1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

علماء اور اساتذہ کا احترام

'تازہ مضامین' میں موضوعات آغاز کردہ از Talha Salafi, ‏جنوری 21، 2019۔

  1. ‏جنوری 21، 2019 #1
    Talha Salafi

    Talha Salafi مبتدی
    جگہ:
    مرادآباد، یو پی، انڈیا،
    شمولیت:
    ‏ستمبر 19، 2018
    پیغامات:
    48
    موصول شکریہ جات:
    7
    تمغے کے پوائنٹ:
    28

    حَدثنِي أبي قَالَ حَدثنَا عبد الرَّزَّاق قَالَ أخبرنَا معمر قَالَ سَمِعت الزُّهْرِيّ يَقُول إِن كنت لآتي بَاب عُرْوَة فأجلس ثمَّ انْصَرف وَلَا أَدخل وَلَو أَشَاء أَن أَدخل لدخلت يَعْنِي إعظاما لَهُ،

    ترجمه:
    امام زہری (المتوفى 124 ھ) رحمہ اللہ نے فرمایا کہ:
    "میں عروہ بن زبیر رحمہ اللہ کے دروازے کے پاس آتا تو بیٹھ جاتا، پھر واپس چلا جاتا تھا، اور انکی تعظیم کی وجہ سے (گھر میں) داخل نہ ہوتا اگر میں داخل ہونا چاہتا تو داخل ہو سکتا تھا۔،

    (كتاب العلل للامام احمد/١/١٨٦ وسنده صحيح)


    اس روایت سے معلوم ہوا کہ امام زہری اپنے استاذ کا بہت احترام کرتے تھے، اور صحیح العقیدہ لوگوں کی یہی خوبی ہوتی ہے کہ وہ اپنے علماء کا بہت احترام کرتے ہیں،
     
    • شکریہ شکریہ x 1
    • پسند پسند x 1
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں