1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

سورۃ البقرہ 102

'تجاویز، آراء اور شکایات' میں موضوعات آغاز کردہ از muhammad faizan akbar, ‏جولائی 14، 2016۔

  1. ‏جولائی 25، 2016 #31
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    287
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

     
  2. ‏جولائی 25، 2016 #32
    muhammad faizan akbar

    muhammad faizan akbar رکن
    شمولیت:
    ‏جون 11، 2015
    پیغامات:
    400
    موصول شکریہ جات:
    13
    تمغے کے پوائنٹ:
    54

    جلال الدین سیوطی کے بارے میں آپ کو نیٹ سے بہت کچھ مل سکتا ہے۔ جیسا کہ یہ۔

    جلال الدین سیوطی
    (یکم رجب المرجب 849ھ - 19 جمادی الاول 911ھ/ 2 اکتوبر1445ء - 7 اکتوبر1505ء) اصل نام عبدالرحمان، کنیت ابو الفضل، لقب جلال الدین، اور عرف ابن کتب تھا۔ ایک مفسر، محدث، فقیہ اور مورخ تھے۔ آپ کی کثیر تصانیف ہیں، آپ کی کتب کی تعداد 500 سے زائد ہے۔[1] تفسیر جلالین اور تفسیر درمنثور کے علاوہ قرآنیات پر الاتقان فی علوم القرآن علماء میں کافی مقبول ہے اس کے علاوہ تاریخ اسلام پر تاریخ الخلفاء مشہور ہے۔
     
  3. ‏جولائی 25، 2016 #33
    muhammad faizan akbar

    muhammad faizan akbar رکن
    شمولیت:
    ‏جون 11، 2015
    پیغامات:
    400
    موصول شکریہ جات:
    13
    تمغے کے پوائنٹ:
    54

    اللہ تعالیٰ صرف ہدایت کی طرف لے جاتا ہے۔ اللہ تعالیٰ صرف حق کی تبلیغ فرماتا ہے۔اللہ تعالیٰ نے اپنے بندوں کو کفر و شرک سے بچنے کا حکم دیا ہے۔اللہ تعالیٰ نے ہر غلط کام سے بچنے کا حکم دیا ہے۔
    اللہ تعالیٰ کر فرمان ہے انہوں نے میری قدر نہیں جانی جیسے جاننی چاہئے تھی۔ اللہ اکبر۔۔
    ہاروت و ماروت فرشتے نہیں تھے۔شیطان تھے۔ اور لوگوں کو کفر سیکھاتے تھے۔لوگوں کو اللہ تعالیٰ کی راہ سے روکتے اور خود بھی غلط کام کرتے تھے اور لوگوں کو بھی غلط کام سیکھاتے تھے۔۔۔۔۔۔
    مسلمان ذرا سوچ۔۔۔۔۔۔

    ( إِنَّ اللّهَ يَأْمُرُكُمْ أَن تُؤدُّواْ الأَمَانَاتِ إِلَى أَهْلِهَا وَإِذَا حَكَمْتُم بَيْنَ النَّاسِ أَن تَحْكُمُواْ بِالْعَدْلِ ) (النساء: ٥٨)۔
    (اللہ تم کو حکم دیتا ہے کہ امانت والوں کی امانتیں ان کے حوالے کردیا کرو، اور جب لوگوں میں فیصلہ کرنے لگو تو انصاف سے فیصلے کیا کرو)
    ﴿ وَمَن لَّمْ يَحْكُم بِمَا أَنزَلَ اللّهُ فَأُوْلَـئِكَ هُمُ الْكَافِرُونَ ﴾ (المائدة: ٤٤)۔
    (اور جو کوئی اللہ کی نازل کی ہوئی شریعت کے مطابق حکم نہیں کرتے پس ایسے ہی لوگ کافر ہیں)۔
    ﴿ وَمَن لَّمْ يَحْكُم بِمَا أنزَلَ اللّهُ فَأُوْلَـئِكَ هُمُ الظَّالِمُونَ ﴾ (المائدة: ٤٥)۔
    (اور جو کوئی اللہ کی نازل کی ہوئی شریعت کے مطابق حکم نہیں کرتے پس ایسے ہی لوگ ظالم ہیں)۔
    ﴿ وَمَن لَّمْ يَحْكُم بِمَا أَنزَلَ اللّهُ فَأُوْلَـئِكَ هُمُ الْفَاسِقُونَ ﴾ (المائدة: ٤٧)۔
    (اور جو کوئی اللہ کی نازل کی ہوئی شریعت کے مطابق حکم نہیں کرتے پس ایسے ہی لوگ فاسق ہیں)۔
    ۔﴿ أَفَتُؤْمِنُونَ بِبَعْضِ الْكِتَابِ وَتَكْفُرُونَ بِبَعْضٍ ﴾ (البقرۃ: ٨٥)۔
    ۔ ﴿ کیا (بات ہے کہ تم) کتاب اللہ کے بعض احکام تو مانتے ہو اور بعض سے انکار کرتے ہو﴾۔
    [FONT=Jameel Noori nastaleeq, Tahoma, Georgia, Times New Roman, Times, serif]سورة آل عمران (3.61) فَمَنْ حَاجَّكَ فِيهِ مِن بَعْدِ مَا جَاءَكَ مِنَ الْعِلْمِ فَقُلْ تَعَالَوْا نَدْعُ أَبْنَاءَنَا وَأَبْنَاءَكُمْ وَنِسَاءَنَا وَنِسَاءَكُمْ وَأَنفُسَنَا وَأَنفُسَكُمْ ثُمَّ نَبْتَهِلْ فَنَجْعَل لَّعْنَتَ اللَّهِ عَلَى الْكَاذِبِينَ [/FONT]​
    [FONT=Jameel Noori nastaleeq, Tahoma, Georgia, Times New Roman, Times, serif]اس لیے جو شخص آپ کے پاس اس علم کے آجانے کے بعد بھی آپ سے اس میں جھگڑے تو آپ کہہ دیں کہ آؤ ہم تم اپنے اپنے فرزندوں کو اور ہم تم اپنی اپنی عورتوں کو اور ہم تم خاص اپنی اپنی جانوں کو بلا لیں، پھر ہم عاجزی کے ساتھ التجا کریں اور جھوٹوں پر اللہ کی لعنت کریں۔ (١)[/FONT]​
    [FONT=Jameel Noori nastaleeq, Tahoma, Georgia, Times New Roman, Times, serif][/FONT]​
    [FONT=Jameel Noori nastaleeq, Tahoma, Georgia, Times New Roman, Times, serif][/FONT]​
    [FONT=Jameel Noori nastaleeq, Tahoma, Georgia, Times New Roman, Times, serif]سورة البقرة (2.24) فَإِن لَّمْ تَفْعَلُوا وَلَن تَفْعَلُوا فَاتَّقُوا النَّارَ الَّتِي وَقُودُهَا النَّاسُ وَالْحِجَارَةُ ۖ أُعِدَّتْ لِلْكَافِرِينَ[/FONT]​
    [FONT=Jameel Noori nastaleeq, Tahoma, Georgia, Times New Roman, Times, serif]پس اگر تم نے نہ کیا۔ اور تم ہرگز نہیں کر سکتے (٢) تو (اسے سچا مان کر) اس آگ سے بچو جس کا ایندھن انسان اور پتھر ہیں (۲) جو کافروں کے لئے تیار کی گئی ہے۔ (۳)[/FONT]​
     
  4. ‏جولائی 25، 2016 #34
    muhammad faizan akbar

    muhammad faizan akbar رکن
    شمولیت:
    ‏جون 11، 2015
    پیغامات:
    400
    موصول شکریہ جات:
    13
    تمغے کے پوائنٹ:
    54

    کیا آپ اس کو دلیل سمجھتے ہیں یہ بھی کاپی پیسٹ ہی ہے۔!!!!اور اپنے عقیدہ کو ٹٹولیں۔۔۔۔اللہ تعالیٰ ہر اس شخص کو ہدایت دے جو ہدایت حاصل کرنا چاہتا ہو۔۔۔۔۔آمین
    سورة النساء (4.1)
    بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَٰنِ الرَّحِيمِ يَا أَيُّهَا النَّاسُ اتَّقُوا رَبَّكُمُ الَّذِي خَلَقَكُم مِّن نَّفْسٍ وَاحِدَةٍ وَخَلَقَ مِنْهَا زَوْجَهَا وَبَثَّ مِنْهُمَا رِجَالًا كَثِيرًا وَنِسَاءً ۚ وَاتَّقُوا اللَّهَ الَّذِي تَسَاءَلُونَ بِهِ وَالْأَرْحَامَ ۚ إِنَّ اللَّهَ كَانَ عَلَيْكُمْ رَقِيبًا
    اے لوگو! اپنے پروردگار سے ڈرو جس نے تمہیں ایک جان سے پیدا کیا (١) اسی سے اس کی بیوی کو پیدا کر کے ان دونوں سے بہت سے مرد اور عورتیں پھیلا دیں اس اللہ سے ڈرو جس کے نام پر ایک دوسرے سے مانگتے ہو اور رشتے ناتے توڑنے سے بھی بچو (٢) بیشک اللہ تعالٰی تم پر نگہبان ہے۔
     
    Last edited by a moderator: ‏جولائی 29، 2016
  5. ‏جولائی 25، 2016 #35
    muhammad faizan akbar

    muhammad faizan akbar رکن
    شمولیت:
    ‏جون 11، 2015
    پیغامات:
    400
    موصول شکریہ جات:
    13
    تمغے کے پوائنٹ:
    54

    سورة بنی اسراءیل (17.26) وَآتِ ذَا الْقُرْبَىٰ حَقَّهُ وَالْمِسْكِينَ وَابْنَ السَّبِيلِ وَلَا تُبَذِّرْ تَبْذِيرًا
    اور رشتے داروں کا اور مسکینوں اور مسافروں کا حق ادا کرتے رہو (١) اور اسراف اور بے جا خرچ سے بچو
     
  6. ‏جولائی 25، 2016 #36
    muhammad faizan akbar

    muhammad faizan akbar رکن
    شمولیت:
    ‏جون 11، 2015
    پیغامات:
    400
    موصول شکریہ جات:
    13
    تمغے کے پوائنٹ:
    54

    پورا قرآن مجید چھان لو اللہ تعالیٰ نے تو صرف حق بات کی تبلیغ فرمائی ہے۔اور اللہ تعالیٰ کا ارشاد ہے شیطان تو تمہیں جہنم کی طرف بلاتا ہے ۔۔۔غلط کاموں کی طرف بلاتا ہے۔۔۔۔اللہ اکبر۔۔۔۔

    سورة النور (24.31)
    وَقُل لِّلْمُؤْمِنَاتِ يَغْضُضْنَ مِنْ أَبْصَارِهِنَّ وَيَحْفَظْنَ فُرُوجَهُنَّ وَلَا يُبْدِينَ زِينَتَهُنَّ إِلَّا مَا ظَهَرَ مِنْهَا ۖ وَلْيَضْرِبْنَ بِخُمُرِهِنَّ عَلَىٰ جُيُوبِهِنَّ ۖ وَلَا يُبْدِينَ زِينَتَهُنَّ إِلَّا لِبُعُولَتِهِنَّ أَوْ آبَائِهِنَّ أَوْ آبَاءِ بُعُولَتِهِنَّ أَوْ أَبْنَائِهِنَّ أَوْ أَبْنَاءِ بُعُولَتِهِنَّ أَوْ إِخْوَانِهِنَّ أَوْ بَنِي إِخْوَانِهِنَّ أَوْ بَنِي أَخَوَاتِهِنَّ أَوْ نِسَائِهِنَّ أَوْ مَا مَلَكَتْ أَيْمَانُهُنَّ أَوِ التَّابِعِينَ غَيْرِ أُولِي الْإِرْبَةِ مِنَ الرِّجَالِ أَوِ الطِّفْلِ الَّذِينَ لَمْ يَظْهَرُوا عَلَىٰ عَوْرَاتِ النِّسَاءِ ۖ وَلَا يَضْرِبْنَ بِأَرْجُلِهِنَّ لِيُعْلَمَ مَا يُخْفِينَ مِن زِينَتِهِنَّ ۚ وَتُوبُوا إِلَى اللَّهِ جَمِيعًا أَيُّهَ الْمُؤْمِنُونَ لَعَلَّكُمْ تُفْلِحُونَ
    مسلمان عورتوں سے کہو کہ وہ بھی اپنی نگاہیں نیچی رکھیں اور اپنی عصمت میں فرق نہ آنے دیں اور اپنی زینت کو ظاہر نہ کریں سوائے اس کے جو ظاہر ہے اور اپنے گریبانوں پر اپنی اوڑھنیاں ڈالے رہیں اور اپنی آرائش کو کسی کے سامنے ظاہر نہ کریں سوائے اپنے خاوندوں کے یا اپنے والد یا اپنے خسر کے یا اپنے لڑکوں سے یا اپنے خاوند کے لڑکوں کے یا اپنے بھائیوں کے یا اپنے بھتیجوں کے یا اپنے بھانجوں کے یا اپنے میل جول کی عورتوں کے یا غلاموں کے یا ایسے نوکر چاکر مردوں کے جو شہوت والے نہ ہوں یا ایسے بچوں کے جو عورتوں کے پردے کی باتوں سے مطلع نہیں اور اس طرح زور زور سے پاؤں مار کر نہ چلیں کہ ان کی پوشیدہ زینت معلوم ہو جائے، اے مسلمانوں! تم سب کے سب اللہ کی جناب میں توبہ کرو تاکہ نجات پاؤ (١)
     
    Last edited by a moderator: ‏جولائی 29، 2016
  7. ‏جولائی 25، 2016 #37
    muhammad faizan akbar

    muhammad faizan akbar رکن
    شمولیت:
    ‏جون 11، 2015
    پیغامات:
    400
    موصول شکریہ جات:
    13
    تمغے کے پوائنٹ:
    54

    سورة الحجرات (49.12)
    يَا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا اجْتَنِبُوا كَثِيرًا مِّنَ الظَّنِّ إِنَّ بَعْضَ الظَّنِّ إِثْمٌ ۖ وَلَا تَجَسَّسُوا وَلَا يَغْتَب بَّعْضُكُم بَعْضًا ۚ أَيُحِبُّ أَحَدُكُمْ أَن يَأْكُلَ لَحْمَ أَخِيهِ مَيْتًا فَكَرِهْتُمُوهُ ۚ وَاتَّقُوا اللَّهَ ۚ إِنَّ اللَّهَ تَوَّابٌ رَّحِيمٌ
    اے ایمان والو! بہت بد گمانیوں سے بچو یقین مانو کہ بعض بد گمانیاں گناہ ہیں (۱) اور بھید نہ ٹٹولا کرو (۲) اور نہ تم کسی کی غیبت کرو (۳) کیا تم میں سے کوئی بھی اپنے مردہ بھائی کا گوشت کھانا پسند کرتا ہے؟ تم کو اس سے گھن آئے گی (٤) اور اللہ سے ڈرتے رہو، بیشک اللہ توبہ قبول کرنے والا مہربان ہے۔
     
    Last edited by a moderator: ‏جولائی 29، 2016
  8. ‏جولائی 25، 2016 #38
    muhammad faizan akbar

    muhammad faizan akbar رکن
    شمولیت:
    ‏جون 11، 2015
    پیغامات:
    400
    موصول شکریہ جات:
    13
    تمغے کے پوائنٹ:
    54

    اللہ تعالیٰ نے تو قرآن مجید میں صرف و صرف حق کی بلیغ کی اللہ تعالیٰ اور فرشتے اور پیغمبر ،صحابی سب نے صرف ایک تبلیغ کی حق ۔۔۔۔۔
    باطل کی ہر جگہ باطل تو صرف شیطان کا کام ہے اور شیطان یا تو انسانوں میں سے ہیں یا جِن میں سے۔۔۔۔تو مسلمان ذرا سوچ۔۔۔۔۔۔
     
  9. ‏جولائی 26، 2016 #39
    muhammad faizan akbar

    muhammad faizan akbar رکن
    شمولیت:
    ‏جون 11، 2015
    پیغامات:
    400
    موصول شکریہ جات:
    13
    تمغے کے پوائنٹ:
    54


    عبدالرحمن بھٹی صاحب۔۔۔۔بے شک حقیقی بات اللہ تعالیٰ کے علم میں ہی لیکن شاید آپ بھول گئے ہیں کہ اللہ تعالیٰ نے ایک کتاب نازل فرمائی ہے جس میں غیب کی خبریں ہیں جس میں دین مکمل کیا گیا، جس میں آیات کو کھول کھول کر بیان کیا گیا۔اور سب سے بڑھ کر لاریب کتاب ہے۔ اور سب اللہ تعالیٰ کی طرف سے ہی ہے۔۔۔۔سورۃ البقرہ 102 کا غلط ترجمہ کر کے تہمت لگائی گئی ہے اللہ تعالیٰ پر اور فرشتوں پر۔۔۔اور قصوں پر ایمان لائے قرآن ،فرشتوں،اللہ تعالیٰ کا مزاق کیا گیا۔۔۔اللہ اکبر۔۔۔۔ٖقصہ یوں ہے۔۔۔۔کہتے ہیں فرشتوں نے دیکھا انسان گناہ کرنے لگ گیا پھر فرشتوں نے اللہ تعالیٰ سے کہا کہ اے اللہ تو نے ایسے لوگ پیدا کئے جو گناہ کرتے ۔۔۔۔۔یہ قصہ بہت جگہ نفل ہے خود پڑھیں میرا سوال آپ سب سے کیا یہ قصہ لاریب ہے؟؟؟؟
    کیا آپ سب اس وقت وہاں موجود تھے؟کیا یہ قصہ یا روایت غلط نہیں ہو سکتی۔۔اس قصہ کو سامنے رکھ کر ترجمہ کر دیا ۔۔۔اس سے بڑھ کر ظالم کون۔۔۔۔اور وہ وہ باتیں کی گئی اور جھوٹ باندھا گیا اللہ تعالیٰ پر فرشتوں پر ۔۔۔۔قرآن مجید کو پڑھیں اللہ تعالیٰ اپنے بندوں کو حق کی تبلیغ فرماتا ہے۔باطل سے بچنے کا حکم فرماتا ہے۔۔۔غور فکر کیوں نہیں کرتے ۔
    حق بات کو صرف یہ کہ کر پھینک دیتے ہو کہ فلاں ایک بہت بڑے عالم نے یہ ترجمہ کیا سب نے یہ ترجمہ کیا اس لئے یہ درست ہے ایک نے ترجمہ کیا سب نے اس کے مطابق اس کو دیکھ کر ترجمہ کیا کسی نے محنت اور توجہ نہیں کی۔۔شکریہ۔۔۔۔۔
     
    Last edited by a moderator: ‏جولائی 29، 2016
  10. ‏جولائی 26، 2016 #40
    عبدالرحمن بھٹی

    عبدالرحمن بھٹی مشہور رکن
    جگہ:
    فی الارض
    شمولیت:
    ‏ستمبر 13، 2015
    پیغامات:
    2,435
    موصول شکریہ جات:
    287
    تمغے کے پوائنٹ:
    165

    آپ مذکورہ آیت کا صحیح ترجمہ کردیں ۔
    تفسیر کا حق صرف رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کو ہے کسی اور کو نہیں امتی صرف بیان کرے گا۔
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں