1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

امام دارقطنی رحمہ اللہ ۔ أثری صاحب کی پہلی تصنیف

'سیرت سلف الصالحین رحمہم اللہ' میں موضوعات آغاز کردہ از خضر حیات, ‏دسمبر 22، 2011۔

  1. ‏دسمبر 22، 2011 #1
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,756
    موصول شکریہ جات:
    8,332
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    امام دارقطنی رحمہ اللہ کی جلالت شان اور علمی مرتبے کو علوم حدیث سے شغف رکھنے والا طالب علم جانتا ہے ۔ امام دارقطنی رحمہ اللہ حدیث کے ساتھ ساتھ ادب ، قراءت اور نحو کے بھی امام تھے ۔
    امام شمس الدین ابو عبد اللہ احمد بن عثمان الذہبی رحمہ اللہ تذکرۃ الحفاظ میں لکھتے ہیں :
    الدَّارَقُطْنِي الإمام شيخ الإسلام حافظ الزمان, أبو الحسن علي بن عمر بن أحمد بن مهدي البغدادي الحافظ الشهير, صاحب السنن ( ج ٣ ص ١٣٢ )ان کی ’’ کتاب العلل ‘‘ ان کی قوت حافظہ اور کثرت اطلاع پر واضح دلیل ہے ، حتی کہ حافظ ذہبی رحمہ اللہ (جو بذات خود اپنی مثال آپ ہیںاور علم علل حدیث کی پیچیدگیوں اور صعوبتوں سے خوب واقف ہیں ) نے جب خطیب بغدادی کے استاذ ابو بکر البرقانی سے یہ نقل کیا کہ دارقطنی نے کتاب العلل اپنے حافظے سے املاء کروائی ہے ۔ تو یہ کہے بغیر نہ رہ سکے :

    إن كان كتاب "العلل" الموجود قد أملاه الدارقطني من حفظه -كما دلت عليه هذه الحكاية, فهذا أمر عظيم يقضى به للدارقطني أنه أحفظ أهل الدنيا . ( سیر أعلام النبلاء ج١٢ ص ٤١٧ ط الحدیث)

    پچھلے سال فضیلۃ الشیخ ارشاد الحق اثری صاحب حفظہ اللہ عمرہ کے لیے آئےتھے تو ساتھیوں کےساتھ ان سے گفتگو کےدوران میں نےان سے سوال کیا کہ شیخ صاحب آپ نے سب سے پہلے کون سی کتاب لکھی تھی ؟
    تو شیخ صاحب نے جو جواب دیا وہ اس جلیل القدر عظیم النفع امام ابو الحسن علی بن عمر الدارقطنی رحمہ اللہ کے متعلق تھا ۔ شیخ صاحب نے فرمایا میں نے سب سے پہلے ’’ دارقطنی ‘‘ کے نام سے کتاب لکھی تھی جس میں ان کے حالات زندگی اردو پیرائے میں بیان کیے گئے ہیں ۔
    جامعہ رحمانیہ میں دوران دراسہ ایک دفعہ جامعہ کے مکتبہ میں کتابیں الٹ پلٹ کرتےہوئے اس کتاب پر نظر پڑی تھی ۔۔۔۔ اور کچھ پڑہا بھی تھا ۔۔۔ لیکن اس وقت نہ تو امام داقطنی کے حوالے سے کوئی اتنی زیادہ واقفیت تھی اور نہ ہی یہ معلوم تھا کہ کہ یہ اثری صاحب کی تصنیف اول ہے ۔۔۔۔ آج پھر بہت جی چاہ رہا تھا کہ اس کتاب کو دوبارہ پڑھوں ۔۔۔ لیکن یہ کتاب یہاں دستیاب نہیں ہے ۔۔۔ اگر اثری صاحب کی کتب کے ضمن میں یہ کتاب بھی کسی جگہ نیٹ پر دستیاب ہے تو اطلاع فرما کر عند الناس مشکور اور عند اللہ ماجور ہوں ۔۔ جزاکم اللہ ۔
     
    • شکریہ شکریہ x 7
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  2. ‏دسمبر 24، 2011 #2
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,756
    موصول شکریہ جات:
    8,332
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    معذرت کیساتھ ۔۔۔۔
    شمس الدین أبو عبد اللہ محمد بن أحمد بن عثمان الذہبی رحمہ اللہ ۔ اوپر والی مشارکت میں باوجو ایک دو دفعہ تدوین و تعدیل کے بھی ابو عبد اللہ اور ابن احمد کے درمیان محمد لکھنے میں کا میاب نہیں ہو سکا ۔۔
     
  3. ‏اکتوبر 16، 2018 #3
    ابن بشیر الحسینوی

    ابن بشیر الحسینوی رکن مجلس شوریٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    Pakistan
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    1,062
    موصول شکریہ جات:
    4,412
    تمغے کے پوائنٹ:
    376

    استادمحترم حفظہ اللہ کی کتاب دارقطنی مقالات کی جلد ۴ میں شائع ہوچکی ہے ۔الحمدللہ
     
    • پسند پسند x 1
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  4. ‏اکتوبر 16، 2018 #4
    عبدالعظیم راشد

    عبدالعظیم راشد مبتدی
    جگہ:
    چشتیاں
    شمولیت:
    ‏اپریل 10، 2018
    پیغامات:
    49
    موصول شکریہ جات:
    6
    تمغے کے پوائنٹ:
    17

    امام دارقطنی کے حالات پر یہ کتاب 36 سال بعد دوبارہ شائع ہوئی ہے
    شیخ صاحب کےمقالات کی چوتھی جلد شخصیات پر مشتمل ہے جن میں امام دارقطنی،علامہ محمد حیات سندھی،محدث ڈیانوی عظیم آبادی،حافظ گوندلوی،مولانا عبداللہ محدث فیصل آبادی،مولانا اسحاق چیمہ،سید ابوبکر غزنوی رح کے تذکرہ خیر کو شامل کیا ہے
     
  5. ‏اکتوبر 17، 2018 #5
    عمر اثری

    عمر اثری سینئر رکن
    جگہ:
    نئی دھلی، انڈیا
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 29، 2015
    پیغامات:
    4,350
    موصول شکریہ جات:
    1,077
    تمغے کے پوائنٹ:
    398

    کیا دوبارہ شائع ہونے والا یہ مقالہ اضافہ شدہ ہے؟؟؟
     
  6. ‏اکتوبر 17، 2018 #6
    ابن بشیر الحسینوی

    ابن بشیر الحسینوی رکن مجلس شوریٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    Pakistan
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    1,062
    موصول شکریہ جات:
    4,412
    تمغے کے پوائنٹ:
    376

    جی جی
     
  7. ‏اکتوبر 17، 2018 #7
    ابن بشیر الحسینوی

    ابن بشیر الحسینوی رکن مجلس شوریٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    Pakistan
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    1,062
    موصول شکریہ جات:
    4,412
    تمغے کے پوائنٹ:
    376

    امام دار قطنی اور ان کی کتب حدیث کا منہج
    پر ایک مقالہ مجھ ناکارہ کو بھی لکھنے کا اعزاز ملا ہے ۔الحمدللہ
     
  8. ‏مئی 07، 2019 #8
    عامر عدنان

    عامر عدنان مشہور رکن
    جگہ:
    انڈیا،بنارس
    شمولیت:
    ‏جون 22، 2015
    پیغامات:
    850
    موصول شکریہ جات:
    239
    تمغے کے پوائنٹ:
    118

    السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ
    محترم شیخ کیا یہ مقالہ مکمل ہو گیا ؟ اس کی اشد ضرورت ہے ۔ جزاکم اللہ خیرا
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں