1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ماہ محرم اورفورمی دھمال

'طنز ومزاح' میں موضوعات آغاز کردہ از جمشید, ‏نومبر 28، 2012۔

  1. ‏نومبر 28، 2012 #1
    جمشید

    جمشید مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏جون 09، 2011
    پیغامات:
    873
    موصول شکریہ جات:
    2,325
    تمغے کے پوائنٹ:
    180

    رشید احمد صدیقی اردوکے مایہ ناز طنز ومزاح نگار ہیں۔ انہوں نے کسی رسالے کے مدیر کو مضمون بھیجنے کا وعدہ کیاتھالیکن نہ بھیج سکے وہ صاحب اس پر مسلسل شکوہ کناں رہے۔اتفاق یہ کہ اسی درمیان ماہ محرم اختتام پذیر ہواتھا۔رشید احمدصدیقی نے جواب میں لکھاکہ

    فورم اوراوراردو فورمزاوراردو فورمز مین سے مذہبی فورمز کریلااورنیم چڑھاکے مصداق ہیں۔فورمز میں جوشدت اورتعصب اردوفورمز اوراورفورمز میں سے بھی مذہبی فورمز پر ہے اس کو دیکھ کر کسی کی یہ بات یاد آجاتی ہے کہ

    ہمارے شہر کے کتے اردو میں بھونکتے ہیں یعنی بھونکتے ہی چلے جاتے ہیں۔

    ماہ محرم ٹھیک سے طلوع بھی نہیں ہوتالیکن ان فورمز پر محرم کی دھمال شروع ہوجاتی ہے۔اوراتنی دیر جاری رہتاہے کہ پھر سے ایک مزید محرم طلوع ہوجاتاہے

    ایک صاحب ادھر سے آواز لگاتے ہیں ۔یزید پلید،یزید ملعون۔دوسری جانب سے جواب آں غزل ارشاد ہوتاہے ۔یزید امیرالمومنین،یزید رحمہ اللہ

    اوراسکے بعد جومعرکے کارن پڑتاہے توکچھ نہ پوچھئے۔خواہشات اورنفس پرستی کے میدان میں تاریخ اورحقائق کا وہ قتل عام ہوتاہے کہ اس کے سامنے نادرشاہ کادلی میں قتل عام والاواقعہ بھی پھیکاپڑجاتاہے۔


    نادرشاہ کے قتل کے عام کے بعد ایک بزرگ نے کہاتھا


    شامت اعمال ماصورت نادرگرفت​



    لیکن اس فورمی دھمال میں حقائق کے قتل عام پر کیاکہاجائے۔

    خواہشات نفس ماصورت فورمی دھمال گرفت


    شیطان کا شیرہ لگاکر لڑائی کرانے والی کہانی توسبھی نے پڑھ رکھی ہوگی۔فورم دھمال کی بھی کچھ یہی صورت حال ہوتی ہے۔ بات بڑے معقول انداز میں شروع ہوتی ہے ۔

    ایسالگتاہے کہ دومہذب،شریف شخص کسی موضوع پر آپس میں افہام وتفہیم اورتبادلہ خیالات کررہے ہیں

    لیکن دھمال کی لے جوں جوں تیز ہوجاتی ہے۔

    گلے کی رگیں پھولنے لگتی ہیں نتھنے پھولنے پچکنے لگتے ہیں،آنکھیں خون میں ڈوبی ہوئی لال کٹورہ ہوجاتی ہیں اوربدن کی ساری طاقت زبان میں بلکہ کی بورڈ سے لکھے جانے والے حروف میں آجاتی ہے۔


    ایک طرف سے آواز بلند ہوتی ہے تم ناصبت کے طرفدار ہو

    دوسری گرج سنائی دیتی ہے خاموش ہوجارافضت کے علمبردار

    پھر پہلافریق پکارتاہے۔خارجیت کے کمان بردار ہوش میں آجا

    حریف للکارتاہے شیعہ کافرشیعہ کافرشیعہ کافر


    ایک یزیدیت پر لعنت کرتاہے

    اوردوسرا پہلے کو یہودیت کی پیداوار ،ابن سباکی ذریت بتاتاہے۔

    نتیجہ یہ ہوتاہے کہ اب مراسلوں میں دلیل کیاہے؟نفس موضوع کیاہے؟بات کس پر ہونی ہے۔ محل اختلاف کیاہے اس سے کوئی مطلب نہیں ۔




    حقیقت یہ ہے جس طرح دوردراز کے ممالک سے لوگ شیعوں کا ماہ محرم دیکھنے کیلئے آتے ہیں اگردیگر زبان والے اردو سے واقف ہوجائیں تو فورم پر ماہ محرم میں جودھمال ہوتاہے اس کوبھی دیکھنے آجائیں اورکوئنئل کے حساب سے نصیحت پکڑیں۔بالکل ویسی ہی جیسی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


    کیاہمیں اس کی ضرورت باقی رہتی ہے کہ کسی انتہاپسندانہ نظریہ کا دفاع کرتے کرتے خودانتہاپسندی میں مبتلاہوجائیں۔ یزید کوکافربتانے والوں کارد کرتے کرتے یزید کو امیرالمومنین اوررحمتہ اللہ علیہ کہناشروع کردیں۔ یزید پربے جاالزامات لگانے والوں کی تردید میں اس قدرغلوکریں کہ امیرالمومنین حضرت علی کرم اللہ وجہہ اور یزید کا تقابل پیش کرنے لگیں کہ فلاں امر انہوں نے کیااوروہی فلاں امر یزید نے کیا۔لہذا یزیدپر کوئی الزام نہیں!

    تاریخ سے انسان نے یہ سیکھاہے کہ اس نے تاریخ سے کچھ نہیں سیکھا۔ماضی قریب کی مثال لیں۔

    مولاناوحیدالدین خان مولاناابوالاعلی مودودی کے حکومت الہیہ کے نظریہ کے رد میں اتنے منہمک ہوئے کہ دوسری انتہاء کو چلے گئے اورہرقسم کی سیاسی جدوجہد کو شجرممنوعہ اورفتنہ قراردے دیا۔

    شعراورادب سے اپناواسطہ ذرادورکاہے جن کاقریب کاوہ زیادہ جانتے ہوں گے

    کسی کی تعریف میں کہاجاتاہے کہ آپ تصویر میں جتنے خوبصورت لگ رہے تھے حقیقت میں اس سے زیادہ پایا۔

    ہم نے فورمی دھمال کے تعلق سے جوکچھ لکھاہے وہ اس کا عشرعشیر بھی نہیں ہے جوکہ آپ مذہبی فورم پر خود پڑھیں گ

    ےاوراگرآپ میں فالتو عقل نہیں تواس قسم کی مذہبی بحثوں سے توبہ کرلیں گے
    مذہبی بحث میں نے کی ہی نہیں
    فالتوعقل مجھ تھی ہی نہیں​

    اوراگرآپ کو اس قسم کے فورمی دھمال میں مزاآنے لگے توسمجھ لیجئے کہ آپ میں نہ صرف فالتوعقل نہیں ہے بلکہ سرے سے عقل نام کی کوئی چیز ہی نہیں ہے۔اگراس میں کسی قسم کا شبہ ہے تواپنی عقل ٹٹول کر دیکھ لیں!

    تجربہ شرط ہے سائنسداں بہتیرے​
     
  2. ‏نومبر 28، 2012 #2
    حرب بن شداد

    حرب بن شداد سینئر رکن
    جگہ:
    اُم القرٰی
    شمولیت:
    ‏مئی 13، 2012
    پیغامات:
    2,149
    موصول شکریہ جات:
    6,249
    تمغے کے پوائنٹ:
    437

    درست فرمایا۔۔۔
    اچھا تجربہ تھا۔۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں