1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

آؤ دوستی کر لیں۔۔۔۔

'شعر' میں موضوعات آغاز کردہ از عمران ناصر, ‏جولائی 14، 2011۔

  1. ‏جولائی 14، 2011 #1
    عمران ناصر

    عمران ناصر رکن
    شمولیت:
    ‏مئی 01، 2011
    پیغامات:
    45
    موصول شکریہ جات:
    150
    تمغے کے پوائنٹ:
    58

    آؤ دوستی کر لیں


    مستقل اس جہاں میں تم بھی نہیں
    مستقل اس جہاں میں ہم بھی نہیں
    نہ مسرت ہی مستقل ہے یہاں
    مستقل اس جہاں میں غم بھی نہیں
    تو پھر عداوت ہی مستقل کیوں ہو
    آؤ کچھ اس طرح نہ کر دیکھیں
    ان اندھیروں میں روشنی کر لیں
    دشمنو ! آؤ دوستی کر لیں
     
  2. ‏جولائی 14، 2011 #2
    ساجد

    ساجد رکن ادارہ محدث
    جگہ:
    قصور(بھاگیوال)
    شمولیت:
    ‏مارچ 02، 2011
    پیغامات:
    6,602
    موصول شکریہ جات:
    9,357
    تمغے کے پوائنٹ:
    635

    مولانا عبد الرحمٰن عاجزؔ
    ترے آگے کسی کی فردِ عصیاں کون دیکھے گا ​

    جگر شق، زرد چہرہ، چاک داماں کون د یکھے گا۔۔۔پریشاں ہوں مرا حالِ پریشاں کون دیکھے گا
    جہاں پڑتی نہیں نظریں کسی کی آتشِ گُل پر۔۔۔وہاں اے دل ترا یہ سوز پنہاں کون دیکھے گا
    اگر وہ نور برساتے ہوئے محفل میں آجائیں۔۔۔تری صورت پھر اے شمعِ فروزاں کون دیکھے گا
    کلی افسردہ، غنچے دم بخود اور پھول یژ مردہ۔۔۔یہ صورت ہے تو پھر شکلِ گلستاں کون دیکھے گا
    تمہاری تیغ کے کُشتے تڑپتے ہیں مزاروں میں۔۔۔یہ نظارہِ سرِ گورِ غریباں کون دیکھے گا
    غنیمت ہیں یہ دو دن زندگی کے آؤ مل بیٹھیں۔۔۔بچھڑنے پر یہ پھر رنگ بہاراں کوئی دیکھے گا
    اگر جاں جارہی ہے شوق سے سو مرتبہ جائے۔۔۔ترا جانا مگر اے جانِ جاناں کون دیکھے گا
    قیامت پر مرا ایمان مگر اے داورِ محشر۔۔۔ترے آگے کسی کی فردِ عصیاں کون دیکھے گا
    تو اس دار العمل سے گر تہی دامن چلا عاجزؔ
    تری جانب پھر اے بے ساز و ساماں کون دیکھے گا
    ماہنامہ محدث 1975
     
  3. ‏جولائی 14، 2011 #3
    حافظ محمد عمر

    حافظ محمد عمر مشہور رکن
    جگہ:
    ڈیرہ غازی خان
    شمولیت:
    ‏مارچ 08، 2011
    پیغامات:
    428
    موصول شکریہ جات:
    1,546
    تمغے کے پوائنٹ:
    109

    جزاک اللہ خیرا ساجد بھائی
     
  4. ‏جولائی 20، 2011 #4
    mytruecall

    mytruecall مبتدی
    شمولیت:
    ‏جولائی 20، 2011
    پیغامات:
    5
    موصول شکریہ جات:
    31
    تمغے کے پوائنٹ:
    0

    جزاکم اللہ خیر
     
  5. ‏اگست 02، 2011 #5
    ابن خلیل

    ابن خلیل سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 03، 2011
    پیغامات:
    1,383
    موصول شکریہ جات:
    6,746
    تمغے کے پوائنٹ:
    332

    جزاک اللہ خيراً
     
  6. ‏اگست 02، 2011 #6
    احمدہارون

    احمدہارون رکن
    شمولیت:
    ‏جون 20، 2011
    پیغامات:
    162
    موصول شکریہ جات:
    850
    تمغے کے پوائنٹ:
    75

    جزاکم اللہ خیرا
     
  7. ‏اگست 02، 2011 #7
    ناصر رانا

    ناصر رانا رکن مکتبہ محدث
    جگہ:
    Cape Town, Western Cape, South Africa
    شمولیت:
    ‏مئی 09، 2011
    پیغامات:
    1,171
    موصول شکریہ جات:
    5,448
    تمغے کے پوائنٹ:
    306

    جزاکم اللہ خیرا
     
  8. ‏اگست 02، 2011 #8
    جاسم منیر

    جاسم منیر مبتدی
    جگہ:
    Kuwait
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    6
    موصول شکریہ جات:
    41
    تمغے کے پوائنٹ:
    0

    جزاکم اللہ خیرا
    بہت زبردست
     
  9. ‏اگست 03، 2011 #9
    انس

    انس منتظم اعلیٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏مارچ 03، 2011
    پیغامات:
    4,177
    موصول شکریہ جات:
    15,224
    تمغے کے پوائنٹ:
    800

    بہت خوب! جزاك الله خيرا
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں