1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

موجودہ حکمرانوں کی حجاج سے تشبیہ

'امر بالمعروف و نھی عن المنکر' میں موضوعات آغاز کردہ از ابوزینب, ‏اگست 25، 2013۔

  1. ‏نومبر 10، 2013 #11
    حافظ عمران الہی

    حافظ عمران الہی سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 09، 2013
    پیغامات:
    2,101
    موصول شکریہ جات:
    1,406
    تمغے کے پوائنٹ:
    344

     
  2. ‏اکتوبر 31، 2014 #12
    قیصراقبال

    قیصراقبال رکن
    شمولیت:
    ‏ستمبر 27، 2014
    پیغامات:
    6
    موصول شکریہ جات:
    1
    تمغے کے پوائنٹ:
    33

    بالکل میں بھی یہی کہنا چاہوں گا حجاج بن یوسف کے آخری سفر پہ جو باتیں اور اشعار آپ نے تحریر کئے ہیں یہ کہاں سے لئے ۔ ان کا حوالہ بھی دے دیتے تو بہتر ہوجاتا۔
     
  3. ‏نومبر 02، 2014 #13
    قاھر الارجاء و الخوارج

    قاھر الارجاء و الخوارج رکن
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2014
    پیغامات:
    393
    موصول شکریہ جات:
    235
    تمغے کے پوائنٹ:
    71

    حجاج کی تکفیر میں بعض حنبلی علماء کا قول بھی ملتا ہے
     
  4. ‏نومبر 03، 2014 #14
    محمد فیض الابرار

    محمد فیض الابرار سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏جنوری 25، 2012
    پیغامات:
    3,039
    موصول شکریہ جات:
    1,194
    تمغے کے پوائنٹ:
    402

  5. ‏نومبر 03، 2014 #15
    محمد فیض الابرار

    محمد فیض الابرار سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏جنوری 25، 2012
    پیغامات:
    3,039
    موصول شکریہ جات:
    1,194
    تمغے کے پوائنٹ:
    402

    اس میں تمام حوالہ جات بھی موجود ہیں جو کسی بھی شخص کو حجاج بن یوسف کے حوالے سے درکار ہوں
     
  6. ‏نومبر 03، 2014 #16
    محمد علی جواد

    محمد علی جواد سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 18، 2012
    پیغامات:
    1,987
    موصول شکریہ جات:
    1,495
    تمغے کے پوائنٹ:
    304

    السلام علیکم -

    حجاج بن یوسف رح کے بارے میں جو کچھ بیان کیا جاتا ہے وہ ان کی شخصیت پر بہتان اور انتہائی غلو کے ساتھ بیان کیا جاتا ہے - عباسیوں اور پھر فاطمی خلافت میں سبائی کھل کر سامنے آے اور اور بنو امیہ کے حکمرانوں اور ان کے معاون اہلکاروں کو شب و ستم اور تنقید و لعنت بھیجنا اپنا معمول بلکہ مذہب بنا لیا - یزید بن معاویہ رح بھی انہی سبائی فتنے کی وجہ سے بدنام ہوے - اس لعنت بھیجنے کی ریت سب سے پہلے آل بویہ (٣٢٠ ہجری )کے خاندان کے افرد نے شروع کی جو غالی شیعہ تھےانہوں نے ہی حجاج بن یوسف کی شخصیت کو داغ دار بنایا- افسوس ناک بات یہ کہ آج اہل سنّت میں بھی اکثریت حجاج بن یوسف رح پر شب و ستم کرتی نظر آتی ہے- ان میں اور غالی شعیوں میں بہت کم فرق ہے انہی نے حجاج بن یوسف کو ظالم ثابت کیا تا کہ بنو امیہ کی خلافت کی تاریخ کو داغ دار بنایا جا سکے -

    ھمارے اہل سنّت کے علماء جو حجاج رح کو ہر لمحہ ظالم ثابت کرنے پر تلے رہتے ہیں

    (جیسے یہ طالبان اور داعش وغیرہ کو ظالم ثابت کرنے یر تلے ہوے ہیں) وہ بھول جاتے ہیں کہ مشہور سپاہ سالار طارق بن زیاد ، موسیٰ بن نصیر ، اور محمّد بن قاسم کو حجاج بن یوسف نے ہی مختلف ملکوں میں جہاد کے لئے تیار کیا تھا -قرآن مجید پر اعرا ب لگوانے کا کارنامہ بھی اسی عظیم ہستی کے حصّے میں آیا- آج برصغیر میں جو تھوڑے بہت سچے مسلمان ہیں وہ وہ حجاج کی ہی جہادی مہموں کی وجہ سے ہیں - ہسپانیہ پر حجاج کے تیار کردہ سپاہ سا لار طارق بن زیاد کی جہادی مہم کے بدولت وہاں پر مسلمانوں نے ٨٠٠ سال حکومت کی-

    حجاج بن یوسف رح جیسا حکمران سچے مسلمانوں کے لئے ایک نعمت سے کم نہیں تھا -

    رب العزت ان کی مغفرت فرمایے (آمین )
     
    Last edited: ‏نومبر 03، 2014
  7. ‏نومبر 03، 2014 #17
    محمد علی جواد

    محمد علی جواد سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 18، 2012
    پیغامات:
    1,987
    موصول شکریہ جات:
    1,495
    تمغے کے پوائنٹ:
    304

    شکریہ - ان شاءالله ضرور یہ کتاب پڑھوں گا
     
  8. ‏نومبر 03، 2014 #18
    محمد فیض الابرار

    محمد فیض الابرار سینئر رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏جنوری 25، 2012
    پیغامات:
    3,039
    موصول شکریہ جات:
    1,194
    تمغے کے پوائنٹ:
    402

    محمد علی جواد بھائی حجاج بن یوسف کا تعلق چونکہ بنو امیہ سے تھا اس لیے حسب معمول اس نے بھی نشانہ تو بننا ہی تھا اس کتاب میں ایسی بہت سی باتیں دلائل کےساتھ غلط چابت کی گئی ہیں جو حجاج بن یوسف کے بارے میں مشہور کی گئی ہیں پڑھنے کے بعد مجھے اپنے تبصرے سے ضرور مستفید کیجیے گا
     
    • پسند پسند x 1
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  9. ‏نومبر 03، 2014 #19
    محمد علی جواد

    محمد علی جواد سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏جولائی 18، 2012
    پیغامات:
    1,987
    موصول شکریہ جات:
    1,495
    تمغے کے پوائنٹ:
    304

    جی ضرور
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں