• الحمدللہ محدث فورم کو نئےسافٹ ویئر زین فورو 2.1.7 پر کامیابی سے منتقل کر لیا گیا ہے۔ شکایات و مسائل درج کروانے کے لئے یہاں کلک کریں۔
  • آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ﻓﺘﻨﮧ ﻓﺴﺎﺩ نہ پھیلاؤ ! والدین کے نام

شمولیت
اگست 11، 2013
پیغامات
17,074
ری ایکشن اسکور
6,744
پوائنٹ
1,069
بسم اللہ الرحمن الرحیم

ﻓﺘﻨﮧ ﻓﺴﺎﺩ نہ پھیلاؤ

ان والدین کے نام جو اپنی اور اولاد کی دنیا و آخرت برباد کر رہے ہیں!

شاید کہ تیرے ❤ دل میں اتر جائے...


✔ ﻟﮍﮐﯿﻮﮞ ﮐﯽ ﺷﺎﺩﯼ ﻣﯿﮟ ﺗﺎﺧﯿﺮ ﻭﺍﻗﻌﯽ ﻣﺴﺌﻠﮧ ﮨﮯ، ﻟﯿﮑﻦ ﺍﺱ ﻣﺴﺌﻠﮧ ﮐﺎ ﻭﺍﺣﺪ ﺳﺒﺐ ﺟﮩﯿﺰ ﻧﮩﯿﮟ، ﻧﮧ ﺍﺱ ﮐﮯ ﻭﺍﺣﺪ ﺫﻣﮧ ﺩﺍﺭ ﻟﮍﮐﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﮨﯿﮟ، ﻣﯿﮟ ﻧﮯ ﺩﯾﮑﮭﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺍﯾﺴﮯ ﺁﺩﮬﮯ ﺳﮯ ﺯﯾﺎﺩﮦ ﻣﻌﺎﻣﻼﺕ ﻣﯿﮟ ﺣﻘﯿﻘﯽ ﺫﻣﮧ ﺩﺍﺭ ﻟﮍﮐﯽ ﻭﺍﻟﮯ ﮨﯽ ﮨﻮﺗﮯ ﮨﯿﮟ

ﮨﻮﺗﺎ ﯾﮧ ﮨﮯ ﮐﮧ ﮔﮭﺮ ﮐﮯ ﮨﺮ ﻓﺮﺩ ﻧﮯ ﺩﻟﮩﮯ ﮐﮯ ﻟﯿﮯ ﺍﯾﮏ ﻣﻌﯿﺎﺭ ﺑﻨﺎﯾﺎ ﮨﻮﺍ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ، ﺑﺎﭖ ﭼﺎﮨﺘﺎ ﮨﮯ ﺩﺍﻣﺎﺩ ﺩﯾﻦ ﺩﺍﺭ ﻣﻠﮯ، ﻣﺎﮞ ﭼﺎﮨﺘﯽ ﮨﮯ ﭘﯿﺴﮯ ﻭﺍﻻ ﮨﻮ، ﻟﮍﮐﯽ ﭼﺎﮨﺘﯽ ﮨﮯ ﮨﯿﻨﮉﺳﻢ ﮨﻮ، ﯾﮧ ﺳﺎﺭﮮ ﻣﻌﯿﺎﺭﺍﺕ ﺳﺎﺗﮫ ﺭﮐﮫ ﮐﺮ ﺍﻧﺘﻈﺎﺭ ﮐﯿﺎ ﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺭﺷﺘﮧ بھی خود چل کر ﺁﺋﮯ

⭐ ﺭﺷﺘﮯ ﺁﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﮐﺴﯽ ﻧﮧ ﮐﺴﯽ ﮐﯽ ﻃﺮﻑ ﺳﮯ ﺭﯾﺠﯿﮑﭧ ﮨﻮﺗﮯ ﭼﻠﮯ ﺟﺎﺗﮯ ﮨﯿﮟ، ﻟﮍﮐﯽ ﮐﯽ ﻋﻤﺮ ﺑﮭﯽ ﺭﺷﺘﻮﮞ ﮐﮯ ﺭﯾﺠﯿﮑﭧ ﮐﺮﻧﮯ ﮐﮯ ﺳﻠﺴﻠﮧ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﺩﺭﺍﺯ ﮨﻮﺗﯽ ﭼﻠﯽ ﺟﺎﺗﯽ ﮨﮯ، ﺍﻭﺭ ﭘﮭﺮ ﯾﮧ ﻋﻤﺮ ﺩﺭﺍﺯﯼ ﻟﮍﮐﯽ ﮐﻮ ﺍﺱ ﻣﺮﺣﻠﮧ ﻣﯿﮟ ﻟﮯ ﮐﺮ ﭼﻠﯽ ﺟﺎﺗﯽ ﮨﮯ ﺟﮩﺎﮞ ﻭﮦ ﺑﺎﺟﯽ اور پھر ﺁﻧﭩﯽ ﺑﻦ ﺟﺎﺗﯽ ﮨﮯ، ﺍﺏ ﺭﺷﺘﮯ ﺁﻧﮯ ﺑﻨﺪ ﮨﻮﺗﮯ ﮨﯿﮟ ﺗﻮ ﮔﮭﺮ ﻭﺍﻟﮯ ﭼﺎﮨﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﭘﮩﻠﮯ ﮨﯽ ﺟﯿﺴﺎ ﮐﻮﺋﯽ ﺭﺷﺘﮧ ﺁﺟﺎﺗﺎ ﺗﻮ ﻟﮍﮐﯽ ﮐﮯ ﮨﺎﺗﮫ ﭘﯿﻠﮯ ﮐﺮ ﺩﯾﺘﮯ، ﺣﺎﻟﺖ ﯾﮩﺎﮞ ﺗﮏ ﭘﮩﻨﭻ ﺟﺎﺗﯽ ﮨﮯ ﮐﮧ ﻟﮍﮐﯽ ﻭﺍﻟﮯ ﺟﯿﺴﮯ ﺗﯿﺴﮯ ﺟﮩﺎﮞ ﺗﮩﺎﮞ ﮐﺴﯽ ﮐﮯ ﺑﮭﯽ ﭘﻠّﻮ ﺑﺎﻧﺪﮪ ﮐﺮ ﻟﮍﮐﯽ ﺳﮯ ﭼﮭﭩﮑﺎﺭﺍ ﺣﺎﺻﻞ ﮐﺮنا ﭼﺎﮨﺘﮯ ہیں

ﮨﻢ ﻧﮯ ﺳﻤﺎﺟﯽ ﻃﻮﺭ ﭘﺮ ﯾﮧ ﺫﮨﻦ ﺑﻨﺎﯾﺎ ﮨﻮﺍ ﮨﮯ ﮐﮧ ﭼﺎﮨﮯ ﻟﮍﮐﺎ جیسا بھی ﮨﻮ ﻟﯿﮑﻦ ﮔﮭﺮ ﻭﺍﻟﻮﮞ ﮐﯽ ﻓﮑﺮ ﯾﮩﯽ ﮨﻮﺗﯽ ﮨﮯ ﮐﮧ "ﻭﮦ ﭘﺮﯼ ﮐﮩﺎﮞ ﺳﮯ ﻻﺅﮞ، ﺗﺮﯼ ﺩﻟﮩﻦ ﺟﺴﮯ ﺑﻨﺎﺅﮞ" ﯾﮩﯽ ﻣﻌﺎﻣﻠﮧ ﻟﮍﮐﯽ ﻭﺍﻟﻮﮞ ﮐﯽ ﻃﺮﻑ ﺳﮯ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ، ﮨﺮ ﮔﮭﺮ ﻭﺍﻻ ﺟﯿﺴﺎ ﻓﺮﺷﺘﮯ ﮐﯽ ﺗﻼﺵ ﻣﯿﮟ ﮨﻮ، ﮨﺮ ﻟﮍﮐﯽ ﺷﮩﺰﺍﺩﮮ اور ہر لڑکا شہزادی ﮨﯽ ﮐﺎ ﺧﻮﺍﺏ دیکھتا ﮨﮯ

✔ ﯾﮧ ﺳﻤﺠﮭﻨﮯ ﮐﯽ ﺿﺮﻭﺭﺕ ﮨﮯ ﮐﮧ "ﮐﺒﮭﯽ ﮐﺴﯽ ﮐﻮ ﻣﮑﻤﻞ ﺟﮩﺎﮞ ﻧﮩﯿﮟ ﻣﻠﺘﺎ" ﺩﻧﯿﺎ ﻣﯿﮟ ﺭﮦ ﮐﺮ ﺗﻮ ﺩﻧﯿﺎ ﻭﺍﻟﻮ ﺳﮯ ﮨﯽ ﮐﺎﻡ ﭼﻼﻧﺎ ﭘﮍﮮ ﮔﺎ ﻧﺎ! ﮨﻤﺎﺭﮮ ﺑﭽّﻮﮞ ﺳﮯ ﺷﺎﺩﯼ ﮐﺮﻧﮯ ﮐﮯ ﻟﯿﮯ ﺁﺳﻤﺎﻥ ﺳﮯ ﻓﺮﺷﺘﮯ ﺗﻮ ﻧﮩﯿﮟ ﺍﺗﺮﯾﮟ ﮔﮯ ﺍﺱ ﻣﻌﺎﻣﻠﮧ ﻣﯿﮟ ﻧﺒﯽ ﺻﻠﯽ ﺍﻟﻠﮧ ﻋﻠﯿﮧ ﻭﺳﻠﻢ ﮐﯽ ﺗﻌﻠﯿﻢ ﺑﮩﺖ ﺍﮨﻢ ﮨﮯ...


ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ کہتے ہیں کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا:

جب تمہیں کوئی ایسا شخص شادی کا پیغام دے، جس کی دین داری اور اخلاق سے تمہیں اطمینان ہو تو اس سے شادی کر دو۔ اگر ایسا نہیں کرو گے تو زمین میں فتنہ اور فساد عظیم برپا ہو گا

سنن ترمذى: 1084

ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ نے بیان کیا کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا:

عورت سے نکاح چار چیزوں کی بنیاد پر کیا جاتا ہے
اس کے مال کی وجہ سے
اس کے خاندانی شرف کی وجہ سے
اس کی خوبصورتی کی وجہ سے
اس کے دین کی وجہ سے
اور تو دیندار عورت سے نکاح کر کے کامیابی حاصل کر! اگر ایسا نہ کرے تو تیرے ہاتھوں کو مٹی لگے گی (یعنی اخیر میں تجھ کو ندامت ہو گی)


صحيح بخارى: 5090

إِنْ أُرِيدُ إِلَّا ٱلْإِصْلَٰحَ مَا ٱسْتَطَعْتُ وَمَا تَوْفِيقِىٓ إِلَّا بِٱللَّهِ عَلَيْهِ تَوَكَّلْتُ وَإِلَيْهِ أُنِيبُ

میرا اراده تو اپنی طاقت بھر اصلاح کرنے کا ہی ہے۔ میری توفیق اللہ ہی کی مدد سے ہے، اسی پر میرا بھروسہ ہے اور اسی کی طرف میں رجوع کرتا ہوں (هود: 88)

والله اعلم

الله تعالى عمل کی توفیق عطا فرمائے آمین یا رب العالمین

اللَّهُـمّ صَــــــلٌ علَےَ مُحمَّــــــــدْ و علَےَ آل مُحمَّــــــــدْ كما صَــــــلٌيت علَےَ إِبْرَاهِيمَ و علَےَ آل إِبْرَاهِيمَ إِنَّك حَمِيدٌ مَجِيدٌ اللهم بارك علَےَ مُحمَّــــــــدْ و علَےَ آل مُحمَّــــــــدْ كما باركت علَےَ إِبْرَاهِيمَ و علَےَ آل إِبْرَاهِيمَ إِنَّك حَمِيدٌ مَجِيدٌ.
 
Top