1. آئیے اہم اسلامی کتب کو یونیکوڈ میں انٹرنیٹ پر پیش کرنے کے لئے مل جل کر آن لائن ٹائپنگ کریں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ کے ذریعے آپ روزانہ فقط دس پندرہ منٹ ٹائپنگ کر کے ہزاروں صفحات پر مشتمل اہم ترین کتب کو ٹائپ کرنے میں اہم کردار ادا کرکے صدقہ جاریہ میں شامل ہو سکتے ہیں۔ محدث ٹائپنگ پراجیکٹ میں شمولیت کے لئے یہاں کلک کریں۔
  2. آئیے! مجلس التحقیق الاسلامی کے زیر اہتمام جاری عظیم الشان دعوتی واصلاحی ویب سائٹس کے ساتھ ماہانہ تعاون کریں اور انٹر نیٹ کے میدان میں اسلام کے عالمگیر پیغام کو عام کرنے میں محدث ٹیم کے دست وبازو بنیں ۔تفصیلات جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

محمدیہ پاکٹ بک

'قادیانیت' میں موضوعات آغاز کردہ از محمد نعیم یونس, ‏اپریل 09، 2014۔

  1. ‏اپریل 23، 2014 #161
    محمد نعیم یونس

    محمد نعیم یونس خاص رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 27، 2013
    پیغامات:
    26,400
    موصول شکریہ جات:
    6,600
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,207

    قادیانی عقائد

    مسلمانوں سے قطع تعلق:
    ''تمہیں دوسرے فرقوں کو جو دعویٰ اسلام کرتے ہیں بکلی ترک کرنا پڑے گا۔'' (۱۱۲۴)
    '' غیر احمدیوں سے دینی امور میں الگ رہو۔'' (۱۱۲۵)
    سوال:... مؤرخہ ۲۱؍ جنوری ۱۹۰۳ء کو خان محمد عجب خان صاحب آف زیدہ کے استفسار پر کہ بعض اوقات ایسے لوگوں سے ملنے کا اتفاق ہوتا ہے جو اس سلسلہ سے اجنبی اور ناواقف ہوتے ہیں۔ ان کے پیچھے نماز پڑھ لیا کریں یا نہیں؟ (فتاویٰ احمدیہ ، ص۱۹)
    جواب میں مرزا صاحب نے فرمایا: اول تو کوئی ایسی جگہ نہیں جہاں لوگ واقف نہ ہوں۔ اور جہاں ایسی صورت ہو کہ لوگ ہم سے اجنبی اور ناواقف ہوں تو ان کے سامنے اپنے سلسلہ کو پیش کرکے دیکھ لیا۔ اگر تصدیق کریں تو ان کے پیچھے نماز پڑھ لیا کرو ورنہ ہرگز نہیں اکیلے پڑھ لو۔ خدا تعالیٰ اس وقت چاہتا ہے کہ ایک جماعت تیار کرے۔ پھر جان بوجھ کر ان لوگوں میں گھسنا جن سے وہ الگ کرنا چاہتا ہے منشاء الٰہی کی مخالفت ہے۔ (۱۱۲۶)
    ----------------------------
    (۱۱۲۴) حاشیہ ضمیمہ تحفہ گولڑویہ ص۱۸ و روحانی ص۶۴، ج۱۷ واربعین ۳ ص۲۸ و روحانی ص۴۱۷، ج۱۷
    (۱۱۲۵) فتاوٰی احمدی ص۳۸۲
    (۱۱۲۶) الحکم جلد ۷ نمبر۵ مورخہ ۷ ؍ فروری ۱۹۰۳ ص ۱۳ والبدر جلد ۲ نمبر ۵ مورخہ ۲۵؍ فروری ۱۹۰۳ء ص۳۴ و حاشیہ ملفوظات مرزا ص ۴۲ ج۳ و فتاوٰی احمدی ۱۹ و تاریخ احمدیت ص۱۶۴، ج۳ والقول الفصل ص۳۸ واللفظ لہ
     
  2. ‏اپریل 23، 2014 #162
    محمد نعیم یونس

    محمد نعیم یونس خاص رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 27، 2013
    پیغامات:
    26,400
    موصول شکریہ جات:
    6,600
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,207

    تمام اہل اسلام کافر اور دائرہ اسلام سے خارج :
    '' سوم یہ کہ کل مسلمان جو حضرت مسیح موعود کی بیعت میں شامل نہیں ہوئے خواہ انہوں نے حضرت مسیح موعود کا نام بھی نہیں سنا وہ کافر اور دائرہ اسلام سے خارج ہیں، میں تسلیم کرتا ہوں کہ یہ میرے عقائد ہیں۔'' (۱۱۲۷)
    مسلمانوں کی اقتداء میں نماز حرام ہے:
    '' خدا تعالیٰ یہ چاہتا ہے کہ ایک جماعت تیار کرے پھر جان بوجھ کر ان لوگوں میں گھسنا جن سے وہ الگ کرنا چاہتا ہے منشاء الٰہی کی مخالفت ہے۔ میں تم کو بتاکید منع کرتا ہوں کہ غیر احمدی کے پیچھے نماز نہ پڑھو۔'' (۱۱۲۸)
    '' یاد رکھو کہ جیسے خدا نے مجھے اطلاع دی ہے تمہارے پر حرام اور قطعی حرام ہے کہ کسی مکفر و مکذب یا متردد کے پیچھے نماز پڑھو۔'' (۱۱۳۰)
    ---------------------------------------------
    (۱۱۲۷) آئینہ صداقت ص۳۵ مجموعہ تقاریر مرزا محمود
    (۱۱۲۸) حوالے کے لیے دیکھئے ۱۱۲۶
    (۱۱۲۹) حاشیہ ضمیمہ تحفہ گولڑویہ ص۱۸ و روحانی ص۶۴، ج۱۷ و اربعین ۳ ص۲۸ و روحانی ص۴۱۷، ج۱۷ والقول الفصل ص۴۱ و تذکرہ ص۳۸۹
    (۱۱۳۰) انوار خلافت ص۹۰
     
  3. ‏اپریل 23، 2014 #163
    محمد نعیم یونس

    محمد نعیم یونس خاص رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 27، 2013
    پیغامات:
    26,400
    موصول شکریہ جات:
    6,600
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,207

    کسی مسلمان کے پیچھے نماز جائز نہیں
    ہمارا یہ فرض ہے کہ ہم غیر احمدیوں کو مسلمان نہ سمجھیں اور ان کے پیچھے نماز نہ پڑھیں کیونکہ وہ خدا تعالیٰ کے ایک نبی مرزا غلام احمد کے منکر ہیں۔ یہ دین کا معاملہ ہے اس میں کسی کا اختیار نہیں کہ کچھ کر سکے۔
    جائز نہیں ! جائز نہیں!! جائز نہیں!!!
    '' باہر سے لوگ بار بار پوچھتے ہیں۔ میں کہتا ہوں کہ تم جتنی دفعہ بھی پوچھو گے اتنی دفعہ میں یہی کہوں گا کہ غیر احمدی کے پیچھے نماز پڑھنی جائز نہیں ! جائز نہیں!! جائز نہیں!!! (۱۱۳۱)
    ------------------------------------------------------
    (۱۱۳۱) ایضاً ص۸۹
     
  4. ‏اپریل 23، 2014 #164
    محمد نعیم یونس

    محمد نعیم یونس خاص رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 27، 2013
    پیغامات:
    26,400
    موصول شکریہ جات:
    6,600
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,207

    مسلمانوں سے رشتہ و ناطہ حرام :
    خلیفہ قادیان لکھتا ہے کہ میرے باپ سے:
    '' ایک شخص نے بار بار پوچھا اور کئی قسم کی مجبوریوں کو پیش کیا لیکن آپ نے اس کو یہی فرمایا کہ لڑکی بٹھائے رکھو لیکن لیکن غیر احمدیوں میں نہ دو۔ آپ کی وفات کے بعد اس نے غیر احمدیوں میں لڑکی دے دی تو حضرت خلیفہ اول نے اس کو احمدیوں کی امامت سے ہٹا دیا اور جماعت سے خارج کردیا اور اپنی خلافت کے چھ سالوں میں اس کی توبہ قبول نہ کی۔ حالانکہ وہ بار بار توبہ کرتا رہا۔'' (۱۱۳۲)
    -------------
    (۱۱۳۲) ایضاً ص۹۴
     
  5. ‏اپریل 23، 2014 #165
    محمد نعیم یونس

    محمد نعیم یونس خاص رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 27، 2013
    پیغامات:
    26,400
    موصول شکریہ جات:
    6,600
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,207

    مسلمانوں سے رشتہ و ناطہ جائز نہیں:
    '' غیر احمدیوں کو لڑکی دینے سے بڑا نقصان پہنچتا ہے اور علاوہ اس کے وہ نکاح جائز ہی نہیں۔ لڑکیاں چونکہ طبعاً کمزور ہوتی ہیں اس لیے وہ جس گھر میں بیاہی جاتی ہیں اس کے خیالات و اعتقادات کو اختیار کرلیتی ہیں اور اس اپنے دین کو تباہ کرلیتی ہیں۔'' (۱۱۳۳)
    '' حضرت مسیح موعود کا حکم اور زبردست حکم ہے کہ کوئی احمدی غیر احمدی کو لڑکی نہ دے۔''(۱۱۳۴)
    '' جو شخص غیر احمدی کو رشتہ دیتا ہے وہ یقینا مسیح موعود کو نہیں سمجھتا اور نہ یہ جانتا ہے کہ احمدیت کیا چیز ہے کیا کوئی غیر احمدیوں میں ایسا بے دین ہے جو کسی ہندو یا عیسائی کو اپنی لڑکی دے۔ ان لوگوں کو تم کافر کہتے ہو مگر تم سے اچھے رہے کہ کافر ہو کر بھی کسی کافر کو لڑکی نہیں دیتے۔ مگر تم احمدی کہلا کر کافر کو دیتے ہو۔'' (۱۱۳۵)
    -----------------------------------------------------------------
    (۱۱۳۳) برکات خلافت ص۷۳
    (۱۱۳۴) ایضاً ص۷۵
    (۱۱۳۵) ملائکۃ اللّٰہ ص۴۶
     
  6. ‏اپریل 23، 2014 #166
    محمد نعیم یونس

    محمد نعیم یونس خاص رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 27، 2013
    پیغامات:
    26,400
    موصول شکریہ جات:
    6,600
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,207

    مسلمانوں کی نماز جنازہ ناجائز
    مرزا قادیان کا اپنے فوت شدہ بیٹے سے سلوک
    خلیفہ قادیان اپنے باپ کے متعلق روایت کرتا ہے:
    '' آپ کا ایک بیٹا فوت ہوگیا جو آپ کی زبانی طور پر تصدیق کرتا تھا جب وہ مرا تو مجھے یاد ہے آپ ٹہلتے جاتے اور فرماتے کہ اس نے کبھی شرارت نہیں کی تھی بلکہ میرا فرمانبردار ہی رہا ایک دفعہ میں بیمار ہوا اور شدت مرض میں مجھے غش آگیا۔ جب مجھے ہوش آیا تو میں نے دیکھا کہ میرے پاس کھڑا نہایت درد سے رو رہا ہے۔ اور یہ بھی فرماتے کہ یہ میری بڑی عزت کرتا تھا۔ لیکن آپ نے اس کا جنازہ نہ پڑھا۔ حالانکہ وہ اتنا فرمانبردار تھا کہ بعض احمدی بھی نہ ہوں گے۔ محمدی بیگم کے متعلق جب جھگڑا ہوا تو اس کی بیوی اور اس کے رشتہ دار بھی ان کے ساتھ شامل ہوگئے۔ حضرت صاحب نے ان کو فرمایا کہ تم اپنی بیوی کو طلاق دے دو۔ اس نے طلاق لکھ کر حضرت صاحب کو بھیج دی۔ باوجود اس کے جب وہ مرا تو آپ نے اس کا جنازہ نہ پڑھا۔'' (۱۱۳۶)
    فرمانبردار بیٹے سے جس گروہ کے بانی کا یہ سلوک ہو، ایسے گروہ کی مسلمانوں سے جیسی ہمدردی ہوسکتی ہے اس کا اندازہ کیا جاسکتا ہے یہی خلیفہ قادیان از خود ایک سوال پیدا کرکے اس کا جواب دیتا ہے:
    '' غیر احمدی تو حضرت مسیح موعود علیہ السلام کے منکر ہوئے اس لیے ان کا جنازہ نہیں پڑھنا چاہیے لیکن اگر کسی غیر احمدی کا چھوٹا بچہ مر جائے تو اس کا جنازہ کیوں نہ پڑھا جائے وہ تو مسیح علیہ السلام کا مکفر نہیں۔ میں یہ سوال کرنے والے سے پوچھتا ہوں کہ اگر یہ درست ہے تو پھر ہندوؤں اور عیسائیوں کے بچوں کا جنازہ کیوں نہیں پڑھا جاتا؟'' (۱۱۳۷)
    ------------------------------
    (۱۱۳۶) انوار خلافت ص۹۱ و خطبات محمود ص۳۲۰، ج۴ واللفظ لہ
    (۱۱۳۷) انوار خلافت ص۹۱
     
  7. ‏اپریل 23، 2014 #167
    محمد نعیم یونس

    محمد نعیم یونس خاص رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 27، 2013
    پیغامات:
    26,400
    موصول شکریہ جات:
    6,600
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,207

    کسی مسلمان کا جنازہ مت پڑھو:
    '' قرآن شریف سے تو معلوم ہوتا ہے کہ ایسا شخص جو بظاہر اسلام لے آیا ہے۔ لیکن یقینی طور پر اس کے دل کا کفر معلوم ہوگیا ہے تو اس کا بھی جنازہ جائز نہیں (نہ معلوم یہ حکم کہاں ہے) پھر غیر احمدی کا جنازہ کس طرح پڑھنا جائز ہوسکتا ہے۔'' (۱۱۳۸)
    ----------------------
    (۱۱۳۸) ایضاً ص۹۲
     
  8. ‏اپریل 23، 2014 #168
    محمد نعیم یونس

    محمد نعیم یونس خاص رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 27، 2013
    پیغامات:
    26,400
    موصول شکریہ جات:
    6,600
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,207

    شعائر اللہ کی ہتک:
    تیرہ سو سال گزر چکے، مگر اس عرصہ میں شعائر اسلامی کی ہتک اور انتہائی توہین کی کوئی شخص جرأت نہیںکرسکا۔ مکہ و مدینہ کی فضیلت مسلمہ چیز ہے۔ قرآن پاک نے صاف الفاظ میں ان مقامات کی عزت و حرمت بیان فرمائی۔ مسلمانوں کی ان مقامات سے انتہائی محبت کا آج بھی یہ حال ہے کہ اطراف و اکناف عالم سے سینکڑوں نہیں ہزاروں بلکہ لاکھوں فرزندان توحید شعائر اسلامی کی زیارت او ر فریضہ حج کی ادائیگی کے لیے جاتے ہیں۔ کیونکہ خداوند کریم نے حج کو ایک صاحب توفیق پر فرض قرار دیا ہے اور صاف ارشاد فرمایا ہے کہ حج میں بے شمار برکتیں ہیں۔ مگر خلیفہ قادیان اپنے خیالات کا ان الفاظ میں اظہار کرتا ہے:
    '' قادیان تمام بستیوں کی ام (ماں) ہے۔ پس جو قادیان سے تعلق نہیں رکھے گا وہ کاٹا جاوے گا۔ تم ڈرو کہ تم میں سے کوئی نہ کاٹا جائے۔ پھر یہ تازہ دودھ کب تک رہے گا۔ آخر ماؤں کا دودھ بھی سوکھ جایا کرتا ہے کیا مکہ اور مدینہ کی چھاتیوں سے یہ دودھ سوکھ گیا کہ نہیں؟'' (۱۱۳۹)
    -------------------------------------
    (۱۱۳۹) حقیقۃ الرویا ص۴۶
     
  9. ‏اپریل 23، 2014 #169
    محمد نعیم یونس

    محمد نعیم یونس خاص رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 27، 2013
    پیغامات:
    26,400
    موصول شکریہ جات:
    6,600
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,207

    سالانہ جلسہ در اصل قادیانیوں کا حج ہے:
    خلیفہ قادیان لکھتا ہے:
    '' ہمارا سالانہ جلسہ ایک قسم کا ظلی حج ہے۔'' (۱۱۴۰)
    -----------------------------
    (۱۱۴۰) مرزا محمود کا خطبہ جمعہ مندرجہ الفضل جلد ۲۰ نمبر ۶۶ مورخہ یکم دسمبر ۱۹۳۲
     
  10. ‏اپریل 23، 2014 #170
    محمد نعیم یونس

    محمد نعیم یونس خاص رکن رکن انتظامیہ
    شمولیت:
    ‏اپریل 27، 2013
    پیغامات:
    26,400
    موصول شکریہ جات:
    6,600
    تمغے کے پوائنٹ:
    1,207

    اب حج کا مقام صرف قادیان ہے:
    '' ہمارا جلسہ بھی حج کی طرح ہے۔ خدا تعالیٰ نے قادیان کو اس کام (حج) کے لیے مقرر کیا ہے۔'' (۱۱۴۱)
    ----------------------
    (۱۱۴۱) مرزا محمود کا خطبہ جمعہ مورخہ ۲۵؍ دسمبر ۱۹۱۴ مندرجہ الفضل مورخہ ۳؍ جنوری ۱۹۱۵ء و برکات خلافت ص۵ و خطبات محمود ص۲۳۶، ج۴ ملخصًا
     
لوڈ کرتے ہوئے...

اس صفحے کو مشتہر کریں