1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

تصوف کے شیخ اکبر کی توحید

'صوفیا کے عقائد' میں موضوعات آغاز کردہ از عمران اسلم, ‏مارچ 30، 2013۔

  1. ‏مئی 06، 2013 #11
    عابدالرحمٰن

    عابدالرحمٰن سینئر رکن
    جگہ:
    BIJNOR U.P. INDIA
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 18، 2012
    پیغامات:
    1,124
    موصول شکریہ جات:
    3,229
    تمغے کے پوائنٹ:
    240

    السلام علیکم
    اس کے لیے سب اپنے اپنے گریبان میں جھانک کر دیکھیں
     
  2. ‏مئی 06، 2013 #12
    ارشد

    ارشد رکن
    شمولیت:
    ‏دسمبر 20، 2011
    پیغامات:
    44
    موصول شکریہ جات:
    150
    تمغے کے پوائنٹ:
    66

    السلام علیکم
    عابدالرحمٰن صاحب نے درست کہا ، اس بات سے سب کو اتفاق ہے۔ ہمیں اپنا محاصبہ اور اپنی اپنی اصلاح کرنی چاہیے۔

    " اس سے بچو کہ تم ایک مخصوص دین پر ہی قائم ہو اس کے علاوہ دوسروں کی تکفیر کرتے پھرو" (فصوص الحکم شرح البالی ص 191)
    مگر اس عبارت میں اسلام اور کفر میں تفریق کرنے سے بچنے کی نصیحت تو نہیں کی گیی ہے۔ کیونکہ مخصوص دین توایک ہی ہے وہ ہے دین اسلام ہے جو کے اللہ تعالی نے ہمارے لیے پسند فرمایا ہے اور اسکے علاوہ سب کفر ، یہاں یہ کہا جارہا ہے ایک ہی دین پہ قائم بھی مت رہو اور دوسروں کو کافر بھی مت کہو۔۔۔
     
  3. ‏مئی 06، 2013 #13
    بابر تنویر

    بابر تنویر مشہور رکن
    جگہ:
    الریاض ، سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 02، 2011
    پیغامات:
    223
    موصول شکریہ جات:
    684
    تمغے کے پوائنٹ:
    104

    کیا تاویل فرمائ ہے جناب عابد الرحمن صاحب۔
    السلام علیکم
    دوسروں کو اپنے گریبان میں جھانکنے کا حکم دینے سے پہلے آپ اپنی تاویلات کے چاک گریبان کوتو ابن عربی کے اس قول کی روشنی میں دیکھ لیجیۓ۔ ابن عربی تو آپ کو وحدیت ادیان کا سبق پڑھا رہا ہے۔ اور آپ اس کے فلسفہ کے بر خلاف اپنی تاویلات پیش کر رہے ہیں جن کی اس فرمان کی روشنی میں کوئ حیثیت نہیں ہے۔ اب ذرا اس سلسلہ کے پہلے شعر کو ملاحظہ فرما لیجیۓ۔ جو کہ میں نے آخر کے لیۓ سنبھال رکھا تھا۔
    عقد الخلائق في الاله عقائداً-------------- وانا اعتقدت جميع ما عقدوه
    لوگوں نے معبود کے بارے میں مختلف عقائد بنا لیۓ ہیں، اور میں نے ان کے تمام عقائد کو اپنے عقیدہ میں سمیٹ لیا ہے۔


    ذرا غور فرمالیں کہ ابن عربی کن لوگوں کا ذکر کر رہا ہے ؟ مسلمانوں کا معبود کے بارے میں تو ایک ہی عقیدہ ہے۔ یہاں اس کی مراد دوسرے مذاہب ہیں اور آپ کے ابن عربی نے ان تمام غیر مذاہب کے معبودوں کو اپنے عقیدے میں سمیٹ لیا ہے۔ کچھ سمجھ میں آئ؟ یہان بھی وہ اپنے وحدیت ادیان کے فلسفہ کا ہی پرچار کر رہا ہے۔
    اب آپ کے پاس دو ہی اختیار ہیں۔ 1- اس وحدیت ادیان سے اپنی لاتعلقی کا اظہار کر دیجیۓ۔ یا 2- پھر فرما دیجیۓ کہ آپ بھی اسی وحدیت ادیان کے قائل ہیں۔
     
  4. ‏مئی 06، 2013 #14
    aqeel

    aqeel مشہور رکن
    جگہ:
    راولپنڈی
    شمولیت:
    ‏فروری 06، 2013
    پیغامات:
    299
    موصول شکریہ جات:
    307
    تمغے کے پوائنٹ:
    119

    محترم بابر تنویر صاحب کیا آپ اردو مجلس والے بابر تنویر صاحب ہیں؟
     
  5. ‏مئی 26، 2013 #15
    aqeel

    aqeel مشہور رکن
    جگہ:
    راولپنڈی
    شمولیت:
    ‏فروری 06، 2013
    پیغامات:
    299
    موصول شکریہ جات:
    307
    تمغے کے پوائنٹ:
    119

    منکر تصوف عبدالرحمن کیلانی سماع موتی میں لکھتے ہیں


    [​IMG]

    وہ لوگ جو مطلق تصوف کی مخالفت کرتے ہیں،اور تصوف کو شرک و بدعت سمجھتے ہیں،ان بزرگوں پر بھی کچھ کہنا پسند فرمائیں گے۔
     
    • غیرمتعلق غیرمتعلق x 3
    • متفق متفق x 1
    • لسٹ
  6. ‏مئی 27، 2013 #16
    خضر حیات

    خضر حیات علمی نگران رکن انتظامیہ
    جگہ:
    طابہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 14، 2011
    پیغامات:
    8,765
    موصول شکریہ جات:
    8,334
    تمغے کے پوائنٹ:
    964

    اس حوالے سے یہی کہا جاسکتا ہے کہ ان بزرگوں کا معصومین میں شمار نہیں ہوتا ۔ انہوں نے بھی تو اپنے سے پہلے علماء کی غلطیوں کی نشاندہی کی ہے ۔ اور بعد والوں نے ان کی غلطیوں کی نشاندہی کی ہے ۔
    دین ۔کتاب وسنت کا نام ہے ۔۔ اس کے علاوہ جو کچھ ہے خذ ما صفا و دع ما کدر والا رویہ اپنائیں ۔
    ویسے ایک بات کافی قابل تعجب محسوس ہوئی ہے کہ تنقید یہاں ابن عربی پرہو رہی ہے اور آپ آ کر کہہ رہے ہیں کہ یا تو اس کو بھی چھوڑ دیں اور یا پھر فلاں فلاں پر بھی تنقید کریں ۔
    کیا آپ ابن عربی اور ابن تیمیہ و ابن قیم میں کوئی فرق نہیں سمجھتے ؟
    اگر کسی نے موخر الذکر دونوں کو صوفی کہہ دیا ہےتو اس کا مطلب ہے ان میں ابن عربی والی صوفیت تھی ۔۔۔ حاشا وکلا ۔۔۔۔ خود ان دونوں نے ابن عربی کو زندیق قرار دیا ہے ۔
     
    • شکریہ شکریہ x 3
    • متفق متفق x 1
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
  7. ‏مئی 27، 2013 #17
    بابر تنویر

    بابر تنویر مشہور رکن
    جگہ:
    الریاض ، سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 02، 2011
    پیغامات:
    223
    موصول شکریہ جات:
    684
    تمغے کے پوائنٹ:
    104

    درست کہا بھائ خضر حیات۔ بات ابن عربی پر ہو رہی ہے اس لیۓ اس بات کا جواب نہیں دیا گیا تھا۔
    ویسے بھائ عقیل بندہ وہی ہے جو کہ اردو مجلس کے حوالے سے پہچانا جاتا ہے۔ لیکن چاہے وہ اردو مجلس ہو، محدث فورم ہو یا صراط الہدی سب کی ایک ہی پہچان ہے یعنی صحیح دین کی تبلیغ اور اتباع قران و سنت ۔ اور الحمدللہ مین ان سب کا حصہ بننے پر فخر محسوس کرتا ہوں۔
     
  8. ‏مئی 28، 2013 #18
    aqeel

    aqeel مشہور رکن
    جگہ:
    راولپنڈی
    شمولیت:
    ‏فروری 06، 2013
    پیغامات:
    299
    موصول شکریہ جات:
    307
    تمغے کے پوائنٹ:
    119

    چلو آپ کی بات کا جواب آپکی زبان سے دے دیتے ہیں؛۔

    ابن عربی ؒپر تنقید اور تعریف ور دفاع کرنے میں بہت سے علما شامل ہیں۔اگر ابن تیمہؒ تنقید کر رہے ہیں تو کیا ہوا کیونکہ ابن تیمیہ تو انسان ہیں
    اس حوالے سے یہی کہا جاسکتا ہے کہ ان بزرگوں کا معصومین میں شمار نہیں ہوتا ۔ انہوں نے بھی تو اپنے سے پہلے علماء کی غلطیوں کی نشاندہی کی ہے ۔ اور بعد والوں نے ان کی غلطیوں کی نشاندہی کی ہے ۔
    لہذا بن تیمیہ ؒ کی تنقید تو کچھ نہ ہوئی کیونکہ وہ معصوم عن الخطا تو نہیں۔ لہذا ابن عربی ؒ پر کسی معصوم کی جرح پیش کریں ۔نوازش ہو گی۔
    دوسرا اگر ہو سکے تو ابن تیمیہ ؒ اور ابن قیم کا جو تصوف ہے ،وہ پیش کر دیں ۔اور یہ بھی بتا دے کہ جو کہتے ہیں کہ تصوف تو غلیظ ترین چیز ہے تو کیا یہ بزرگ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
     
  9. ‏مئی 28، 2013 #19
    aqeel

    aqeel مشہور رکن
    جگہ:
    راولپنڈی
    شمولیت:
    ‏فروری 06، 2013
    پیغامات:
    299
    موصول شکریہ جات:
    307
    تمغے کے پوائنٹ:
    119

    بابر بھائی مجلس کے علاوہ المتقی پر بھی آپ بڑے بے تاب تھے،آپ بس مجھے اتنا بتا دے کہ کیا آپ مطلق تصوف کے مخالف ہیں ،اور اگر مخالف ہیں تو آپ تصوف کو کیا سمجھتے ہیں؟
    اور ابن عربی ؒ کا جواب مفتی عابد صاحب دے چکے ہیں ،مگر یہ جزوی مباحث ہیں ،آپ کو اصل میں جو تصوف پرجو بڑا اعتراض یا سوال سجھتے ہیں وہ پیش کریں ،لیکن ایک درخواست یہ ہے کہ اگر آپکا تصوف پر وسیع مطالعہ ہے ،(کیونکہ عملی تعلق تو آپکا تصوف سے ہو نہیں سکتا)تو میدان حاضر ہے اور اگر کاپی پیسٹ سےکام چلانا تو پلیز پھر معاف کیجیے گا۔
     
    • متفق متفق x 1
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
  10. ‏مئی 28، 2013 #20
    بابر تنویر

    بابر تنویر مشہور رکن
    جگہ:
    الریاض ، سعودی عرب
    شمولیت:
    ‏اکتوبر 02، 2011
    پیغامات:
    223
    موصول شکریہ جات:
    684
    تمغے کے پوائنٹ:
    104

    محترم جناب عقیل صاحب یہاں بات ابن عربی کے حوالے سے ہو رہی اور آپ سے درخواست کرتا ہوں کہ یہاں اسی حوالے سے بات کیجیۓ پوسٹ نمبر 1 اور میری پوسٹ نمر 8 اور 13 پر اپنی راۓ سے نواز دیجیۓ۔ کہ ابن عربی کے یہ عقائد نبئ کریم کے طریق کے مطابق ہیں یا اس کے مخالف۔ بھائ خضر حیات سے بھی درخواست کروں گا کہ اس تھریڈ میں ابن عربی کے حوالے سے ہی بات کیجیۓ ۔
    جناب عقیل صاحب جہان تک کاپی پیسٹ کی بات ہے تو میں نے جہان سے کاپی پیسٹ کیا ہے وہان بھی میرا اپنا ہی لکھا ہوا تھا اور یہ بات آپ بخوبی جانتے ہیں۔ اور جہاں سے لکھا اس کا حوالہ بھی دے دیا تھا۔ اس حوالے سے یہ بتا دیجیۓ کہ آپ جو کـچھ لکھتے ہیں وہ آپ کی اپنی فیکٹری کا تیار کردہ ہوتا ہے یا کہین سے پڑھ کر لکھتے ہیں۔

    ملتقی میں بھی آپ نے مجھے براہ راست پیغام بھیجا تھا کہ میں اپنا سوال وہاں سے ہٹا لوں کیون کیا آپ کو میرے سوالوں سے ڈر لگتا ہے؟ ۔ اردو مجلس پر بھی آپ نے فرمایا تھا کہ آپ مجھ سے بحث نہیں کرنا چاہتے۔
    اور ہاں میں جب بھی آپ سے بات کروں گا تو ابن عربی، بسطامی ، شعرانی اور ان جیسے بڑے صوفیاء کے عقائد کے حوالے سے کروں گا۔ بالکل اسی طرح جس طرح مین نے آپ سے بایزید بسطامی کے تزکہہ نفس کے حوالے سے دریافت کیا تھا کہ وہ طریقہ شریعت کے مطابق ہے یا نہیں مگر آپ نے جواب سے پہلو تہی اختیار کر لی تھی۔
    مجھے یہ بتا دیجیۓ کہ کوہ قاف کو کتنے بیلوں نے سینگ پر اٹھا رکھا ہے۔ یہ بھی بر صغیر کے ایک بڑے صوفی کا فرمان ہے۔ حوالہ میں آپ کو دے دوں گا۔
     
    • شکریہ شکریہ x 3
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں