1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

مجھے جمہوریت قبول نہیں

'جمہوریت' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد ارسلان, ‏فروری 11، 2013۔

  1. ‏فروری 11، 2013 #1
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    [​IMG]
     
  2. ‏فروری 12، 2013 #2
    گڈمسلم

    گڈمسلم سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 10، 2011
    پیغامات:
    1,407
    موصول شکریہ جات:
    4,907
    تمغے کے پوائنٹ:
    292

    بھائی آپ نے جمہوریت کی جو تعریف کی ہوئی ہے
    ’’ عوام کی حکومت، عوام کی حکمرانی کےلیے، عوام کے چنے ہوئے لوگ، عوام کی خواہشات کے مطابق چلیں۔‘‘
    کیا یہی تعریف آج کے جمہوری نظام پر صادق آتی ہے یا نہیں ؟ اور جب جمہوریت کو کفر کہا جاتا ہے تو کن اسباب، وجوہات کی وجہ سے ؟
     
  3. ‏فروری 12، 2013 #3
    محمدطیب مرزا

    محمدطیب مرزا مبتدی
    شمولیت:
    ‏اپریل 11، 2012
    پیغامات:
    4
    موصول شکریہ جات:
    15
    تمغے کے پوائنٹ:
    4

    اسلام علیکم۔
    بہت عرصے سے اسی موضع کے بارے میں مشکل کا شکار ہوں۔ جمہوریت کو اچھا نہیں سمجھتا مگر آج کے دور میں ہم کیسے اﷲ کا قانون اور حکمرانی Qaim
    کریں۔ رہنمایٰ کریں۔
     
  4. ‏فروری 12، 2013 #4
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    جمہوریت کو اچھا سمجھنے والے اور اس کے حق میں دلائل دینے والوں کے رد میں اس تحریر کا مطالعہ کریں۔
    جمہوریت دین ابلیس
     
  5. ‏فروری 13، 2013 #5
    گڈمسلم

    گڈمسلم سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 10، 2011
    پیغامات:
    1,407
    موصول شکریہ جات:
    4,907
    تمغے کے پوائنٹ:
    292

    کیا جمہوریت کفر ہے؟
    کیا جمہوریت شرک وکفر ہے؟
    میراسوال پھر بھی قائم ہے کہ
     
  6. ‏فروری 13، 2013 #6
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    بھائی موجودہ نظام جمہوریت ہے یا نہیں یا یہ تعریف موجودہ نظام پر صادق آتی ہے یا نہیں۔بات یہ ہے کہ موجودہ نظام جو بھی ہے لیکن ہے غیر اسلامی، اور اسلام کے علاوہ کوئی اور نظام چاہے وہ جمہوریت ہو یا آمریت باطل ہیں، لہذا جس ملک میں اسلام کے قوانین نہ ہوں اسے اسلامی ملک نہیں کہا جا سکتا، چاہے اس میں مسلمانوں کو کتنی ہی ارکان اسلام پر عمل کرنے کی اجازت ہو۔
     
  7. ‏فروری 13، 2013 #7
    کنعان

    کنعان فعال رکن
    جگہ:
    برسٹل، انگلینڈ
    شمولیت:
    ‏جون 29، 2011
    پیغامات:
    3,564
    موصول شکریہ جات:
    4,376
    تمغے کے پوائنٹ:
    521

    السلام علیکم

    اگر فارم پر دوسری جگہ کا لنک دینا منع نہیں تو اسی موضوع سے اس لنک پر بھی مطالعہ کیا جا سکتا ھے جو ١٧ صفحات پر مشتمل ھے اور اگر لنک پر ایسی کوئی شرط ھے تو اس پوسٹ کو ان اپروو بھی کر سکتے ہیں۔

    جمہوریت دینِ ابلیس

    والسلام
     
  8. ‏فروری 13، 2013 #8
    گڈمسلم

    گڈمسلم سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 10، 2011
    پیغامات:
    1,407
    موصول شکریہ جات:
    4,907
    تمغے کے پوائنٹ:
    292

    تو پھر اس غیر اسلامی نظام کو کیسے اسلامی نظام میں بدلا جا سکتا ہے ؟ کوئی تجویز ومشورہ ۔۔ اور ہاں تجویز یا مشورہ ایسا ہو جو قابل عمل بھی ہو۔
    کسی بھی طرح پورے نظام کو باطل نہیں کہا جاسکتا کیونکہ ایک پورےنظام میں کئے ایسے امور بھی ہوتے ہیں جو اسلام کے خلاف نہیں ہوتے ہاں کسی نظام کی کسی ایک ایسی شق جس سے قرآن مجید کی کسی آیت یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی احادیث ثابتہ سے کسی حدیث کا ردّ ہوتا ہو وہ باطل ومردود ہے۔
    ایک ہوتا ہے قانون کا بنایا جانا اور ایک ہوتا ہے قانون پر عمل ہونا۔ محترم بھائی ملک پاکستان کے قوانین تو فقہ حنفی کی رو سےترتیب دیئے گئے ہیں۔( کچھ قوانین بیچ میں ایسے بھی داخل کردیئے گئے ہیں جو اسلامی تعلیمات سے متصادم ہیں) اس حوالے سے ہم ملک پاکستان کو غیر اسلامی نہیں کہہ سکتے۔

    اس حوالے سے معتدل تحریر پڑھنے کےلیے ذیل کے عنوان پر کلک کریں۔

     
  9. ‏فروری 13، 2013 #9
    محمد ارسلان

    محمد ارسلان خاص رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 09، 2011
    پیغامات:
    17,865
    موصول شکریہ جات:
    40,798
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,155

    وَقَاتِلُوهُمْ حَتَّىٰ لَا تَكُونَ فِتْنَةٌ وَيَكُونَ الدِّينُ لِلَّـهِ ۖ فَإِنِ انتَهَوْا فَلَا عُدْوَانَ إِلَّا عَلَى الظَّالِمِينَ ﴿١٩٣﴾۔۔۔سورۃ البقرۃ
     
  10. ‏فروری 13، 2013 #10
    گڈمسلم

    گڈمسلم سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏مارچ 10، 2011
    پیغامات:
    1,407
    موصول شکریہ جات:
    4,907
    تمغے کے پوائنٹ:
    292

    بھائی معذت کے ساتھ آپ مجھے بتائیں کہ کیا آپ اس وقت میدان جہاد میں ہیں؟ اگر ہیں تو پھر میں کہہ سکتا ہوں کہ آپ اس آیت پہ عمل پیرا ہیں اور اگر نہیں تو پھر آپ کے ہی ذہن کی عکاسی کرتاہوں کہ آپ اس آیت کےخلاف ایام گزار رہےہیں۔

    اور دوسری بات اس آیت میں فتنہ کو ختم کرنے کےلیے قتال کا حکم ہے۔ اگر قتال سے کسی فتنہ کا اندیشہ ہو تو کیا پھر بھی قتال کرنا چاہیے؟ مثال کےطور پر اس آیت پہ عمل کرنے کی غرض سے جہاں جہاں مسلمان ہیں وہ تلواریں وغیرہ لے کر فتنہ کو ختم کرنے کےلیے نکل پڑیں ( ظاہر ہے ان کا یہ عمل انہی کو ہی فتنہ میں ڈال دے گا کیونکہ وہ اس پوزیشن میں نہیں ہیں) تو کیا ان کا یہ عمل درست قرار پائے گا اور وہ اس طریقہ سے فتنہ کو ختم کرنے میں کامیاب ہوجائیں گے ؟ یاد رہے آیت میں کوئی عموم خصوص نہیں۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں