1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

گم شدہ چیز کو تلاش کرنے کے لئے ایک ’’مجرب دعاء‘‘

'تحقیق حدیث سے متعلق سوالات وجوابات' میں موضوعات آغاز کردہ از abu khuzaima, ‏فروری 04، 2017۔

  1. ‏فروری 04، 2017 #1
    abu khuzaima

    abu khuzaima رکن
    شمولیت:
    ‏جون 28، 2016
    پیغامات:
    66
    موصول شکریہ جات:
    12
    تمغے کے پوائنٹ:
    46

    اس روایت کا ترجمہ و تحقیق درکار ہے

    دعاء مجرّب

    ضاع كُراس فتعبت في التفتيش عليه فقلت:
    يا سميع يا بصير، بقدرتك على كل شيء وبعلمك كل شيء دلني على الكراس؛ فوجدته في الحال

    ابن حجر



    Sent from my SM-G920F using Tapatalk
     
  2. ‏فروری 04، 2017 #2
    کفایت اللہ

    کفایت اللہ عام رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 14، 2011
    پیغامات:
    4,770
    موصول شکریہ جات:
    9,777
    تمغے کے پوائنٹ:
    722

    یہ کوئی روایت نہیں ہے۔
    کسی نے اپنا تجربہ بتایا ہے۔
    ترجمہ دیکھیں:
    آزمودہ دعا۔
    ایک کاپی گم ہوگئی تو میں اسے تلاش کرتے کرتے تھک گیا ، پھر میں نے کہا:
    اے سننے والے ! اے دیکھنے والے ! ہرچیز پر تیری قدرت کا واسطہ ! ہرچیز سے تیری آگاہی کا واسطہ ! میری کاپی ملا دے ! تو میں نے فورا اسے پا لیا ۔


    دیکھا جاسکتا ہے کہ یہ کوئی روایت نہیں ہے ۔
    بلکہ کسی شخص نے اپنا تجربہ شیر کیا ہے ۔
    اور اس پر مجرب کا لیبل لگا دیا ۔یعنی اسے اس کا تجربہ ہے۔

    لیکن مجھے پورا یقین ہے کہ آپ کا تجربہ اس تجربہ کو جھٹلا دے گا ۔
    یقین نہ آئے تو جب جب آپ کی کوئی چیز گم ہوجائے ان الفاظ کو پڑھ کر دیکھیں ۔ پتہ چل جائے گا کہ یہ کتنا مجرب نسخہ ہے ۔

    دراصل اذکار ودعائیں کوئی جڑی بوٹیاں نہیں ہیں کہ ان پر مجرب کا لیبل لگا کر مارکیٹ میں اتار دیا جائے ۔

    آدمی کو چاہئے کہ قرآن و حدیث سے ثابت شدہ اذکار و ادعیہ کی پابندی کرے ا ور مجرب کے نام پر خود ساختہ ادعیہ و اذکار کی دوکان چلانے والوں سے ہوشیا ر رہے۔

    اگرکسی کو مسنون دعائیں یاد نہیں تو وہ اپنے الفاظ میں بھی جب چاہے اللہ سے دعاء کرسکتا ہے۔
     
    • پسند پسند x 2
    • شکریہ شکریہ x 1
    • زبردست زبردست x 1
    • علمی علمی x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں