1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

احمق لوگ

'عملی تصوف' میں موضوعات آغاز کردہ از سرفراز فیضی, ‏جنوری 01، 2013۔

  1. ‏جنوری 28، 2013 #21
    انس

    انس منتظم اعلیٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏مارچ 03، 2011
    پیغامات:
    4,177
    موصول شکریہ جات:
    15,224
    تمغے کے پوائنٹ:
    800

    مفتی صاحب! افسوس کہ آپ نے تصوف کی اپنی ہی پیش کی ہوئی تعریفات کا خلاصہ صحیح بیان نہیں کیا۔ درج بالا تعریفات سے یہ بات صراحتا ثابت ہے کہ تصوف ایک الگ مذہب ہے۔ (سرخ الفاظ پر توجہ کیجئے)
    مفتی صاحب سے درخواست ہے کہ ازراہ کرم درج بالا تعریفات میں جن الفاظ کو ہائی لائٹ کیا گیا ہے ان کا سادہ ترجمہ کردیں تاکہ سب کے سامنے تصوف کی حقیقت واضح ہو جائے کہ تصوف سے ولایت، تزکیہ، احسان یا اصلاح وغیرہ ہرگز ہرگز مراد نہیں۔
     
  2. ‏جنوری 31، 2013 #22
    تلمیذ

    تلمیذ مشہور رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏ستمبر 12، 2011
    پیغامات:
    765
    موصول شکریہ جات:
    1,503
    تمغے کے پوائنٹ:
    191

    سرفراز فیضی صاحب
    یاد دھانی
    اس سند میں ایک راوی ہیں أبا عبد الله: الحسين بن محمد بن بحر
    کیا ان کے متعلق کچھ تحقیق مل سکتی ہے کہ یہ راوی ثقہ ہیں ؟
     
  3. ‏جنوری 31، 2013 #23
    کنعان

    کنعان فعال رکن
    جگہ:
    برسٹل، انگلینڈ
    شمولیت:
    ‏جون 29، 2011
    پیغامات:
    3,564
    موصول شکریہ جات:
    4,376
    تمغے کے پوائنٹ:
    521

    السلام علیکم

    نبی/ رسول؟
    نبی اس ہستی کو کہتے ہیں جسے اللہ تعالیٰ نے اپنی مخلوق کی ہدایت کے لئے وحی دے کر بھیجا ہو اور رسول اس ہستی کو کہتے ہیں جسے اللہ تعالیٰ نئی شریعت دے کر مخلوق میں مبعوث کرتا رہا تاکہ وہ لوگوں کو اس کی طرف بلائے۔
    [SUP]1. قسطلاني، المواهب اللدنية، 2 : 47
    2. زرقاني، شرح المواهب اللدنية، 4 : 286[/SUP]

    صحابی؟
    الصحابي من لقي النبي صلى الله عليه وسلم مؤمنا به ، ومات على الإسلام
    صحابی اسے کہتے ہیں جس نے حالتِ ایمان میں نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم سے ملاقات کی اور اسلام پر ہی فوت ہوا۔
    [SUP]کتاب "الإصابة في تمييز الصحابة" حافظ ابن حجر عسقلانی۔ [/SUP]

    ہر ایک کا اپنا مقام اور پہچان ھے اس لئے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    نبی/ رسول محمد صلی اللہ علیہ وسلم
    صحابی
    تابعي
    تبع تابعي
    ۔
    ۔
    شیخ الاسلام
    ۔
    ۔
    امام
    ۔
    ۔
    مفتی
    ۔
    ۔
    صوفی
    ۔
    ۔
    حافظ
    ۔
    ۔
    قاری
    -
    -
    عالم
    ۔
    ۔
    موذن

    والسلام
     
  4. ‏فروری 01، 2013 #24
    عابدالرحمٰن

    عابدالرحمٰن سینئر رکن
    جگہ:
    BIJNOR U.P. INDIA
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 18، 2012
    پیغامات:
    1,124
    موصول شکریہ جات:
    3,229
    تمغے کے پوائنٹ:
    240

    السلام علیکم
    بھائی کنعان بھائی
    صرف آپ کی وجہ سے وقت لاگ ان ہونا پڑا ماشاء اللہ لگتا ہے آپ بھی دل چسپ آدمی ہیں
    اللہ آپ کو جزائے خیرعطا فرمائے
     
  5. ‏فروری 02، 2013 #25
    انس

    انس منتظم اعلیٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏مارچ 03، 2011
    پیغامات:
    4,177
    موصول شکریہ جات:
    15,224
    تمغے کے پوائنٹ:
    800

    وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!

    جی کنعان بھائی! آپ نے صحیح کہا کہ رسول پاک محمدﷺ نبی ہونے کے ساتھ ساتھ اللہ کے رسول بھی ہیں اور رسالت کا درجہ نبوت سے بڑا ہے۔ ہر رسول نبی تو ہوتا ہے، لیکن ہر نبی رسول نہیں ہوتا۔

    لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ آنجنابﷺ کو نبی نہیں کہا جا سکتا، آپﷺ کو قرآن کریم میں نبی کہہ کر بھی پکارا گیا ہے اور رسول کہہ کر بھی اور دیگر صفات کے ساتھ بھی، مثلاً

    يـٰأَيُّهَا النَّبِىُّ حَسبُكَ اللَّـهُ وَمَنِ اتَّبَعَكَ مِنَ المُؤمِنينَ ٦٤ يـٰأَيُّهَا النَّبِىُّ حَرِّ‌ضِ المُؤمِنينَ عَلَى القِتالِ ۚ إِن يَكُن مِنكُم عِشر‌ونَ صـٰبِر‌ونَ يَغلِبوا مِا۟ئَتَينِ ۚ وَإِن يَكُن مِنكُم مِا۟ئَةٌ يَغلِبوا أَلفًا مِنَ الَّذينَ كَفَر‌وا بِأَنَّهُم قَومٌ لا يَفقَهونَ ٦٥ ۔۔۔ الأنفال

    يـٰأَيُّهَا النَّبِىُّ
    قُل لِمَن فى أَيديكُم مِنَ الأَسر‌ىٰ إِن يَعلَمِ اللَّـهُ فى قُلوبِكُم خَيرً‌ا يُؤتِكُم خَيرً‌ا مِمّا أُخِذَ مِنكُم وَيَغفِر‌ لَكُم ۗ وَاللَّـهُ غَفورٌ‌ رَ‌حيمٌ ٧٠ ۔۔۔ الأنفال

    يـٰأَيُّهَا النَّبِىُّ اتَّقِ اللَّـهَ وَلا تُطِعِ الكـٰفِر‌ينَ وَالمُنـٰفِقينَ ۗ إِنَّ اللَّـهَ كانَ عَليمًا حَكيمًا ١ ۔۔۔ الأحزاب

    يـٰأَيُّهَا النَّبِىُّ إِنّا أَر‌سَلنـٰكَ شـٰهِدًا وَمُبَشِّرً‌ا وَنَذيرً‌ا ٤٥ وَداعِيًا إِلَى اللَّـهِ بِإِذنِهِ وَسِر‌اجًا مُنيرً‌ا ٤٦ ۔۔۔ الأحزاب

    ودیگر آیات!

    اسی طرح:

    يـٰأَيُّهَا الرَّ‌سولُ لا يَحزُنكَ الَّذينَ يُسـٰرِ‌عونَ فِى الكُفرِ‌ مِنَ الَّذينَ قالوا ءامَنّا بِأَفوٰهِهِم وَلَم تُؤمِن قُلوبُهُم ۛ وَمِنَ الَّذينَ هادوا ۛ سَمّـٰعونَ لِلكَذِبِ سَمّـٰعونَ لِقَومٍ ءاخَر‌ينَ لَم يَأتوكَ ۖ يُحَرِّ‌فونَ الكَلِمَ مِن بَعدِ مَواضِعِهِ ۖ يَقولونَ إِن أوتيتُم هـٰذا فَخُذوهُ وَإِن لَم تُؤتَوهُ فَاحذَر‌وا ۚ وَمَن يُرِ‌دِ اللَّـهُ فِتنَتَهُ فَلَن تَملِكَ لَهُ مِنَ اللَّـهِ شَيـًٔا ۚ أُولـٰئِكَ الَّذينَ لَم يُرِ‌دِ اللَّـهُ أَن يُطَهِّرَ‌ قُلوبَهُم ۚ لَهُم فِى الدُّنيا خِزىٌ ۖ وَلَهُم فِى الـٔاخِرَ‌ةِ عَذابٌ عَظيمٌ ٤١ ۔۔۔ المائدة

    يـٰأَيُّهَا الرَّ‌سولُ بَلِّغ ما أُنزِلَ إِلَيكَ مِن رَ‌بِّكَ ۖ وَإِن لَم تَفعَل فَما بَلَّغتَ رِ‌سالَتَهُ ۚ وَاللَّـهُ يَعصِمُكَ مِنَ النّاسِ ۗ إِنَّ اللَّـهَ لا يَهدِى القَومَ الكـٰفِر‌ينَ ٦٧۔۔۔ المائدة
     
  6. ‏فروری 02، 2013 #26
    کنعان

    کنعان فعال رکن
    جگہ:
    برسٹل، انگلینڈ
    شمولیت:
    ‏جون 29، 2011
    پیغامات:
    3,564
    موصول شکریہ جات:
    4,376
    تمغے کے پوائنٹ:
    521

    السلام علیکم و رحمۃ اللہ وبرکتہ

    انس بھائی میں نے جو نقطہ کوٹ کیا تھا اس پر میں نے جو توجہ دلوائی ھے وہ نبی یا رسول کے درمیان فرق پر نہیں تھی۔

    میرا مخلصانہ اعتراض، ناممکن پر سوال پوچھنا کہ کیا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم ؟؟؟؟ تھے؟
    کیا صحابہ کرام رضی اللہ تعالی میں سے کون ؟؟؟؟ تھے؟

    جب آپ جانتے ہیں نبی و رسول اور صحابہ کا مقام اور صفات تو پھر صوفی ہونے پر سوال پوچھنا؟

    والسلام
     
  7. ‏فروری 02، 2013 #27
    شاکر

    شاکر تکنیکی ناظم رکن انتظامیہ
    جگہ:
    جدہ
    شمولیت:
    ‏جنوری 08، 2011
    پیغامات:
    6,595
    موصول شکریہ جات:
    21,360
    تمغے کے پوائنٹ:
    891

    وعلیکم السلام ورحمتہ اللہ وبرکاتہ،
    کنعان بھائی،
    دراصل آپ ہی سمجھ نہیں پائے۔ انس بھائی نے وضاحت کی ہے کہ جب رسالت کا درجہ نبوت سے بڑا ہے، اس کے باوجود قرآن نے محمد صلی اللہ علیہ وسلم کے لئے رسول اور نبی دونوں الفاظ استعمال کئے ہیں۔
    تو اسی طرح پر ہم کہہ سکتے ہیں کہ:
    اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم اولین مؤمن تھے۔
    اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم حافظ قرآن تھے۔
    اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم عالم تھے۔
    اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم امام تھے۔
    اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم قاری تھے۔
    اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم مفتی تھے۔

    اس میں سے کوئی لفظ ایسا نہیں، جسے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے لئے استعمال نہ کیا جا سکتا ہو۔ ہاں انہیں نبی و رسول کہنے کے بعد حافظ، عالم، قاری، مفتی کہنے کی ضرورت ہی نہیں۔
    لہٰذا اس طرز پر اگر رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم صوفی تھے (نعوذباللہ)، تو انہیں صوفی کہنے میں بھی کسی کو کوئی تامل نہیں ہونا چاہئے۔ اور ایسا نہیں ہے۔
    یقیناً اسی لئے آپ بھی ان کے لئے جملہ میں صوفی کا لفظ استعمال کرنے کے بجائے ؟؟؟ لکھ رہے ہیں۔
     
  8. ‏فروری 02، 2013 #28
    ابوحنیفہ

    ابوحنیفہ مبتدی
    شمولیت:
    ‏جنوری 26، 2013
    پیغامات:
    11
    موصول شکریہ جات:
    28
    تمغے کے پوائنٹ:
    0

    ایک نبی، نبی ہونے کے ساتھ ساتھ امام بھی ہوتا ہے اسی طرح صحابہ بھی امام تھے اور تابعین اور تبع تابعین میں بھی امام گزرے ہیں۔

    ایک نبی، نبی ہونے کے ساتھ مفتی بھی ہوتا ہے اسی طرح صحابہ بھی مفتی تھے اور تابعین اور تبع تابعین میں بھی مفتی گزرے ہیں۔

    ایک نبی، نبی ہونے کے ساتھ ساتھ حافظ بھی ہوتا ہے اسی طرح صحابہ بھی حافظ تھے اور تابعین اور تبع تابعین میں بھی حفاظ گزرے ہیں۔

    ایک نبی، نبی ہونے کے ساتھ ساتھ قاری بھی ہوتا ہے اسی طرح صحابہ بھی قاری تھے اور تابعین اور تبع تابعین میں بھی قراء گزرے ہیں۔

    ایک نبی، نبی ہونے کے ساتھ ساتھ عالم بھی ہوتا ہے اسی طرح صحابہ بھی عالم تھے اور تابعین اور تبع تابعین میں بھی علماء گزرے ہیں۔

    لیکن ایک نبی صوفی نہیں ہوتا اور نہ ہی کوئی صحابی صوفی تھا پس انس نضر بھائی کا اعتراض اور سوال اپنی جگہ سو فیصد درست ہے۔
     
  9. ‏فروری 03، 2013 #29
    عابدالرحمٰن

    عابدالرحمٰن سینئر رکن
    جگہ:
    BIJNOR U.P. INDIA
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 18، 2012
    پیغامات:
    1,124
    موصول شکریہ جات:
    3,229
    تمغے کے پوائنٹ:
    240

    ایکسو ایک پرسنٹ غلط غلط
    صوفی کا وہ مطلب نہیں جو آپ حضرات نےمراد لیے ہیں
    یہ بتائیں رسول صلی اللہ علیہ وسلم’’ ولی ‘‘تھے یا نہیں
    اور یہ بھی بتائیں کہ رسول صلی اللہ علیہ وسلم ذاکر تھے یا نہیں
    اور کیا قرآن پاک میں ذکر کرنے کی ہدایت فرمائی ہے یا نہیں
    اور یہ بھی بتائیں
    کہ رسول صلی اللہ علیہ وسلم کے علاوہ غار حراء میں دیگر حضرات کیا کرنے جاتے تھے
    صوفی لفظ پہلے استعمال نہیں ہوتا تھا بیشک یہ صحیح ہے لیکن ذکر اذکار تو جب سے یہ انسان دنیا میں آیا ہے ذاکر تھا اور ہے اور صرف انسان ہی نہیں اللہ تعالیٰ کی تمام مخلوق اپنی اپنی زبان میں ذاکر ہے تسبیح وتحمید کرتی ہے
    ان ذاکرین کے لیے ’’ولی‘‘ کے علاوہ’’ عابد‘‘ ’’زاہد‘‘ ’’عارف ‘‘ ’’متقی‘‘ ’’شاکر‘‘’’صالح‘‘
    ہندی زبان میں ’’ذاکر‘‘ کو ’’بھگت‘‘ اور عبادت کو ’’پوجا‘‘ اللہ کو’’ بھگوان ‘‘ ’’ایشور‘‘
    اگر ان سب اصطلاحات کو اسی تناظر میں دیکھا جائے تو یقیناً غلط ہوجائے گا اور اگر لغوی اعتبار سے دیکھا جائے تو مطلب صحیح نکل آئے گا اور ان الفاظ کو عربی ڈکشنری میں ڈھونڈا جائے یا قرآن پاک میں ڈھونڈا جائے تو کیسے ممکن ہے
    ذاکرین کو ہندی میں ’’سنتھ‘‘ یا پجاری کہتے ہیں اور برصغیر میں ’’صوفی سنتھ‘‘ مستعمل ہے۔
    صوفی سے آپ کچھ مراد لے رہے ہیں اور میں ’’ولی‘‘مراد لے رہا ہوں اور ایک’’ ولی ‘‘ کے اندر دنیا سے بے رغبتی پائی جاتی ہےاس کا ذکر قرآن پاک میں اور میں یقیناً ان تمام جائز تعلیمات کو بحمداللہ قرآن پاک اور احادیث سے ثابت کردونگا ۔ آپ پر لازم ہے کہ پہلے مجھے ان تمام باتوں کی یاطریقوں تفصیل عنایت فرمائیں جس کو ایک کامل مومن کہا جاتا ہے ۔اس کے بعد ہی کوئی بات ہوگی۔ اور محترم انس انضر صاحب آپ کی سب باتوں کا جواب میرے ذمہ ہے ان شاءاللہ ابھی میں صرف آپ حضرات کو سمجھ رہا ہوں ۔
    اس کے علاوہ میرے سامنے بہت ساری مجبوریاں ہیں جس کی وجہ سے لفظی بحث سے کتراتا ہوں۔
    میں کئی افرد سے ایک ساتھ مشارکت نہیں کرسکتا
    اور جس طرح سے ایک ایک لائین ٹیگ لگا کر میں اس میں الجھ جاتا ہوں ذہنی یکسوئی ختم ہوجاتی ہے
    لکھتے وقت بہت ساری باتیں ایسی لکھی جاتیں ہیں جن سے لکھنے والے مراد کچھ ہوتی ہے اور قاری کچھ سمجھتا ہے ۔قاری یا معترض اس کا فائدہ اٹھا کر بات کا بتنگڑ بنا دیتا ہےاور بات موضوع سے ہٹ جاتی ہے اور معترض یہ سمجھتا ہے کہ میدان مار لیا اور یہی ایک کامیاب مناظر کا اصول ہوتا ہے ۔چلئے دیکھتے ہیں اللہ کیا نصرت فرماتا ہے۔
     
  10. ‏فروری 03، 2013 #30
    انس

    انس منتظم اعلیٰ رکن انتظامیہ
    جگہ:
    لاہور
    شمولیت:
    ‏مارچ 03، 2011
    پیغامات:
    4,177
    موصول شکریہ جات:
    15,224
    تمغے کے پوائنٹ:
    800

    وعلیکم السلام ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    کنعان بھائی! در اصل عاصم کمال وعابد الرحمٰن صاحبان صاحبان یہ کہہ رہے تھے کہ تصوف کوئی نہیں چیز نہیں ہے بلکہ یہ ولایت، ذکر، احسان وغیرہ کا ترجمہ ہے۔ جیسے نماز صلاۃ کا اور روزہ صوم کا ترجمہ ہے۔ اس پر میں نے عرض کیا کہ لفظ تصوف کسی عربی لفظ کا ترجمہ نہیں بلکہ بذاتِ خود عربی لفظ ہے۔ جس پر وہ کہنے لگے کہ ٹھیک ہے یہ ولایت، ذکر اور احسان وغیرہ کا ترجمہ نہیں بلکہ ان کا ہم معنیٰ لفظ ہے۔ جس پر میں نے عرض کیا کہ اگر یہ ہم معنیٰ ہیں تو پہر ہم جس طرح ہم کہہ سکتے ہیں کہ نبی کریمﷺ ولی تھے، محسن تھے، ذاکر (اللہ کا ذکر کرنے والے) تھے، کیا ہم کہہ سکتے ہیں کہ نبی کریمﷺ صوفی تھے؟؟؟
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں