1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

سندھ اسمبلی نے اسلام قبول کرنے پر شرائط لگا دیں :

'تازہ مضامین' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد عامر یونس, ‏نومبر 23، 2016۔

  1. ‏نومبر 23، 2016 #1
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,951
    موصول شکریہ جات:
    6,501
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    سندھ اسمبلی میں اسلام کے خلاف بل کی منظوری –

    عبدالرحمٰن

    20/11/2016

    اسلام کے نام پر بننے والے ملک میں اسلام سے متصادم قوانین سازی زوروں پر ہے. پاکستان بنے ہوئے تقریباً 68 سال ہوچکے ہیں، اس کی آزادی میں بزرگوں نے بے شمار قربانیاں دی تھیں، اسے اسلام کے نام پر حاصل کیا تھا. آئین کے مطابق کوئی بھی قانون اسلام سے متصادم بنانے کی اجازت بالکل نہیں مگر ماضی قریب سے وفاق اور صوبوں میں بالخصوص پنجاب اور سندھ میں حکومتوں نے مختلف قوانین بنائے جو قرآن وحديث کے صریح خلاف اور آئین سے متصادم ہیں.

    گذشتہ روز سندھ اسمبلی نے ایک ایسا کالا و شرمناک قانون منظور کیا جو اسلامی تعلیمات اور احکامات کے مکمل منافی ہے. سندھ اسمبلی میں منظور کیے گئے بل کے مطابق 18 سال سے کم عمر افراد کا قبول اسلام معتبر نہیں ہے جبکہ 18 سال سے زائد عمر کا شخص 21 روز تک قبول اسلام کا اعلان نہیں کرسکتا. جبری اسلام قبول کرانے والے یعنی کلمہ پڑھانے والے اور نکاح خواں کے لیے کم از کم 5 سال یا عمر قید کی سزا مقرر کی گئی ہے، کلمہ اور نکاح پڑھانے والے شخص کی مذکورہ مقدمہ میں ضمانت بھی نہیں ہو سکے گی۔

    اس بل کی اکثر شقیں ایسی ہیں جو واضح طور پر شریعت سے متصادم ہیں. ایک اسلامی ریاست کو ہرگز اجازت نہیں کہ وہ اللہ تعالی کے بنائے ہوئے قوانین کے خلاف قانون سازی کرے. اس طرح کا قانون امریکہ، یورپ حتی کہ انڈیا میں بھی نہیں ہوگا جو سندھ حکومت نے منظور کرلیا.

    ایسے قوانین کا مقصد صرف اسلام کی ترویج و اشاعت روکنے کی کوشش کرنا ہے کیونکہ اس وقت اسلام واحد مذہب ہے جو تیزی سے دنیا بھر میں پھیل رہا ہے. بڑی تعداد میں اسلام کی حقانیت سےغیر مسلم متاثر ہو کر اسلام قبول کر رہے ہیں، جس سے غیر مسلم طاقتوں کو کافی تکلیف لاحق ہے، ان خوفزدہ طاقتوں، این جی اوز اور سندھ اسمبلی میں بیٹھے ہوئے غیر مسلم خصوصاً ہندو ارکان نے نومسملوں کے ساتھ تعاون اور ان کو سرٹیفکیٹ جاری کرنے والے اداروں اور علماء کو ڈرانے کےلیے مذکورہ قانون پاس کیا ہے۔

    اگر ہم دوسرے اسلامی ممالک خصوصاً عرب ممالک کو دیکھیں تو وہاں پر اسلام کی تبلیغ اوراسلام قبول کرنے والوں کی راہنمائی اورتحفظ کے لیے باقاعدہ ادارے قائم ہیں، اگر سندھ گورنمنٹ یہ کام نہیں کرسکتی تو کم از کم اسلامی تعلیمات اور آئین پاکستان کا خیال تو رکھے اور اسلام قبول کرنے والوں کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی نہ کرے.
     
  2. ‏نومبر 26، 2016 #2
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,951
    موصول شکریہ جات:
    6,501
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    سندھ اسمبلی میں منظورشدہ متنازع بل کا خلاصہ


    news-03.gif
     
  3. ‏نومبر 26، 2016 #3
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,951
    موصول شکریہ جات:
    6,501
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    رسول اللہ ﷺ کا ارشاد گرامی ہے ۔

    (کل مولود یولد علی الفطرۃ فابواہ یھودانہ او ینصرانہ او یمجسانہ ) [بخاری ]

    ہر بچہ فطرت سلیمہ پر پیدا ہوتا ہے ‘ لیکن اس کے والدین اسکو یہودی عیسائی اور مجوسی بنا دیتے ہیں ۔

    بچہ ماں کے پیٹ سے مسلمان پیدا هوتا ہے لیکن اس کی تربیت پروش اسکو غیر مسلم میں آمادہ کرتے ہیں جبکہ پیدا ہی مسلمان ہوتا ہے تو پھر 18 سال 20 سال کیوں
     
