1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

علمائےاہل حدیث کا ذوق تصوف

'عملی تصوف' میں موضوعات آغاز کردہ از عبقری ریڈر, ‏جنوری 14، 2014۔

  1. ‏جنوری 20، 2014 #11
    عبقری ریڈر

    عبقری ریڈر رکن
    شمولیت:
    ‏ستمبر 08، 2013
    پیغامات:
    180
    موصول شکریہ جات:
    163
    تمغے کے پوائنٹ:
    41

    بالکل عامر رضا بھائی،،، یہ کتاب پڑھیں ان شاء اللہ سب سمجھ آجائے گا یہی تو وہ حقائق تھے جو آج تک مجھ سمیت میرے بہت سے اہل حدیث بھائی بہنوں کو پتا نہ چل سکے کہ ہم اپنا ماضی اپنا سبق بھول چکے تھے جو حضرت حکیم صاحب نے اللہ تعالیٰ انہیں جزائے خیر دے اتنا بڑا کام کر کے ہمارا بھولا ہوا سبق ہمیں یاد کروا دیا
     
  2. ‏جنوری 21، 2014 #12
    عبقری ریڈر

    عبقری ریڈر رکن
    شمولیت:
    ‏ستمبر 08، 2013
    پیغامات:
    180
    موصول شکریہ جات:
    163
    تمغے کے پوائنٹ:
    41

  3. ‏جنوری 21، 2014 #13
    عامر رضا

    عامر رضا رکن
    شمولیت:
    ‏ستمبر 25، 2013
    پیغامات:
    138
    موصول شکریہ جات:
    34
    تمغے کے پوائنٹ:
    32

    جی بھائی یہ ایک بلاگ اس پر بھی کچھ اسطرح کی تحقیقات موجود ہے،
    کنوز دل بلاگ
    امید ہے کہ منکرین تصوف حباب اب فوری صوفیوں کو بدعتی مشرک کہنے سے پہلے سوچے گے۔اور اگر با اصول ہوئے تو پہلے اپنے گھر کی خبر لے گئے۔
     
    • ناپسند ناپسند x 1
    • زبردست زبردست x 1
    • لسٹ
  4. ‏جنوری 21، 2014 #14
    عامر رضا

    عامر رضا رکن
    شمولیت:
    ‏ستمبر 25، 2013
    پیغامات:
    138
    موصول شکریہ جات:
    34
    تمغے کے پوائنٹ:
    32

  5. ‏جنوری 21، 2014 #15
    شاکر

    شاکر تکنیکی ناظم رکن انتظامیہ
    جگہ:
    جدہ
    شمولیت:
    ‏جنوری 08، 2011
    پیغامات:
    6,595
    موصول شکریہ جات:
    21,360
    تمغے کے پوائنٹ:
    891

    عامر رضا صاحب،
    آپ پر پرانی کئی باتوں کا جواب ادھار ہے۔ آپ ہر دفعہ نئے بھیس میں تشریف لے آتے ہیں۔ ہم آپ کو مہلت دئے رکھتے ہیں کہ شاید کچھ نیا ہوگا، کچھ سیکھنے کو ہی مل جائے گا۔
    لیکن آپ ہمیشہ انتظامی معاملات کے حوالے سے ہمیں مشکل میں ڈالتے رہے ہیں۔
    بہتر ہوگا کہ آپ اپنی بہت ساری آئی ڈیز میں سے کوئی ایک آئی ڈی منتخب کر لیں اور مجھے ذاتی پیغام پر بتا دیں، تاکہ دیگر آئی ڈیز کو غیرفعال کیا جا سکے۔
    غالباً تصوف نے ہی آپ کو جھوٹ اور دھوکہ دہی سکھائی ہے اس لئے بار بار تنبیہ کے باوجود آپ باز نہیں آتے۔ جب تصوف کے حامی کا اپنا اصلاح نفس اور تزکیہ نفس کا یہ حال ہے تو ہم اس سے دور ہی بھلے۔
     
    • زبردست زبردست x 7
    • پسند پسند x 1
    • لسٹ
  6. ‏جنوری 21، 2014 #16
    شاہد نذیر

    شاہد نذیر سینئر رکن
    شمولیت:
    ‏فروری 17، 2011
    پیغامات:
    1,940
    موصول شکریہ جات:
    6,202
    تمغے کے پوائنٹ:
    412

    اہل حدیث کا ماضی،حال اور مستقبل کا سبق قرآن و حدیث ہے اکابرین اہل حدیث کے تفردات اور خطائیں نہیں۔ اس لئے بہتر ہے کہ اپنا اصل سبق یاد رکھیں۔ مقلدین کی طرح اکابر پرستی کروگے تو گمراہ ہوجاؤگے اور اہل حدیث کی جماعت سے خارج بھی۔
     
    • پسند پسند x 3
    • زبردست زبردست x 3
    • شکریہ شکریہ x 1
    • لسٹ
  7. ‏جنوری 21، 2014 #17
    عبقری ریڈر

    عبقری ریڈر رکن
    شمولیت:
    ‏ستمبر 08، 2013
    پیغامات:
    180
    موصول شکریہ جات:
    163
    تمغے کے پوائنٹ:
    41

    مولانا امیرحمزہ صاحب اپنی کتاب "مومن عورتوں کی کرامات" صفحہ نمبر 128،129 میں اس طرح رقمطراز ہیں
    Untitled-1.jpg
     
  8. ‏جنوری 21، 2014 #18
    عبقری ریڈر

    عبقری ریڈر رکن
    شمولیت:
    ‏ستمبر 08، 2013
    پیغامات:
    180
    موصول شکریہ جات:
    163
    تمغے کے پوائنٹ:
    41

  9. ‏جنوری 21، 2014 #19
    عبقری ریڈر

    عبقری ریڈر رکن
    شمولیت:
    ‏ستمبر 08، 2013
    پیغامات:
    180
    موصول شکریہ جات:
    163
    تمغے کے پوائنٹ:
    41

    مولانا امیرحمزہ صاحب کی کتاب "مومن عورتوں کی کرامات" کا ایک واقعہ یہاں پوسٹ کرنے کی جسارت کروں گا جو کہ (علمائےاہل حدیث کا ذوق تصوف پارٹ1 صفحہ 182تا183میں بھی شامل کیا گیا ہے) جس میں دو چیزیں بہت واضع ہیں سمجھ شعوررکھنے والے بہت کچھ سمجھ سکتےہیں۔
    اندھی عورت کی بینائی لوٹ آئی
    معروف محدث حضرت امام ابن ابی الدنیا اپنی کتاب" مجابی الدعوۃ" میں شعیب بن محرز کے حوالے سے لکھتے ہیں کہ عراق کے شہر میں ایک عورت تھی،جو نابینا تھی،پھر اس کی بینائی درست ہو گئی اور وہ دیکھنے لگی ۔مشہورتھا کہ اس کی بینائی رمضان المبارک کی چودھویں رات کو ٹھیک ہوئی۔ چنانچہ میں اس عورت کو دیکھنے موسیٰ کے گھر گیا ۔ جناب موسیٰ بصرہ شہر کے محتسب تھے ۔ اس عورت نے مجھے کہا کہ آپ تشریف رکھیے!میں آپ کے پاس آتی ہوں چنانچہ وہ دروازے سے نکلی اور اپنی آنکھوں کو میرے سامنے نمایاں کیا۔ اس کی آنکھیں ایسی تھیں جیسے ہرن کی آنکھیں ہوتی ہیں ،ان میں کوئی نقص نہیں تھا۔ اس پر میں نے فوراًعورت کو مخاطب کیا اے اللہ کی بندی!تو نے اپنے رب سے کیا دعا کی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔کیسے فریاد کی،وہ تو بتلا؟وہ کہنے لگی میں نے رات کا پہلا حصہ تو اپنی مسجد میں گزارا،وہاں نماز پڑھتی رہی پھر جب سحری کا وقت قریب آیا تو میں اپنے گھر میں اس جگہ نماز پڑھنے لگی جو میں نے نماز کے لیے مخصوص کی تھی ۔ وہاں میں نے اپنے رب سے دعا کی۔
    اے ایوب علیہ السلام کی مشکل دورکرنے والے!اے یعقوب علیہ السلام کے بڑھاپے پر رحم کرنیوالے!اے یعقوب علیہ السلام کو اس کا یوسف لوٹانے والے!میری آنکھوں کی بینائی بھی لوٹادے۔
    اچانک مجھے محسوس ہوا جیسے کوئی انسان میری آنکھوں میں سرمہ لگا رہا ہے اور پھر میں دیکھنے لگ گئی۔
    مذکورہ واقعہ کی نوعیت سے محسوس ہوتا ہے کہ یہ نیک بی بی کوئی ادھیڑعمر خاتون تھی۔ جسم تو اس کا ڈھلنے لگ گیا تھا لیکن آنکھیں اللہ تبارک وتعالیٰ نے ٹھیک کیں تو وہ ایسی خوبصورت ہو گئیں جیسے ہرن کی موٹی خوبصورت آنکھ ہوتی ہے اور یہ اس بی بی کی کرامت تھی ۔ جس شخص نے دیکھا ان کے بارے میں ابو حاتم کہتے ہیں کہ وہ عالم تھے ۔ امام ذہبی کہتے کہ وہ سچائی میں مشہورتھے یعنی شعیب بن محرزعالم،نیک اور معزز آدمی تھے کہ شہر بصرہ کے محتسب کے گھر میں دیکھنے کا واقعہ پیش آیا۔ یوں شہر میں جو بات معروف ہوئی اس کی معزز لوگوں کے ذریعہ تصدیق ہوئی۔(مومن عورتوں کی کرامات،ص 156تا 157)​
     
  10. ‏جنوری 21، 2014 #20
    عامر رضا

    عامر رضا رکن
    شمولیت:
    ‏ستمبر 25، 2013
    پیغامات:
    138
    موصول شکریہ جات:
    34
    تمغے کے پوائنٹ:
    32

    عقبری صاحب شاہد نذیر کو آپ دلائل نہ دے دعا کریں اسے بے چارے کے لئے
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں