1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔۔
  2. محدث ٹیم منہج سلف پر لکھی گئی کتبِ فتاویٰ کو یونیکوڈائز کروانے کا خیال رکھتی ہے، اور الحمدللہ اس پر کام شروع بھی کرایا جا چکا ہے۔ اور پھر ان تمام کتب فتاویٰ کو محدث فتویٰ سائٹ پہ اپلوڈ بھی کردیا جائے گا۔ اس صدقہ جاریہ میں محدث ٹیم کے ساتھ تعاون کیجیے! ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔ ۔

تبدیلی حالات سے شرعی احکام کی تبدیلی کے تصورات ۔مقالہ ایم فل

'پی ڈی ایف' میں موضوعات آغاز کردہ از عبد الرشید, ‏جون 12، 2012۔

  1. ‏جون 12، 2012 #1
    عبد الرشید

    عبد الرشید رکن ادارہ محدث
    شمولیت:
    ‏مارچ 02، 2011
    پیغامات:
    5,153
    موصول شکریہ جات:
    9,938
    تمغے کے پوائنٹ:
    633

    مقالہ کا نام
    تبدیلی حالات سے شرعی احکام کی تبدیلی کے تصورات ۔مقالہ ایم فل

    مصنف
    حافظ طاہر اسلام

    ناشر
    شعبہ علوم اسلامیہ جامعہ پنجاب

    [​IMG]

    تبصرہ

    فی زمانہ نفاذ شریعت کی کوششوں کے ذیل میں یہ سوال سنجیدگی سے سامنے آ رہا ہے کہ جن مسائل سے متعلق قرآن و حدیث میں واضح نصوص موجود ہیں لیکن موجودہ حالات میں ان پر عمل میں دشواریاں پیش آ رہی ہیں تو کیا ان کو بعینہ تسلیم کر لیا جائے یا حالات کے مطابق ان میں ترمیم و اضافہ ممکن ہے؟ اس وقت آپ کے سامنے حافظ طاہر اسلام عسکری صاحب کامل محنت اور جانفشانی کے ساتھ لکھا جانے والا ایم۔فل کا مقالہ ہے۔ جو کہ بنیادی طور پر اسی سوال کو سامنے رکھ کر تیار کیا گیاہے۔ اس سلسلہ میں انھوں نے تعلیم یافتہ مسلمانوں کے تین طبقات کا تذکرہ کیاہے۔ پہلا طبقہ وہ ہے جو قرآن و حدیث کے منصوص احکام کو غیر متبدل مانتے ہیں۔ دوسری طبقہ جدت پسندوں کا ہے جن کے مطابق سیاست، معیشت اور معاشرت سے متعلقہ اسلامی حدود وضوابط کو عصری تقاضوں کے پیش نظر تبدیل کیا جا سکتا ہے۔ اس سلسلہ میں تیسرا طبقہ ان علما کا ہے جو عقائد و عبادات میں تو کسی تبدیلی کے قائل نہیں ہیں لیکن حالات کے تحت معاملات سے متعلقہ احکام میں تبدیلی کی حمایت کرتے ہیں۔ محترم حافظ صاحب نے اس قسم کے تمام خیالات پر تفصیلی روشنی ڈالتے ہوئے اجتہاد کا درست تصور اور اس کا دائرہ کار واضح کیا ہے۔ علاوہ ازیں نصوص شریعت کی تبدیلی کے حق میں جو دلائل پیش کیے جاتے ہیں اسلامی اصول تحقیق کی روشنی میں ان کاتحقیقی جائزہ پیش کیا گیا ہے۔ حافظ صاحب نے تبدیلی حالات سے متعلق عرب علما کے نقطہ نظر کا بھی تفصیلی تجزیہ کیا ہے۔ (ع۔م)
    اس مقالہ تبدیلی حالات سے شرعی احکام کی تبدیلی کے تصورات ۔مقالہ ایم فل کو آن لائن پڑھنے یا ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں
     
  2. ‏جون 12، 2012 #2
    عبد الرشید

    عبد الرشید رکن ادارہ محدث
    شمولیت:
    ‏مارچ 02، 2011
    پیغامات:
    5,153
    موصول شکریہ جات:
    9,938
    تمغے کے پوائنٹ:
    633

    فہرست
    دیباچہ
    باب اول۔احکام شرعیہ ،مفہوم ،ماخذ ،خصوصیات،مقاصد
    فصل اول۔حکم شرعی،معنی ومفہوم
    فصل دوم۔احکام شرعیہ کے ماخذ ومصادر
    فصل سوئم۔خصائص احکام شریعت
    فصل چہارم۔شرعی احکام کے اہداف ومقاصد
    باب دوم۔اجتہاد،معنی،مفہوم،شرائط ،دائرہ کار
    فصل اول۔اجتہاد معنی ومفہوم
    فصل دوم۔مجتہد کے اوصاف وشرائط
    فصل سوئم۔اجتہاد کا دائرہ کار
    فصل چہارم۔اجتہاد اور شریعت میں فرق وامتیازات
    باب سوم۔تبدیلی حالات سے تبدیلی احکام کے ماثور دلائل اور ان کا تجزیاتی مطالعہ
    فصل اول۔تبدیلی احکام پر قرآن وسنت سے استدلال اور اس کا تجزیہ
    فصل دوم۔تبدیلی احکام پر آثار صحابہ سے استدلال اور اس کا تجزیہ
    فصل سوئم۔تبدیلی احکام پر اولیات عمر سے استدلال اور اس کا تجزیہ
    باب چہارم۔تبدیلی احکام کے فقہی واجتہادی دلائل اور ان کا تجزیاتی مطالعہ
    فصلى اول۔قاعدہ فقہیہ ،تتغیر الاحکام بتغیرالزمان سے تبدیلی احکام پر استدلال اور اس کا جائزہ
    فصل دوم۔تبدیلی احکام پر مصلحت سے استدلال اور اس کا تجزیہ
    باب پنجم۔احکام کی عدم تبدیلی اور تغیر فتوی کا تصور اور اس کا تجزیاتی مطالعہ
    فصل اول۔عدم تبدیلی احکام پر قرآن وسنت سے استدلال اور اس کا تجزیہ
    فصل دوم۔احکام کی عدم تبدیلی پر آثار صحابہ رضی اللہ عنہم سے استدلال اور اس کا تجزیہ
    فصل سوم۔احکام کی عدم تبدیلی پر علماء کی آراء سے استدلال اور اس کا تجزیہ
    خاتمہ
    فہارس
    مصادر ومراجع
     
  3. ‏جون 12، 2012 #3
    محمد عثمان

    محمد عثمان رکن
    جگہ:
    اسلام آباد
    شمولیت:
    ‏فروری 29، 2012
    پیغامات:
    231
    موصول شکریہ جات:
    594
    تمغے کے پوائنٹ:
    86

    ماشااللہ! یہ مقالہ اس فتنوں کے دور کی ایک اھم ضرورت ھے۔۔۔ اللہ مقالہ نگار کو اس کوشش کا بے حساب اجر دے، اور مستقبل میں اور محنت اور دین کی خدمت کی توفیق عطا فرمئے۔ آمیں۔۔۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں