1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

پراپرٹی کی زکاۃ

'اموال زکوۃ' میں موضوعات آغاز کردہ از Prof Abubakar Siddique, ‏اپریل 25، 2018۔

  1. ‏اپریل 25، 2018 #1
    Prof Abubakar Siddique

    Prof Abubakar Siddique مبتدی
    شمولیت:
    ‏اپریل 25، 2018
    پیغامات:
    1
    موصول شکریہ جات:
    0
    تمغے کے پوائنٹ:
    7

    اہل علم سے دست بستہ گذارش ہوگی كہ پراپرٹی كی زكاة كے بارے میں تفصیلی مباحث كو دیكھیں اور پھر كوئی رائے قائم كریں تاكہ لوگوں كی صحیح رہنمائی ہوسكے كیونكہ دور جدید كے مسائل كے بارے میں اجتہاد كا تقاضا ہے كہ مكمل تحقیق كے بعد بات كی جائے اور دلیل كی بنیاد پر فتوي دیا جائے جبكہ پراپرٹی سے متعلقہ عمومی فتاوی جات دیكھ كر یوں لگتا ہے كہ زمینی حقائق اور شرعی دلائل كے بارے میں تحقیق كی بجائے محض پرانے فتووں كو دہرانے پر اكتفا كیا جارہا ہے۔ (یہ بات مسلمہ ہے كہ ہر دور میں اجتہاد سے كام لیا اور تقاضوں كے بدلنے پر اپنے فتوون كو بہتر كیا)۔ رہائش كی غرض سے لی گئی پراپرٹی میں تو زكوة نہیں ہے لیكن تجارت كی غرض سے لی گئی اور كرایہ پر دینے كے لئے لی گئی پراپرٹی اس دور میں ایك تجارت/ بزنس كی صورت اختیار كرچكی ہے اس لئے اس كے بارے میں بڑی باریك بینی سے جائزہ لے كر فتوي دینے كی ضرورت ہے۔ اہل علم سے راہنمائی كی درخواست ہے كہ اس بارے میں تحقیق كر كے كوئی رائے شیئر كریں بلا دلیل یا جذباتی فتوے نہ دیں۔ جزاكم اللہ خیرا
     
  2. ‏اپریل 26، 2018 #2
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,763
    موصول شکریہ جات:
    8,333
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں