1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

صوفیاء اور کذب بیانی

'عملی تصوف' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد نعیم یونس, ‏ستمبر 04، 2013۔

  1. ‏اکتوبر 26، 2013 #11
    ندوی

    ندوی رکن
    شمولیت:
    ‏نومبر 20، 2011
    پیغامات:
    152
    موصول شکریہ جات:
    328
    تمغے کے پوائنٹ:
    57

    جس طرح فقہاء کرام کے اجتہادات ہیں ان میں صحیح غلط دونوں کاامکان ہے۔اسی طرح بقول مولاناابولکلام آزادصوفیاء کرام کے اقوال بھی اجتہادی ہیں۔اوراس میں بھی صحیح اورغلط دونوں کا امکان رہتاہے۔اورنہ ہی کسی صوفی نے یہ کہاہے کہ میری بات اٹل ہے اس میں غلطی کا امکان نہیں ۔
     
  2. ‏اکتوبر 26، 2013 #12
    حافظ عمران الہی

    حافظ عمران الہی سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 09، 2013
    پیغامات:
    2,101
    موصول شکریہ جات:
    1,406
    تمغے کے پوائنٹ:
    344

    [​IMG][/URL]
     
  3. ‏اکتوبر 26، 2013 #13
    حافظ عمران الہی

    حافظ عمران الہی سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 09، 2013
    پیغامات:
    2,101
    موصول شکریہ جات:
    1,406
    تمغے کے پوائنٹ:
    344

    - قال الذهبي في " ديوان الضعفاء " (ق ٢١٥ / ١ - ٢) : النعمان الإمام رحمه الله، قال ابن عدي: عامة ما يرويه غلط وتصحيف وزيادات، وله أحاديث صالحة، وقال النسائي: ليس بالقوي في الحديث كثير الغلط والخطأ على قلة روايته، وقال ابن معين: لا يكتب حديثه. (٦) وهذا النقل عن ابن معين معناه عنده أن أبا حنيفة من جملة الضعفاء، وهو يبين لنا أن توثيق ابن معين للإمام أبي حنيفة الذي ذكره الحافظ في " التهذيب " ليس قولا واحدا له فيه، والحقيقة أن رأى ابن معين كان مضطربا في الإمام، فهو تارة يوثقه، وتارة يضعفه كما في هذا النقل، وتارة يقول فيما يرويه ابن محرز عنه في " معرفة الرجال " (١ / ٦ / ١) : كان أبو حنيفة لا بأس به، وكان لا يكذب، وقال مرة أخرى: أبو حنيفة عندنا من أهل الصدق، ولم يتهم بالكذب. ومما لا شك فيه عندنا أن أبا حنيفة من أهل الصدق، ولكن ذلك لا يكفي ليحتج بحديثه حتى ينضم إليه الضبط والحفظ، وذلك مما لم يثبت في حقه رحمه الله، بل ثبت فيه العكس بشهادة من ذكرنا من الأئمة، وهم القوم لا يضل من أخذ بشهادتهم واتبع أقوالهم، ولا يمس ذلك من قريب ولا من بعيد مقام أبي حنيفة رحمه الله في دينه وورعه وفقهه، خلافا لظن بعض المتعصبين له من المتأخري (٧) ن فكم من فقيه وقاض وصالح تكلم فيهم أئمة الحديث من قبل حفظهم، وسوء ضبطهم، ومع ذلك لم يعتبر ذلك طعنا في دينهم وعدالتهم، كما لا يخفى ذلك على المشتغلين بتراجم الرواة، وذلك مثل محمد بن عبد الرحمن بن أبي ليلى القاضي وحماد بن أبي سليمان الفقيه وشريك بن عبد الله القاضي وعباد بن كثير وغيرهم، حتى قال يحيى بن سعيد القطان: لم نر الصالحين في شيء أكذب منهم في الحديث، رواه مسلم في مقدمة صحيحه (١ / ١٣) وقال في تفسيره: يقول يجري الكذب على لسانهم، ولا يتعمدون الكذب، وروى أيضا عن عبد الله بن المبارك قال: قلت لسفيان الثوري: إن عباد بن كثير من تعرف حاله (يعني في الصلاح والتقوى) وإذا حدث جاء بأمر عظيم، فترى أن أقول للناس: لا تأخذوا عنه؟ قال: سفيان: بلى، قال عبد الله: فكنت إذا كنت في مجلس ذكر فيه عباد أثنيت عليه في دينه، وأقول: لا تأخذوا عنه.
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  4. ‏اکتوبر 27، 2013 #14
    عزمی

    عزمی رکن
    شمولیت:
    ‏جون 30، 2013
    پیغامات:
    190
    موصول شکریہ جات:
    292
    تمغے کے پوائنٹ:
    43

    شاکر صاحب حج مبارک ہو آپ واپس تشریف لا چکے ہیں ،بس میری جو پوسٹیں آپ نے ڈیلیٹ کی ہیں مجھ واپس کر دے ۔بالخصوص تصوف کے سوال جواب والے مراسلات۔
     
  5. ‏اکتوبر 28، 2013 #15
    حافظ عمران الہی

    حافظ عمران الہی سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 09، 2013
    پیغامات:
    2,101
    موصول شکریہ جات:
    1,406
    تمغے کے پوائنٹ:
    344

    آپ ترجمے کے ساتھ ساتھ اور چیزیں بھی ارسال کر دی ہیں ذرا ان کو بھی دیکھ لیں
     
  6. ‏اکتوبر 29، 2013 #16
    جمشید

    جمشید مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏جون 09، 2011
    پیغامات:
    873
    موصول شکریہ جات:
    2,325
    تمغے کے پوائنٹ:
    180

    پہلی عربی عبارت جس کی پیش کی ہے پتہ نہیں کس کی ہے جس کی بھی ہے لیکن عربی سمجھنے کی لیاقت نہیں رکھتا۔امام ابن قطان کے قول کی تفسیر میں امام مسلم توکہیں کہ وھم لایتعمدون الکذب اورامام مسلم کی عبارت سے خودساختہ مطلب نکال کر کوئی کہے کہ یکذبون کذباعادیافی کل شی۔کیااس سے بھی بڑی کوئی تحریف ہوسکتی ہے۔ اوریہ تحریف کس نام پر کی جارہی ہے۔ اہل حدیث کے نام پر ۔خداہی ایسے غیرمقلدین کو ہدایت دے جو اپنے الفاظ زبردستی ائمہ حدیث کے منہ میں ٹھونستے ہیں اوراس کو حدیث کی خدمت سمجھتے ہیں۔ اگرکسی وہم کے شکار آپ اورآپ کے جیسے دوسرے ہیں تواس کو مسلم کی جوشروحات لکھی گئی ہیں ان کی جانب رجوع کرو،کیونکہ تحقیق نہیں کرتے، کیون اپنے علماء کی تقلید پر صم بکم عمی جمے ہوئے ہو اوراس کے باوجود گلے کی پوری طاقت سے یہ چیخ نکلتی ہیں کہ ہم تقلید نہیں کرتے، کیاتقلید کی سینگیں ہوتی ہیں؟جوآپ کاطرزعمل ہے یہی تقلید ہے کہ دیگرعلماء کی کتابوں سے کوئی قول یااس کامطلب کنفرم کرنے کے بجائے اپنے علماء کی کتابیں اورحوالہ دیکھ لیااورمطمئن ہوکر بیٹھ گئے۔
     
  7. ‏اکتوبر 29، 2013 #17
    شاکر

    شاکر تکنیکی ناظم رکن انتظامیہ
    جگہ:
    جدہ
    شمولیت:
    ‏جنوری 08، 2011
    پیغامات:
    6,595
    موصول شکریہ جات:
    21,360
    تمغے کے پوائنٹ:
    891

    اس اقتباس سے تو یہ معلوم ہوتا ہے کہ آپ، بزعم خود، چونکہ حوالہ جات وغیرہ بھرپور "تحقیق" کر کے لکھتے ہیں لہٰذا آپ غیرمقلد ہوئے؟
     
    • پسند پسند x 2
    • شکریہ شکریہ x 1
    • لسٹ
  8. ‏اکتوبر 29، 2013 #18
    حافظ عمران الہی

    حافظ عمران الہی سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 09، 2013
    پیغامات:
    2,101
    موصول شکریہ جات:
    1,406
    تمغے کے پوائنٹ:
    344

    لگتا ہے کہ آپ سٹ پٹا گئے ہیں کہ ترجمے کی بات کو تقلید کی طرف لے آؤ ہو ؟حالاں کہ مقلد غبی ہوتا ہے اس کو بحث و مباحثہ بالکل بھی
    لگتا ہے کہ آپ سٹ پٹا گئے ہیں کہ ترجمے کی بات کو تقلید کی طرف لے آؤ ہو ؟حالاں کہ مقلد غبی ہوتا ہے اس کو بحث و مباحثہ بالکل بھی روا نہیں ہے؟تو کیا صوفیاء جھوٹ نہیں بولتے ؟ یا پھر آپ کے مطابق امام مسلم نے کچھ غلط کہہ دیا ہے ،اس کچھ اور ریشان ہو جاؤ گے
    قال الذهبي في " ديوان الضعفاء " (ق ٢١٥ / ١ - ٢) : النعمان الإمام رحمه الله، قال ابن عدي: عامة ما يرويه غلط وتصحيف وزيادات، وله أحاديث صالحة، وقال النسائي: ليس بالقوي في الحديث كثير الغلط والخطأ على قلة روايته، وقال ابن معين: لا يكتب حديثه.(٦) وهذا النقل عن ابن معين معناه عنده أن أبا حنيفة من جملة الضعفاء، وهو يبين لنا أن توثيق ابن معين للإمام أبي حنيفة الذي ذكره الحافظ في " التهذيب " ليس قولا واحدا له فيه، والحقيقة أن رأى ابن معين كان مضطربا في الإمام، فهو تارة يوثقه، وتارة يضعفه كما في هذا النقل، وتارة يقول فيما يرويه ابن محرز عنه في " معرفة الرجال " (١ / ٦ / ١) : كان أبو حنيفة لا بأس به، وكان لا يكذب، وقال مرة أخرى: أبو حنيفة عندنا من أهل الصدق، ولم يتهم بالكذب. ومما لا شك فيه عندنا أن أبا حنيفة من أهل الصدق، ولكن ذلك لا يكفي ليحتج بحديثه حتى ينضم إليه الضبط والحفظ، وذلك مما لم يثبت في حقه رحمه الله، بل ثبت فيه العكس بشهادة من ذكرنا من الأئمة، وهم القوم لا يضل من أخذ بشهادتهم واتبع أقوالهم، ولا يمس ذلك من قريب ولا من بعيد مقام أبي حنيفة رحمه الله في دينه وورعه وفقهه، خلافا لظن بعض المتعصبين له من المتأخري (٧) ن فكم من فقيه وقاض وصالح تكلم فيهم أئمة الحديث من قبل حفظهم، وسوء ضبطهم، ومع ذلك لم يعتبر ذلك طعنا في دينهم وعدالتهم، كما لا يخفى ذلك على المشتغلين بتراجم الرواة، وذلك مثل محمد بن عبد الرحمن بن أبي ليلى القاضي وحماد بن أبي سليمان الفقيه وشريك بن عبد الله القاضي وعباد بن كثير وغيرهم، حتى قال يحيى بن سعيد القطان: لم نر الصالحين في شيء أكذب منهم في الحديث، رواه مسلم في مقدمة صحيحه (١ / ١٣) وقال في تفسيره: يقول يجري الكذب على لسانهم، ولا يتعمدون الكذب، وروى أيضا عن عبد الله بن المبارك قال: قلت لسفيان الثوري: إن عباد بن كثير من تعرف حاله (يعني في الصلاح والتقوى) وإذا حدث جاء بأمر عظيم، فترى أن أقول للناس: لا تأخذوا عنه؟ قال: سفيان: بلى، قال عبد الله: فكنت إذا كنت في مجلس ذكر فيه عباد أثنيت عليه في دينه، وأقول: لا تأخذوا عنه.
     
  9. ‏اکتوبر 29، 2013 #19
    حافظ عمران الہی

    حافظ عمران الہی سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 09، 2013
    پیغامات:
    2,101
    موصول شکریہ جات:
    1,406
    تمغے کے پوائنٹ:
    344

    اور کیا امام ابو یوسف اور محمد غیر مقلد نہین تھے؟
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  10. ‏اکتوبر 29، 2013 #20
    جمشید

    جمشید مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏جون 09، 2011
    پیغامات:
    873
    موصول شکریہ جات:
    2,325
    تمغے کے پوائنٹ:
    180

    غبی کامعنی ہی آپ کو معلوم نہیں ہے ۔ندوی صاحب آپ حضرات کی ترجمہ کی لیاقت پر غلط شبہ تونہیں کرتے۔
    غباوت کا لازم جہالت ہے اوریہاں پر جہالت ہی مراد ہے۔ ویسے امام شاطبی نے بھی خود کومقلد کہاہے ۔اب پتہ نہیں موجوہ غیرمقلدین کی نگاہ میں وہ جاہل ہیں یاعالم ہیں۔
    سٹ پٹانے اوربوکھلانے کی بات درست ہے لیکن صرف آپ کے تعلق سے۔ امام ابوحنیفہ کا ذکر خیر زبردستی آپ لے آئے ہیں۔ جوعبارت البانی کی پیش کی ہے اس میں بھی واضح ہے کہ امام مسلم کے جملہ کا تذکرہ بعد میں آتاہے لیکن ہمارے مہربان بھلاکسی موضوع میں امام ابوحنیفہ کا تذکرہ بھول جائیں یہ کیسے ممکن ہے۔
    کیاجھوٹ بولناگناہ کبیرہ نہیں ہے؟اس کے باوجود امام ابن قطان ان کو صالحین کہہ رہے ہیں حالانکہ جوعادی جھوٹاہوتاہے وہ بھلاصالحین ہوسکتاہے؟اس سامنے کی بات کوبھی دیکھنے اورسمجھنے کی جن کی صلاحیت اورلیاقت نہ ہو ۔ توپھران سے مزید کیاامید کی جاسکتی ہے۔
    شاید آپ جیسے غبی حضرات کے پیش نظر ہی امام مسلم نے یہ بھی واضح کردیاکہ ان کے اس جملہ کا مطلب کیاہے۔
    صوفیاء حضرات نیک اورانتہائی دیندار تھے ان کی دینداری کی سند توخود آپ نے بھی ذکر کیاہے۔
    : إن عباد بن كثير من تعرف حاله (يعني في الصلاح والتقوى) وإذا حدث جاء بأمر عظيم، فترى أن أقول للناس: لا تأخذوا عنه؟ قال: سفيان: بلى، قال عبد الله: فكنت إذا كنت في مجلس ذكر فيه عباد أثنيت عليه في دينه، وأقول: لا تأخذوا عنه.
    جھوٹ کو گناہ کبیرہ سمجھتے تھے اوردانستہ حضورپاک پر جھوٹ بھی نہیں بولتے تھے۔
    بات یہ تھی کہ ایک تو وہ خود انتہائی نیک ہوتے تھے لہذا دوسروں کو بھی اپنے جیساسمجھ کر ان کی بات پر اعتماد کرلیتے تھے تحقیق حال نہیں کرتے تھے لہذا ہرایک سے روایت قبول کرلیتے تھے۔ دوسرے وہ محدثین کی طرح حفظ حدیث اورمذاکرہ کا اہتمام نہیں کرتے تھے جس کی وجہ سے غیردانستہ طورپر روایت بیان کرنے میں غلطی کرجاتے تھے۔ یہاں پر بھی امام مسلم کے لفظ
    يقول يجري الكذب على لسانهم، ولا يتعمدون الكذب سے غلطی ہی مراد ہے جیساکہ پورے سیاق وسباق میں دیکھاجاسکتاہے۔
    اوراسی بناء پر امام مسلم نے بھی ان کا تزکیہ بیان کیاکہ وہ دانستہ طورپر غلطی نہیں کرتے ہیں۔
    جودانستہ جھوٹ بولے اس کو آپ صالحین میں کیسے شمار کرسکتے ہیں۔
    یاپھر یہ مان لیں کہ امام مسلم نے جو تفسیر کی ہے وہی غلط ہے۔ وہ ابن قطان کےقول کامقصد نہیں سمجھ سکے۔
     
    • پسند پسند x 1
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں