1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

ہرشخص موت کامزہ چکھنے والا ہے ۔ تفسیر السراج۔ پارہ:4

'تفسیر قرآن' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد آصف مغل, ‏ستمبر 03، 2013۔

  1. ‏ستمبر 03، 2013 #1
    محمد آصف مغل

    محمد آصف مغل سینئر رکن
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏اپریل 29، 2013
    پیغامات:
    2,677
    موصول شکریہ جات:
    3,881
    تمغے کے پوائنٹ:
    436

    فَاِنْ كَذَّبُوْكَ فَقَدْ كُذِّبَ رُسُلٌ مِّنْ قَبْلِكَ جَاۗءُوْ بِالْبَيِّنٰتِ وَالزُّبُرِ وَالْكِتٰبِ الْمُنِيْرِ۝۱۸۴ كُلُّ نَفْسٍ ذَاۗىِٕقَۃُ الْمَوْتِ۝۰ۭ وَاِنَّمَا تُوَفَّوْنَ اُجُوْرَكُمْ يَوْمَ الْقِيٰمَۃِ۝۰ۭ فَمَنْ زُحْزِحَ عَنِ النَّارِ وَاُدْخِلَ الْجَنَّۃَ فَقَدْ فَازَ۝۰ۭ وَمَا الْحَيٰوۃُ الدُّنْيَآ اِلَّا مَتَاعُ الْغُرُوْرِ۝۱۸۵
    ۱؎ اس آیت میں حیات فانی کی بے ثباتی کا نقشہ کھینچا ہے کہ ہرشخص جرعۂ موت سے کام ودہن تر کرے گا، اس لیے وہ جو مقصود اصلی ہے ، نظروں سے اوجھل نہ ہو۔ عمر عزیز کا ایک ایک لمحہ نصب العین کی طرف اقدام میں صرف ہو۔ وہ شخص جو دائمی واخروی زندگی میں آگ کے عذاب سے بچ گیا اورجنت کے زینوں پر چڑھ گیا۔ جان لیجیے کہ وہ کامیاب ہے اور وہ جس کی ساری تگ ودو دنیا کے حصول تک محدود رہی، وہ دھوکے میں ہے ۔دنیا کو متاع الغرور کہنا درست واقعہ ہے ۔ بڑے بڑے سمجھ دار لوگ دنیا کی صحیح حیثیت سمجھنے سے قاصر ہیں۔ قرآن حکیم کا مطلب یہ نہیں کہ دنیا سے فائدہ نہ اٹھایا جائے بلکہ یہ ہے کہ دنیا کو نصب العین کا درجہ نہ دیا جائے۔جس کی تشریح آئندہ آیات میں مذکور ہے ۔
    حل لغات

    {زُبُرٍ} کتابیں۔ صحیفے{زحزح} دور کیا گیا۔ ہٹادیاگیا{مَتَاعُ الْغُرُوْرِ} فریب والا سودا۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں