1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

جس کے گلے میں اسلام اور عشق مصطفی کا دوپٹہ ہو اس لڑکی کو دوپٹّے کی ضرورت نہیں ہے ۔ عامر لیاقت

'متفرقات' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد عامر یونس, ‏دسمبر 30، 2015۔

  1. ‏دسمبر 30، 2015 #1
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,955
    موصول شکریہ جات:
    6,502
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    جس کے گلے میں اسلام اور عشق مصطفی کا دوپٹہ ہو اس لڑکی کو دوپٹّے کی ضرورت نہیں ہے ۔ عامر لیاقت


    ویڈیو


    لنک


     
  2. ‏دسمبر 30، 2015 #2
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,955
    موصول شکریہ جات:
    6,502
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    ’’پٹہ ‘‘ ایک ایسی چیز ہے جو کتے کے گلے میں ہوتا ہے، آج ایک ایسی قوم پیدا ہو گئی جو خود کو کتا کہلانے اور اپنے گلے میں پٹہ ڈالنے کو پسند کرنے لگی۔ ایسی ہی قوم کے ایک نام نہاد جاہل سکالر نے ARY کے ایک مارننگ شو میں ننگے سر بیٹھی خاتون سے خر مستیاں کرتے ہوئے کہا ہے کہ

    ’’جس کے گلے میں محبتِ رسول کا پٹہ ہو ، اُسے دوپٹے شپٹے کی ضرورت نہیں ہوتی‘‘۔

    غالباً گھر کا ماحول ہی ایسا ملا ہو گا، اُس کی مائیں بہنیں گلے میں پٹہ ڈالے برہنہ گھومتی ہوں گی، تبھی تو ایسی بات کہہ ڈالی۔ بھلا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی ازواج مطہرات اور صحابیات جو پردہ کرتی تھیں اُن کے دِلوں میں محبتِ رسول زیادہ تھی یا اِس طوائف کے دِل میں زیادہ ہے جو سرِ عام بیٹھی ایک غیر محرم سے ساری دنیا کے سامنے دِل کی باتیں کر رہی ہے اور دِل دے رہی ہے۔ خیر ایک بات تو سمجھ آ گئی کہ گلے میں پٹہ ڈالنے والا کتا ہوتا ہے اور کتا جتنا مرضی سج سنور کر آ جائے ، بھونکتا ہی ہے ۔


    از حافظ صفی اللہ صدیقی

    https://www.facebook.com/HafizSafiUllahSiddiquiofficialpage/?fref=nf
     
  3. ‏دسمبر 30، 2015 #3
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,955
    موصول شکریہ جات:
    6,502
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    1934388_10153892100863982_6513263995833327969_n.jpg
     
  4. ‏دسمبر 30، 2015 #4
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,955
    موصول شکریہ جات:
    6,502
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

  5. ‏دسمبر 30، 2015 #5
    نوشیروان

    نوشیروان رکن
    شمولیت:
    ‏دسمبر 29، 2011
    پیغامات:
    87
    موصول شکریہ جات:
    82
    تمغے کے پوائنٹ:
    63

    انا للہ وانا الیہ راجعون
     
  6. ‏دسمبر 30، 2015 #6
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,955
    موصول شکریہ جات:
    6,502
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    عورتیں نامحرم مردوں سے نزاکت سے نہ بولیں :



    10411965_627206254084306_210691729349767640_n (1).jpg
     
  7. ‏دسمبر 30، 2015 #7
    HUMAIR YOUSUF

    HUMAIR YOUSUF رکن
    جگہ:
    Karachi, Pakistan
    شمولیت:
    ‏مارچ 22، 2014
    پیغامات:
    191
    موصول شکریہ جات:
    56
    تمغے کے پوائنٹ:
    57

    لکھ دی لعنت اس سو کالڈ مذہبی اسکالر پر۔ اگر کل کو یہ کہہ دے کہ جس لڑکی کو اسلام اور عشق مصطفی کے کپڑے بھی مل جائیں، اسکو کپڑوں کی بھی ضرورت نہیں، تو اسکو کہو کہ ایسا اسلام اور ایسا عشق مصطفی تجھ کو ہی مبارک
     
  8. ‏دسمبر 30، 2015 #8
    محمد طارق عبداللہ

    محمد طارق عبداللہ سینئر رکن
    جگہ:
    ممبئی - مہاراشٹرا
    شمولیت:
    ‏ستمبر 21، 2015
    پیغامات:
    2,323
    موصول شکریہ جات:
    710
    تمغے کے پوائنٹ:
    224

    پوچها جو ان سے آپکا پردہ وہ کیا هوا
    کہنے لگیں کہ عقل پہ مردوں کی پڑ گیا

    معاملہ تها علیگڈه یونیورسٹی کی طالبات اور اکبر الہ آبادی کے درمیان ۔

    هر گهر کا نگهبان مرد هے خواہ وہ والد هو یا بهائی یا شوهر ۔ جب غیرت دفن هو جاتی هے مردوں کی تب هی عورتیں اپنا امتیاز کهو دیتی هیں ۔
    اللہ هم سب مسلمین و مسلمات کو دیندار اور حیادار بنائے ۔ هم اپنی غیرت نہ کهوئیں ۔
     
  9. ‏اپریل 27، 2016 #9
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,955
    موصول شکریہ جات:
    6,502
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں