1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

اہلحدیث کے اصول فقہ

'اصول فقہ' میں موضوعات آغاز کردہ از Hasan, ‏جولائی 14، 2012۔

  1. ‏مارچ 20، 2016 #41
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    287
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

    محترم! آپ کا یہ فرمانا کہ عامی کا عالم یا مفتی کی تقلید کرنا واجب ہے اس سے سو فی صد متفق ہوں کہ عامی کو اس کے بغیر چارہ کار نہیں۔
    آپ کا یہ فرمانا بھی بجا کہ کسی بھی صحیح العقیدہ اہلِ سنت عالم یا مفتی سے بلا تخصیص پوچھ لے جائز ہے۔
    محترم! برصغیر میں اہلِ سنت میں سے صرف اور صرف حنفی مسلک کے عالم اور مفتی تھے۔ لہٰذا لوگ انہی سے مسائل پوچھتے تھے۔ میرا پہلاسوال یہ ہے کہ؛
    کیا بر صغیر کےعلماء احناف اہلِ سنت تھے ؟
    میرا دوسرا سوال؛
    کیا اس مفتی یا عالم کے بتائے ہوئے مسئلہ پر اس عامی کو اعتراض یا اختلاف کا حق حاصل ہوتا ہے؟ اگر اعتراض کرے تو اس کا کیا حکم ہے

    محترم! میرا تیسرا سوال یہ ہے کہ؛
    کسی مسئلہ میں اجتہاد کی صلاحیت حاصل ہونے کی نشانی یا شرائط کیا ہیں؟ کیا اس مسئلہ میں وہ فتویٰ دے سکتا ہے یا عامی اس کی تقلید کر سکتا ہے؟

    محترم! میرا چوتھا سوال یہ ہے کہ؛
    اس کی کیا دلیل ہے کہ مجتہد پر تقلید ”حرام“ ہے؟

    محترم! آپ نے لکھا کہ عامی کا عالم اور مفتی سے پوچھنا واجب ہے۔ میرا پانچواں سوال یہ ہے کہ؛
    اگر کوئی عامی کسی ایک ہی عالم یا مفتی سے ہمیشہ پوچھتا رہے تو کیا یہ جائز ہے یا ناجائز اور گناہ؟

    محترم! میرا چھٹا سوال؛
    آپ فقہ حنفی سے لوگوں کو کیوں نکالنا چاہتے ہیں (جب کہ اوپر آپ یہ وضاحت کر آئے ہیں کہ عامی کسی بھی عالم مفتی سے مسئلہ پوچھ لے جائز بلکہ واجب ہے)؟
     
    Last edited: ‏مارچ 20، 2016
  2. ‏جولائی 19، 2017 #42
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,764
    موصول شکریہ جات:
    8,333
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    میرا خیال ہے کہ اس فہرست میں "معالم أصول الفقه عند أهل السنة والجماعة " / محمد بن حسين بن حسن الجیزانی کی کتاب کو بھی شامل کر لیجیے تو بہت سی کتب سے مستغنی ہوا جا سکتا ہے ۔ ( منقول )
     
  3. ‏جولائی 19، 2017 #43
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,764
    موصول شکریہ جات:
    8,333
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    ’ اہل حدیث کے اصول فقہ ‘ کے موضوع پر اب تک بہت ساری کتابیں لکھی جاچکی ہیں ، لیکن اہل حدیث کا منہج ہی یہ ہے کہ اصول ، فقہ یا فتاوی کی کوئی بھی کتاب حرف آخر نہیں ۔
    اس وضاحت کو مد نظر رکھتے ہوئے ، درج ذیل کتب کو مسلک اہل حدیث کے اصول فقہ کے طور پر ذکر کیا جاسکتا ہے ، کیونکہ یہ کسی بھی مذہب کی پابندی کے بغیر عمومی فقہ کے اصول کے طور پر تصنیف کی گئی ہیں :
    1۔الرسالۃ للشافعی
    2۔الإحکام فی اصول الأحکام لابن حزم
    3۔الموافقات للشاطبی
    4۔ارشاد الفحول از شوکانی
    5۔بغیۃ الفحول از گوندلوی
    6۔اصول فقہ پر ایک نظر از عاصم الحداد
    7۔من اصول الفقہ لاھل الحدیث از شیخ زکریا الباکستانی
    8۔تسہیل الوصول إلى فہم علم الأصول ( آسان اصول فقہ اور تعلیم الاصول کے نام سے اس کا دو مرتبہ ترجمہ ہوچکا ہے )
    9۔الوجیز للزیدان
    10۔شرح الأصول من علم الأصول لابن عثیمین ( اس کا بھی اردو ترجمہ ہوچکا ہے )
    11۔"معالم أصول الفقه عند أهل السنة والجماعة " / محمد بن حسين بن حسن الجیزانی
     
    • پسند پسند x 1
    • علمی علمی x 1
    • لسٹ
  4. ‏جولائی 19، 2017 #44
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,764
    موصول شکریہ جات:
    8,333
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    السير الحثيث إلى فقه أهل الحديث از ڈاکٹر لقمان السلفی ( السعی الحثیث )
     
    Last edited: ‏جولائی 19، 2017
  5. ‏اپریل 18، 2018 #45
    عبدالعظیم راشد

    عبدالعظیم راشد مبتدی
    جگہ:
    چشتیاں
    شمولیت:
    ‏اپریل 10، 2018
    پیغامات:
    50
    موصول شکریہ جات:
    6
    تمغے کے پوائنٹ:
    22

    اصل میں بات یہ ہے کہ آج اھلحدیثوں میں امام شوکانی رح کی وجہ سے کچھ ظاہریت پائی جاتی ہے اصول فقہ شیخ عبدالمنان نور پوری رح کی نظر میں اس موضوع پر ایم فل کا مقالہ ہے اس کو پڑھ لیجئے۔اھلحدیث کا منھج اصل میں محدثین والا منھج ہے
     
    • علمی علمی x 2
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
  6. ‏اپریل 18، 2018 #46
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,764
    موصول شکریہ جات:
    8,333
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    آج سعودی عرب کے دار الخلافہ ریاض میں والد گرامی حافظ عبد الرحمن مدنی حفظہ اللہ کے مدینہ یونیورسٹی کے دیرانہ دوست اور علامہ احسان الہی ظہیر رحمہ اللہ کے کلاس فیلو محترم المقام ڈاکٹر لقمان سلفی حفظہ اللہ سے ان کی رھائش پر والد گرامی کے ھمراہ تفصیلی ملاقات ھوئی ۔۔۔ محترم موصوف شیخ عبد اللہ بن باز رحمہ اللہ کے ساتھ عرصہ دراز ساتھ کام کرنے والے شاگرد اور ان کے سیکرٹری رھے، ھندوستان کی عظیم علمی دانش گاہ جامعہ ابن تیمیہ کے رئیس محترم اور ما شاء اللہ 50 کے قریب کتب کے مصنف ھیں ۔۔۔ والد گرامی اور ڈاکٹر صاحب حفظہما اللہ دونوں بزرگوں کی عمریں ماشاء اللہ 80 سال کے قریب ھیں اور دونوں خیر سے چاق وچوبند ھیں ۔۔۔ دونوں مشائخ کرام کے مابین اھل حدیث کی قدیم فکری تاریخ پر مفصل گفتگو ھوئی ۔۔۔ مدینہ منورہ یونیورسٹی میں علامہ شہید، حافظ ثناء اللہ محدث مدنی، مولانا عبد السلام کیلانی مرحوم واس زمانہ کے دیگر معاصرین دوستوں کے قدیم احوال وتعلقات کو گفتگو میں تازہ کیا گیا ۔۔۔ جس بحث سے اس اھم موقع پر سب سے زیادہ مجھے علمی فائدہ اور لطف آیا وہ تھا کہ کیا اھل حدیث کے احناف کے بالمقابل اپنے مخصوص اصول الفقہ بھی ھیں؟ بالفاظ دیگر کیا اھل حدیث مکتب فکر احناف کے بالمقابل وجود میں آنا والا صرف ایک گروہ ھے یا تقلیدی رویوں کے بالمقابل "فروغ اجتہاد" کے کسی مستقل نظریہ کے علمبردار بھی ھیں؟ اس ضمن میں امام شافعی کی الرسالہ، امام شاطبی کی الموافقات، آل ابن تیمیہ کی المسودہ اور امام شوکانی رحمہم اللہ کی علم استدلال پر مشتمل اھم کتب کے اسلوب کا اور حنفی اصول فقہ کی کتب: حسامی، نور الانوار، مسلم الثبوت اور اصول شاشی وغیرہ سے ان مذکورہ آئمہ کرام کے طرز بیان کے فرق پر دونوں کبار مشائخ کے مفصل علمی اور مفید حاصل مطالعہ سے سب حاضرین مجلس بہت مستفید ھوئے ۔۔۔ بارک اللہ فیہما۔
    ڈاکٹر حمزہ مدنی صاحب​
     
  7. ‏جون 25، 2018 #47
    حافظ محمد یونس اثری

    حافظ محمد یونس اثری رکن
    جگہ:
    کراچی
    شمولیت:
    ‏جولائی 07، 2014
    پیغامات:
    155
    موصول شکریہ جات:
    48
    تمغے کے پوائنٹ:
    77

    یہ کتاب کیسے حاصل ہوسکتی ہے ؟؟
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں