1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

اتباع کسے کہتے ہیں؟

'اہل حدیث' میں موضوعات آغاز کردہ از جمشید, ‏دسمبر 24، 2011۔

  1. ‏مارچ 16، 2012 #81
    جمشید

    جمشید مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏جون 09، 2011
    پیغامات:
    873
    موصول شکریہ جات:
    2,325
    تمغے کے پوائنٹ:
    180

    شاعر نے کہاتھا۔
    ذکرجب چھڑگیاقیامت کا
    بات پہنچی تری جوانی تک ​

    جب یہ بحث شروع ہوئی تھی اس وقت اس کاخیال بھی نہیں تھاکہ بات اہل حدیث حضرات کے اتباع سے شروع ہوکرشلوار اورازار تک جائے گی ۔کچھ بعید نہیں کہ بقیہ مباحث میں بات کہیں اس سے بھی آگے نکل جائے اوربرائے بالغان کی تنبہی نوٹ لگانے کی نوبت آجائے۔

    رفیق طاہر صاحب کو ہم نے منطق کی جانب مراجعت کا مشورہ دیاتھا یہ سوچ کر کہ انکو منطق پڑھے ہوئے کافی ایام بیت گئے ہیں۔ شاید کچھ سہوونسیان ہوگیاہو
    انہوں نے جواباہمیں بھی منطق کی جانب مراجعت کا مشورہ دیاہے ہے۔

    یہ بالکل ایساہی ہے جیساکہ کسی ملک کے سفیر کو یاسفارت خانے کے کسی فرد کو ناپسند یدہ قراردے کر واپس کردیاجاتاہے تودوسرے ملک کی وزارت خارجہ بھی اول الذکر کے سفیر کو یادوسرے ہم منصب شخص کو ملک چھوڑنے کا حکم دینااپنافرض منصبی سمجھتی ہے۔

    رفیق طاہر صاحب ہمارے سوال کوبھی نہیں سمجھے۔
    راقم الحروف کا سوال تھا

    میں نے جوکچھ لکھاہے اس میں کوئی الجھاؤ نہیں ہے۔ میں نے صاف اورسیدھی بات یہ پوچھی ہے کہ لفظ اورمصطلح میں عموم وخصوص کی نسبت کیسے درست ہوسکتی ہے۔پھر میں نے ٹرین اورجہاز کی مثال تقریب فہم کیلئے دے دی لیکن شاید اس مثال نے ان پر ری ایکشن کردیا۔

    اوران کا جواب ازاراورشلوار سے گزرتاہوایہ ہے کہ

    میراسوال لفظ اورمصطلح میں عموم وخصوص کے تعلق سے تھا ۔موصوف کاجواب لفظ اورلفظ میں عموم وخصوص کے تعلق سے ہے اس پر زیادہ کیاکہاجائے سوائے اس کے کہ

    سوال گندم کے تعلق سے ہے اورجواب میں چناکی خصوصیات بیان کی جارہی ہیں۔

    رفیق طاہر صاحب نے یہ بھی اچھی بات ارشاد فرمائی ہے۔

    جولوگ سخن فہم ہیں اورغالب کےطرفدار نہیں ہیں ان کو سابقہ مراسلات سے خود بخود معلوم ہوجائے گاکہ ایک واضح سوال کے جواب میں اتنے ٹال مٹول سے کون کام لے رہاہے اورکیاایک ایسے صاف سادہ جواب کیلئے اتنے حربے اپنانے کی ضرورت تھی ؟
    میراسوال توبس اتناتھاکہ

     
  2. ‏مارچ 16، 2012 #82
    رفیق طاھر

    رفیق طاھر رکن مجلس شوریٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    ارض اللہ
    شمولیت:
    ‏مارچ 04، 2011
    پیغامات:
    790
    موصول شکریہ جات:
    3,974
    تمغے کے پوائنٹ:
    323

    دو ٹوک لفظوں میں یہ بات بیان فرمائیں کہ "اتباع" آپکے نزدیک مصطلح ہے یا نہیں ؟؟
    اس فیصلہ کے بعد ہم آگے چلیں گے ۔
     
  3. ‏مارچ 17، 2012 #83
    جمشید

    جمشید مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏جون 09، 2011
    پیغامات:
    873
    موصول شکریہ جات:
    2,325
    تمغے کے پوائنٹ:
    180

    اس سوال کا جواب ضروری کیوں نہیں ہے؟
     
  4. ‏مارچ 17، 2012 #84
    رفیق طاھر

    رفیق طاھر رکن مجلس شوریٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    ارض اللہ
    شمولیت:
    ‏مارچ 04، 2011
    پیغامات:
    790
    موصول شکریہ جات:
    3,974
    تمغے کے پوائنٹ:
    323

    اس لیے ضروری نہیں سمجھا کہ آپکو اس بات کی سمجھ نہیں آرہی ۔ اور ہم یہ سمجھتے ہیں کہ جس بات کی کسی کو ایک وقت میں سمجھ نہ آرہی ہو اسے چھوڑ دیا جائے اور بعد میں پھر کبھی وہ بات سمجھا دی جائے ۔ کیونکہ ہر وقت ہر بات ہر کسی کو ہر طرح سے سمجھ نہیں آیا کرتی ۔
    لہذا فی الحال آپ اس سوال پر توجہ کریں :
    پھر ان شاء اللہ آپکو یہ بات بھی سمجھا دیں گے کہ مصطلح اور لفظ میں عموم خصوص کی نسبت کیسے ممکن ہے ۔
     
  5. ‏مارچ 18، 2012 #85
    جمشید

    جمشید مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏جون 09، 2011
    پیغامات:
    873
    موصول شکریہ جات:
    2,325
    تمغے کے پوائنٹ:
    180

    بات توبڑی آسان سی ہے مشکل اس لئے ہورہی ہے کہ اپ پینترے بازی دکھارہے ہیں۔
    اس کا کچھ نمونہ دیکھیں

    پہلے تقلید کی تعریف پر اصرار
    تقلید اوراتباع کے درمیان عموم وخصوص کی نسبت ہے
    لفظ اورمصطلح کا شوشہ
    حضرت میں نے آپ سے کوئی چیستاں اورمعمہ نہیں پوچھاہے؟صرف یہ بات پوچھی ہے کہ تقلید سے گریز کرکے جس اتباع کی دعوت دے رہے ہیں کی تعریف بیان کردیں۔
    میرے خیال سے تواس میں کوئی مشکل نہیں ہونی چاہئے تھی ۔
    آپ سے توبہترکسی حد تک بن دائود اورخضرحیات ہی تھے جنہوں نے اپنی سے کوشش تو کی جواب دینے کی ۔
    اوراتباع اتباع ہے جب تک کہ وہ اتباع ہے جیسے لطیفوں سے پرتھا۔
    آنجناب توجواب کی سمت ایک بھی قدم بڑھا نہیں رہے ہیں؟
     
  6. ‏مارچ 18، 2012 #86
    گڈمسلم

    گڈمسلم سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 10، 2011
    پیغامات:
    1,407
    موصول شکریہ جات:
    4,907
    تمغے کے پوائنٹ:
    292

    لگتا ہے جمشید بھائی آپ اس اتباع کی اس مختصر تعریف کو برداشت نہیں کرپائے اور کب سے کئی جگہوں پر واویلا کرچکے ہیں اور کررہے ہیں اور میرا تو گمان ہے کہ اب شاید آپ کی ساری فکر ہی اس تعریف تک محدود ہوگئی ہے۔گزارش ہے کہ یا تو تعریف قبول کریں یا پھر نقص واضح کریں اور بتائیں کہ تعریف یوں نہیں بلکہ یوں ہے۔تاکہ ہم بھی مستفید ہوں۔
    چور مچائے شور کی طرح والا معاملہ تو نہ کریں بھائی پلیز
    اہو سوری درمیان میں خلل پیدا کیا بس ایک نصیحت کی خاطر
     
  7. ‏مارچ 18، 2012 #87
    رفیق طاھر

    رفیق طاھر رکن مجلس شوریٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    ارض اللہ
    شمولیت:
    ‏مارچ 04، 2011
    پیغامات:
    790
    موصول شکریہ جات:
    3,974
    تمغے کے پوائنٹ:
    323

    جناب ہم عرض کرچکے ہیں کہ اتباع کا معنى ہے پیروی !
    اور یہ لفظ ہے اسکی تعریف نہیں ہوتی بلکہ معنى ہوتا ہے جو کہ بیان کر دیا گیا ہے ۔
    لیکن آپ مصر ہیں کہ یہ مصطلح ہے لہذا اسکی بھی تعریف موجود ہے ۔
    اسی لیے تو ہم نے آپ سے سوال کیا تھا کہ ہمیں بتایا جائے کہ کس فن کی مصطلح ہے اور کس نے اسے مصطلح کہا ہے ؟ اور یہ کب سے مصطلح ہوئی ہے ؟؟؟
    یا پھر یہ مان لیں کہ اتباع مصطلح نہیں ہے ۔ تاکہ بات آگے بڑھائی جاسکے ۔
    لیکن "ہمارے دل میں کیا ہے ؟بوجھو تو جانیں ! " کا نعرہء مستانہ لگاگر آپ غائب ہو جاتے ہیں اور ہم معذور ہیں کہ علیم بذات الصدور ذات صرف اللہ ہی کی ہے ۔
    اب کیا کیا جائے کہ جبتک کوئی بات طے ہی نہیں ہو پاتی اسوقت تک کچھ بھی نہیں ہوسکتا ۔
    لہذا جلدی کیجئے کہ بتائیے کہ "اتباع" اگر مصطلح ہے تو کس فن کی ہے ؟ اور کس نے اسے مصطلح قرار دیا ہے ؟؟ اور اگریہ مصطلح نہیں ہے تو بھی وضاحت فرمائیے کہ نہیں یہ مصطلح نہیں ہے !
    تاکہ ہم آپ کی فکر " لفظ کی بھی تعریف ہوتی ہے" کا جائزہ لینا شروع کریں ۔
     
  8. ‏مارچ 18، 2012 #88
    جمشید

    جمشید مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏جون 09، 2011
    پیغامات:
    873
    موصول شکریہ جات:
    2,325
    تمغے کے پوائنٹ:
    180

    فتنہ بازوں کی طرح فتنہ پھیلانے کے بجائے اگر اتباع کی کوئی تعریف ہے توبیان کریں ورنہ دوسرے مباحث میں اپنی توانائی صرف کریں۔
    اہو سوری درمیان کے خلل کا جواب دیا بس نصیحت کی خاطر
     
  9. ‏مارچ 18، 2012 #89
    رفیق طاھر

    رفیق طاھر رکن مجلس شوریٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    ارض اللہ
    شمولیت:
    ‏مارچ 04، 2011
    پیغامات:
    790
    موصول شکریہ جات:
    3,974
    تمغے کے پوائنٹ:
    323

    ہم عرض کرچکے کہ "اتباع" کوئی مصطلح نہیں ہے کہ جسکی کوئی تعریف ہو ۔ یہ ایک لفظ ہے جسکا معنى ہے پیروی ۔
    لیکن آپ تعریف ہی کے مطالبہ پر مصر ہیں اور اسے اصطلاح ہی قرار دینے پر بضد ہیں تو ہم نے عرض کیا ہے کہ آپ اسکی دلیل مہیا فرمائیں کہ یہ مصطلح ہے اور ہمارے علم میں اضافہ فرمائیں کہ کس فن کی مصطلح ہے اور کب سے یہ مصطلح ایجاد ہوئی ہے ۔
    ھاتوا برھانکم إن کنتم صادقین ۔۔!
    فإن لم تفعلوا ولن تفعلوا ۔۔۔۔
     
  10. ‏مارچ 19، 2012 #90
    جمشید

    جمشید مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏جون 09، 2011
    پیغامات:
    873
    موصول شکریہ جات:
    2,325
    تمغے کے پوائنٹ:
    180

    سبحان اللہ کیاجواب دلنشیں ہے۔
    آپ لوگوں کو کس اتباع دیتے ہیں جس کا محض معنی پیروی ہے اس کے علاوہ دائیں بائیں کچھ نہیں۔ جب آپ لوگوں سے کہتے ہیں کہ تقلید نہ کریں اتباع کریں توآپ کے ذہن میں کیارہتاہے صرف اتباع کا لفظ جس کا معنی پیروی ہے؟اگرہاں میں ہے توپھرواضح طورپر اعتراف کرلیں کہ ہم جس اتباع کی دوسروں کا دعوت دیتے ہیں وہ عربی کالفظ ہے اس کا معنی پیروی ہے اس کے علاوہ ہم کچھ زیادہ اس سے مراد نہیں لیتے؟آپ اتنی بات کا اعتراف کرلیں انشاء اللہ اس کے بعد آگے بات شروع ہوجائے گی۔
    یہ بھی عجیب بات ہے کہ ہمارے دل میں کیاہے بوجھوتوجانیں کا نعرہ مستانہ ہم لگاتے ہیں۔ آپ نے شروع سے لے کر اب تک تین مرتبہ اپناموقف بدلاہے۔اس رنگارنگی موقف کی آپ نے تاحال کوئی وضاحت توکی نہیں البتہ ایک لنگڑاعذرتراش لیاہے کہ پہلے بتاؤ کہ اتباع لفظ ہے یامصطلح ہے۔جب کہ ہماراسوال ایساہے کہ اس میں نہ کوئی الجھاؤ ہے اورنہ ہی وہ چیستاں ہے۔واضح اورصاف سیدھی بات ہے۔ہاں آپ جواب دینے سے بچنے کیلئے ادھر ادھر کے بہانے تلاش کررہے ہیں جس کی وجہ سے یہ ساری پریشانی پیداہورہی ہے؟
    ویسے یہ توپوچھاجاسکتاہے کہ اس کا القاء آنجناب پر کب ہواکہ اتباع لفظ ہے مصطلح نہیں ہے۔کیونکہ یہ شروع میں توآنجناب کا موقف نہیں تھا ؟
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں