1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

تصوف اور اس کے اثرات

'عملی تصوف' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد نعیم یونس, ‏جولائی 24، 2013۔

  1. ‏جولائی 31، 2013 #21
    محمد علی جواد

    محمد علی جواد سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 18، 2012
    پیغامات:
    1,986
    موصول شکریہ جات:
    1,495
    تمغے کے پوائنٹ:
    304

    بھائی میرے - قرآن و حدیث کا ادنی فہم رکھنے والا بھی سمجھ سکتا ہے کہ اس حدیث رسول کا اس موضوع سے متعلق کیا مطلب بنتا ہے -جو میں نے اپنی پوسٹ میں پیش کی ہے - رہی بات دلائل کی تو اس باطل نظریے کے متعلق پہلے ہی بہت کچھ اس فورم پرلکھا جا چکا ہے -اور میں بھی کئی مرتبہ اس پر دلائل پیش کرچکا ہوں -

    اگر مزید تسلی چاہیے تو یہ کتاب اگر وقت ملے تو ضرور پڑھ لیجیے گا - آپ کو جوابات مل جائیں گے- لنک نیچے دیا گیا ہے -

    http://www.muhammadilibrary.com/Books/deoband Aur sofiyat.pdf

    ویسے بھی مجھے امید نہیں کہ حنفیت اور دیوبندیت کے حامی و علمبردار کبھی اپنے اباو اجداد اور نام نہاد علماء اور آئمہ جن کی تقلید میں یہ رات دن ایک کردیتے ہیں - ان کی تعلیمات پر قرآن و حدیث کو ترجیح دیں گے -
     
    • شکریہ شکریہ x 3
    • پسند پسند x 2
    • لسٹ
  2. ‏جولائی 31، 2013 #22
    انس

    انس منتظم اعلیٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏مارچ 03، 2011
    پیغامات:
    4,177
    موصول شکریہ جات:
    15,224
    تمغے کے پوائنٹ:
    800

    جزاکم اللہ خیرا!

    میرے بھائی! اول تو میں ایک طالبعلم ہوں، اور بس!

    ثانیا: درج بالا آپ کے اقتباس میں جس بات کو ہائی لائٹ کیا اسی میں آپ سے اختلاف ہے۔ میرا موقف یہ ہے کہ بزرگان دین کی (کتاب وسنت سے) مدلل بات کو یکسر ردّ نہیں کیا جا سکتا، البتہ بغیر دلیل بات کے بارے میں ہمارا موقف امام مالک کی زبانی یہ ہے: كل يؤخذ من قوله ويرد إلا رسول اللهﷺ

    اگر تصوف اسلامی سے آپ کی مراد کتاب وسنت میں موجود ذکر واذکار، تزکیہ نفس اور احسان وغیرہ جن کے بارے میں نبی کریمﷺ کا اسوۂ حسنہ اور صحابہ کرام﷢ وتابعین عظام کی سیرت ہمارے لئے ایک روشن چراغ کی حیثیت رکھتی ہے۔ تو مجھے آپ سے کوئی اختلاف نہیں۔ لیکن ازراہ کرم اسے تصوف (اسلامی) کا نام نہ دیجئے۔ ان کیلئے وہی اصطلاحات استعمال کیجئے جو قرآن وسنت میں استعمال کی گئیں اور قرون مفضّلہ میں ہمارے سلف صالحین کے ہاں معروف تھیں۔

    یہاں جب بھی تصوف کی بات ہوتی ہے تو اس سے ہماری مراد صوفیوں کا استفاضہ از قبور اور یہی خرافات وغیرہ ہوتی ہیں جن میں سے بعض کی طرف میں نے پیچھے بھی اشارہ کیا۔ اور عموماً تصوف کے لفظ سے یہی بدعات وشرکیات مراد لی جاتی ہیں۔ آپ لغت کی کتابوں میں تصوف کا معنیٰ دیکھ لیجئے آپ کو واضح ہو جائے گا۔

    میرے بھائی! آپ اپنے موقف کے مطابق ان چیزوں کو ’تواتر کے ساتھ‘ سے نبی کریمﷺ، صحابہ کرام اور تابعین عظام سے ثابت کرکے دکھائیے اور ان کے متعلق اپنا موقف بھی واضح کیجئے، پھر مزید بات ہوگی۔ ان شاء اللہ!
     
    • پسند پسند x 3
    • زبردست زبردست x 3
    • شکریہ شکریہ x 1
    • لسٹ
  3. ‏اگست 01، 2013 #23
    جمشید

    جمشید مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏جون 09، 2011
    پیغامات:
    873
    موصول شکریہ جات:
    2,325
    تمغے کے پوائنٹ:
    180

    اس فورم پر متعدد حضرات نے یہ بات کہی ہے بالخصوص آپ کے قبیلہ ومسلک کے افراد نے جب وہ کسی حنفی سے تبادلہ خیال کررہے تھے اوراس بے چارے نے کتاب کا لنک دیاتو یہ کہہ دیاگیاکہ کتاب کالنک نہ دیں۔ کاپی پیسٹ نہ کریں بلکہ اگرموضوع پر تبادلہ خیال کرنے کا دم خم ہے تواپنے مراسلہ میں جولکھناہے لکھیں(مفہوم)
    تصوف پر توبہت ساری کتابیں موافقت اورمخالفت میں لکھی گئی ہیں۔ میں بھی چاہوں تودوچارنہیں دس بیس کتابوں کا لنک دے سکتاہوں ۔لیکن فائدہ کیاہے غیرمقلدیت کے علمبردار کبھی اپنے نام نہاد فضیلۃ الشیوخ جن کی تقلید کو انہوں نےعدم تقلید کے نام سے اختیار کررکھاہے ان سے بہت کم امید ہے کہ اپنے طورپر غوروفکر کرکے کوئی رائے قائم کرسکیں گے۔(ابتسامہ)

    زیر بحث موضوع میں جوسوال پوچھے گئے ہیں۔ اگرآپ کے پاس کہنے کیلئے مزید کچھ ہو تو بیان کریں ورنہ صاحب مضمون کیلئے اس کو چھوڑدیں۔ یہ ضروری نہیں ہے کہ آپ ہرایک کی جانب سے جواب دہی کی ذمہ داری قبول کرتے پھریں اورنہ ہی اس کاامکان ہے کہ صاحب مضمون نے آپ کو اپناترجمان مقرر کیاہو۔

    آپ کے یہاں توہرادنی فہم رکھنے والا بزعم خود قرآن وسنت کے تمام معانی ومطالب پر حاوی بلکہ اتھارٹی ہوتاہے لیکن افسوس کہ ہمارے ہاں ایسانہیں ہے لہذا تھوڑی زحمت گواراکرکے یہ بتانے کی کوشش کریں کہ میرے پوچھے گئے سوال کا اس حدیث سے کیاربط اوررشتہ ہے۔اوراگریہ کوشش ناکام ہوجائے توپھر یہ خیال کرلیجئے کہ قرآن وسنت کا ادنی فہم بھی آپ کو حاصل نہیں ہے۔

    کوئی جوابی مراسلہ لکھتے وقت اصل مراسلہ پر اچھی طرح دھیان دیناسیکھئے کہ اصل مراسلے میں کیابات کہی گئی ہے۔ورنہ وہی مثل صادق آتی ہے کہ
    کہیں کی اینٹ کہیں کاروڑا،بھان متی کا کنبہ جوڑا
    میراسوال یہ تھاکہ
    تصوف کا ماخذ ویدانت بدھ ازم یاپھر یونانی علوم ہیں اس کی دلیل کیاہے۔
    اس تعلق سے فورم پر اب تک جوکچھ لکھاگیاہےاورجوکچھ آپ نے لکھاہے اس کا ربط فراہم کرکے مجھ کومشکور اورممنو کریں۔ ورنہ میری یہ نصیحت دامن دل سے باندھ لیں کہ جوابی مراسلہ لکھنے سے پہلے اصل مراسلہ پر اچھی طرح غوروفکر کرلیں۔ والسلام
     
    • شکریہ شکریہ x 3
    • ناپسند ناپسند x 1
    • لسٹ
  4. ‏اگست 01، 2013 #24
    محمد علی جواد

    محمد علی جواد سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 18، 2012
    پیغامات:
    1,986
    موصول شکریہ جات:
    1,495
    تمغے کے پوائنٹ:
    304

    نو کوممنیٹس

    ذرا ان کے نام بھی بتا دیں کہ وہ کون نام نہاد فضیلۃ الشیوخ جن کی تقلید کو غیر مقلدین نےعدم تقلید کے نام سے اختیار کررکھاہے؟؟؟-

    اس فورم پر کبھی کسی ممبر نے کسی اور ممبر کو اپنا ترجمان بنایا ہے ؟؟؟

    کاش کہ یہ احناف جن کا حال یہ ہے کہ تقلید کا دم بھرتے بھرتے ان کا دم نکل جاتا ہے - کم از کم اس تقیلد کا حق ہی ادا کر دیتے - تو آج ان میں نا قبر پرست ہوتے - نا چللہ چالیسواں تیجا وغیرہ کرنے والے ہوتے - نا عید میلاد منانے والے ہوتے -نا وحدت الوجود کے حامل نام نہاد علماء ہوتے - لیکن غیر مقلدوں کی دشمنی ایسی سر پر سوار ہے کہ زبردستی حنفیت کے دعوے دار بنے ہوے ہیں -ورنہ ان کے اپنے امام تو ان چیزوں سے پاک تھے -

    آپ بھی حدیث کے مفہوم پر دھیان دینا سیکھیے- احناف کو حدیث رسول کو سمجھنے کے لئے آپ کو اپنے امام کا سہارا لینا پڑتا ہے - لیکن امام کے قول کو سمجھنے کے لئے کسی سہارے کی ضرورت نہیں ؟؟؟- اس کو کہتے ہیں عقل پر پردہ پڑنا -
    اس موضوع سے متعلق سوال کا جواب خود حدیث کے اندر ہی موجود ہے - لہذا اس کی من معنی تعبیر ویسے ہی ممکن نہیں - جو رہبانیت اور باطل نظریات اپنے دین کے حوالے سے ہندو ں عیسایوں اور ان باطل مذاہب کا شیوہ تھے - آج وہ نظریات امّت مسلمہ کا شیوہ بنے ہوے ہیں -دین کی حیقیقی تعلیمات کو چھوڑ کر ان غیر مسلم مذاھب کی ڈگر پر چلے ہوے ہیں - اب اگر بھی آپ کو نہ سمجھ آے تو بھیا اس میں میرا کوئی قصور نہیں -
     
    • پسند پسند x 3
    • شکریہ شکریہ x 2
    • لسٹ
  5. ‏اگست 01، 2013 #25
    جمشید

    جمشید مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏جون 09، 2011
    پیغامات:
    873
    موصول شکریہ جات:
    2,325
    تمغے کے پوائنٹ:
    180

    اس فورم پر میراتجربہ یہی کہتاتھاکہ آپ کی جانب سے میرے پوچھے گئے سوال کا جواب نہیں آئے گا۔لیکن ایک خوش فہمی تھی کہ شاید جب اتنی محنت کرکے لکھ رہے ہیں تواس سوال کا بھی جواب دے دیں گے۔

    میراسوال یہ تھاکہ
    تصوف کا ماخذ ویدانت بدھ ازم یاپھر یونانی علوم ہیں اس کی دلیل کیاہے۔


    اوریہ کہ

    میرے پوچھے گئے سوال کا اس حدیث سے کیاربط اوررشتہ ہے۔


    اگرابھی بھی لگتاہے کہ اس سوال کا جواب آپ کو معلوم ہے توکچھ عرض کریں ورنہ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔رمضان کا مہینہ ہے اس کا کچھ بہتر مصرف نکالیں۔ورنہ ایسانہ ہو کہ کہیں ہم سابقہ پوسٹ میں کہی گئی باتوں کو سچ ماننے لگیں۔
    والسلام
     
    • شکریہ شکریہ x 2
    • ناپسند ناپسند x 1
    • لسٹ
  6. ‏اگست 01، 2013 #26
    عزمی

    عزمی رکن
    شمولیت:
    ‏جون 30، 2013
    پیغامات:
    190
    موصول شکریہ جات:
    292
    تمغے کے پوائنٹ:
    43

     
  7. ‏اگست 01، 2013 #27
    انس

    انس منتظم اعلیٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏مارچ 03، 2011
    پیغامات:
    4,177
    موصول شکریہ جات:
    15,224
    تمغے کے پوائنٹ:
    800

    محترم بھائی! صوفیوں کی جن چیزوں کو آپ صحیح سمجھتے ہیں، ان کی وضاحت اور دلیل آپ کو ہی دینا ہوگی، مجھے نہیں۔
     
    • شکریہ شکریہ x 3
    • پسند پسند x 1
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
  8. ‏اگست 01، 2013 #28
    عابدالرحمٰن

    عابدالرحمٰن سینئر رکن
    جگہ:
    BIJNOR U.P. INDIA
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 18، 2012
    پیغامات:
    1,124
    موصول شکریہ جات:
    3,229
    تمغے کے پوائنٹ:
    240

    السلام علیکم
    الحمد للہ
    محترم عزمی اور محترم جمشید صاحبان
    اللہ تعالیٰ آپ حضرات کو جزائے خیر عطا فرمائے
     
  9. ‏اگست 03، 2013 #29
    محمد علی جواد

    محمد علی جواد سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 18، 2012
    پیغامات:
    1,986
    موصول شکریہ جات:
    1,495
    تمغے کے پوائنٹ:
    304

    محترم جو سوال آپ نے پوچھا ہے- تفصیل طلب ہے - یہ مت سمجھیے کہ آپ کو اس کا جواب نہیں ملے گا - رمضان کے بعد انشاء الله وقت ملا تو ضرور کوشش کر کے تحریر کروںگا -

    لیکن آپ کی بھی سابقہ روش کو دیکھتے ہوے میں یہ که سکتا ہوں کہ آپ قرآن و حدیث کو تو پس پشت ڈال سکتے ہیں لیکن اپنے نام نہاد علما ء کی تعلیمات کو مرتے دم تک نہیں چھوڑ سکتے - لہذا مجھے قوی امید ہے کہ میری کاوش بے کار جائے گی-

    ویسے میں آپ کا ممنون ہونگا کہ اگر آپ بھی ذرا " اسللامی تصوف اور غیراسللامی تصوف " کو اپنے پیارے امام کے اقوال کی روشنی میں ثابت کردیں -
     
    • زبردست زبردست x 3
    • شکریہ شکریہ x 2
    • لسٹ
  10. ‏اگست 03، 2013 #30
    عزمی

    عزمی رکن
    شمولیت:
    ‏جون 30، 2013
    پیغامات:
    190
    موصول شکریہ جات:
    292
    تمغے کے پوائنٹ:
    43

    محترم ڈاکٹر انس بھائی ،مگر جن کوآپ خرافات کہہ رہے ان پر تو آپ دلیل دے کہ ان وجوہات کی وجہ سے خرافات ہیں۔مثلا پا س انفاس کو لے لیتے ہیں۔اب پتہ چلے کہ آپ پاس انفاس کس کو کہتے ہیں،اور کن وجوہات پر آپ اسکو خرافات کہہ رہے ہیں ،مطلب یہ کہ میں سمجھتا ہوں کہ اکثر مخالفین تصوف صوفیاء کے موقف سے آگاہی نہیں رکھتے۔ تصوف کے بنیادی اصولوں پر جو آپکو شک و شبہات ہیں میں ان پر آپ سے بات کرنا چاہتا ہوں ،تا کہ مجھے بھی سمجھ لگے کہ آخر میں کہاں بھول رہا ہوں یا آپکو کہیں غلطی لگ رہی ہے۔
    بلکہ آپ بالکل اس پیری مریدی کی الف ،ب سے شروع کریں تو ہر پہلو پر بات ہو سکتی ہے۔
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • غیرمتفق غیرمتفق x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں