظر میں

·جنگ یمامہ میں مسیلمہ کذاب کے خلاف جہاد کیا
19ھ میں آپ رضی اﷲ عنہ نے روم کا مشہور شہر قیساريہ فتح کیا۔
حضرت عمر رضی اﷲ عنہ کے دور خلافت میں آپ رضی اﷲ عنہ نے چار سال شام کے گورنر رہے اور روم کی سرحدوں پر جہاد کرتے ہوئے بہت سارے شہر فتح کےے۔
25ھ میں روم سے جاری جہاد میں عموريہ جا پہنچے اور راستے میں فوجی مراکز قائم کئے۔
25ھ میں قبرص پر لشکر کشی کی اور مسلمانوں کی تاریخ میں پہلی مرتبہ حضرت عثمان رضی اﷲ عنہ نے بحری بیڑہ تیار کروایا اور پہلی بار بحری جنگ کا واقعہ پیش آیا۔
28ھ میں قبرص کا عظیم الشان جزیرہ آپ رضی اﷲ عنہ کے ہاتھوں فتح ہو گیا اور وہاں کے کافروں پر آپ رضی اﷲ عنہ نے جزیہ عائد کیا۔
32ھ میں آپ رضی ا ﷲ عنہ نے قسطنطنیہ کے قریبی علاقوں میں جہاد جاری رکھا۔
35ھ میں آپ رضی اﷲ عنہ کی قیادت میں غزوہ ذی خشب پیش آیا۔
42ھ میں غزوہ بحستان پیش آیا اور آپ رضی اﷲ عنہ ہی کے دور خلافت میں سندھ کا کچھ حصہ بھی مسلمانوں کے زیرنگیں آیا۔
42ھ میں کابل فتح ہوا اور مسلمان ہندوستان میں قدابیل کے مقام تک پہنچ گئے۔
43ھ میں ملک سوڈان فتح ہوا اور بحستان کا مزید علاقہ مسلمانوں کے قبضے میں آیا۔
45ھ میں افریقہ پر لشکر کشی کی گئی اور ايک بڑا حصہ مسلمانوں کے زیرنگیں آیا۔
46ھ میں صقلیہ(سسلی)پر پہلی بار حملہ کیا گیا اور کثیر تعداد میں مال غنیمت مسلمانوں کے قبضے میں آیا۔
47ھ میں افریقہ کے مزید علاقوں میں جہادجاری رکھا۔
49ھ میں آپ رضی اﷲ عنہ نے قسطنطنیہ کی طرف زبردست اسلامی لشکر روانہ فرمایا، جو مسلمانوں کا قسطنطنیہ پر پہلا حملہ تھا۔
50ھ میں قبستان جنگ کے بعد قبضہ میں آیا۔
54ھ میں آپ رضی اﷲ عنہ کے دور خلافت میں مسلمان دریائے جیجون کو عبور کرتے ہوئے بخارا تک جا پہنچے۔
56ھ میں غزوہ سمر قند پیش آیا۔

سیدنا معاويہ بن ابی سفیان رضی اﷲ عنہ نے رومیوں کے خلاف سولہ جنگیں لڑی حتی کہ آخری وصیت بھی ےہی تھی کہ ”روم کا گلا گھونٹ دو
جزاک الله -
 
Top