    Last edited: ‏نومبر 26، 2016
  4. ‏نومبر 26، 2016 #4
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,951
    موصول شکریہ جات:
    6,501
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    جمہوریت کے نام پر ملک میں لوٹ مار کرنے والے اب قبول اسلام کیلئے عمر کا تعین کررہےہیں۔

    جی ہاں! یہ چند اسلام دشمن لوگ اسمبلی میں بیٹھ کر بل پاس کرتےہیں پھر اس کو نام دیتے ہیں کہ یہ جمہوری فیصلہ تھا۔ یہ تو چند لوگوں کا فیصلہ ہے باقی عوام کی رائے عامہ اس کے خلاف ہے۔
    یہ آمریت کی شکل میں جمہوریت ہے !
    کبھی شراب پر پابندی معطل
    کبھی ڈانس پر پابندی معطل
    کبھی سود کی گنجائش

    سید اعجاز شاہ
     
  5. ‏نومبر 28، 2016 #5
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,951
    موصول شکریہ جات:
    6,501
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    مسلمان ہونا ممنوع ہے


    .....
    ایسے ہی بلا وجہ تبدیلی مذہب کا تکلف کیا آپ نے ...صاف سیدھی سی بات کیجئے کہ اگر کوئی پونے اٹھارہ برس کا ہے اور مسلمان ہونا چاہتا ہے تو یہ قابل دخل اندازی پولیس جرم ہو گا ....تبدیلی مذھب کے منافقانہ الفاظ کا سہارا مت لیجئے .... آدمی کو صاحب کردار ہونا چاہیے -
    ہاں لیکن اس قانون کو منظور کرتے وقت کم از کم پاکستان کے ساتھ جڑا سابقہ "اسلامی " تو ہٹا لیا ہوتا ...یقین کیجئے اب تو شرم آنے لگی ہے -
    سندھ اسمبلی کے منظور کردہ اس قانون کے بعد گر کسی کو غلط فہمی ہے کہ وہ کسی اسلامی ملک میں رہتا ہے تو اس کی عقل پر ماتم ہی کیا جا سکتا ہے -

    اس قانون کے مطابق :

    *- اٹھارہ برس سے کم عمر اسلام قبول کر بھی لے تو غیر مسلم ہی سمجھا جائے گا -

    *اگر کوئی بالغ یعنی اٹھارہ برس سے زیادہ بھی ہے تو اکیس روز تک اس کا اعلان نہیں کر سکے گا -

    *نومسلم کا نکاح پڑھانے والے کو تین برس قید ہو گی اور ضمانت بھی نہیں ہو سکے گی _

    *سب سے بڑی بے غیرتی اور بے حمیتی والی شق یہ ہے کہ تبدیلی مذہب کروانے کی کسی بھی کوشش کا نتیجہ عمر قید ہو سکتا ہے -


    اس طرح اسلام کی تبلیغ کا راستہ روکنے کی کوشش کی گئی ہے

    خوف خدائے پاک دلوں سے نکل گیا
    آنکھوں سے شرم سرور کون و مکاں گئی

    لیکن اس حکمران طبقے کی آنکھوں میں شرم تھی ہی کب ؟ - کہاں ہیں میرے وہ دوست جب میں کہتا تھا کہ جناب مدت پہلے جب اسلام کے نام پر تحریک چلائی گئی ،اصل میں تب عوام کو الو بنا لیا گیا ، لوگوں نے سمجھا کہ یہاں اسلام آیا کہ اب آیا - یہاں عزتیں محفوظ ہوں گی ، حدود کا نفاذ ہو گا ، زنا کاری کا نشان تک نہ ہو گا -پوری دنیا کے مسلمانوں کے لیے یہ ملک رول ماڈل ہو گا -

    لیکن فورا بعد ہی یہ اعلان کر دیا گیا کہ اب سب ایک قوم ہیں کوئی مسلمان نہیں ، ہندو نہیں ،سکھ عیسائی نہیں آج سے سب پاکستانی ہیں - کیا یہ اعلان اور تقریر ریکارڈ پر موجود نہیں ؟-

    ہے کسی میں ایسی ہمت کہ جو میرے اس دعوے کو جھٹلا سکے -

    اس اعلان کے بعد سندھ حکومت کا موجودہ اقدام کیسے غلط ہے ؟- اس دیس کو لبرل اور "غیر اسلامی " ریاست بنانے کی سازشیں تو حکمران ٹولے نے تب ہی شروع کر دی تھیں جب ابھی اس کا جھنڈا ہوا میں لہرایا بھی نہ تھا _

    اب آپ انتظار اس بات کیجئے کہ ترکی کی طرح کب قانون بنتا ہے کہ :

    کوئی عورت پردہ کر کے ملازمت نہیں کر سکتی -
    کوئی مرد داڑھی نہیں رکھ سکتا -
    اذان باواز بلند نہیں ہو گی -
    میرا سوال ان مذھبی جماعتوں سے بھی ہے کہ وہ اپنے اتحادی میاں نواز شریف صاحب سے پوچھیں گے کہ جب یہ ایکٹ اسمبلی میں پیش کیا گیا اس کی مخالفت کیوں نہ کی گئی ؟ان کے ارکان کہاں تھے ؟- یہ محض سات منٹ میں غیر متنازعہ طور پر کیسے منظور ہو گیا ؟-لیکن میں جانتا ہوں اور آپ بھی جانتے ہیں کہ کسی میں اتنی جرات نہیں کہ یہ سوال کرے ..اگر یہی بل صوبہ خیبر پختون خواہ کی اسمبلی پاس کرتی تو ان لیڈروں کی آنیاں جانیاں دیکھنی تھیں - ان کے بیانات اور احتجاج عروج پر ہونے تھے ..

    ...ابو بکر قدوسی
     
  6. ‏نومبر 28، 2016 #6
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,951
    موصول شکریہ جات:
    6,501
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    پروٹیکشن آف منارٹی متنازع بل :



    15181183_782043968600533_542708971014984014_n.jpg
     
  7. ‏نومبر 29، 2016 #7
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,951
    موصول شکریہ جات:
    6,501
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    ایک اور اسلام مخالف سازش اور ہماری خاموشی.


    15203124_1221930891208209_290003352895860367_n.jpg

    جب انسان چھوٹا ہوتا یے تو وہ چیزوں کو ذیادہ توجہ سے سیکھتا ہے. جیسے جیسے وہ لڑک پن میں پینچتا جاتا ہے اسکا دیہان موج مستی اور اپنی دنیاوی خواہشات کو پورا کرنے کی طرف راغب ہوتا رہتا ہے پھر وہ دین سے دور ہوتا رہتا ہے. شیطان انسان کی جوانی میں ذیادہ حملے کرتا ہے. کیونکہ وہ جانتا ہے کہ اللہ پاک کو انسان کی جوانی کی عبادت ذیادہ پسند ہے.

    یہ کوئی اتفاق نہیں بلکہ سوچی سمجھی سازشیں ہیں اسلام کے خلاف..

    لگتا ہے ہمارے لوگوں نے اسرائیل کے آذان پر پابندی لگائے جانے کے بعد ان پر آنے والے عذاب سے کچھ سبق حاصل نہیں کیا.

    وہ لوگ تو ایسی حرکات کرتے ہیں کہ وہ کافر ہیں اور اسلام دشمن ہیں. انکے ملک کی عوام بھی کافر ہیں. لیکن ہمارے ہاں تو عوام. مسلمان کہلاتی ہے. پھر انکی اتنی جرات کیسے ہو جاتی ہے کہ کھلے عام خلاف شریعت کام کریں؟؟

    کیونکہ ہم سب سو رہے ہیں.
     
  8. ‏دسمبر 02، 2016 #8
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,951
    موصول شکریہ جات:
    6,501
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    نام میں تو علی لکھ دیا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ذوالفقار علی بھٹو ۔۔۔۔۔۔۔۔ قائم علی شاہ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ آصف علی زرداری ۔۔۔۔۔۔۔ مراد علی شاہ ۔۔۔۔۔۔،،،،،لیکن ابھی تک یہ نہیں جان پائے سیدنا علی رضی اللہ عنہ نے دس برس کی عمر میں اسلام قبول کیا تھا ،،،،،، اور یہ آٹھارہ سال سے کم عمر والوں کو اسلام قبول کرنے سے روکنے کا بل پاس کرارہے ہیں ۔۔۔۔۔۔

    منقول
     
  9. ‏دسمبر 05، 2016 #9
    محمد عامر یونس

    محمد عامر یونس خاص رکن
    جگہ:
    karachi
    شمولیت:
    ‏اگست 11، 2013
    پیغامات:
    16,951
    موصول شکریہ جات:
    6,501
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,069

    15356643_786587408146189_1180865502250956350_n (1).jpg


    کیا یہود ونصاری مسلمانوں سے خوش ہوں گے ؟


    وَلَنْ تَرْضَى عَنْكَ الْيَهُودُ وَلَا النَّصَارَى حَتَّى تَتَّبِعَ مِلَّتَهُمْ قُلْ إِنَّ هُدَى اللَّهِ هُوَ الْهُدَى وَلَئِنِ اتَّبَعْتَ أَهْوَاءَهُمْ بَعْدَ الَّذِي جَاءَكَ مِنَ الْعِلْمِ مَا لَكَ مِنَ اللَّهِ مِنْ وَلِيٍّ وَلَا نَصِيرٍ

    (القرآن،البقرة،120)
     
  10. ‏دسمبر 06، 2016 #10
    ابن داود

    ابن داود فعال رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏نومبر 08، 2011
    پیغامات:
    3,138
    موصول شکریہ جات:
    2,633
    تمغے کے پوائنٹ:
    556

    السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ!
    لوگو! میں شرمندہ ہوں
    میں سندھ کا باشندہ ہوں
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں