1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

الطهارات اربع

'تحقیق حدیث سے متعلق سوالات وجوابات' میں موضوعات آغاز کردہ از مظفر اختر, ‏ستمبر 06، 2019۔

  1. ‏ستمبر 06، 2019 #1
    مظفر اختر

    مظفر اختر مبتدی
    جگہ:
    ملتان
    شمولیت:
    ‏جون 13، 2018
    پیغامات:
    88
    موصول شکریہ جات:
    10
    تمغے کے پوائنٹ:
    27

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
    مسند البزار کی اس حدیث کی تحقیق درکار ہے

    ٨٥٦٣- حَدَّثنا عُبَيد اللَّهِ بْنُ سَعْد بْنِ إِبْرَاهِيمَ قَالَ: حَدَّثَنِي عَمِّي يَعْقُوبُ بْنُ إِبْرَاهِيمَ بْنِ سَعْد قال: حدثني أبي عَنْ مُحَمد بْنِ إِسْحَاقَ، عَن مُحَمد بْنِ إبراهيم عن أبي سَلَمَة، عَن أَبِي هُرَيرة، عَن النَّبِيّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيه وَسَلَّم قال: الطهاراتأربع قص الشارب وحلق العانة ونتف الإبط وتقليم الأظفار.
     
  2. ‏ستمبر 07، 2019 #2
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,763
    موصول شکریہ جات:
    8,333
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ
    اس میں محمد بن اسحاق کا عنعنہ ہے۔
    لیکن اس کا ایک شاہد موجود ہے، مسند بزار ( حدیث نمبر 4146) وغیرہ میں ہی، حضرت ابو الدرداء رضی اللہ عنہ سے۔ اس کی سند میں بھی ضعیف راوی ہے، لیکن دونوں مل کر حسن لغیرہ کے درجہ تک پہنچ جاتی ہیں۔
    بعض اہل علم کو دیکھا کہ انہوں نے حدیث ابی الدرداء کو ضعیف لکھا ہے، ممکن ہے انہیں شاہد کا علم نہ ہو۔ واللہ اعلم
     
    • علمی علمی x 2
    • شکریہ شکریہ x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں