1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

Siyar A'lam an-Nubala'

'تاریخی روایات' میں موضوعات آغاز کردہ از ibnequrbani, ‏مئی 20، 2015۔

  1. ‏مئی 20، 2015 #1
    ibnequrbani

    ibnequrbani مبتدی
    شمولیت:
    ‏مئی 18، 2015
    پیغامات:
    32
    موصول شکریہ جات:
    6
    تمغے کے پوائنٹ:
    13

    Siyaar alamannubala ke mutabiq nabi sallallahu aleyhi wasallam ke 18 biwiyan thi iski tehqeeq kar jawab dain
     
  2. ‏مئی 20، 2015 #2
    یوسف ثانی

    یوسف ثانی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    پاکستان
    شمولیت:
    ‏ستمبر 26، 2011
    پیغامات:
    2,760
    موصول شکریہ جات:
    5,268
    تمغے کے پوائنٹ:
    562

    گیارہ (11) امہات المومنین پر تو اتفاق ہے۔ 18 کے بارے میں پہلی مرتبہ سنا ہے۔
     
  3. ‏مئی 20، 2015 #3
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,361
    موصول شکریہ جات:
    2,395
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    سوال کا جواب تو تب دیا جا سکتا ۔۔۔جب سوال کی عبارت سمجھ آئے ؛
    جہاں تک میں سمجھ سکا ،بھائی نے لکھا ہے :: سیر اعلام النبلاء ۔۔کے مطابق پیارے نبی ﷺ کی (18) ازواج تھیں ؛؟؟؟؟؟
    اگر میں سوال صحیح سمجھا ہوں ۔۔تو میرا سوال ہے کہ ۔۔سیر اعلام النبلاء ۔۔تو بہت بڑی کتاب ہے ۔۔۔اس میں تلاش کرنا بہت مشکل ہے ۔۔اسلئے کتاب کا محولہ مقام
    بھی سائل کو بتانا پڑے گا ۔
     
  4. ‏مئی 21، 2015 #4
    ibnequrbani

    ibnequrbani مبتدی
    شمولیت:
    ‏مئی 18، 2015
    پیغامات:
    32
    موصول شکریہ جات:
    6
    تمغے کے پوائنٹ:
    13

    جلد ۲ صفحہ ۲۵۲
     
  5. ‏مئی 21، 2015 #5
    ibnequrbani

    ibnequrbani مبتدی
    شمولیت:
    ‏مئی 18، 2015
    پیغامات:
    32
    موصول شکریہ جات:
    6
    تمغے کے پوائنٹ:
    13

    سوال.میں دلچسپیی لینے کے لیے شکریہ و جزاک اللہ
     
  6. ‏مئی 21، 2015 #6
    عکرمہ

    عکرمہ مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 27، 2012
    پیغامات:
    658
    موصول شکریہ جات:
    1,835
    تمغے کے پوائنٹ:
    157

    زَوْجَاتُهُ -صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ-
    قَالَ الزُّهْرِيُّ: تَزَوَّجَ نَبِيُّ اللهِ -صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ- ثِنْتَيْ عَشْرَةَ عَرَبِيَّةً مُحْصَنَاتٍ.
    وَعَنْ قَتَادَةَ، قَالَ: تَزَوَّجَ خَمْسَ عَشْرَةَ امْرَأَةً: سِتٌّ مِنْ قُرَيْشٍ، وَوَاحِدَةٌ مِنْ حُلَفَاءِ قُرَيْشٍ، وَسَبْعَةٌ مِنْ نِسَاءِ العَرَبِ، وَوَاحِدَةٌ مِنْ بَنِي إِسْرَائِيْلَ.
    قَالَ أَبُو عُبَيْدٍ: ثَبَتَ أَنَّ رَسُوْلَ اللهِ -صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ- تَزَوَّجَ ثَمَانِي عَشْرَةَ امْرَأَةً: سَبْعٌ مِنْ قُرَيْشٍ، وَوَاحِدَةٌ مِنْ حُلَفَائِهِم، وَتِسْعٌ مِنْ سَائِرِ العَرَبِ، وَوَاحِدَةٌ مِنْ نِسَاءِ بَنِي إِسْرَائِيْلَ.
    فَأَوَّلُهُنَّ: خَدِيْجَةُ، ثُمَّ سَوْدَةُ، ثُمَّ عَائِشَةُ، ثُمَّ أُمُّ سَلَمَةَ، ثُمَّ حَفْصَةُ؛ ثُمَّ زَيْنَبُ بِنْتُ جَحْشٍ، ثُمَّ جُوَيْرِيَةُ، ثُمَّ أُمُّ حَبِيْبَةَ، ثُمَّ صَفِيَّةُ، ثُمَّ مَيْمُوْنَةُ، ثُمَّ فَاطِمَةُ بِنْتُ شُرَيْحٍ.
    ثُمَّ تَزَوَّجَ: زَيْنَبَ بِنْتَ خُزَيْمَةَ، ثُمَّ هِنْدَ بِنْتَ يَزِيْدَ، ثُمَّ أَسْمَاءَ بِنْتَ النُّعْمَانِ، ثُمَّ قُتَيْلَةَ أُخْتَ الأَشْعَثِ، ثُمَّ سَنَا بِنْتَ أَسْمَاءَ السُّلَمِيَّةَ

    لنک
     
  7. ‏مئی 21، 2015 #7
    عکرمہ

    عکرمہ مشہور رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 27، 2012
    پیغامات:
    658
    موصول شکریہ جات:
    1,835
    تمغے کے پوائنٹ:
    157

  8. ‏مئی 21، 2015 #8
    اسحاق سلفی

    اسحاق سلفی فعال رکن رکن انتظامیہ
    جگہ:
    اٹک ، پاکستان
    شمولیت:
    ‏اگست 25، 2014
    پیغامات:
    6,361
    موصول شکریہ جات:
    2,395
    تمغے کے پوائنٹ:
    791

    پیارے بھائی نے اس عبارت میں سوال کیا ہے کہ :: سیر اعلام النبلاء ۔۔کے مطابق پیارے نبی ﷺ کی (18) ازواج تھیں ؛؟؟؟؟؟

    جواب :
    سیر اعلام النبلاء ۔۔میں منقول ۔۔پیارے نبی ﷺ کی(18) ازواج۔۔کا یہ قول ۔۔مشہور عالم جناب أبو عُبَيْد القاسم بن سَلاَّم (224 هـ) کا ہے
    اور ابو عبید قاسم ؒتیسری صدی کے عالم ہیں ۔۔اورانہوں نے اپنے قول کا مصدر و ماخذ نہیں بتایا ،اسلئےیہ لائق استدلال نہیں ؛
    ذیل میں ہم ان کا یہ قول بالاسناد ۔۔مستدرک امام حاکم ۔۔سے درج کرتے ہیں :
    قال الحاکم :
    ’’ حدثناه أبو النضر محمد بن يوسف الفقيه ، أنبأ علي بن عبد العزيز ، ثنا أبو عبيد القاسم بن سلام ، - رحمه الله - قال :
    وقد ثبت وصح عندنا أن رسول الله - صلى الله عليه وآله وسلم - تزوج ثماني عشرة امرأة ، سبع منهن من قبائل قريش ، وواحدة من حلفاء قريش ، وتسعة من سائر قبائل العرب ، وواحدة من بني إسرائيل من بني هارون بن عمران
    أخي موسى بن عمران ، قال أبو عبيدة : فأول من تزوج - صلى الله عليه وآله وسلم - من نسائه في الجاهلية خديجة ،
    ثم تزوج بعد خديجة سودة بنت زمعة بمكة في الإسلام ، ثم تزوج عائشة قبل الهجرة بسنتين ،
    ثم تزوج بالمدينة بعد وقعة بدر سنة اثنتين من التاريخ أم سلمة ،
    ثم تزوج حفصة بنت عمر أيضا سنة اثنتين من التاريخ فهؤلاء الخمسة من قريش ،
    ثم تزوج في سنة ثلاث من التاريخ زينب بنت جحش ،
    ثم تزوج في سنة خمس من التاريخ جويرية بنت الحارث ،
    ثم تزوج سنة ست من التاريخ أم حبيبة بنت أبي سفيان ،
    ثم تزوج سنة سبع من التاريخ صفية بنت حيي ، ثم تزوج ميمونة بنت الحارث ، ثم تزوج فاطمة بنت شريح ،
    ثم تزوج زينب بنت خزيمة ، ثم تزوج هند بنت يزيد ، ثم تزوج أسماء بنت النعمان ، ثم تزوج
    قتيلة بنت قيس أخت الأشعث ، ثم تزوج سناء بنت الصلت السلمية . (المستدرك على الصحيحين -6792)

    ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    آپ کی معلومات کیلئے ۔۔الرحیق المختوم ۔۔سے ازواج مطہرات کی تفصیل نقل کر رہا ہوں ؛
    میرے نزدیک وہی مستند ہے :

    ازواج.gif ازواج۲.gif ازواج ۳.gif
     

اس صفحے کو مشتہر کریں